Skip to main content

Full text of "Jashan E Eid Milad Un Nabi ( Sallallhu Alaihi Wasalam) جشن عیدمیلاد النبی ﷺ"

See other formats




۰ 02-0 ا لت وب کا ال رت رک ببن ہ۴ 

و و و 927 سال و یا ار و ,بس ار ٹہ 
۹ فو اعت نے ا کا 
11 +2 





مل اط یدارا للا نل 


موا 
1 شا شش ہلال ود دیس مرک ڑم 


8 


ھ۶ 


ما 
٤ 9 2‏ فا ب را قادری 
اد 


رس علامفلا فی عددی ا 3 وی وتاتاری 


میں شائع ہونے والی نگارشات کے 
لفس مضمون کی ذمہ داری لکھنے والوں پر ہے 


ء0 ان رھ 


تی دار الوم جا مع کھت نان ٹپ لاہوز 
::٥۱۱۹(۱415600016 ٥‏ :۸3ع 





امس جو تہ قش 


2 


نت رسول' تل ڑا 


ادا رپ 
عقیدہختم نبوت پرقر آنو اسلوب 


علامه اقبالے5واور ختمنبوتٹ 


٭ محفل میلاد اورسلام وقیاء 
+ چو ہے 


٭ سیدنا غوث اعظم ٌے ک اقوال 


٭×*× 


×× 


اختلاف راج کا طریقه اوراہمیت وضرورت 
از خواب گراں خیز 
تحفظ ختم نبوت کانفرسى 





23 


29 


31 


37 


42 
45 





ای ضر سے مات ہے ے عادا یماں م٠‏ 
ہاں والوں سے کشر ہو کے ذکر و میاں :جا 


زی سا ہے رت ور مے شی تن او 
ثگاہوں نے چرعر دیکھا نظر آیا ناں خ 
ھا بر مہ تجرا ھت ہیں جہاں واے 
یی یں کا ٹمکانا سے کہاں را 
زا حیوب نر تی عظمت نے واقتف سے 
کہ سب خیوں جس تھا ہے دی اک راڑدال تر 
ان رگ و ہوگی سو کا رازراں ا ے 
ضر کال رک و وی ون2 
7ا ال7 ال ارت تک ون 
گن کا پھ پت روز و شب سے لفیہ خواں را 


1 مر یظہوری 1 


0 
کے ا 


و شی 





فج ‏ ”اہ م2019ء 
ب 


عتیدہ اس لیے رکھتے ہیں ہمختمنبو تکا 
یبجمجھی 


عقیدہ اس لیے رکھت ہیں ج ٹم خبوت کا 
مر دی ہی نے ا نکیا نکیا زمان ےک 
خدا ےکی شال ہ(خیلتانخاقتش 
کیا جب اہتمام اتحاب اصحاب دالٹی نے 
کیاےاعتراف ہردور ےتا دافول نے 
سیق ۲ موز کروار مم کا ہے ہر یلد 
دقار حاصل ہوا انمماغی تکو ذات اتھ ے 
خیال ان کے اد ب کا اب ایما للادے ہرم 
سہوات ہج کو دار ومگی ٹر ٹیل دلاۓ گا 
ازلی سے ہم شاءخوال ہیں رد سے 
ال یں بت فا فا مین 


مقام اص ظاہ راس سے ہے شاہ رسالل تکا 
کیاد ناش ہرمرسل نے بر جاا نگ عنم تکا 
تس ہے اٹ یک ام لیں ہم جنس فضیل تک 
ہوا نس اٹی سے نام اخزاز اذلیت کا 
وی 00وت ایی" 
حیات افرو رر سے مر ےآ اکا میرتکا 
وجو رطف اوج و شرف ے آدیت کا 
شریعت کی بی فطاء بی مقر طریقت کا 
جھ بر یپاک ہے اندوختھ ان گی بت کا 
ڈراۓ گا ہیں کیا وغرم روز قیامت کا 
عطا فرمایا طارقی کو نان نعت خظرت کا 

0 حضرت طا رق سلطان پورگا 8 

زینک یجول امفی جم برتفٰر۰ج۲) 





اج ز تما کر2019ء 





ادارے 
جن صسہگہھیی ۔ 
و علا مہ خاش مچردیی و 
7 8 ای دس ریرستادار لات پروی (گ لگڑے ) 
سای ءاظلائی اورسفارٹی امراو: 

شر زی یڑ ؛بلا ااواورچھکر یی رسواۓ زی ش نا مول او رگروا رو لکاوارثش!ئ یٹ رمودگی 
کی تمام7 خباشں اورجماقوں کے ساتھ جن مشیر بر مسلط ہے+ اس فرکون وقت نے اپنے ی 
لک کےآ تین کے رنل ےکی :جمیاں بحیرتے ہو ئے اس تنا زع علا تے کی خی حیثیت 
شخ کرد اورتار کاخ فا کک رونا فکردیاء اس وقت پودی داد یکیلقرببا۹ کو یاستی دہشت 
رع من ان لن نا را ہے اور نے اور ےگناہشیریوں نلم دتقدرے پہاڑوڑ 
ر ہے ہیں ء پچ لکا دودھ نر ہہب رگوں اور پیارو نکی دد ئا بن ہیں مساچد بند یں ءرارں 
بد پإلںء پاژاز او رکاروپار بد ہیں کول کا اور او ورسطیاں بند میںء میڑیاء انیٹ اور 
مواصلات کے پرانے اور گے ادارے بند ہیں: ا ل شی رکی لیک شگا فآ وازو ںکو بلن دکر نے 
کے لیے پیش گنو ںکی بوچھاڑ ہآ نسوک سک بھرماراورشیطانٰیمماشتو لکی لیا پر ےعر وہ 
ہے الوگ اپ ےگھروں ب تحصور ہیں ؛اگرصداے اتا جبلندکر نے اورعالھ یھی رکیکھبجوڈ نے کے 
لیے ےہ بوڑھےہ جوان وٹ بالگ ہیں تذ ان پر ای وی جال ہیںہ ٹراروں جوان 
ہندوستا نکی مخلف جتیلوں میں بنرکردئے گئے ینم بیت قیادت یں اب فو سماری زندگی 
ہندہ پیٹ ےکا انی جھرنے وا ےک پگی لیڈ یھ یگ رارکر لیے گے ہیں اورا نکواس رسوائی اورنظر 

بندکی کے دوران دوٹو یظر ےک ضرورت ادرتا خی تکاادراک ہوگیا ا 

تک کین یت یا ون 

ا ا و ا ا چھاں ۲ چیاں ہوا 
اس دودعالم کیٹ یس پہدا الم اسلام چا ہے اسطائی علاقوں اورمرزمینوں پر خی راسلائی 
وجوں ے نے ہیں سٹینعراق :شام اورافغانستان شی دخارت کے پازارگمم ہیں:سنل 


عچھ( ‏ ٗ ا5ر2019ء 





میڈیا تی وی یز وائرل ہوگی ہیں جن مس ران کیو ںکوہندواوریہودی فو یسید ٹر ہے ہیں 
اوران کےتے نے لبوں پراصت سس کی ب ےٹی اورائس کےجکمرانو کی ےس یکا وحہ ہےء او ں ! 
لے دوارپ' مسلرانوں کا بیقائل رم حالت ان کےعیا ال اورزریٍستگراول 17 ہے ے 
ج نکی نا پاک زباوں پرصرف نسیامیءاخلاقی اورسفارنی ادا دک ذکہ ہہ یکو نکی امداد ہے+ ال 
ادا دکوز مان کاکوگی شر یزیر چیہ بلاکواورش رکا تا ےجس کےقلب سیا ہکوخریوں اور بے 
ناہو ںکی تی ںی پش نی ےکی طرمسوں ہو ہیں,آ جکشمیراو نی نکی بیڈیا ںی الد لی اور 
خزنو ی کی ای ہیںہ ال .رو ں کا وو رگزر چا ساب نھروں: ریاییںء جلوسوں, ججاسوںء 
کاننرنسوں شی قراردادوں اورییوں بے یں ہوگاء ھا ریعکومت نے ہردردا زے پرگنگ 
دکی ےشورڈالا ےہ یقت سے ؟پترسال می انقا ینس ہوا ا سںعلومت نےکیا 
ےپ کش یرون یکاچجیت نچ ریہ پاکستا نکاا در چہاشی کان تا اب اس شورش رابک آزاز 
ہوا او ہردددازے سے یآوازکی سے ہم مسلہ شی 77 ینظر۔ سے دکھدے یں :یلیل 
لگو ںکوی لکر اججھے رک سےح لکنا چابے وغبرہ دنر درب ریاستوں کےگر اود عیائل 
پادشاہوں نے قصاب ہندوستا نکوا ۓگ تاٹل بلاکراورائی سول ایوارڈد ےکر پاکتتان اور گر 
عالم اسلامکوجوشرمناک پیم دیا ہے ووجھ یم عالم کے سساحے ہے نودسجودیی عرب نے ۵ عرب 
ژ لیر مایکارگی سے ہندوستا نکوموا ھا سار ےن را م کے یں ءایےے درد ناک با حول میں" 3 
کے۔ساعل سے نےکر با ککاشغ کا ففہایکسہاناخواب پای خو خیال شا ع کی ین خوائنل 
جم نکر وگیاےء امت کے ان متا لک لجادٹ اتیل ا دوک اعلان ہے چہاد کے لیے 
۱ تاد ضرورت ہ ول ےاوراتادکا عالم بے“ کہ ہرلیڈر چند ہزارآرمیو ںکاجلویں نے رکتا ےو 
یدض ےی رکوسا اھ ملانے کے لیے تیارکاس ہوتاءچوکوں اور پا زاروں ٹل کو ےرتا ےلم 
جہاد کے لیے لے ہیں :ہیں باڈر پربیجاجاے .٤م‏ چاندنی چوک اورلال مھ پرن پرچماہائیی 
گے. اس رع کا جہاد تک پسائی کے علادہ یہ جہادکا با قاعدہ اعلا نحکومت وشت :ریا ست 
اسلام اورافواع پاکستا نکی زبان سے کنا چا ےپور قوم متحد ہک افواع پا کک پشت چا 
کرے رت ےلہلک پانے کے لی مد لیس پمام مرنے وا قو مکیا پکئی باج یجس 
تو لکر ےک۷ ان کے بھی چچنی طوربرتارہونا چابیے. لک :گا طلازمت ہگ ادرکادوبار چے 





گا لوا وت وو 
سا یں کچموڑا ھا او کہا اک7 بھم نے اس بل کے سائۓ مین زندگ یگ اری ہے اب اس برمشنل 
وق تآیا از ہجار یمرن انس کے راہ ہوگا :ہم کو میں گ ےنیس فو اس کےساتھ کل 
جائیں گے:نوفاداری پش طاستقواری' ھی بندہ موی نکی میراث +ول ے۔- 
آج خیماو مل مکی وادیاں خون سکم سے کین ہیں آ ع جرد الا چنا راکپ ےج 
ٹموں کے جل تک کی بیوئی اور مک یک بنا کآواز ہیں اود ہم ہی ںگی سیا سی ءاخلاقی اور 
مقازلی ا اذ پر زور دے رے ںآ رورت ےل اپنے غمام سیاسی اور ری 
مفاداتکوٹیں پشت ڈا لک رتا مسلمان؟ مک فریادر یکر سی ؛ پاکستائن واحداسلائ پر پادر 
ہےء ا کیا ذمددارگچھی سب سے زیادہ ہے باقی ملما نآ 0202 
اورمعاشی ملا تکوآ سا نکر نے کے لیے مایا ںکردار ادا مکی معرب دیاضتل یر مات 
پہتآسالی سےگ لکریکتق میں :امو موجودہ حالات می بین بھی ساب ق نظ ریو کی طرح 
سہانا خواب اوران وا ہی دکھائی دےد ا ہے+دعاہ یکی جانکتی سے - 
سخگلیں امت و گی آہاں 27 ور کت 
رض لژیان کر رن 


جم واعدقام ہیں جو اپنے مال خو دش لکرن کی ہجاۓ اپنے شھنوں کے ساتھدشکابات 
کت ہیں ءہاۓ ہشدوستان نے جمار انی ہن رکردیاءدوویشن ہے؛ اس نے وی کےسوااورکیا اکنا 
ہے سوال ق ےک دم ت ےکیاکیا ہے :ا سال پور ےکک یس با لچ لک برے ہیں+در پاؤں 
اور نکی الوں یں سیلا لی ریٹوں نے سراشھاباادرا تی وفانی موجوں میں د یہو اونلو ںکو اکر 
سحندر می ںفرق ہو گئ ء ار بوں ڈال ران ھا اورٹھ پل ی سندرک پانوں لک ہوکیااد کراپ ھر 
اودشلی کے بای ای دیی بین پیا میں جلتے رہ گے س ند لا ایک پارٹی تع سے ےبابان 
ہے :ای نے کت وا ہا ےن نیاوی بنا" سی تب دز 
کے ےا پا یکواو رتا ع ص جا ےا لکوف وآ موز یت ۲نو پور دن ای رجنمائ یکرت گرا 





پا کے نو چ3 3 تقیدرکر ےو جواب ملا ےک کم سےگوام خیش ہیںء اس لیے 
میں ہر پارووٹ د نے ہیں بتقیقت یی ےک بیلوگ دوٹ ینیل ہووٹ پیٹتے ہیں ءال وتت 
وذاقی اورصسوبائیحلومتو ںکوچا ےک ان سالا سیا لی ریو لکودو کے اود ککوقو مکی سیر ای وشادا یی 
کاسامان بنانے کے لیے وٹ پڑے ڈبیہوں او یلو نکا دوس تک میں بلہ مرکا مچگی پگ 
فج کا منطکمادارہب یکرگزر ےل بہت بڑاصدقہ جار ہوگاء اک فوع رٹائر فیس تقر بآ پچال 
"۶ر نرارسول نوجوانو ںکو وسکری تریی تد بل اوزان ےڈ ڈیوں اورگٹیلوں برا تکاکام ین مان 
ڈیسوں اوریلوں سے ہونے وا یدن پک فو نپ خر ہوگ و تک وم سے بہت بای لو چھات 
جا ۓگااورادار بث ال ہوجانےگاءای رح رید ےیادار ےکی لاکھویںا ایززشینگازر 
کاشت لاک ال پہ باغات بنصلات اور جات اگاکر ا سںکوخوکشْل نایا جاسکتنا ےجمارے 
سیاستندانول اور پہوروکریٹ ٹمٹزے اش ون سے زلیس نز زی ظا ےسا ہوکیس 
گےەدادیی اور اداسالی وسالنرتے یں ہاگ ران کے پاٹ چوڑےاو دہ رےکر کے یلا پا رکا 
جاےقذ یصداہہاکیلو ںکاروپ دھار سے ہیںءان سے دوائی نہری چ لق ہیں :ان کےکناروں پہ 
سیکا یں بن کک ہیں٠‏ یٹپچھاشادرخت اگاۓ جاسکت ہیں :لی تب یو ںکجلا تی ہے انسوں اس 
ارب ڈال رکی متقریل بے پرداوقوم ہرسا لتق یبا پچاں ارب ڈال رکا پالی سندد ٹل ضا کرد یت 
ہے دد ارسالک پالٰ مار اتارک :ہار نک سے ہندتان ججیم اشن مک لاکھوں ڈالر 
کھارہا ہے ھ0( پ یکو نی ںہمیشن اورک الف > ال ودوات کے7 سی ہر 
تن مو 2 

