Skip to main content

Full text of "Tahaffuz Khatme Nabuwat (sallallhu Alaihi Waslama)،تحفظ ختم نبوت ﷺ"

See other formats


دوج با2 


ان ءا ہور 


0-0,/ 
وت 
ضپا (صلاانثر) را (صلاانثر) 


از ۃ رت حر شاو ہنا رکاش ند دد کیا 
اد ہشن جفر تکیلی نو الیشریف 


حعای یی لتشمند یکیائی 


۹ اش جریک روغ تقلی ا نقشوندیہ 
ا2 دوگ باون ءلاہور رت 


تم !گزاے جراطٰطرےثوباال 
تق مال شیٹھٹف نے لپن دس ت مبااک 
سے ترفراایٹس سےآپ ک ےشن الین 


انمازہ ہوتاہے بے نے لا ام ذات نہامت 


۶د43 


٤ - 
کے‎ 


پا خہاؤڈل ححضرت سید ااوبکرصد بب ریشی اتال عد 
پچ جضورتبلہمیاں شی مج شرتجورینقشندی میردبی ریۃ ال علیہ 
ےلچ حضورقل سید رائسن شاوقشندری مددی رم ۃ الڈعلی 


حضورقبلسید با یی شا نی مہردی رحمۃ ال علیہ 

جا مور لیر لم تی شا :ین پیر رکارٹنشیندی ردب رحمۃ ال علی 
"لچ تائدمکت اسلا می امام النشا واج فورالیٰ دیق ی رح اللعلیہ 

عا ری نیعبرا لففو رشن ریش رتورری رحۃ ال علی 


)])2 


تج ری کت وت میں عاشتقان سو لپ کی داستا نکش ووذا 
ت ری کٹخ نجوت یں عل ماہسق تکاکردارگز یت 


13 


یا 


رن 


پائیکاٹ 


0 ا ممست 
عقیر تم نبوت اودابما امت -٭ 


رت 
جباری ھا یٰ 


ای١‏ ص سے ماب سے ہے عارا یماں ا 
ہاں والوں ے کییگر ہو کے نکر و ییاں ١‏ 


زین و آسان کے زرے زرے میں تیرے جلوے 
ہیں نے پھر دکھا نظر آا اں تٍ٢‏ 


نہ ہر ہمہ جا ھت ہیں جہاں والے 
بھھ میں 7 ہیں تا یکاہ سے کہاں را 


کہ سب یوں می تھا سے دی اک راز داں را 


یہاں نگ و بو گی دحل کا راز واں تر ے 
غہ کول حر جرا: نہ کوئی ت٠ارداں‏ خر 


تی زت معلی ‏ نر تریں سے رن 
نی کا پت پت روز و شب سے نقہ خواں جا 


یو و ف1 


ھا 
میٹریف 


وہ دن تھی بب ہو مج ء قمت بھی بھی ہو گی 
جب سان آکھوں سے طیبہ کی گی ہو گی 


می سے فا ماد ساد کی خشبو ے 
یہ نی ہوا ان کے کوچ سے پلی .ہو گی 


میں بی ہو مم رن پھر ے ئل آَیا 
ساد کے رون پ جب ام ڑم ہو گی 
خونگی بے علد پہ رگ نیا وو عالم کو 
1 کو گا کر خی جب گ زگ پچنی ہو گی 
رشن وو مرا ہو مم خلت کی گھٹاؤں میں 
کچھ نا قوم ان کی جس عہ مس ںی ہو گی 
بر ٹیر یں نیاں ان کی ختار پ وارف 
تہیں نم 4 ہر علق سی ہٴ" گی 
ول ظبوری وہ ہفل سے سدا جس میں 
ترمیں تی ہو گی ء ترف ق عم 


ہو ع۰عع] 
حیڈ_ڈُسے‌ٌٌُپًس۔ٰمےح َُس__٠حًٌٰٗجچجھ‏ جج۰ چجوْٰ٤١عسشجسشوُِو۔ؤوجججٌػجّىٗم‏ بت 