مار خر ے رع بات ۴ل ہے 

تم کو اعلاف کا ترے بستعا ے 

فارت ار وھ تسد 

ہے کلیاں ید ہیں دہ 42 ش ٤‏ وی یبور 


یس کی 


ہکارگی اس انیج لاگی جا تج ۶ء )یی سواد انم پاکتتانع کے ببت سے علا اور 
مار دا مفارقت دے گئ :ضرت موم نا می ا وی (لا ہور) حضرتتّ سیرمنظوراھ 








ص/9 ۳8۲0ھه+٭0 0 یوون 
قشندری( نارووال )وی رہ مولا الین بزرکوں پرار ول ری نا زرل فرماۓ ؛انہوں نے اپتی 
خدادادصلا ون کے مطا بی دن اسلا مکی از عدخدمات انام دمیں اورھنگڑوں خدام دبن تار 
سے رین مکی ور بیس معاشر ےکی تاریکیاں دورگررے یں حرف چناڑدل اور 
متجوں پہ برارو کی تعداد یٹ جع ہونے وا قوم نے ان بذرکوں کے جنازوں اوشتموں پرکجی 
۷ بیدارگی کا وت ذماہہمار یکا سای اود نمی راجنماوں نے اتاد و ا اتی پر دک 
دبےآنقریری ںنیں باھرےککواۓ اور ینہ دہ گے ؛اتمادواتاتی کے لےکوگ یی ارام اٹھانا 
اوراپٹی ذات واوقات کے دائر ےکوذ رای خکرنا تعیب نہہوابیز بای تع خر کبکک ج ےگاء 
اوہ ول لو کک بتک خالول اورخرایوں یس ایگھے رہیں ایت چنازے اک بے 
می اورسا کی را نما نے فرمای اک اتاد وق ےکی شزوزنت سے کش کوئی اچ ضر را ا کے 
را یل رکاوٹکوان ہے ہپ رتا ہعقرات یا ساد ہ ول لوگ :ج بآ پ جعفرات اورآپ 
حطرات کے نا عاقیت اندلِ می ان حعفرات سیل میڈ یا بر ایک دوسرے کے غلاف ظوفان 
دیزی ا پاکی گےاور یں پچ جھے انرک پر تکی ان لکن ںکوسوادٗشمم کے بدق نی 
نکی مشابر ہرد ہے ہیں اوروقتآ نے پر پ معظرات کےخلاف استعا لک نے وانے ہیں 
اتحاداوراتقا یک راہ کی آپ ضقرات جناروں ار الیکا 
کی اوراپنے تیامف انل سےسمدوش ہوجا اک یں ہدام نے عو کیا : 

پان سک وخشق تک صورت ہذوں ے بیگانہ لوک 

7۳ وفا میں ہم نے سے کت تھا تا 

اور خوابوں کے تاج شل میں رب وانے شئزادے 

ا معلوم نہیں رجے ہیں شر یں کی دہ لک 

ری رین ا دالے رن من کی اوت یی 

کو دٹھا میں داع عحیبت ہم کو سنا میں بنا کوک 

مر کے پچ جب نول پء د٣ی‏ ا یگ 

شابد منزل کے سڑوں میس بھولی گے ہیں رستا لوک 

ات 





خراجظلام گنال و 


الوب ر7. 
تقر نیم میں مد پا رپ راسلام یک ے پیل اخمیاء درک لیم السلا مکا تذکرہکیا 

سکرام ےحیوب چم ن ےآ پ سے پل نویوں اور رسولو ںکوھا ایارک ہوا اسلو پکا 
لن ق رآ نج مگوا ےک ؟ پ یق کے بعدسی نی بارسول کے؟ ن ےکی طر فکوئی خقیف سا 
اخار نگ نگیاگیا- 
آ ات لا ظہول! 

َمَا آَرسَلنَ مِنْ قَبلْكَ مِن رسُول الّاتُوحِی اه ان لا ال 

لا انا فَاعَيدُوْن (لیاء25) 

جھ: اود یٹھب رم نے تم سے پیل کی ا نکی طرف می د یگ 

کم رے سد اکوکی موی تو می ری بی عباد تکرو۔“ 

وم ارَََا من قَليكَ من رسُوْلِ وا ٍِِّ ِا تی 

لی الیل فی أئیتیہ5 فَنْسَمُ الله ما تلق الشَبْطنْ 
تی الله ای“ وَالله عَِيْعٌ عَکٌَ را2ہ) 
ترجھہ:”اورپم نےقم سے پیےکوئی رسول او میں کھیانر( ا کا یہ 
حال تھا ک۔) جب وہل آرز ہکرت تھا2 خیطان ا لک آرز وش 





(وسوسہ) ڈال دبتا تھا لو جھ(وسوسہ شیطاان ڈ الا ہے ایڈدائ سکودورکر 

د یا ہے۔ ترادا پٹیآ یتو ںکومضبو کرد تا ۔اورالنم دالا(اوں) 

عمت والڑاے۔“ 

مآ آرسَلنَا قبلَكَ مِنّ المرسَيْنَ الا اِنهُم عون 

الطعَامَ وَيَمُونَ فی الاسُوَاق وَجَعَََا بَُضَحُمْ َعَض 

فََةَ - اَتَصْبرُوْنَ٤‏ کان رَبكَ بَصِيْرَا (لر3ن"2) 

تر :''اورمم نے تم سے پیل جتے عق ری ہیں س بکھاناکھاتے 

تے اود بازاروں یس پل پھرتے تھے۔ اور ہم ن ےتہہیں ایک 

دوسرے کے لیے ز مان نایا ۔کیاتم صب رکرو کے اورہارا یر وردگارنڈ 

دی ولا ے۔“ 

رن سم شی ایس بھی فوخ کے ریت ات دس مین تو کین وک خی 
مت فک وت رب تر ول قیقناان کے انکار ےگنر لازم ہوتی ت 
ببرصسور تق رآان سیگ مچگی دا کیٹ پیا ٹپ کے بحدٹھی نیا ودرسول؟ یں کے اییانہ+و 
ان یش ےکی کا ارک ک ےم کافراود لاک ہو چا2- 
لن پور ےق رآئن یس ایک بی گی انیل نس میں سرکارددعالم ٹیا کے بعد 
0 ا رنتیئ بی اور رسول کا وکر ہو_معلوم ہوا کہ بر اسلام بی ا زی ى ہیں اور 
آ پ نے کے بعداب قیامت ہے ای ۔ قیا مت سے پی گی نیگئیں ۔ بھی عال اعادیٹ 
نیش ہ ےک لق با دوسود اعادییٹ گل رک الاشبارمفلحخ بج تک یا نگل ہی ں۲ 
جضوریے آ خرکی نی ہی ںآپ کے بحدکوگی نی اودرسو لی ںآ ےگا لی نی ایگ حدیٹ 
اس جانب اشاد تک می لک ہآ پ کے بعدسلسلہ وت ورسمالت ارک سے پا تضور نے 
فر ماک رمیرے بعدیگی ی1 نمی کی با ےگا۔ ہرکڑنئیس اب قیاص تک کآ پکا وت د 
رہال تکاروردوردے۔ 
ای یی اسان نے 


7 


ساد سید --. 


ھجھ( ما+کر2019ء 





حفورسیر 7 نے خود ارشا وف رما دیا۔ رت انس بی ما لک یی ال تما 
رایت فرماتے ہی ںک نی اکرم نے انت شہادت اور ےکی الگ یکوملاکراشا ر وکرتے 
ہے فرابا: 
ذف نات ئل 
( جج ہناری تاب اتا اتل ای ءبعشتانا دا ساعکھا تن ) 
اورقیا مت ای ط رع لے ہو ۓے کیج سے ہیں جس ط رح بیدونوں 
سراف 
ا 7 عم نشی الع سے ردایت ےک نیکم رسول ”ضمم ٹیپ نے ارشادطایا: 
ہے نک می ےکی اساء ہیں ء مس مم ہوںء یس ا ہوں ہیس ما 
ہوں لین ری رےذر لی ےک رکذ ماد ےگا اور بیس عاشرہول لوگو ںکا 
حشرمیرے قرموں جس ہوگا اور عا تپ ہول اوردہ ہوتا سے ہیس 
کے بعدکوگی خی دہو- 
( سسلم تاب الفضائل ۱ یاب فا ساء ٹا 
تر ن کہم اور اعاد یت بے شکہیں صراخاً یا اارة ا ا ا 
مین نے کے بھی نے یک1 مرکا تجدکرہ ہو۔ لن حر تگیئی علیہ السلا تش ریف 
2 ےلان ا نکوضوتکل جگی دہ دوبار ہآ ا ک رتو رییاقا کی شرلعت کے بی پاجند ہو 
گے_ اب ہار ےئ ممصع فی ء اص کی یپ کے دونو ںکندعول کے درمیان اللکریم نے مم 
وت گادی۔ا بل ٹیکھیں۔ جو کوٹ کر ےگا وہآپ کے ارشماد کمن مطا لی رع 
در ج ےک اک اب اوردچالی ہوگا۔ وارٹ مندانمیاءہ بہار چجفتان د ین لن لم وم رج تکا پر 
ےکنا رہ نو رلصصیر تکا فطب ینار فا ہ تکا حدگی خواں ق رآ ان وسن تکا چشمہروالء نا مو 
رسامت کا پاسبان امام ام رضاخاں محر بر پگ یم واشق رسول جس نے مقید ہش وت 
پر روز بے ہہ پاپ عھی یکا یک ےک پبرودار تق اداکیافراتے ہیں۔ 
اخیاۓ سا* یی ات سپ 
شیا لووتر دل و ٌٗ 





ہر آھ شس ما شرنر 
(ھداکقنل) 
اے ۶ز یز پیل تمام اخیاء ا نکی شنیں رات اوران عیروں می لی 
ریں۔ ت٠‏ ان جرد اور پردوں کے درمیان ا نکی نہووں کے ور 
ےا نکی قو مس تی ر ہیں پا رتضور ےپ کی شخمنبو کا سور ج بلند 
بو۔ اتآ باج ےآ ک ےنا مین وک وین 
بروفیسرحافط فلا تصیرالد یھی ”شخصیت وا اشن الاسلا محر ٹگھوٹو یٹیل 
کت ہہیں: 
موسومات ھزومات نفساعیہ کے پیبردکار ہیں اتا تی سے دای اور ے نر ری کا 
ما ہرد ایے بی سے چی یح ت پش مرا ورگ لکوھک راک رجیککےادر چوک سےبھ رک 0ف ٦/٥9٤‏ 
ٹس منہ ڈالا جاے۔ ھرزائی لوگو ںکی طرف سے خی رالرل اور سید الا خیا اي کیا بجاۓ 
ظی 7 ۷ م۲0" 85140۷ کا انتا بکرتا حقیقت پندی اور رو دبا ٹ یکا پک 


ڑااے۔ 


ہشیت 





چگہ ز ہا+ر2019ء 
3 


علامه اقبال ت٥‏ اور ختمنبویتٹ 


ہصسآمجھی 
پا میاہرعات موا نا عبدالتا ران تا زگ نور الله مرقدہ و 


ذو زوا نے جیا تم الرکلی' موااۓ بل جن نے 
ار راہ ٌ کشا فوع ودای چنا 
نا رر میں ری ایل وی آ7 
بی قرژں دی فروں دی ین دی ظا 
عقیر و اتی ناب سال لی نم٥لی‏ الش علیہ ہآ لویل مکی بایت اب عم ومحرفت کک 
زار ا صفیات پراپنے خیالا ٹ پٹ سی ہیں ۔اورس بک نہ اک می اید الا وشن و 
ا خرن صلی الد علیہ وآ لہ ئل مکی خیوت چوک تا قیام قیامت ہے او رق رآ ن پا کا ا 
مہو رآیت؟ 
"بر اَِّی تل لان عَلی عَييم لکوت لِلعَلَمیْنَ تیر 
تر جمہ: بک کت والا ہے وہک ی٘س نے اجاراق رآن اپنے بندے پ 
تک دوقھام چھائوں کے لیے یرہو۔ 
میں نصباوت (امطمكہء۶ عطا ۶ہ ٭ ظ5ہ) 
٢۔‏ اقارفت ((أەعا‫ہء ۶‏ ٭ط ۶ہ ۷ا ٥0ط٦سھ)‏ 
٣‏ سلطت وت (٥مزامہء۶‏ ×ط ۶ہ دہنا:1٥::٥س۸ھ)‏ 
کوشا لکیاگیاہےاو رت سلرش ریف میں خودہادی رت صلی ال علیہ یلم نے٠‏ 
أُرْيلک إِلَی الخَلق کافة“ (مئیں ال کی تا مک تجات کے لیے رسول بتاک رکھچا 
گیاہوں) ۱ . 
می وضاحت فر مکرتھام چہانوں اورتمام چہانو نک یحلوقات کے لی نبوت کے جیط 








ھومسوورھاجھئوسات تی 
اہ دہ جنات ہہوں' لالہ ہوں بوجو کوکش بای نیں یں رج یک وہہ زتضو کی اطاعت کے 
کول زس وک ےی ام لقن مان2 کےملۃ طز ق ول 
کھو لک ری تید کے دروازے سےگمز رن ےکا پا نایا دا اس دزواز ےک کلیدا تقر ار 
رساات نام نین لی او علیہ مل موم قرمایا۔ 
انان ضعیف النیا نکوکا تیات کے تھام اسرار ورموز سے دو چار ہون ےکی اجاز تگگی 
صرف اکا رط پگ اک ظاہر بر یپ کے در تےکھول دنین وا نے تن رکی سن کا و کا 
00 و 
جب امت انل سنت کا دامن تام لی ہے فو پچ راس سنت کا یماح سنت ملف 
انسیں کا منصب اص٦‏ لکرلیتا ہے۔ بجرھال امکانی اط سے جناب خاتم لباق کا 
امت پرقام دردازے ا طط رح کے ہی ںکہانیاۓ بی اس رائیل جن مسا لکووتی سےمل 
کرنے ماع تھے دہآ رج اس مدکی کےعلاءاناع نت کی کے ذر ےگ لک کت ہیں 
لن تو لکمالات وت قی مقامات کے ان لامعدددامکا نات می اپ تیعم نکر بی اور 
ہرایت کے جا ۓےگرراہی سے رین کے لیے بیلا زی ےک تحضور مات الین ول ین صلی الڈر 
علیہ وآ لہ وم مکی تحلیما کو ز ندگی اور خرت کے ہرشیے یس ہرچہاد تل مک رلیا جائے۔ 
حفرت علا مہ علیہ الرمہ نے ائی تقیققت پالکواپنے شہورشحرے 
نکی رن نشلگ راک دن ام اوح 
ار ب او نہ رید تام بای است 
یس بیان خر اکر نز صرف رو نا تحت کوا اگ کیا سے بلہابہام ایت پرچھیالعنت و 
پکارکی جرف ایا ری ہے نلم اسلام سم ش ریو حضرت مولا نفش لن تیر بای نے اس 
جا معی تکواتزنا نظ رکی پٹ شی وائ کیا تھا اور نبا فطرت“ شا عر بے بدل اسدابڈغان 
طالب نے بھی ان سے ای فیضیاب ہوک ے 
مت ار ہر 7 شر رت 
مرچہ صد عالم وو طاقر تہ طل.٭ اض 





تس ت سو ا ید بیا نگردیا 
تھا یں ےک ہیک ایما عقید ینس کے دوسرے بپبلد پر بٹ ا 7 
ابوعذیفہ رحمترااشرعلی رن ےکفرقرارد یا تھا۔ ہمارے برمصخ می بحٹ ولظ رکا وو بنار با او رآ ئن 
بھی کل کل کے دا کےع دی من منافما نا میش کرت ہوۓ صدمل تک 
زار وزبو ںکر نے کے لیے ای سمازشوں شی صروف ہیں 

علام۔ا وہک ھت ہےکلقجیات کے انپا لگادینے کے 
جو کوک میم اش ان نںگراوزیں 2 یکنا حفرت علام بی نے اس مت ےکوص رف نشی 
مت نی قراردیا رسس کے دائر وا یکوساریی یذ ندگی رحاد کردیا۔ اوغا ب تکردیا ہےکہ یہ 
پوری ات کےاسکام دہقا کا متلہ ہے او رہم ان کےارشادا تکی نی بی خاب تک کھت ہی ںکہ 
ا اکا ےی ا 

دن کے عا نیم معاٹی بھی سوائۓ اس کے ان ناخ ری یسل اللہ علیہ ےل مکی 
نلیا کوزن ری اور خرت کے ہ سے می لآ خری مج ت ضلی مکیا جاۓ .بی وج ےکرلت 
کے اجما گی مطا ل ےکی نار اسسلائی جموریہ پاکستان کے ہ رآ تین میں تق رن وسن تکوقا نون 
سازیکاصرچشیٹراردیاچاتادپا- 

ان عالاات یل پاکستا نکی سالمیت برق اد رک ےکی مار پہلاسوال ىہ پیدا ہوتا ےکہ 
مس نیا ب نز ہونے دا کاب اورکس نکی سنت؟ مین دقانونکامرچشرے؟ 

داوج رحب قانواں رع نم 
و ا ا رت و 6م 

کی رو ےم نو تکا مت صرف عقائدکا منننٹس ہے پاکتان کک کین قافو نکا مل 
ہے۔ مہ پاکستان کےئخلف مو رجا تکوایک دوسرے سے پوس تک نے الیک دوسرے سے 
اکھاڑکرر یز وریز ور ن ےکا متکلہ ہے ۔صرف مھ یمیس بل اتا نکو بھارت سے جدا رک یا 
خدرانخواستہ پھارت کےا دای کی کرو ےکا سر مر بی ہیں بی ہر پاکتالٰ 
خاندان کے اندرنب اورصلررتی کےر شت تجائم رک پانف کرد ےکا متلہ ہے جم هیت 
ایک مسلمان کےا سک یشخصی تکوقائم رکئے یاد یوانے کے خوا بکی ط رح ا سک یخخصیت کے 





ہ-وھسہیو نس ا سس 


حیدوخاحقحیت سے ا لکو با سم ناد ےکا منلرے- 
جو کہ اہول بی کیا شا ع رک مبالفہآ رائی ای داع کچل 7 رائی ہیں تجرے 
نے غاب تکردیا ‏ ےکد جس دن سےعقیر نم وت کے زط سے علومت وفت نے ہمان 
غفلت رن ہے ا دن سے مر پاکستا نکھنا ئوک سازشوں سے جہارنے جن مت ے 
کا ٹکرانددا گا اش کی جحیب می ڈال دیےگیا ہے جس اپضستا نکوہم جا ہلا نہحصبی تکا نام 
دتتے ت گرڈ لکام وپ نخرہ جار پاہ اد مالی فسادات نے وعد تال کی ول بلا 
7 رکددئی ہیں۔ اس لیے م عفر علا مہعلیرال کے اس اسان شی مکوکہانہوں نے عقی دہ 
خاتی کی دکالت میں دوموادفراہ مکردیاہے چواسس دی می کسی عالم انی سے ن ہور٤‏ 
تھا۔ف را من گی ںکر تا 
تک جد یمم باف گر دوجس سے حفرت علامہ پیل کویی ہا شوہ ہے اس نے 
خم وت کےتند لی پھو پا بیخوئی سکیا اور می کا ہوانے اسے حزنلٹس کے جز ہے 
سےگگی عادگکردیاہے۔لجض اہ ام انیم یا سرن یر تم یکا ظا کر نے کے 
باۓ بی رواداریی کا مخودہ دچتے ہیں۔ اگ رکوگی خی رسلم (ہریرٹ ایرین (وشیرہ) 
روادار یکا مشورہ د ےق وہ معفرور ہےکیوکہ ال نے ایک لف تن نٹ وف پالی ے- 
اس کے نے ای ضرف گا دشوار ےکردہاسسلا یتید نکی ابحی تک کے_ 
خرت علامداقبال ٹیچ نے1 ج سے الس سا لنٹ جس خطر کی نا ندد یک تی و 
آن فقنرین چاے ساوت بالاۓ تم بی ہ ےک ہمت وقت نے تصرف اس خوفاک می 
جارعیت کے سان مسلمافو کو دست دپاہناد پا بلہ پراسرارطرےے سے ا لک پر وش 
کی جاردی ہے.حفرت علا مہ پیل نے ا وق ککومت انگشیہ سے مطالیکافقاکصلانوں ا 
سے پا خی نٹخ نو تکوععد وا لی تق ارد باجاے ۔ ان کے اص الفا ظط ىہ ہیں : 
:رق ران میں علومرتی نے لیے مین علق کار بے ہوگا کے وہ 
قادیانو ںکوسلائوں 0 ما تاور قادیاوںل 
کے عقا ید کےمین مطا بی ہہوگا اور اسط رح ان "و 





المھلی )جع ١‏ __-چو یچ 
بت رمسلیان دی ہی رواداری ےکام ےگا تید بای اہثبٰ 0 
معا لے میں اخقیارکرتاے ۔ 
(رنےاپچل ۲۹۹۲۷۸2۳) 
حضرت علامہ ٹیپل نے مز یف مایا: 
میرے شال غی قاد پان حکومت بھی عیعدگ یکامطالبرکرنے یں 
پل ہی ںکر میں گے مات اسلا میکوائس مطا ل ےکا راع حاصل ہے 
کہقادیانیو ںکوشد1کردباجاے اگ رعلومت نے برمطال یلیم نکیا 
ملمانو نکو و یگ ر ےگا کس حلومت داضت ا نکی عیدگی یل دے 
ری ۓے' 
ای یٹرروزن لیٹس می نکوایک خیذ مطو اجون ۱۹۳۵ء 
ا ہوں نے اس خطر ےک بھی نشاندج کی یک اگرمسلرانوں نے اپنے دا شی اکا کے 
ییےکوئی1 کینی اتظام نکیا اوراجننا رای زق توں سے ا تن زاز کے لیے مور اقدامات شہ کی ےا 
ا نکا می وجوم نت رہوکررہ جا ۓگا۔ 
ان خیالا تکوٹیٹ سی لیس سا لکاعرممگزر کا ہے۔آ ن علومت ای ہے اورسواد 
نم کے نام برا خی رات عکومت بورامات موجودوجکمران پاٹ یکوحاصل ہیںگر بڑے یھ 
2 ات ےکہنا ڑا ےک ای حلوصتچھ یی وحدت وا کا مکی ڈمرداز یوں ےہفلت برت رئا 
ہے اور تج بات کے باوجودا شا رلنگیزنتروں کے لیے میدران پموارکررقی ےے۔ جب م بج 
ای داٌ طوز پ یراعلا گر یاگیا کا پاکستالی مسلمافو ںکوانفادی اورایت گی ورپ 
شرکعت کا پابطہ نایا جا ۓےگا۔(د یہاچ چرا۔۴) ریاستکاخجب اسلام ہھگا-۔(آ رك ر۲ 
تنا وا نکش بت کے مطابی ڈھالا جا ےگا۔(آ رمکل كے۷٢)‏ پارلیمنٹ ئینٹ اورصوبالی و 
مرکزی وزارقں پرا ساب شرگی کے لیے ایک اسلا ککسل قائ مکی جا ۓگ اود وز یئم 
صدرملکلت نے ایمان پازڈایمان اکب ایمان پالرسالت (شخم غبوت ) ایھان پل خرت اور 
قلیرا کاب وسنت کے رام تقاضو ںکو پوراکھرنے کا علف اٹھایا (تھرڈ شیپدول آ نین 
پاکتان) 1 نل ۹۱۴۲“ کوکی وت جوا نی نکاس کے اندرخاعحیت کےمعمروں اور باخیو ںکو 





من :ا کر نے کا موق دیاجائے اورقکوم تکیکلیدی اس میوں پ تن رین دیاجاۓے_ 
اکر لوم ت کھت ےک یکن لی پٹ ہے اور ساس ٹ کا لئ ےکوی تتاق ینآ 
ز بردست سوفسطاثی ت کا شکار ہے ۔ ہمارا یمان یہ ےک اس عقیرے کے یرش دوقو مو ںکا 
تظریہ باقی روسکنا ہے اور نہ پاکستان بل بقول طرت علا مہ ہھارکی قومی کی بفیاد یعشقي 
نا موس رسولی ہے گن یکا نام پل سے اھ جائۓے ذو وکیا حعدہدگی اودو ہکس دیوار ہوگی جو ہیں 
سورن مھ ياا ندرا گا نشی سے جدا رکھ س ےگ اور اگرمقم ھی نہ ہو گے لو پاکستا نکہاں ہوا! 
اوراگ پاکمتائع ضہہوگا تو لوم تکہال ہلوگ ؟ اور ٹی خی ر تکس ت ےکا نام ہوگا! 
ان تمام رشتوں اورتقام واشتگیو ںکی جڑ ماخ انی سلی ایل علیہ یلم ہیں تو جوطا تت 
تہیں اس می سے جد کی ہے د وکیا تمہارے مال پاپ من بای تنا رگا جا یراداور 
تارذ ند کی برا خوٹی ےی مر مکر ننس چا ہق جس ےیقہاری د نیاوی زندگی سے 
یہار گی قائم ؤں؟ 
تم نے ج یہاں اسلاىک سر برای کافس منعقدکی ہے اس کے اشر ا بھی صرف ای 
شل میں حاصل ہو سکتے ہیں جج بک ہم اتماد الم اسلام کے بفیادکی رالین ےش رسالت ماب 
کواپی زندکی کے لےقو تہ رکیقراددیی ۔حظرت علامہ بی نے مندارخہ بی اشعاررٹش 
ایی تکوجمارکا می زندگی اور تنددوعد تن کے لیے ڈیا دق ارد نے +ۃ نے ف مایا 
نا مان رو 0 
ان جات پا ا 
و مان وس ا ا 
ا ا 2 وو اقژام ر 
غرم سائی گری اماتباد 
0 0 0 ںا ا ا اس یا 
لی لع ۱ ضا یراھمت 
س7 لت ا و وک 
خرت علامہ یچ نے جس درد وکرب کے ساتھ بلا وف لومتہ (ائم پش گورٹمنٹ" 


خر مم تچب -۔ 





تع چع 
میں کے اپ بیٹراور نت ضروکو الس مک ےکی ایت ےآ گا کیا تھا۔ د گت کے رو ک٤ا‏ 
لین شاغ را وکا دج رکنتا ہے حضرت علامہ یف ہا لک ک کچ ہیںاے 
لق و قزر وو باٹك ا ھاصت 
رت للما لین انا است 
بنا بی اس عشید ےکی ایآ ذاقی کا علی شی انداز یش مائزولیا جا لو وا 
وت ےک۔اس سے الگا ولقراف نصر فکفرزم ہے امم تئھ یی کے خلا ف می بذاوت 
کے مترارف ہےں جو کل تضوزس٥لی‏ ا علی یل مکی نتم ال یی کے خلاف اق دا کرتا 
ہے سواواأشمم امت ئجربیسے جن کآ ز ماہوکروعد ت ٹکو ارہ پادوادردارالاسلام اتا نک 
زورب وکنا جا تا ےعفرت علااقبال ٹیل چا ہے ہی ںکرامت کےگمین حصارکاحننخ 
نبوت بے ححفظط سکیا جا نے ! 
اس مقیر ےکی ابمی تکوعطا مہا تال بی نے اپ مع رکآ راتا کیل ج یدابیات 
اسلا میٹ بد یں الفاظ جیا نکیاے: 
”اس نت شال سے دیکھا جاۓ فو ٹیہ اسلام سی اش علیہ دہ وم 
”نیا قد اور دنیاۓ دی کے درمیان اطورحد فاص لکوڑڑزے 
دکھائی دی گے۔ اکر بددیکھا جان ےک ہآ پک و یکا سرچش کیا ےو 
آ پ دنا قد گے تلق ط1 تمیں یلین اگ راس حقیقت پنظرکی 
جا ےک پکگا وگ کا دو ںعکیاہے اذ جناب رسالت مآ ب شا گا 
ذاتگرائی دناۓ جد ید سے تل قاظرآ گی۔آ پک بدوات زندگی 
ۓ کے ان یھو ںکا سرارغ پالیا یج نکی اسے اپٹی شاہراہوں کے 
لیے ضرذر تتھی۔ الا کا پور استخقراکی عم 6٤‏ 110]) 
(0 301۷160 کاظبور ے اسلام می شیوت اپن یت لکوی گی اور 
ای نکیل سے اس نے خوداپنی خاعحیی تک ضرور تکو بے نقاب دککلیا- 
اس یں بیاطیف کلت پزہاں ےک زندگ یکو بمیشعبرطفولی تک حالت 
مس نییں رکھا جاسکنا۔ اسلام نے دبٹی نچواکی اور وراش بادشاہت 