رت 
عجایف ۱ 

بے لقن ہےکمی رک اا سکاب ٹف ناممول رساات سے برکات وفضائل می تا کوئی 
اضافہہوگا اور نہکی بےکتاب ال مقر لعنوا نکوچار چان لگا ےگ یکہ می علف صاین علاء و 
محدشین سے بڈ ےک کول بات ککائی نہ امیر مشال 2 گگداگر کےا سمقکو لکی طرحع ے جو ْ 
لف نوالوں اورط رج رح کےگکڑوں سےلبری: ہواورفقی کی ا ںگدڑ کی ط رع ہ ےجس میس 
رع طر کے بیوند گے ہوں شی ےگمداگر ےکشکول کے اجیھوقو انے او رق رک یگمدڑبی کے ایت 
کپڑڑے کےدبزے ال پردلالم کر تے ہی ںکہبگداگرا مرو ک ےگ رسے مات کک لا ہے۔ 
اکی رع می رکا ا سکاب می ج بھی کر ں َ یدب بی زگاریی کےتہنشاہوں 
کے ددوازو نکیا کیک ہے۔ ہاں نیس کے د بے ہو ۓ میکت بچلواو کا موا سال رستنہ سے جت 
اہ ےس پناوسیدعالمسلی ال علیہ یلم کےتضورٹپی لک کےا ای سکونہ عافیت نخخرت. 
ا نکی رسوائی ےمجات ٠غا‏ تم بای اع رر ررش ٹرنٹں دامن رمت مل پناہ 
پاچتا ول اوردالد ین ؛اولاداضباب وابشگا نکی کیا خواہاں ہوں ۔ 

ہکن ہے مینان اتی رو جا ۓےکراپنےکو شف فا ہے شایدکوئی تیک د لآ دی عبت ے 
ا ملین ےن می دوائے خکرہ نيت 

وصلى الله تعالیٰ علی حبیبه محیں واله وصحیه وسلم 


برا العمال اپ 
کے 
حا.واتھ رگ صاحب روم والمد و صان رم روم اوردادگی صاحمرومہ 
مصی: می لکیلائی 0302-172, 0306-5785077 


تاب مفت لن کاچ طی بک یاغسٹورد جج ہیڈکوارٹ لا در.- 
0300-55 


۱ قلطم 
الصد للہ الزی راد خی ہار لن الوھک ین ران لہ یئ ےی ال یإَهَریھاکل 
فور رصکل مین راوتح علیھغز بل الق نو کان اراللہین راذاضحَلھ برا سایلا فی 
البدایڈ والنہایا فبانرا غایة الکنایة ڈالذاری فصاروالسا! الا البی ضا تحت لواء اح ب ثٛا 
تویسیل علیہ رع للع راصحاہہ ا لیت الزاکیات والتلبات الزانہاتمن ناطرالہلر+ن 
اماہمدخیلول خذ ریہ وا رايت نايب تراما مه لامورادما 
لو سال رانم ا آسافرانمدیےاالمرتالسالیا ساوزانا نف میلی بن فجن 
۴ن کب الحادث ران اسب النلہ رخرما ش لان ت٣ا‏ راز بای علب سپٹ 
٣ن‏ کپ الامارٹ رتا اذہ غریعسا وڈان من خسن ظتہ بن لس لد رلیںالار 
ححذد راک تی با انل عن لد سافن تاچتہ لسا سال واہرت ل فا ٹا لکالوا ہد 
ئن تر سان خسار ئل انل می یدیز اف خالت 
۰۱ روہ کی سی ررد رو جا ہو ای 
ہداز ۴نلاذ دو لنمنان الکرام کرک الع ق ہیں ا ہُندالنی لکلٰی 
الب یں بن لمرا رہ یازین دلرہلدوا ین دش الک الب ال ژں: 
تعال ریعدوھو عراز زن حم ازد لاف الین سادا مطتدابا لجا سالططاری الحشی 
النلحاری ا یسانش نکی اقضب لن سلی لا ۂالشیر از الال 
حسرمان نی ڈالالیڈاازمرۂ یمان نام مزع لن ڈالسلبةکازدکعن 
ا کے مات الم کے َ ابر برل حوڑے ظط 
حووم سح پچ ےی 5 فم کرو 