(منطادق ما ا:67 مگ 7100 )۳7٥٢‏ کاغا اط 

ق رآ جع رفور ہگ راورتارب ومشاہرات پ ہار بارزوردیتاےاورتارچّو 

فطرت دوفو ںیلم انسایت کے ذرائع راتا ے۔ نر سب ای مققمد 

کلف فگوئے ہیں جزٹخ بو کی ین پشیدہ جین۔ پچ رمقیر نم 

ےک اک ایت یگ ات لوس ک پلی وا رات 

(068 0100 7×0 -(ا۸۷(۸3) کے انی ایگ؟ زادانداور نار ادطرز 

یل تائم ہوتا ہے۔ انس لٹ ٹوت ک یف مہ ہی نکہراب ٹور انال 

کی از کوک ینس اس ام رکا میس ہوس ناک دوسی ماوق الارت 

اغبار نوا مطاة ۲5001 م80) 1 نار دوسرو کو اتی اطاٹ 

پرئرورکرے۔ (مپئی جع موقود پا امورن ال ہون کا وٹ یکرسکنا ے۔ 

شم خوت کا بجی یہہ ایک ایی ففیانی قوت جہے جوا حم کے دیوے 

اقتڑا رکا نات لگررتا کت ھا کے انی مشاہدا ت کے ہی نیم 

ممول یکیوں ضہہوں ان برا طر ‏ تقیدری اہ ڈالی جاعنی ےجس 

مر انسالی مشاہدات کے دوسرے پہلوئؤں پر“ 
( نیل جدیدالہیات اسلامیل١۱۲)‏ 

چا تک یں نے حضرت علا م علیہ ال رح کی نلیا تکا مطال ہکا ہے ٹس اس نج پہ 
پچاہو ںکربچد عاض یش نقیدہ خافحی کا وحخظ کے نے ان سے ب کر یٹس نےکام 
نی سکیا ۔آ رج چودمو یں صدیی جس تمام عالم اسلام کے اندد ہرحت اسلامکا ہیڈن کشخ 
وت کت کوخام دوسرے مسائل پرتر بی رے۔اگمرہم نا مو ںٹخمخوت کےجفظ ہۓےانا 
بقا کا اہتنا مکر لیے ہیں نذ قح نماز روز و زکوۃق رن شریی تی اصول وی شعن 
نہیں کچ سک لان مدرنخو ات نشین با ناشن ا ستھ بی کواسلام تضوسلی الل علیہ دآ لہ 
لم پر جھ نا زل ہوا ا کی غیرمشردط اتا کا نام ہے جماری لو تلم سے ذرابھی اونکل 
کرنے می ںکامیاب ہوچاتے میں وچ رہ ہیں نا موس سا رضسوان ایہم این جما رات 





ات ارب 2019ء 





لمنتھی اھ چے 22 سے 
پرراز کن پر ہے مہ ولا اہلمیت ہمار یی نجات کے ینمی ہوکتی ے نہ 
تقر آن کے اوداقی ہی ٹس ہمارے لے ہدایت بای رہ جانی جۓے نہمساجد کےمنجزاشحراب ہی 
می سکوئی تریس باقی رو اتی سے شراولیاءالشداورمشار عظام چ کیا سجتیں جاری رہ جالی ہیں۔ 
نعلا ۓکرا مکی تریس دواعخ ھی می اٹ باقی رہ جاجا ہے نی نی صرف بجی نیس ناکم 
بدكن امت ھی کش اورو چو ددوول پزد ہل ے۔ 

امرت شر ریٹل رانیم ہوجانی ےمعتی ںوموں میں بٹ جا ہیں اورھلڑتی ںگروہوں 
کی سمازشو ںکا شکار ہوجاٹی یں ۔ فت اق نیس خاندان لت سے ار ہوجاتے ہیں ۔خد 
ا ندان کےاندرصلہییا شع ری سے مل ہوچاتی ے۔ اس لےک گرا این لی اللھ 
علیہ لم ای نیس تذچرشرعت ایک نئیں ۔ جب شریعت ای کی فو حم وعلا لبھی ایک یں 
جب ۃام وطال می کوک جدکیں و اپ نے یں ین اون اور ہو" خر دا سی 
رت اپنی تفر ےنھروم ہوجاتے ہیں- 

شم فبوتکاا نار سان پرف رشن کا نکار ہے ز شنپرقبل ہاور کا انار ے۔سیاصت 
میں مسلرائوں کے خلے اور چداگات وچودکا انز ہے غرق یتم نبوت سے ان کا رخووصلرانوں 
کےمسلمان ہونے سے انار ہے۔ یہا لک کر ز با گنک ہوجائی ہے غ مفثدت جا سے اور 
الفاظکاذ خربخ ہوجااے۔ 
(لشکرہ:ما ہنا ضیاۓ تن اپ ریل۴ے۱۹ء ہب ان ش فی جائم مسج جالندھر النگھی ی7ز 


ق٤‎ 


63 
محفل میلاد اورسلام وقیام 


مسعو ددرت پروفیس رش مسعوداھر و 





دوییی مارک اعت ہوگی جب الد نے اپنے در سے او مرک یڑ کو پیا رمایا-(ا) 
آپ کے ؤکرکو بلنرفرمآیا۔ ۲پ رخ خی سنائی :بے تنک ایقدادراس کے فرشت نیہ 
بر درو دی ہیں( )کا نات می ںکوئی یس چہاں ا نہ ہو( دو لا مکان لا ال 
سے کوکی نیس جو درود سے گور ری ہوءلا مکان دلاز مال مل بہارآ رىے۔مارے 
کان می سن سکت ء ہا ری 1 ممھی نیس دکپمکتی ۔ ب مکیا اور ہماری میق تکیا؟ رٹ ذکرمطلوب 
ر بکاکات نے یکل تسسقغ و رہو بلا شی داکھی مطلوب رکیل عو مور 
ری نپ کے سواکو گی خلوق دی تو درو بی والا دی الا ء پچ رجب فرش دا سے گے 
تذودکھی درو کچ گے۔ سار یتحلوقیکواگمر و تمموں پنٹی کیا جانۓ ذ۹ ہے فرش ہیں اور 
ایک حص تام فلوق )٥(‏ پچ را لوق میس انسان سکتے ہیں؟ ان انسانوں میس مسلران کت 
ہیں؟ ان مسلمائوں میس درود پڑ ھن وا نے سکتے ہیں؟ ہ مگنتیاں گنت رہیںء سا بکتاب 
ات ر میں گراالد کےفر شت فآ نگنت ہیں ء ہرلف ذہرآ نن دودح ر سے میں جا اللر! 

جب بیڈو ید سنائ یگئی اور یآ یت نازل :ال الله وَمَلَيكته شون لی 
لت (۹کنے موب ر بکری نپ کا مبارک چچروخوٹی ےحمل اٹھا:محابہ سے فر اہ جھے 
مارک باددد ٤آ‏ نج بجھ پر یا یت نازل ہوگی ہے۔ صا کرام (رشی الیم )نے مارک باد 
پیٹ یکیں 1٤2(_‏ یذ سب ىی رآ نکی ہی گر مآ یت حو بکاحوب ہے۔ مارک ے 
دو جن نے ا سآ یت شریفہکواپٹی پان بنالیا- 

می یق کا ذک پاک بلنرکرنا اڈرتعال یکا مطلوب ونقصود ہے (۸) ای لیے ولادت 
وعشت سے (اکھوں سال پیے بل نے کر پا ککی پیل سپائی نس می کم دشیش ایک لاک 
چویں زراراخیا ہم السا شریک تھے۔(۹ پھر ہی نے اپنی انی امتوں می فیس سانمیں 
اور پک آ کشخ ا سنائمیں یہا نم کک۔آ پکا ام نائی سارے عالم یس جانا چنا ہو 








گیا۔ (۰) پک رآ خر میں حطر تعیہھی علیہ السلام نے کر پا ککیمفل سوائی جل بل ہزاروں 
مت ش نیک ہوۓ ءا گل می 1آ پ نے اعلا نف بایا۔ یش میک رسو لک منج ری سنا ہوں 
جویرے بعد ےگا اوج سکا نام اج“ ہوگا۔ ( ان تا وا لکا ذکرق رآ نک ریم یں موجود 
ہے :ق رآ نجیم ہی سے معلوم ہوتا ےک کنل نت ال یبھی ہے سنت ملاک بھی سے 
اورسنت اخمیا ہی ہے وی یں جس نے7 پکاذکرتکیاہواورکوئی مم تی جس نے وکر 
کیل تہسچائی ہو ۔حفر تآ دم علیہ السلام ےآ پ تھا کے لت ماگ مال مود 
۳ج بآ دم علیہ السا مکی ذریان پرنام نا یآ یق ادلادآ دماس ذکر اک ےکیگ رن رمق 
تی ؟ ای لےف رمیا اےایھان دالوا بھی درووٗواورخوب خوب سلامھچو_ (۱۳) 
الاپنےغو بکرم یٹ پرددد دح ر ے۔( ۴کس عالت می گج را ے؟ کوک یں 
تا کا ۔کیاکیڑے ہوک ہہ نیل نیل ءکٹاہونا فو یندو کیفت ہے رب ذوا لا لکواں ‏ ےکیا 
علاقہ؟ ہاں دواس حالت میں درو دک ربا ےک ندد مار سور سکتا ہے ء نز بان ہیا نکرمکتق ے 
اون کت ہے۔الڈدتھال یکا اپ یوب تپ بر درو دیھینا کی اکما لفظمتکی نل ہے اس 
سے بڑ ھک رآ لی نم تک اورکیانٹای ٭ی؟..-. ال رپ ئل اپ کو بک شاو پر ورود 
یر ہاہے اوراسں سیف رھت (لا یگنت فرشتہ پر باند ہے صف بی فکھٹے درو و 
ر ہے ہیں۔(بوان اہ ھن اللاصل ‏ وسلام کے لیےکھٹا ہنا ان فرشتقو ںکی سنت ے۔ 
آ ی تک ریس پیل ایا اشادوف ما دیادرنفرشتوں کے ذک رک یکیاضرور یت ؟ اللدالد ذرخت 
جار نے وا ای 0ور ہمادےآ گے چیےکھڑے درد رے ہیں۔(۱۸ مم 
جھتڑیں نشیں,ہ مکنزے ہوں يا نہ ہوںہ دو ھکھڑے ہوئۓ ددو دح ر ہے ہیں ۔ ب مکوٹ رتک 
یی ا ن نیم پ مک تار ےہا ں نم ہے ان پہ باند ےصف بح فک ےفرشت ںکی ۔“ 
( ا حبوب دو ھا لم ٹاچ کے سا نے ھا ہکرام زشی الڈ ٹم نماز جناز وی لکھڑڑے ہوک ردرود پڑھا 
کرت تے ۔حضورانو ریا کے وصالل کے بحعد جب سد اط تحت پ رکف ناک رلفاد امیا حضرت 
رکیل بتعفرت میکائل بحفرت سراٹمل حتعز رات لمیہم السلام نے فرشتوں سے لفگروں 
کےسات فوع درفوج صا سسلام یی یکیا۔ )٢۰(‏ پچ رتضور اکم نٹ کے ارشاد کے مطابقی پیل 
بین نودہ کے مردوں نے ء پچ رگوروں نے ء انس کے بب پچوںل نے بای باریا ءفو نج درف آپ 





000 ولام شی کیا _ (۲) یسللہ 0 ے زیادہ 
عر ےکک جارکی در پا دکھٹڑے ہوکرملےۃ وسلام می ںکرناسدت ما بگھی ہے۔آ جع روض اور 
کےا حےس بک ڑ ےوک ری درودوسلام چی ںکر تے ہیں۔ 

تام م13 رم بھی ہے اورقینہ تا نا ےکہ یم سلام وق مکی شائل ہے۔ 
لام وام معلم ال میس تھا تخل میس بہونے دال ےکا موں کے اشارےق رآ نیم می کر 
دے گن ملا سواری کے جافورو ںکا کرک کےف ما اک یم د٭سواریاں پیا ری گے ج٘ کی 
تھی ف یی 1٣۴(‏ ج دوسواریاں ہم نے دی اوردک ویش گے ایک جیرف مایا ہمآئیں 
دی رٹ اتی نشاغیان دکھانکیں گے۔اورخودان کے وجود کے اندر۔ 1٤۲۳(‏ رج تراروں نشانیاں 
جھم نے دیس اوروجود کےا ندرک یر دازمعلوم ہوگ اہک سال سکی نالی می سک لا اللہ إلا ال'' اور 
داپنےپچھیپہڑے پر مج رسول اللہ کھاہواہے.(۴۴ تعن یکر نا کیل الیم فا یغبان - 
رسول یفص وسلام کے لی ےکیٹرے ہوک میں گے چنا چرارشادفرمیا:””اورج بکہاجا ۓکہ 
أش دکھڑے ہوقو اٹ ھکھڑرے وہ الیل شہارے ایمان والوں کے اوران کے نکینلم دیاگیا کے 
در بے جلنرفرما ےگا اورال ہار ےکا مو ںکی خر ہے (۴۵)یشنی میمگلس با با یف لکیڑزے 
ہونے کے لیے سپا عاض ری نل بلاضیل ویج تکھٹڑرے ہو جا کر میں ءال تی ایی سلرانوں 
اورعلماء کے در ہے بلندف رما گا بے ئک اللہ ہمار ےکھٹرے ہوٹ ےکو در ہا ہے (۲۷) اور 
جو راو ریئا ھی ہار ےسلام دقیا ولا حظیف مار ہے ہیں (ے) جب اللداوررسول یا ہم 
کو کے ہیں و کون سے چوصل 3 وسلام کے وق تکھڑراہوٹا چا ےےگا؟ مگ رپچ یھ ینس حضرات 
سام دقام کے وقت أفرت وثارت سےا ھکر لے جاتے ہیں اود بی شیا ناس فرماتےگرکل 
راد ۲ا یم ا ۷۰سا اد رہ کی 
)اور یں گ٤"‏ 'فدایااجب ءاطری کٹل تیرےحجی بک ماق پر درودوسلام پڑھ رے 
ےل ببفرت وقارت سے اٹ ھک لیے ول دای چار پا ھ۔ ات ین کے سام اس 
ان ے جماراسراو نچ ہوگا ا نیا ؟ یفیصل ہآ پ نوف ماکہیں ہم فا ئیواسٹارہوٹلوں میں بھ یکھہرتے 
ہیں اور واں د پٹ یگفلوں میں ش ری کبھی ہوتے ہیں ج بکرس بکومعلوم ہ ےکہ فا ساسا ہل 
صحگرات اورفھر, بات کےم اک ہیں اورایے ماکز سےحضمو راو یٹ نے والن ان ےکی ہدانیت 





معجعم کی 2019ء 
ت3 


فرالے سممصطری۔ 

بے شک ایاگ طو کی ے ہوک رات وسلام پڑ نا نت ملام ھی ہے اورسنت حابہ 
بھی ہے اورسنت علاء ۰لیا بھی ۔آ رع سے پچ کم سمات سو بیس پیل القدر لم عارف 
امامنقی الد ی یی ۔(۲۹)(م ۵۹ے ر۵ ۱۳۵ء) کیل میس علا ءکرا مکانشیم اخ تھاء اس 
محفل میس ایں اش رسولل نے ایا صرصری (۳۰ پک ایک شع پڑھج سکا مہو مق اک ععزت 
ادرشرف وا نل ےجضمورانو یٹپ کا ذک رح لک نکرصف فکھٹزے ہو جا تے من نے 
شعرمفنا اک میکس اما لی دن ب یکھڑڑے ہو گن ء وہک یکنزے ہد گے تمام علا ءکھٹزرے 
ہو نے کیوں ندکھڑے ہت ےکرفر مت بھی ن کے ہیں ا ۔کیوں کے بت ےک اہ 
بھی ن کے ہے تھے !اکھڑے ون ےکا یسل چل ئیلا۔(۳۲) پم چا رک برک ف0 
میرث وقت چ بدا میرے دبلوگی (م۱۰۵۲ى/۱۷۳۲ء) بھی صلوۃ وسلام کے لی ےکیرے 
ہوتے تھے اور کیم سعاد ت کھت ہو وسیل یر ضجات أخروىی تقسورفرماتے تھے موا وی 
رشید ام گنی اورمولوئی انشر فی تھا بی کے مرش رک رم ححضرت حا بی شجامدادالل مہا جگی 
(م۱۳۱۰ ۱۸۹۲ء )کوئی سو بیس پا صا سلام کے لی ےکھٹڑرے ہوتے تھے اراس یل 
بے حدسردروکیف پا تے۔ (۹۴۳ رم رشن وعلا ‏ مات الا می کے پاسبان ھے۔ افسوں ایے 
عرذا دعلاء تقد ہما ری عادت بی نکی ق رآ نکر یم می فوککھدا ےکہ جب سرکشوں نے ححضرت 
صا علیہاسلا مک اذ ( با ا )(۳۴ )کی ان پت زاین کن تک نکی اع 
ٹس دوتادو بر ہادکر دئے گئے۔ جم الد کے دوستوں (اولیاءایٹر )(۳۵) کی شان س٦ل‏ 
زان دداذ یا لکرر ہے خی تک ران کے کیک اعما لکوکف دشرک ای رک رر ہے ہیں نو جار ا 
کیاحال ہوگا؟ ہم خو داب ال یکوذگوت د ےر ہے ہیں ۔ دن کے لیے ار و ںکاوشوں کے 
پاوجودعالم اسلام نت کے بادل پچھار ہے ہیں ۔ وکیا ور اہے؟ ہکیوں ہو اہے؟ نجرا 
ڑھ دپاے؛ پت ھکو ات نڑیں سوجتا پیج بل ے پپیگیںء وی کیک بات اتا ےء 
تن رافر کا ما اون ےپ نی ول ے فتطا کر 

لم رٹرصلوج 8سام کے لیے ہمارے وہ تام اسلا فکھڑے ہو تے جے ہج نک یت وکی 7 
برہیزگارکیءطہارت وصداقت پا گی د پارسائ یکا ب مم مکھا کت ہیں ۔(۳اعال ینیب ہر رکنم 





سے ہش ہے 


و اٹ ے کرو وسلاح ٭ شی لکیاجا تا ے۔ 2 نی اکم دی 
رب ٹڈ جہاں مواجیٹریف کے ملاو سی کفل پک می لکھٹڑے ہوک رصلو ۃدسلام ٹن لک رن ممنوع 
ہے( مگ جنر کی سلائی اورق ئی تر انے کے ل ےکیزے ہون ےکاعھم ہے ان پہپابندیی کے 
پاوجودد یہائی لگ ۴ار رم الاڈ لکو نی عیدوں می ایک عیسو رکرتے ہیں ۱ ولاد تکی رات دگر 
ولا دتکرتے ہیں اورکیڑے ہوک رصلو ‏ وسلام پیٹ یکرت ہیں (۹ بد یہائی ملما ن عربو کا 
معمول ہے۔الل ن ےگ دبا ےکہہمارے پیاروں کے رات پر یت رہوءدانائی بھی ےک پش 
اتل نارسسا کے پھینٹ نہ پچڑ ھا یں ورای مب تکوسواشک ری 


7- 
حواشی 


اک اہی کو و او وو 0 ل٦‏ 
شا تہ رس جس ور جا ہا یں فی یئ تر نت ےکی 


7ر 


٢٥ 
٦ 


ے 
۸ 
۹ 


مصنف ام نکپدرالرزاقی وفأ وی حدیث گ ۲۸۹ 
سور ۃالان ا:٣‏ 

سور الاب :۵۷ 

١۱۵: سور٭‎ 

الام الا ءکرا تی ۱۹۸۷ء ہش ا٣۲‏ ءکوال متدرک ری 
سر3 ال7 اب :۵۷ 

معاررت‌اْحٰوۃء ىا ۳٣٣٦‏ 

سورة انت ا:٣‏ 

سور کہ لیگحران:۸۱ 

سورٴالظرہ:۱۳۷ 

سور الف ٦:‏ 

موک این تپ ۱۵۰۲ 

۵٦: سور3ا7اب‎ 


۔ این 


الیتاً 

سور الصافات :ا 
سور۶ع:۱۸ 
سور٤رعر:اا‏ 
سور8الصافات:ا 





المٹہلی نوع :٭ہ جچع 
٣۔‏ قراویی رضویی ج۷ ۵۴ بحوالتایقی دحاکم طبرالی : 
اتا را رح افو ۃ, ع٣‏ ل۴۰٣‏ 
۳ت سور أتٌل:۱۸ 
_۳٣‏ سور3الفصلے :۵۳ 
۴۳ روزنا مبلا (سحودی غرب )شا وکرشما نتم ١۱۳ھ‏ 
۵۔ سورة چاولہ:١‏ 
٢۷‏ سور شعراء:۲۱۸ 
ۓ: سورة البقر ۱٠٢:‏ ظ یں 
۸- سورہالور:۲۳ ۱ 
۹ ال حدریٹ عالم ولوی نیشن دہلتی (م 2۱۳۲۰ ۱۹۰ء)نے ای الین کی جلاات 
شمانکااعترافکرتے ہہوے نک ایا یل چک یر تی مکی ہے اورکھھا کان کے 
اتاد برعلا کااجماع ہے ۔(نھی وش فقے کی ولا قا ری القا ملا ہور۔ض۱۳٣٣۳)‏ 
ا کی بن بیسف صرصری (۷۵۷ ط۸ ۱۲۵۸ء) اپے وقت کےشلیل القدرفتیہہ اورادیب دشا 
تھے ۔(ع رر اکلہ زیخ اشن ِمت. ق٣۱‏ ضش۳۷٣-ی٣٣)‏ 
۳۱۔ طبقات الک برییء ناب ش ۰۸ر 
٣۳۔‏ اخبارال خیار ش۲۴٢۹‏ مک رای 
۳ فبیصلکفت م تل ہل(م عتعلیقات )ء لا ہو ر ل۱١‏ 
-٣۴‏ سوردا۶راف:۳ے 
۵۔ سورڈیش:۷۶ 
۳۔ سب'ی عفر برزنگی نے عوقدالجواہرفی مولد انی الاز ہرم قیامکوس تخب فرمایا۔شاہ رٹ الد ین 
محرث دبلوکی (۱۲۴۹ج/ے۱۸۳ء) نے تا رن اھ رشن مج علامہ ب زگ کی خوبتخری فک 
ہے۔(اقامۃالقیامہ) 
ے۳۔ نقشبندی فائنڈلیشن برا ےنات اسلائی (ام بل )کی طرف سے گوس ۲۴ اورے؟اگست 
۵ ران ٹل مل دای یٹ انز ضعقکگئی جس میں فضلا وین نے شرکت 
کی او رکھڑڑے وک رسلام یی کیا گیا ( پاکتتان لیک (ام لہ ) شمارہ جع تخب ر۱۹۹۵ءء 
ص*ا) اہ مکی بیے شا رای موجود ہیں 
۷۸-_ ان نیٹ الہلادی:الاد باشیپ امجاز بکیکرم۱۹۱۸۲ء (لفگکریہمابنامفورالحیب) 
ےق 





0 مُنتیا 


فقتنقا دائرے ےت 


یوهجھی 


ازم ننیراشم نھوت, برای سکالر 

( پروفیس رع رفا نود برقی(مصنف جانی سال ق قادیالٰ)ٴ 
قادیاغی ٹکذب و اٹاک پانرہ اورَرِگل وفری پک ر6 ای تی اد 
برطا وی سا ماج نے لوگوں کےتحلوب واذ پان سمش رسو لکی چنگاری ہا لے کے لیے 
اورنپز پاش خر نے کے لیے یھی لم اور دع ک ےکی اھچا دنک ےکم اس برتین مل ےکا 
اسلائی میک ا پکیاگیا۔ اس کےایک ہاتھ یس ق رآ ان اوردوسرے اق یس احاد بی تھا دی 
مکی :اس کے نا پا فلیوں پیا تقر الین اس کےفیظ چرے پردالڑی اور 
سر پرٹو پی رگ یگئیا۔ بل راعلام کے نام سے اب اسلا مکاایان بد بادکر نے کے لیے ا سے 
ملافو ںکی عفوں میں داش لکر دیاگمیا۔ غمن کہ دب یبر ے کےکوشت کے نام رس راور 
کے کاگوشت فروخت ہونے لگا۔ را بک ول بب زم ز مک ایل ڈگاک آہمگھوں میں 
وعول موی جان گی ۔اس نے کے بای مرزاقاد انی جم مکی نے اپ بنا تی غبد تکوالٹر 

پا ککی طرف ملسو بک یا ت9ذ بابقدااس نے بے نی اوررسول بتاک رجھیچا۔ 
( و الہروعا لی خزائیءازمرزاقادیالٰ۱۸6۰ضش٣٢۲)‏ 
اپے مانۓ والو کی مسلمان اوراپنا اکا رکرنے والو ںکوکا خر او رہن یکھھا_ (لحوز 

الد)(ازھرزاتماد اتی ء والیتکر:ەت ۲كص۵۱۹) 

الل اک ادداس کے پیارے عجیب ٹا گیا شان انس بل ان بج ے-(ازمرزا 
تماد بای ء بحوالہ روعا لی خزائیء بج ٭:صص ۳۹۴۷)ء (از مرزا قادیانی ء موالہ ردعاٹی غزائیء 
رن ےاءئصش ۳۴۵) اہلدیت اطمار اور اسحاب رو لک نا موس پر رکیک سے سیے۔ (از مرڑا 
تماد بای ء بجوالہردوعالی غمز انی ء رج ۹ب ۱۹۳۰۱۸۱۰۱۹۳)آ خر بجی شحیطا لی در دک رت اکمرتاباد ىر جا 








اک تاب ر2019ء 


پا ءمرے اکم ا کاپ سکاعدادرینچ دوفو راستوں سے فلاقت چارکیی ۴ص 
۸ کوخو دق جم واصل ہ وگ یانگرااپنے یی اپنے چیلوں ء چیاننڈں اور شیطانو لک پو رکا 
یھو ڑگیا۔ جو اس وقت سے نےکر ا بتک سادولوں مسلرانوں کےایمانوں پر گاکررے 
ہیں۔ ہمارےعلا ءکرام اورمشار عظام نے ہردورمیش تہ قاد باحیت کے خلا فکا کیا اور 
وت کمن ےکو بن دکیا۔رضمرورت اس ام کی ہ ےک اپنے اسلاف کے نے قدم پہ جتے 
ہے مققید تم نبو تکا فا کیا جائے اورقادیا نی تک مقیقت سے لو کو باخجرکیا جائۓ- 
بزرکوں نےککھا ےک ریش خبو کا رذ شفا عت مجر ٹاہ کےتحسو لک پہت رن ذر لی 
ہے۔ نی مک مرتضورتا چدا رشقم خبوت ن اق کین چہامتتکو پٹی اب مبذ و لکر وانےکابا عث 
ہے۔ بیکام جنت ٹیل جان ےککاشتطرتر بین راستہ ہے۔ بی کا مکرنے والوں پررحمت خداوندق 
فی طور پرسا لگ اق ےے- 
کا ور یپاک بطق کی ذائی خدمت ہے محبت رسول یٹپ کا تقاضا ےکراں 
کا مکوزندگ یکانشن بنالیا جائۓے۔ 
مھ یق گی عبت رین جن کی شر اوەل ے 
یرایت سب باعل ہے 
مھ تق کی محت آن تہ شان مت سے 
مم یکچ کی مت روج مت جان مات ہے 
محر اق کی مت خون سے رشتوں سے پالا ے 
ے رع دغاگں اون ے رشوں ہے بالا سے 
ینچخ سے حا عام ناد ے پادا 


پا“ ماوں برادںء بال و چانء اولاد ے پادا 


6> 





رم مادة مارح (سمال دمال) 
٣ذ‏ زنک عذ ال“ ”لگ 


۷۳ھ 


ھ٦۱‎ 


1 بی تکر بر کے دونوںتصموں یی سال وصال موجودے ) 


کل 


عقام و مر اع : نزال غوت انظم کا 
مببان و اف جن تعالی غوت نشم کا 
توف کےدبنتان :نروعرفاں کے شتتاں ش 
سلوک ومحرفت :شرع و یقت کے جبہانوں ش 
شراب ذ دق ان جس زم می ںٹھی جس نےبھی ان 
میں اس شاہباز فیس ےج لی کوئی کوشا 
خیدہ ہے مراف راز و نک یاگردن سامئے ان کے 
عو, فقر ا چم جھا سنا نہیں کرئی 
نہیں جاب نظر ہر دیدہ و رکون جانا ل ا 

یں ررکار لذت 


+- 


یا٥‎ 


٠۰ 


کور و طلنہ الا دوپالا غوٹ نشم ک١‏ 
ایت کرنے والا کی ال وت ا 
خظر 
سد سے جوکھی ہے ارشاد والا غوث انلم 
ق پل رنگ پیانے میس ڈالا وٹ انشمم 
چان صحرت سے دیکھا بھالا غوث امم 