پیشفرفررکنز 


2 تا 


ایٹریل مم 


ا ا22 متا 
ویو دی یرک 
فشہدبان..ملانا خسم سیل ائن/ہنپ سس 
نویلا ۔ ہلفللر ہش ...و د[لیل : لابقا ودآبلییوۂ س96 
٤‏ “ 1 :.) :نمی کاو ری وفات 
قد یسل حل نہسادۂ الا لیف ف9ت السرم الس وة دا۷لابرة 
بسبد امام الس درا سے البائة د امقیاز ا ااقیاںں النمتد 
اضف ات مامداشق ہل ۔ .×× لا جر سب 
تقلیں۔ ...کات ...یرام ......+30ککر::ل...... فقط 
نال الہ می ج لاٹ یرک سه سہیل الیلماء الباملت 


الک رب 
دو انکر 9 
ئ2 سک رج 
لام ۷ار - الرٹس 


ا ست 


شمرعلاب الد بن سیری 
سے پر اک لمت پاسیاں شم ہے 
۴ سے ہر اک بر و جواں شخ پوت کا 


وو کےعلم نے میدان ے دوڑایا ”نھرزے کو 
ےت شماہ نو کو گراں شم وت کا 


دا جس کی عگری تی برق ین کر جان ھرذا پہ 
خا کا خر وہ مق ںاخ ہے 6 


رین (53) بش پی ترک جب شح خوت کی 
ھا بواشنات ”'ھر کارواں“ 2 نوت کا 


چوتقر(74) یش پچ تحریک جب قوئی اجکی کی 
را جا تھا مر تارواں شخخم جوت ک۷ 


وو یر چاو و مت وہ پازی یراں کا 
تھا انی ذات ہل وہ کارواں تم نوت کا 


مھ بے ریا جس نے بنا ڈالی ”فدیان“ کی 
ذہ صن ا عغا از مان خحخ ہے ۴ 


پھوٹڈلٗچس[چھکک و جچھوشساوسیسچ ھا 


رتو : 
ام مصطفی پیل کی خطمتوں کے رو من لو 
گمہارا کیم سے سب رایگاں خ نوت کا 
زی می ملا سا وور زیم مصضلی تا کا ہو 
دی سا ذدائی ہو م٠‏ ہں خشخ نیت 


مرا واعظان ہل وا کو سد و 


ہوم سے کم نہ اک ییاں حم خوت ١‏ 


21 پا رھت سے یدن گے وس ہین 
سعیدی کو بنا دے لفہ خویں شخ نوت کا 


مع نو 


رو 
۱ پارون ال شید(روزنام 2 گ') 


قد وخ و تک ابمیت 


ھرزاظلام اج قاد بای گی بجھوٹی وت پر بجٹ ہو تے ایک صدیی ہون ےکوی ۔ اب ال 
چٹ کے تما مو منوراورآکار ہو یھ ۔ اب اگ رکوئی دئی اندھا ہو ا کا کیاعلاع ودنہ 
جا کا سوال ہہ ہ ےکک یاکوئی چٹ ہراپنے عہد کے سام راج کا شٹاخواں ہوا ہے ۔نسوالی صرف اتا 
سای ہسوال بھی ےک ہآنری: نی استعار نے مر ذ ایس ریت یکیو کی ۔ اس بدنشل ؛ بے اصسل 
اورک سوادد یکی ؟ .اس ل ےکراستعارکوالش ایما نکی حمبیت وظیرت سےخطرہ دن تھا جھ 
چھارکڈل میں مکل ہولی اور پپاڑ و ںکو کائتی ے۔ 
ْ بی فبیلہ اگ ربز کا سب ے ہڈا مل ھا اوران سے محجات عاص لکرنے کے لے ء 
ملمافو ںکی دی بی تک مات کر نے کے لئ شا ران یہکودوسرکی چیزوں کے علا دای می 
وت ما زگازشی ۔اگ را دیانی ٹون ےکنظراندا کر دیاجا جا جی اک نہ بکوبندے اورخداکاذ ال 
معا یق ارد ہے والا انکر :کی طبقہ الو مکرح ےق ا کان ہکیائکتا؟ 
تم وت کے وط رانداکرنۓکا مطلب ہہ ہ ےک پاکستان کے پگ بی لہ امت 
مسلمہ کے چرم بلا ککر دی وا ل ےکن ریو لکرلیاجاے ۔ امت نے ای کین یکواور 
اتعارکی حاشی برداریککرنے والی ذو یتکو برداش تک رلیا تو وہ ال طرع کے دوس رتو کو 
ھی برداش تکرنے پرآمادہ ہو جا ۓگ ۔ دہ یرت دوحبیت جوم ہو جات گی ۔د داق٠‏ 
شناخت جخصیت اور چا نکھودر گی اورکا رجات مٹش ا لکاکوئی جوا هی باقی در گا- 
اسلا مکی سماری ئمارتأتم وت پراستوار ہے ۔تاز یں فرش ےننیں اترے ےرگ 
ار کے مکی کینوں نے اکا پغامابوالھا ھپ از ہاانےسناازا نک می ڑج أ گی ہو 


ری 

یں راف یکیت٦لیم‏ اددرہخمائی کش تاریو ںکوزندوگاڑ دہ وانے سی حیدانو 
درختو کی طائظتکر نے گے_ا ٹیا کے ین مارک اونمونشل ےشن پک خاندانکا 
محتزم مقر تہرا۔ پڈڑدی اور رش دا رکاج ال ہوا۔ اجنبیوں اورمسا رو کی جات ! 
کی ذمددارگ قرار ال بندوں کےتقوقی ءال کےتقذ قکی رح معقراورلا زم ہگ :و ۃ 
جنہوں نے تی مکوا زایا اورآ شکارکیا کہ خداکی بارگاہئٹش ذدہبرابرنگی او ذدہبرابر ہ 
جدلہدیا جایگا۔انسانی زنرگیو ںکااتترام انھی نے ات ف ما یااورالڈ ےم سے اس کے بندا 
آشناکیاکہ ایک انسا ن ئک تمام بی فور انسان ک ےی کے متراوف اور ایک مع موم چا 
تفاظت تما مآ می کی اظت کےمترارف ے۔ 

ای کےقارکرد دجن سور نےکر ددسیاقوام نے وشت ت سے جات عاگل 
شہرآباد ہو ہ مددسے اور جامعات وجود یی لآ یں ۔ سای تحقیقات کے دروازے کل 
حنتکواکرام عاصل ہدا۔ ال کی ز مین پرکوئی پش سان سکیس ایاج سک یکر دن پر اللہ ک ےآ 
رط لکااصان ۓےہو- 

اک رکوی نی ایک ارت کےکینکھڑوں ستونوں میں سے ایک ستو نگر دیناچاے٭ 
کے یچ بنلرگاان خداپناہ پاتے جہوں تاس کے سات کیا سلو ککیا جا ےگا؟ پچ رو وکس سلڑا 
”تن ہ ےہ جوا دمیت اور تی بکی عالگی شارت کے دوستوفوں میں ےا ستو نکو سا و 
پرتطا “۔؟ اور بردوسقون با ہم بجڑے ہیں ۔ مرا کی شب ان کے درمیان دوکمانوں ےبھ اکم 
فاصلیتھااورسدرۃ ای ے کے چب رائیل اشن کے پر جلت ے۔ 

آد لکیاے؟ :اش رااورجلدبازآرمزادگیاے؟ غرا نات می وہک یامی رکتا۔ 
اگرو:جانورو ںکیطر خع شف کھانے ہے واوڈ ھن اوران صطل بکر نے می ڈگار سے ۔ کردا 
از کی دارئی صداقو ںکائہ پا نی اوراگردوان کے لآ مادء ان یں _ 

بھ بت رکوکیاخ رک حضرت ابر میم علیرالسلا مک تقام مرج ہکیا ہے لن ق رآن جید 


رت 

ار ا نکا ذکرکرتا ہے اور رما زس بپڑ ھے جانے وانے ددودیی ا نککاحوالہدیا اتا ے۔قار یکا 
زین سوا لکرتا ےنا نکاوع فکیا تھاء ینس نے یں الہ کے دوہ مت( شیل۱ لگ کامقامعطا 
کیا قآن بمیدارشاوفر باج ے۔ کادت اِلرَا متا عَنْقًا 