بہ پر طور سامال سے اچالا وٹ 


سے پا ہے ہر ادگ شان والا خوِث ۓ الم 
قامت تک ر ہے بول بل فو نشم 
کوکی یھ گا لوہ نت والا غو رٹ ا 
نان اناء طاری 





2 0 ناو و 


چر''ززٗ راورسر لپا/ل'(۳۰٣۱ھ)‏ 
پر لوم طا ریسلطان رک 


0 





سیدنا غوث ت اعظم پھ کے اقوال 


صاتزاددسیلیرالد اص رکولڑوی و 


ار باب یلم جات ہیں کیو اشقکین وب سجانی ٹن سیدعبدالقادد یلان ققرل مرہکی 
حیات ط کا 1 خریی دورتح شی طور خی خدا کی رشدد ہریت کے لیے وقف دای ط رح اسر 
الع روف اوریگنلمنگر ےغلفلسے پالیس بی کک بقدادکی فضا می ںکیش ہیں اورنلوق خ١‏ 
نےآپ کے مواخناصتراورارشادات داق ال کےٹیش پہامموتوں سے اپ یجولیا ںکجمرمیں۔ گر 
انس بکو کیاکی جا قب يایگ ال گکتاب ب نگ ہے ۔ اذا یہا تک صرف چنداقوال مار 
تی براکنفا وکیا جانا ہے۔ رب العزت بارگا یت کے واہگا نکوان پل پیراہوکرسم برصادثی 
کہلان کت شی اورسعادت اد زائی فرمانۓ۔ 
آ پ را ہیں: 
راغ کے 
پیل اپ ےآ پکاشیح تکردہچھردوسرو لکو_ 
١۔‏ انت ای کیف نود عَيْرَك نما مود الناس البصیز 
تم ان تھے ہوکردوسرو ںکی رضمائ یک طر کرت ہو کیو لوکوں 
کیا رنمائی قصاحب یرت تیر گاے۔ 
٣۔‏ ذُهَابُ دِييْگُ بَآریَعَةِ اَشْیّاء 
لال اِنَكُمْ لا تَعْملون بِمَا تَعلمُوْنَ_ 
الّانی: اِنكُمْ تعُملُونَ بِمَا لَانعلمُوْدَ 
الّالٹ:إلنكُمْ لا کَعلَمُوْنَ مَلَانعْلمُوْدَ 











ںو 
الٌابع: ِلَّكُمْ تمْتهُوَ النَاسَ مِنْ تَعلمَالَانَعْلمُوَنَ_ 
ت جم :چا اق تہارے دی نو ہہ بادکردی گیا۔ 
کی :ہکرس پچ اسہیں لم ء اس پک لی کرتے۔ 
دوسرکی :یکٹچ کا یمک منیس اس پش لکرتے ہو۔ 
ری :یٹس چ اہی مکی ,ا س کا عم حا لی سکرتے۔ 
چٹھی: یخس پچ کات ہیں عل میں ہ دوسرو ںکو ا سکاعلم حاص لکر نے 
سے روج ہوں۔ 
٤۔‏ نَم تحت مِیْراب القَدَر مَتَوَیْذَا بالضٌبْرِ مَُقِلِدًا 
بالمَوَاقَقةٍ عَابذًا بانتظارا الفرج قَاِدًا كِنْتَ ھکذا 
صٔبٌ عَلَيْكَ المقدرین فضلم و مِنَه مَالا تُحسنْ 
ترجہ : صب رکا مکی کہ نف کی موافت تکا ہار گے میں ڈا لکرکشادگی 
کےانظار یش عیادتکرتے ہو یزاب نفل بے کے یچ رام سے 
سوجاہ جب تو ال طرں ہوگیا فو اس کے مل داضسان سے مقدرنم پ4 
اط ر پیٹ دیاجاتۓگاءج سکیٹ طلب اورتمنا بھی شیک رتا ہوگا۔ 
٥۔‏ مِنْ كُُوْزِ ابر کتما الیرِو المصائبٰ والامراض 
والصّدقة 
تر جمہ: اصرار ورموزہ مصائب و اھر اورصد ت کو چھپاناء بعلائّی 
کےفزانوں میں سے ایک اندے۔ 
٦۔‏ تَصَذّق بيمِيِكَ وَاحْتهد اذ لا نعل شِمَالكَ۔ 
تھ جمہ:اپنے دائمیں پاتھ سے صدقہ دن وف تکوشنل یو رہکتہارے 
انی پاتھکوشرتہہوہ 
۷۔ خَالطوا العْلمَاءَ بِحْسُنِ الادب وَ تَرّكُ الاعتراض 


فچھ لز لزا ہر2019ء 





پ وو 
ا ا ۸0ر 
کے ہی عا ضرکی دو تاکن کےعوم وب رکیات سے ہیں فدہ یج ۔ 
۸ 2 اللہ عروخل غاب الڈهّا وَالاحرَة و 
مَایوٌی الحَقِ عَزّوَجَلي عَنْقلبہ 

تر جم :جس نےاشتا ٰ یپا ن لیا دیاہآ خرت اور ماس گی الڈدأا 
کے دی س ناب ہوگئ۔ 

۹۔ فَرّغقلبكَ هُو بَيْتُ الحَقِ لا تدع فِيه عَيْرَة۔ 

ترجہ :تیراول چوک ا شا کا گے غیبرکو ان ۓثعال دے۔ 

٠‏ ِا ارَهْٹٌ الفلاخ فَحَالِت تَفُمَكَ فی 


مُوَافَقَةِ رَبَكَ 
ترجہ :اکرف یی کامیاپی جا تا نذاپنے ر بک اطاعت مرن سک 
ٹالف/- 


١۔‏ مَاَجَهَل مَنْ نَسیٗ الْمُسَبّبَ وَاشْتَعْل بالسبّبِء 
وا 
ترجہ :جومسب بکوپچھلاکرسبب سےمشغول ہوگیاء دوس قررجائل ے 
کہ با یکیو لکرفائی ے فو ہدکیا۔ 
۲۔ حقیقةً الفْقرِآن لَانةُ تقر إلی مَنْ هُو ملكَ و 


حقیقة الَعلی ان تستعُنی 2 نی عَمَن هُو ملكَ۔ 
تر جج  :‏ فقرکی تقیقت یی ےکر اپنے یس (انسان ‏ متاح نہ بے 
اورخنا کی یقت پیر ےکن اپنے یے(انمان )سے ستفی ہوجاۓے- 


کی و اا2 ےل قہ 


۳۔ اك عَلًا لی جَنْبِ آمئس أَعَل عَقابآتیٔ وَآنتَ مَیّت۔ 


قمتکر2019ء 


ہے ا 


ا ت"ھھ0"کم۰0) رک :شا یآ نے والاکل 
آے ادگ زند نہ9( مطلب بی ےکر فرص تکوغمت جا ن رسحتق٘ل 





مآ ىا قاچاے ) 

تر جمہ: اے مالمدار! اپی دوا تک بنا پآ نے وا لکل سے من ن گی 
ہوکنا ےکیک ل٢‏ ے اورلوختاجع ہو- 

٥۔‏ اَكتْر مَاَحمِلّكَ عَلّی الحليہ الحرصٔ عَلی 
و الڈُنیا۔ 


ت جہ:زیادہت جو شی ںگجات (جلدیی ) پ براشفندکرلی ےءوودیا 
نک رن ےکی می ے۔ : 

7٦‏ ۵دت آن نہوں متقیاء مو کان و الما تَا 
بالضًيرفَِنة ساس گل حَيٍْ۔ 

:گرم خی تقی:متوکل اورصاحب لقن نا باج ہونذ بر پکار ند 
رج ءکیونکی رپ ربھلائ یک یا ے۔ 

۷ ۔ وِكرالبذرِوَالْحَرّثِ وقتَ حصاد النّاسٍ لا يَعَمٌ۔ 
و ال جب لوک لعل کا لا رت اون تا وت پچ اور کا 
ئن کن وک رک ضا رٹ وف ون نک 
ظہور کے وقت اعما ‏ صا یک یکوشنل اور اس کے عدم صصول پ4 
حرت بے مود ہے بمصد اتی اب تناد ےکیا ہدوت جب چڑیاں 
کک سںکھتں۔ 

۸۔ صحفّك لِلاشُرارِ توقِعْكَ فی سُوہ الطنْبالاحَيَاى 
تر جمہ:ئ و ںکیاصحی ت ہیں کیاوں کے ساقحد بای می بت اکر 





ےگل :. 

۹. لَانَعَرَِعَملِ فَإِدٌ الاعمال بَوَاِیمِها۔ 

تر جہ یل پفرو شک رکیوگہاعما لکادارودارخاۓے پرے۔ 

٢‏ _ اِعْذَرمِنْ بَحْر الدنیَا قد عَرّق فَيّهِ علق کییڑ 
ٹڑجہ: دنا نے سھفدر سے نے خوف شرزہء انس مین ہہت لو رق 
ہو ےن 

)۔ وا کلت کل بت عالص تی ودنٹ 
7ے رج 
َلَاعَمَل لا 

تج گواورناموٹی ءدونوں سے پیلیسن خی تکوم نظ رکوہ جھ 
مض ئل سن پے خیت ورس تک ںکرتاء أگن پیم ون 
وقحت ئل ۔ 

۲۔ الفقیر هُوَالَذِی لَایَسَتَعَیٌ بِشٰیو دُوُنَ اللہ تعالی 
کو فقی روم ,جس کے استفا کا سبب ذات بار یتال کے سوا 
کوئی اور چز نہ ہو( شی مال ورواتءاقزار فغت ا درہوہ 
با کی استققا کا وادسیب ذات بای سےا نکا رابنی ہو-) 
(لشکگر ماجنا مو را یب بجر 1995ء) 


48٭ؤے 





اختلاف راغ کا طریقه اوراہمیت وضرورت 
لت مس ۔ 


( نما ہمان و 


رج یوں جی خیا لآ ماکیوں ااختلاف راۓ ءا کی اہمیت اورا سک ضردورت پر ال 
کے رب قکار پر کات قا ری نکی خدمت ین ٹیل سی جا میں ۔ جس اىی لوالا کٹ 
کی جمارتکررہاہوں یلم ودال کی دای چشئی اہم چزاختلاف راۓ ہے ات اہم شایردی 
: کوئی نز ہد میزے خالی اور میرئے جن مطاے کے مطالنی دنم گی سب اول بی 
اببادات ای اختلاف را ےکی مرہون منت ہیں شیک یخال فآ رامک ہونا ہی اس د نکی تر تی 
کا راز ہے۔ سرائنس, رہب فلذہہ سیاست, معیشت کے اصولوں سے سک ےکر ایک اد 
در ہے کے جرگ کی تار کوا ٹ کر دسر لی اس میں اختلاف را ےکا سن اپنی شی کے ساد 
موجودر پاہوگا درف ات 2 کن مات لیر ہےکیہہرا سان فطرکی ورپ 
سپ ات پر انیم نل کے مطا بی انگ نہ رکتا ہے اور اپنی ال کک رکا استعا لکرۓے 
ہو دوسر ےکی راۓ سیف را دیتا ہے۔اختلاف راۓ سے اس معاللمہ پرمباے ء 
کات نے ارک لکن در شا تل ےن 

اختلاف را بھی معا شر ےکیلکرئی ت یت اودت قی کے ےہا یت ضنروری امرے۔ 
ہرز کان وگنال یمکر لین می رے خیال میں اللرکی دئیگف نع نل اوراللر کے دئے گ ےم د 
سوا کرای ہوگی جیما ےخخلف چچاہوں پرفرمااگیاکی کیاخ خو نی کرت ے؟ اور بے فی کنل 
والوں کے لیے اس میں نشانیاں ہیں ا ب نمور ہوگا ‏ ہم جھییں کے اب اگ رو رک یں گ ےق اس 
بات کا قوئیامکالن کیرک را دوناہوجکرمیرے والدصاح بک بای ادرعا میاانا نکی 
ہواب تپ کی خلاش ھی یہاں سے شرو ہلوگ یک ہآ خ جہاراشیم درست ہے یا خلط۔ اس کے بعد 
الاب اورمٹبؤٹ کال وو پذ مہ ہوگا ۔کوگ بھی ججہاں سوا لیس اٹھایا جانا دہاں میرے خیال 
رر یک ظرفی با نز آقلیدکابول بالا ہے جوک یت تی دا یکا خت ت بنائشن ے- 








63 
رر ضر ےت 
مطلب یہ ہرگنڑیں لے لینا اہ ےک ہاگ رآ پکیلم ینیل الیک بات کا ادراس پر اختلاف فنظ 
اس جفیاد کر سے ہی ںآ پکوفھی کننیس لک دی آپ کےسکو ل1 ف تھا فکومناس ب یں 
:عو ہق پا الیل نشین پا اصول اد طود پر ولیداؤر یھی رد ےکی 
دلالے ے ۔اختلاف نچ یمان ہے ج بآ پ اس کے پورےسیاقی دسبا قکو ہاو رمتائدکر 
پیے ہوں اوراس کے بعد پکومعلوم جا سےکہ ہر معاملرمیر ےم کے مطا بی درس ت کل 
سس روف ادن ناک دا ل رآ کنا ہت خہابیت ایا اور 
نیاوی اضصولو ںکی پاسدادیکرتے ہو اس پراپنی راے انچائی صدات سے د میں اورال 
ط2 ا پاپ کول دا +جائی نوا ابی دنگ افرادی 
گے۔اختلاف راۓ کے وت اس جات کا با خی خیا لچھی اتا ف رائۓے کے بنیادی اصولوں 
مر شارہوتا ےکآ پ شس سے ا خلا فکررہے ہی کیا1 پکاا لاف اک بیاگائ 
نون ںکرر پا ٹن اگ رساحنمدان سے اختلاف ہے ف کیا پ سائنس کے بنائے گے اصولول 
کےساتھناانصاٹی فی سکزر ہے یا ریپ خابپ ک:اعاخاف نب ةاآ ذہپک 
زا دنم کو تاس پیر ہے پافی سے ےق ظ فک یا اصول ق تا یں ہوا 
نی اختلاف راے اود روک ایک سا نیس جان ر ہے۔ اپٹی دم لکا لے فور جئتزہ می یمر 
اےغللم کے نپ یی ۔ اختا فکااصل مقصدنہم وف راس تکا معابل یا ںکرنا ہونکہ 
اپنی داوواءکروانا۔ انم بات بک اختلا فکامرکز ما نے یامکالہ دالا فیصملہ یا حنوان ہونالاذم 
سے بیہاں 1ک بت ایا کت ہی ںکفلاں مک فا وھ تھا یہا بھی خانکھا ہوگا- 
ہارا متا رہ چک اس یکو انی ےق ل نی سکرتاعلم ودالن کی مہ جذ با تک یا 
اوزنترو ںکوفوقیت عاصل ہےاس لے ہمارے معاشرے می ایک چچزز یہ ےکک قید تک پا ۲ 
نشی ہے اسےاتار نے کے لہا یت عدہاسلوب اتا رکر نا چا ہے سب سے بچھلےگواممکواں 
ات ا لکرتالا و ون ناک فلد دا کا سب ذس وت وا کک دان ےکا 
نیک ہوناکوئی لازم امرنیں ۔کھچن ریظن میادوں پ با تکرن ےگا او لی 
چا بےادراختلا فکاظر بیکارت بک رکے بتانا جا ہے ۔اس کے اص لط رق ہکار سے روشنال 