رای سو تھے۔ شک وش ولیدہ خی ادد دہ نی نا تھادانٹورو ںکومپارک 
ہ۔اسلا مکی ٹمارت لقن ؛ مان اورمسوئی پاسقوار ہے۔ الہ پہایمان+اس کے فرشتقوں اور 
نییوں پرایمان لوم خر ت پغ٘ان۔ بیخنزل مراانگ جا دالاسدرعاءچا اوشئی راسترے۔۔ 
ار کنیا ت موب ہےتذاس دا ہہ یلت او رق ا لکانجات یل ایک( ندہاا نکا رح 
لیے اوراپ اکرداراداکر نے کےآ رز ومن ہوتو ایک وا 2 قد واو رب اشن ایا رکرو اوراگر 
رٹ ا شائی ہدج راوج کی طرع ہوہ چخداودپرنرکی طرحع عاشی ہہ گی اور ھی ہو 
”دانشروں' کے سا خیالا ت اور شک ککی وادیوں می پت پھر لکن برقم شرکے میران 
مع گئ جاؤ گے تمہارے پا طلالی کے سوا دنہ ہوگا اور یکسا پا کرد ین ولا ام2 
ے۔ 


ماجنا کنزالا یمان 
2009ء 


جو مل بر ۳ہ 


عاخظظا مامت نی سعیری 


حر تم بوت میں عاشنقان 
رسلا کی دامتتان یف 


ت ری نتم نبوت 1983ء یس جب قنم ذ ایت نے سرُٹھاا مت سل میم رز قادیالٰ 
گا ذدیت سے رص پپکار ہوئی ‏ اور جب تقاضا ۓعشق عبت بڑھتا ےت مت رسو لٹپ ا 
دل و ان یی اکر میدانٹل ں٣‏ جائی ہے اود نشی دحبت اوران رددفا کی دو داستانیں' 
تم ہونی ہیں ہےر کودان تار یں ا سکیاشی لا شک نامشکل ہوچائی ہے۔ 
سرز ین ین پاہمومء ناک لاہود بای ای بہت کی بادوں اورداستانوں کے اٹ 
قوش شبت ہیں ہآ مرک یادوں کے لی منظ میس پیا نکرام مار عظقام اورعلا رات کے 
علادہ چچ اوڑھ ہم ردور٘یں ‏ مزدوروتا جر امی روف ی ببھیشائل ہیں۔ 
تمالا مت حخرت علا ‏ گرا تال رم لعل کی بردستکوششوں سے مرزائیوں کے 
دو ںگرد و اد یالی مرذائوں اورلا ہورگ مزا و ںکوائن ایت اسلام سے کال دی اگیااور 
یا ون ما پگ یکو قاد ال الا ہورگ اش نکارکن یس بن سکنا۔ ایک دن اش ن کا لی عام 
ہو پا تھا +علا مج اقبا لا جلا کیاصدارت فر مار ہے تھے ۔سات ہی میاں امیرالد بن ٹیش ت٠‏ 
اچ تک علا مرگ نظ را ےکری پر ٹیش لا ہوری مرذائی اکم رذ التقوب یک پر پڑکیءعلامہ 
چوک اھ شد یدض کی حالت می سکرسی ےاج رکنڑے ہو اورکرجدارآواز یش جا ری نکو 
خاطبکر تے ہوتے ڈاکٹرم رذ الیقوب بی ککیطرف اگ یکااشا وکیا کین گے۔ 
”کے در رکنا ا ا ٹ۰ کو ا یہاں ےاثال دوەمیری غیرت 
یےگوا ون ںکرحک کہ یر ےآ تاکرممنکی خم ور ت کا یش نکی 
اجلال یس ڈیٹھار ہے اور پھی موجودرہوں۔ 


رقتق 

علامہصاحب رم ال عل یکا ریفربا نا تھاکہاجلاس میں مل پل ب گنی ڈکٹرمرزالیتقوب 
پیک علامہ کے ا سخقت اتقساب سے بدتواس ہ گیا اور اتچائی انی کے عالم مٹش اد اھر 
وین لگا؛ چنا ڈاکٹرمرز لتوب بی کو بیک بٹی دوگزش اجلاس سے نال د گیا شا می نت 
نبوت علامیججرا ال می ال علیہ کے اس اخسا بک مرزائی مردددپرایبااش کرد ہوا ہو 
کر ی مکی بات ںکرنے اکاوراسی حالت میں چندروزبح چم پل ہوگیا_ 
خودقوگ آیاتا 

ست ا صدر نی ننٹس لا ہور پا گورٹ نے لا ہور کے نماد بین اود مشا ہی رکوکھانے پہ 
وکیا حضرت علا یش اقبال ری ال عل یھی مہو تھے انفاقی سے ا ہل می ںجھو نے ى یکا 
چون خی گی روالد ی بھی بلاشو تآٹکگا۔ جب ماش رسولی' حا جا قبال رحب ال علی“ کی 
ظا سںکاذب کے حول پر یہی غیرت ایمالی سے علم رشح اقبال رم ال علیہ ہیں 
رع ہوککیس اورماتے پئشنکن پ ڑج بفو را ھی اورمیز با نکوخاعط بک کےکہا نا صاح بآپ 
نے بک یاخحض بک یاکہ با غیت نبوت اودئش٠ن‏ رسالت ما بکیگی مگوکیا ہے اور بھی پچ رکیا 
جار ہا ہوں میں اتل میں ایک ابھی نیس یٹ کت“ 

کیم فورالمد بن چورکی رم فورا عالا تک با ٹکیا اور دوگیارہ ہوگیاء ال کے بعد 
میززبان نے علا ‏ یج اتال حم ان علیہ سے معفرد تک اور ہاکمہبیش نے ا کب بلایاتھاء یڈ 
خودی اگ سآیاھا_ 
عقیرہ تم نبوت اورقادیا یت 

ت ریک کے دوراان ما ہویش ج بکر موی گیا تو اذ ان کے وقت ایک مسلما نکر موی 
خلاف درز یکر کےآ کے بڑھا بد میں کرادلہ اکبر یکہہیا ایاتھ اگ لگل'خبیرہوگی'“ 
دوسا آ گے بڑھاءس نےاشھں ان لا اله الا ال کیرک لگ 'خبیرہوگي'ج رصان 
آ کے بڑھاا۲ نکی لاشوں یرکیٹڑرے ہوک اشھں ات محیں رسول لل7 کہاہککو گی شی ہو 


( 418 
گیا چوتھا آ نآ کے بڑھا: نوں لاشوں پرکھڑے ہوک رکبای عللی الصلوقۃ کو گی دی 
”شبید گیا پانچواں ملا نآ گے بڑعااورحی علی الغلا حکبادہجھی شی رکردیاگیا فی 
ا بارگیففمسلما لن شیدہ" گے تگراذان پور یکر کےجھوڑی۔ 
طدارش تگنابں عاشقان پا لظینترا_ 
(عقیر نت نبوت اورف تق دیا متس 255) 


بی ریا نکردیا 

شی رجنما مو نا مظفمیی شی کت یں 3ء تر ک تح وت مس ای کعورت 
اپے بی ےکی بادات نےکر دی درواز ہکی طرف جار تھی سان ےت کی آوا زگ ی معلوم 
کر نے پہ پت جلاک سآ قاۓ نامدار جناب گج رسول الف کی عزت ون مویں کے ل ےلوگ سی 
جانے شی نکھو نٹ ےگویا کھار ہے پیں بل انل کورت نے معرر تک کے باراتکودالی کر دیااور 
اپنے کو جلاک رکہا با آ نج کے دن کے لیے مس نے سی ہن تاء جآ قا کی عزت بر 
تقر بن وگ ردودہینٹوالو۔ ی۲ تہارکی شادیی ال دنیایی فیس با آخرت می کرو ںک اوقہارق 
باادات ٹس ہش آ قاۓ نامدارن کو مدکوکرو ںکی۔ چا دلوانہ وارشجید ہو جاؤ کہ می ظ رکر 
کو سک بھی شیدکی ماں ہوں۔ بٹاییاسعادت من دق ات بک هُّ وتئی ماں ک ےمم پہ 
آ تا نا مد اذ مکی ھزت کے لی ش ہیدہ وگیا۔ جب لا لا گی گول یکاکوگی نان ال سکی 
پشت یڈ تھا۔س بکولیاں سی پرکھا یں 
لب کاجذہہ 