وو وھ ین 
جا بل کہا جاے اپنا موقف ےآ 1پ اگر ہر لال دے گت ہول تو دے دیچیے ظیرہ 
یرہ اس طر ہم پیل میں اس اص ن کا مکوخوش اسلوپی سے پوس تکر کے د او ایک 
عرش کن کن 

اختلاف را ۓکوتب نفاتی سے بھایا اکا سے وک رن اختلاف را ےکا اسلوب منافقاتہ راۓ 
بدل جا ےگاجوکہ اع رمت ادا یی طرف اقم بڑھانے کے بچاے یبن جاےگا۔ 


1 تس وفقماءکا 1 ہیں می ںصن اخلا ف: 

دو رعاضرکاسب سے بڑاالبیہ یر ےک اختلاف سے امت کے لیے رعم تقر اددیاگیاتھاء 
ےہار دو ا کب او وٹ پناکرامتکی وعد تلوپادہپارہ 
گردیاگیا تا رن ہمارےنوجوان ہرم تلہم پر ینان رکال کے ہی سکیس فی گل 
کک بی :ایک صاحب کے نکش لکرس گنو دوسرے کےنزدیک دوکف رہ جا ےگا اود ہے 
ایک ایا موذیی مر سے جوٹو جوان طبقکواسلام سے دو رک ن کا باعحث بن در ہا ہے۔ بت 
ملا ن 1گ رہم اسلا مکووھی وق رہن ٹل وا عم ےک اوری ر یکو مضبوگی سے تما لد ہم 
نے ا ںآ یت سے اتا یکا فار ٣لا‏ اخ کر رکھا ہے ج اس فر مان خداوندی سے ازفا قینڑی بک 
اما دکادریل مت ہے اوراتماواشتلا فک صصورت می بیامکن ہے۔ ا سآ ی تکو نظ رکھے ہو ہے 
جب ام عدیٹ پا ککا مطال کر یق .یں حدیث میادکیٹقی ےکس( اختلاف امت رقۃ )ری 
امت کا آ پیل بی اختا فکرن با عث درممت ہے ۔آ بی تک ید اورحد یے مرا رککو لاک پڑیں 
ہوم یرجی کک گا دا د برابن بعم وش کی رشن جس الا فکر وین اتحادکی ر یکو 
اھ سے نہ جانے دو۔اسلام نے جو میں (نمازہروز٥ءزکو‏ 8ء ویر فرل ف مادریں :یں 
ےآ ے یانہآ ےکن یکا مکرنے ہار نے ہیں +اددامی ط رح جو بی ( شراب ہ بدکادگا؛ 
جواء وغیرہ) مطاق 7را م قراردپے ہیں ء یں ان سے اجقتا بکر نا کر نا ہے 1ج ھآ ئ با نہ 
ے ۔لنکن در معاملات میں اصول :و اعد کی فا رم نے د ےکرف رما کراب سوچ ہجو رکروہ 
جآ ۓ لی لکی رشنی یل اس پیش لکرو۔ اس پر حد یٹ نبویی ٹا کامغ ہو چھی ول تکرتا 
ہ ےک اکرکی صاحب اجنچاد نأ بھی ہوچاے فذ اس کے لیے ایک بی ہے او راکرد اجتاد 





پ- ۔مواودھھ وہ ہد ۴ 
دق ہ عمش سے بن اصور ت جا یکر تہب ہیی ے۔ 
تار اعلا مچھی اس امر پر شاہد ےک ہآ تم مح رت ن مفس مین فتباء میں اختلاف :) 
ین اتماویی تھا۔ دورسھاپرکوہی دکیہلی سک کھنھڑوں مائل پرصھا کرام مہم ال رضواا نکا ٗبیں 
می سعلی پشحیقی اختلاف مو جودتھا۔آ مم کے ادوارکویگھیس قو امام انم ابوحفینہ بی لے کے اپے 
شاگرد قاضی امام ابولیسف یہ ین چوتھائی مائل و احام میں امام انلم کے ساتھد ہی 
اختاف رک ہمان وو شفیت سے نمارج ہو تے ہیں ندب امام صاحب ا نکوا در ے 
لن اعم رت ہیں ؛کی ون اختلاف تھا لن اتا دکا دا بھی ات جس تھا۔آ پ امام صاحب 
کے بعد ہاقی ن1 تریکرا کو کولس رلک راضتلا ف شع ہوتاء پگ اصول و عرش اختلا ف/ن 
بیع ہو تذ امام مالک پیسلےءامام شانی یل ءا ام اح بن شل بی دا رما مکسے بنا ؟ 
امام شافثی اورامام ابوطی کا نے اصول وقوعد یں بی اختلاف ہے اورای اخخلا فک بیاد 4 
دونوں کے پان خل نی مسائل بیان ہو تے ہیں ضس صصورقوں بیس شائی بی کے ہاں 
اہکام موجود ہی ںک شی امام کے پچ ٹماز نہ ہی ا ورمع صودقوں میں احناف کے ہا ںگحم 
موجود ےکا نک شال امام کے یچچ نماز نہ ہوگی۔ اس قد رشد یر اختلاف کے باوجودگی 
اتمادقتم ہے اورکسی شافقی ن میتی پیا تق امام نے کسی شانی فقیہ یرف صادرتکیا۔ 
آ پ امام اھ نشی لی مال نے لی : دواہام شافقی کے ش کرد می جن اپنے ھی استادامام 
اق سے اتا اختلاف رکتے ہی کان کے مقا سے ٹس ایک ہےنخبی رہب کےانام بے 
ہیں۔آ پ مو شی نکی شال می امام باری اورامام مس مکو لیس ٠ا‏ مع سم امام گی کے 
شاگرد ہیں لن اپنے بی استاد سے (اور استادجھی امام بفاریی) سے عدبی ٹک روایت و 
درایت کے اصول وقواعد پر اختلا فک لیت یں اورای اخلا فک تیادہ پور یک مسلم 
ریف یس امام ارگ ےکوگی عد بیث روابی تل فر مات نیک ناس اختلاف کے باوجودگی 
امام بخاریی ےکوی فک یں دتے بکہ انیس امام الید یسل مکر تے ہیں ۔آ پ امام ابوخیفنہ 
اورالنع کے بعد نے وانے امام الید یٹ اورامام بناری کے لپ میس بیادی اتا فکو لے 
لیس ء امام ابوخفیفہ کے نز ویک ابانقول اوراقرارکا نام ہے اویل ایا نکیا ی تک با عث 








و '‌"ف"1ئعء کو الک امام بای کے 
ز دی ک اگل نکیا جا انا نکاایان جیانئیس دہتا۔ با تلاف اس مثال ے اظ رن 
انس ہوتا ہ ےکامام الوطیفہ نزو کیک اک یکن جان لوج ےکرنمازادانی کر و وج بھی 
ملمان ہی ر ہنا ہ ےم نگنا گار ہوگا امام با کی ایما نک تخریف کے مطابق اگ رکوتی 
ایک نما زچھی قغ اکر دے و و مل مان بی نہد پا اور ا ےتید ید ابا نکر نا پڑ ےگ اس قد 
شمد بد اور بنیادی اخلاف ے پاوچجداام ار یھی امام ااولیذِ لی نویى جاری یں 
کا ساگراشتلاف: بوتا ا سلامکومود ہت او گرا لا مو وت (میازال)سلام 
صد یو کل بی کالعدم ہوگیاہوتا۔ بی اتا ف کان اوراشتلا فکی ررمت بی ہے جس نے 
لف علاقول :نف یوں ٹیس ا نکی ردایات کے مطا لق اجکام میں اختلاف کے ساتھ اسلا مکو 
پروان پنڑ ھا یا لین اس اختلاف کےساتھالرکریم ےم کے مطا بن اتمادیھی قائم رپا 

دور حا ض می ںبھی سکم امہ اود خائ لک علا کرام ملف تراہب کے مفتیا نکرا مکو 
ذوسرے نر ہب ومسلک کے علاء کی فی اخلافی قرکرل جا ہے۔ انا زی 
دوسرے پر لاگوکر ن ےکی جا دوسرسے کے مق کی ق رک لی جاہے_آ پل سو پ 
کا زیٰ پکودوسرۓے مسلک کےامام کے کنا زکی اجاز تی دیال آپ ادا شرگر سی 
ین بط رب ق71 تمہ وفقہاء داتھادکی رس یکول پاتھ سے نہ جانے دی ۔الیندورسول نے کیمیں اتمادکا 
عم دیاہے اود خلا فکرن کی اجازت دئی ےلیک نکی ں بھی ہی ںی کے خلاف ہون ےکی 
اجازتنئیں دئی اورنرہی ملا نا یکاگم دیا- 

پعلم شی کی ررشنی یش اصول وقواعدہاخام ومسلل پہاختا فک بی نین اں 
اتا فکوعناداورظرقہ وار بی تکی جیادنہ بنایں ۔اختلا فکر لکن خر رہں۔اخلا فک 
صورت اتادرحمت رن میں اممت کے لی تفر کی صورت میں زحمت نہ بنامیں۔ خدارا! 
رسول الشد یٹپ کی امت کےگکڑے :ہک یں ۔آ جع صدکروڑ اغسو سکہ رسول اللدکی امت 
حراش ڈیڈ ارب ہوک رڈ یڑ ھ لاک یھکم ے- 

نکر میں دی کون ممنوں میس ادس پانل راہون ےکی غ نیب فررائے.آ مین 

دنت 





حا زوش قیصرننی رشع چگوال و 


ج کہ ہردگی می حب دنا اور دہواعە سے ہو ہیں ۔انسان سای اور 
راکنریک شا ہوگیاگی مو کبیا اخبانے خوف نے اسے پرطرف ےکی رلیا/ لغش ال 
دورکا اسان خمام وسائل اور ماش ی1 سودگیوں کے ہوتے ہو اس قرپینی اظظظا روا فلا کا شگار 
کیوں ہے۔ پرایگ بہت بڑاسوالی ہے اود اما سوال جو ہرانمان کے مہ پرککھا ہواے+ا ےآ رق 
ککوئی بڑنے ۓ بڑاف فی اور ما رذغنیا تگھیپح فی کر کا آ خوق رآ ن ریم اورسنت رسول الیم 
نے اسےگ لکیاکہانسان چوکہ اپنے خا لی دم لن ککوبھول بیٹھا ہے اور اس نے اپنے اد لکو 
خواہشات (فسیا یکا ال ہآباد بنا درکھا ہے۔ ال نے نال کا تنا تکی طرف سے کییے ہوے انمیاء و 
ری نکی تقظمات دا رکچ پشت ڈال دیاہے۔ ھا لان خا لی از وسعاوات نے انسان سای 
سو نک با حع تصرف اپ یاداور فک رکقرادیا۔ ہشن لوگوں نے اس ذکر سے اپ لو بکومنورکیاء وہ 
خماصا نت کہا ۓ ا کٹل مر کچھ یافو یرحیات سےڈوازاگیا۔ ان پرلفظا و تکااطلا رو رہوا 
گرا نکا نام اورکا ٥یسی‏ سے نہرمٹ ہکا ادردوشع رط اکا مصداق اغم قرار پاۓ- 

ہز میررآں کی بش 6 شید ین 
کی ۲ اچ ہے رج وو>ء۶ عم دوام ىا 

تار شا ہد ےکہ ہردورٹ ایض چید+د رگز ید ویو بینارہجنودری نک کے رہے ہیں اود ہر 
کڑے وقت یس قذرت نے اپیخلو نکی رہنمائی وذنگیرکی کے لئ اٹھی ذوات مقر کوختب فرایا 
ج بکبھی دین تین پرکوئی عید و زن لی خودسا ختمفروضا تکی بنا مل ہوا۔ اد تھی نے اپنے 
مقرب تسس بنلرو ںکوارچی انید وفصرت سے نوا رکرالیادوزند کی ٹن کئی کے لے مرا نل مل 
ات ھن کی جراءت دگیا۔ ا ییے ایا اک باز پاک نہاد بنرگان میں سےححخرت قبلہء حا لم کرت پچ 
می شاوئی گیلڑدیی ہیں۔ جب بن یکومنٹ کے ایھااو رح تی اعاخت کے ئل بوتے نی 





63 
قد بای مرذاخلام اد نے دوک ءنبو تکیا تق بارگاد رسمالت اب ٹیچ سے اشار: پا ار اورایگ پاغدا 
انان سےکش ٹھ یکوامرالھی تسورکرتۓ ہو ۓے حطر گول دی ٹیہ جرزیاشخم ہوت کے لۓےگجھم 
بت ہو گئے ھی وج ےکہقاد ایت کےخلاف حطر تگولڑ دئی پیل کےطرزاستقد لال وانداذاشجبات 
مقام ٹم نبوتکودکیھے ہو ئۓ قام کاخ بک راسلائی کے جیدو تن بن لا ۓکرام ن ےآ پکوا نا تق 
قا یی مکیاا درم رذا قد یالی کے مقا لے کے لآ پ یہ کے جم یی وی اقداا تک جو لیم 
کیا۔ ما لی قا دا نکوم نک یکھا نا کی درو شی ات وس رکاری ماوخت کے باوجودییی ناب و 
خاسرہواوداا ںکا وب اوردیشل بفر یب تام ہندوستان والوں پہپوریی دا کے اب لعلم ونم پ 
آ اب یھ روزکیط رح گار وعیا ہوگیا۔ اس ط رح ابل اسلام نے اس فتنہ تی ےبجات پالی- 

۴اس تکوکلڑ شریف ےآ پ لا ہود کے لئے ردان ہو اود پاش تیب نائاگرائی 
علامآپ کے جمراہ تھ جو پاددہ ارہ اتک :رات مگوجرانوالہ شاہ رمیا نوالی کے لا اورم ا 
اائے را ہیلا ہوری کے کنل بابعد پک رآپ کے اشتبا لکنندگان میس شائل جھے۔ 

زی یس ان علا مار گی فہرست دگا جا ری ہے جو شابی مسود کے جلے کے اراس 
مر کے میس قبل حا مکولڑ دی پیل کے سا توش یک ہوے۔ 
علاءدمشا ا ناص ری نکی رت 

(١)جناب‏ الوسعرحضرت خوا شرع دای صاحب ساد دشن چان خیلاں بن رت خوا 
قادرہخشی صا ب شس ۶ انی یل (۴)جناب مولانا مولوی عبدالہار صاحب بن موا نا مولوی 
عبداللد صاخب غزنوی (۳)جناب مولانا مولوٹی مخت مجر عبرائلد صاحب ٹوگی (۴)جناب 
مولانا مکی حافظسید راع ت می شاو صاحب سجادشا نمپ رید ںتنشنری(۵)جتاب صا جزادہ بر 
اقاہرصاحب سیادشن با جھ خیلال شع پنادد(۹)جناب صا جزادہ مھ برا صاحب سار رن 
وی بھیلووال خ عگثرات ڑے )جناب صا جزادہحبدالتزی: صاحب سادوشن چا چڑ شرف تلع 
شاو پور( ۸) ول نا ھولوکی خا حھ صا ح ب کو دی اما شا ہی مسی لا ہور(۹) مولا نا مولویی ا 
انل صاحب ام رتس ری )۱١(‏ مولانا مولوگى بر الاعد صاحب نان پارگی(۱۱) ۶ل ناعافظا پر انان 
صاحب و زع یآ بای (۴۴)+اانا مولوگ اجرد بیع صاح ببهویکامبل پور )٣١(‏ مولا نا مولوی کپرایٹ 
صاحب سجادہٰشین علوشلع پزارہ(۱۳)مول نا مولوی جرفو ران صاحب شع شاہ پر(۱۵)مولانا 
مولوی شا وعبدرالزی: صاحب پاخغپانیوری (۱۹) موا نا مولویی مھ ذاکرصاحب اول مدر مدرسہقیدے 


لد حر ےب شا ے_ 





3 
۱ اشن ایت اسلام لا ہورڑےا) “ولانا مولوکی میمجدیبدالل صا حب لاد (۱۸)سولا ا مولدی خر 
یسف صاحب سن ہھوئی (۱۹) مول نا مولوکی عمبد ای صاحب غرزنوگی (٣٢)مولا‏ نا مولوی مر ار 
صاحب امام مسید طلائی لا ہور(۱٢)مولانا‏ مولوی مھ شریف صاحب نہ بیو وال ضلِع 
گثرات(۲۴)مولانا مولوکی الوشھ ات صاحب لا ہوری( ۲۳)مولانا موق قلام تق صاحب 
پروفسر۶ لی فاری گورنمنٹ کا لا ہور( ۲۳)موڑانا مولبی حم الد ٗی صاحب لائوری 
(۲۵)مولان مولو یتم ودالد بن صاح ب مم مدرسہ ڈیہ غازیی نخان (۴۷)مولا نا مولوئی خلام اجر 
صاحب ادلی دی دارالعلوم اشن نتماعی لا ہور(ے٢)مولا‏ نا مولوی اھ دین صاحب لع جم لم 
(۸)م ولا نا مولوئی عافظاشجھ ما نزک صاحب راو لپن کی (۲۹) ۶ل نا حاذظعراح الد ین صاح بگنہ 
مو شریف(٣۳)‏ مولا نا مولوی ابو أ١‏ سن صاحب مدرس ان ناشلا ہور (٣٣)مولانا‏ 
حافظاحی٦ی‏ صاحب بٹالوگی )۳٣(‏ موڈا نا مولوئی وراصرصاحب پسروریی ( ۳۳) موڑا نا مولوئی جال 
الم بین صاحب لا وی (۳۴) موم نا مولوئی مم سجن صاحب چییاں لا ہور(۳۵) م ول با مولو یگ 
مج صاح بمرڑا اشن ما یت اسلام لا ہور (٣۳)مولانا‏ مولوکی فور امر صاح بضع روز پر 
(۳2)مولانا مولوی ات لی صاحب سیاککوٹٰ(۳۸)مولانا مولوی شخیق ال رن صاحب 
ہوری (۳۹) مولانا خلیغ بدا ریم صاحب ان ایت اسلام لاہور(+)مولا نا مولوی سرن 
صاحب بددر حددساسلامیرراولپن یی (۴۴)مولانا مولوکیعبدا یر صاحب یدرس ا نماع ا ہور 
(۴۳)مولانا مولوئی ملا م رہاٹی صاحب سنہ بھوئی(۴۴)مولانا سیل شاہ صاح بضع 
نرارو(۴۵)مولانا مولوکی شہا ب الد بن صاحب مرولہ (۴۷)ئ عی صاحب ریاست جو ںکشیر 
(2)مولانا مولوی ع اکر صاحب مدرل مدرس. اسلائی کا را(۲۸) مولا نا مولوئی ام رتڑہ صاحب 
ساکن بھوئی )٣۹(‏ مولا نا مولوی شمرعبد لح صاح بضع شاہ پور (۵۰) مولانا مولوی بمال 
الد ین صاحب راو لپنریی (۵۱) حر تخلیضف شا ہبدالز یز صاحب پناوری (۵۳)م ول نا مولوئ و ی 
اح صاحب برارہ( ۵۳) موا نا مولوئی عبدالطیف صاح بیجن افغاننتان (۵۳)م ولا نا مولوئی اجر 
دبین صاحب سنہ جوا رتصیل پچگوال (۵۵) موزا نا مولوگی عپرالعز بن صاح بج ڑا اجمن جات 
اسلام لا ہور(۵۷)م ولا نا مولوئی اتی صاحب واعظ دبٰوی وخ رو وخرہ 


اث 


0 ا پک ای اک رگاروا لا یل ہے[ 


فچچھ کت اہر2019ء 





سرز ین شک رگڑ ھ پر ہونے دی پا نچ می سالانہ 
تمفظ ختم نبوت کاتفرست 


ےج ھی 


چو سیرعجییب الین شا ءلنشبندکی و 


ایک مل ہیقت ہےکہ ہار ےآ قاد مو لا ہماریا جائن دمال سے بڑ کر پیاری ذات 
یرم حفرت میتی مم نیٹ الد تھالی کےآ خریی نی درسول ہیں اورپ برسللہ 
نبوت قام ہو چکا۔ اس عققید تم وت پراضت مل کا ش روح سے اجماغ سے اور بچلربیکقیرہ 
دی نکی اککلیت وکاملیت میں سے ہے ہمارے پیارے ہرم کے بد اپٹی طرف سے ن 
تس شی با ہروزیی نی انایا آپ کےآ خرک نیا ہونے یس شح فکرناپالا اما کن رکا 
امیا بکرنا سے اوراس ظط رح ہردور می کم نشم نبوت ورسمالت نے اس اجما گی عقیدے پہ 
حعملہآ ورہن کیا ہنا کا مکیشش لک ہے اور تن تن مدعمان نبوت سا ت ے1 ہے ۔ بی ں تو ویر 
می مگ رہ یٹم خبوت س کٹ یگوہ ہی گر نرہ کا خودکا شت تاد یا یت نمایاں طود پر اجھرا۔ یر 
ارہز کا خودکاشتہ اپوداخرزاغلام اعحھقاد بای کی شکل یس سان ےآ یا۔ ینس نے پھ مبددیہت٠‏ 
زیت آور برای مجوٹیٰ و ت کا جال بچھیلا با اورکئی سادہ لوں مسلبائو ںکو ورقلایا_ لن 
مایخ وت نے ان ڈیا نک برقت تھا تق بکیا ویش ننخ ہو کی پاسبالی کے لے اپے 
تی مین بش نکی بای لگا دی جش سکی زندہ مال حضرت خواج فلام وگ رتصوری یہہ پرسسر 
جراعت می شا وئیےء فان قادیا یت حضرت پیرسیہ می شا وی میا مات عبدامتار ان 
زیازی منرت علامہ لاہ امرف ران ٹیل یی شیردل نامویل رسالت کے پاسبان میران 
میس نے ور ون اکم شی مان ونصاخیف ےتا کمن ظرہاورمابلہ ےئم خبوت کے 








دلاکل اورشورخ وت اچاگ کرت ر ہے۔الحتقرآ ج اس دورحاض ریس جط لا الہ الا اڈ 
رسول ال کے نام پرقائم ہونے والے ملک پاکستا نکی علومت الام وشن سا مراج خی سی 
طا تق کو لکر نے کے لیے ان کے اس خودکاشنہ پود ےکوتذا دینے پرا تہ یت مر دماہراستاذ 
اعلماء پط یقت رہب رش رلعت خواج لام دنگیرفاروتی بھی تا جدارشخ نو کی تم تو کے 
فا اعم اٹھاۓ ہو ےنور کے ذر یج لوکوں کے مردد دو یس ایک نی روح پچھو کے 
کے لیے اپنی زندگ یکا ہر رپ یٹم نوت کےشن کے نے صرفکرر سے ہیں اورحکومت کے 
ادارو ںکو ھا ہو وق کی خزاک کو ںکرتے ہوے عاتم وت ڈاضل و جوان 
”لت فلام مکی مات نے اپے سماتھیوں سےل لک خواج لام دنگب رفا رو صاح بک 
رق یش پا مال تل تی شک رکڑ کی سرز ین می قوم ولت کے نوجوانوں می 1م 
دو جال ٹا کے نام نین ہونےکاشعود بیدارکرنے کے نشم وت کان کا1 نا رکر 
دیاتھا۔شاید یبارادہ ےگ کہہے 
کول ہرتاہاں سےکہسہ دے اپ یکرنو کو سنبال رھے 
یں خود اپچنے ذرے ڈرےکو چنا کھا را ہوں 

قارنکرام! 

امسسالی 2019 ءکی بادشاہ مرج پال ظف ردال روڈش رگ ہ یت نشم نو انز کا 
انتقادکیگیا۔ ضس کے لیے ایک مال می میا رم وت مفتی خلم منشی اتی اریم نم 
سلطائی حاط ما گیل اد چ ہدرک ساد اف ید اح چو دع کی چو ہدرک ممرنردا حم 
ین ملک حافظغلام حیدرسا تی ادارہ* انی شک رک کی اوران نے لکرمیاہ ران ذکوت 
کلف علاقوں ٹس جا چاکرعا مکیا۔ ان س بکی نو ںکاش رکہ 8سر 2019ء بروزاتڈارک 
بادشاہ میرج پال ٹس ا ںکاپورے زور وشور ے افعتقا دک یالگیا کانف س کا آ ا زخلاوت ت رن 
پاک سے ہوا۔ یم لکیاسحادت صا جزادہ قاری خلا مچکی ساقی صاح بکوالررب الحزت نے 
یی اور ذ یا نآ سوکی نے ہفحت بی کیا جک ند نے منقیت ائل بی تکانظ ران ٹل 
کیااس کے بحدخطابا تکا ملسلی ش رو عکیاگیا اور عال نیل اض بیثل خطی بک ردان حضرت 
علامہ ملا اح عایدسرذراز رو تقادری (خطیب انفمم ڈ لوٹ )نمی خطاب سے س این 


جوعی۔- ہج وج 
کے جذ با تکوا پھار+اودقید نتم وت پرخوب رون ڈالی ان ے بجرمصنف کک بسک رو نطرت 
علامہمولانا لام مصطلی مپردی فوری (1 فشک رگکڑھ ) آپ نے اپ مفخوطات سے اوازا۔ 
بددازاں متبول عرب چم سیلدت حضرت علا یمضتیئ اقبال چچشتی صاحب (خطیب اقم 
ا ہو )نے میاہراۃانداز می ھی او شی خطاب سے شرکاء کے اندنشحو مخ نو تکواجا ا رکیااور 
قد بانو ںکوخوب القاراکہ بادشاہ مر ا لیخ نبوت کأروں سےگؤ ُٹھا- 

انس میں ابلورہہمان ضص وی سیوا ہدش وگیلا لی صاحب (ا مرش بک فدابان ٹم وت 
پاکنتان )کوگی میالی ےتشر لیف لاۓے اور پانےخطا ب کے دوران ایک را اردادم کی1 پ 
نے فرما ا کی ہورگ علومت پاکتان سے ورخواست ےل پاکتان کے وی شناشی کارڈ 
تقد انیو ںکو ا ا حدوطور رایت قراردیاجائۓ ال قرارداوکی نکرلوگول نے بہہتمری- 

پیر طریقت رہبزش بجعت صا جزادہ عطاء الکن شر ء پیرطل ررقت رہب رش اعت سی مود 
صن شا:(1 ستان عالیر حیالشریف )اور برقت رہبرشریعت بچرٹ اتال شر صاحب 
(7 سان مال یبر شر جھنی )یلوری ہمان جلوداف روز ہوے- 

ان کےےعلاوہ یہت سےعلاء دشار تش لیف لا ۓے- 

گار اسلاف موک لپلی اللہ ہر یقت رہب ش رجت حضرت علا مہ عافظ ا مع سال 
صاحب ز یامرۂ 1 ستانہ چش تشم رر یجلالپوزدر شک رگج نے ا سکا نف نکی صدارتف بائی۔ 

ایشا می رج ای کے می نیٹ پرامتاذ الما رفرت خواج فلا ذنگیرفاروتی کی تصائیف 
کا ال بڑے اص نعط بیقہ سے لگا یا گیا اور سخا لکیگرانی عافظ راضیل پچشقی ن ےکی اورکانفل 
ےتا شرکا کک بڑے ان طربیے سےلٹ رای بایان شک رکڑھ نے خواج رصاح بک 
تنا ی کوخوب مرا کان سکااخام صاججزادہفلام قادرساقی صاحب نے اس رب آواز 
ےتا جداراخیا ٹل کی بارگا وی سلامىتقیرت بن لکرتے ہو ےکیااودرا ا گی دعا قب حافظ 
صاحب نے فْرمائی دھا کے بش رکا می لنگر ڑےاصس نظ بے کے مک کیا 





٤+ 


شمادی بیاداوردنگ رق ییبات کے لے 


مشہزاداشم 
ارک خدمات عاص٥‏ لکرس 0-0 
70َ 00 





7 نت 
6 202 2 4 





5چ ۴ ص۹ یڈ ق7 ھر ہے کا 
پل بی سا اک ۹و تج یں رج دہ پوت تار ہیا سی ےر اٹ 
٦‏ س 0 سس اس ۴+ رن 
5 ++ 7 + 5 .- 


جار ے ےج 094032144] 

سر 06 

ان 06 
7ئ0 








۶72 ور َ‫ 2 ٘ ۵2 ۔ 1ھ 


322-9455312 , 0324 4+64 
8836776 ,042-4 


اكیں حب اات ست ا کرک رک ہیں کپ کول 

ال ےل ہو ری گیا یو شرف کرر پل مالزاب. ۸ال 

ان کے خو دی انی ار ےی کر کے لی یش ١جداہاے.‏ در دی کے 
سا کرت رت 


ا وار مس 
ال و 4" 
00-4