ت یک کے دودان ایک طالبع مکتایں ل ےکا ار تھا ساٹ رک کےلوگوں پہ 
گویاں پل رحیچیں ہکتا یں رککرجلو کی طرف بڑھایا نے ٹپ چھایکیاجواب م کہا آن 
تک پڑھتار ہاہوں ابہ لکرنے جاد ا ہوں۔ جات عیگو یگ یگ رگیاء ولس وا نے نےکر 
ُٹھای شی کر حگرجدارآواز یم شک ہاک ال مکی ران پرکیوں ماری ے مت مصطفا تپ 


رگن 

دل میس ہے یہاں د لکوگوکی مار مم قلب وجکرکوسکون نے 
7 تنم وت 

تح رک می ایک مسلمان دپواندوا رخ وت زندہوباد کےرےسڑکوں پرفگار ات :پوس 
نے نرک رمیا مارا۔ اس نے ہی تم خبوت زندہ با دکانحرہ لگا ء ولس نے جندوت کیٹ ماراءأس 
نے پچ نحر:لگایاءدہمارتے ر ہے بیھرے لگا تاد ہاء ولمس نے اُٹھاک رگا کی میں ڈ الا ہیزنموں سے 
چور چور بھی وت زندہ باد کےنمرےلگار ہے ۔اسےگاڑی ےأ تا رای تق بھی دوہرے 
نار پا ے,أ سے فو تی عدالت یس لا اگیا۔أس نے عدالت میسآتے ب یٹم نبوت زندوبادکانھرہ 
ایا تی جسٹ ری ٹن ےکہالک ایک سا لک مزا ءا نے ایک سا لکی زاس نک رپ تم وت زندہ 
اکا نرہ لاس نے مزا دوسا لکردی ء اس نے پلنحرہ لابا غرضیک ہف تی عدالت جب میں 
سای پہکئی د یھ اک شی سا لک مزائ نکریھینھرے سے بای لآ رپا توف تی عدالت ت کہا کہ 
اہر نے اکر ا ںکوگولی مار دوہ اس ن گول کا نا مک نکر لیک شاف تر انہ سے اما نآف کی 
کیفیت ماہرکردی۔ ررحالت دک وکرعدالت ن ےکہااسے در اکردو۔ یرد اوانہ ہے؛أل نے د )لی 
کاحھمکنکرپ رن :لیا 'ضشخ وت زندہباؤ“۔(ج ری کت نبدت ازشور شکاشی ری ) 
توالت رآ نمو ا عبرالضفور ہار وگی 

خ عگوبراوال سےتیررٹروں یںگل ئل کے زمراجتمام اتا تی جلسوں :جلوسو ںکا 
امام ہوا۔ وزسیآباد میں جن لقرآن حضرت علامعبدالخفور ہہراروئی فا ویش نکی قیادت ٹش 
اتفارخ ربکا ڈکروانے کے لیے ری کی بپڑریی پلک ئیکاکٹھا کوک رٹر بین رو یی او رلوس ڈیا نے 
کت 
رضاکار 

اتی یگ رفا یاں میٹ لککہ نے والوں میس ایک دس بار+سا لکنا رضامکارشھی تھا أے 
گاڑی میس یپاک رلایاگیااورمقردومقام بر نے جاک راجاردیاگیا- 


رت 
ات یہ وہ ریہ و سو 
گاڑئی یس بیٹھ جا اتال بامف جنوگ اود پیا لس طرع براوش تکرو گے پچ نے جواب دیا 
ری ماں نے جھے نود کے نام پر بان ہونے کے لے کھچا ہے .تم ہیں ٹیل میں بن 
کیوگگی ںکرےۓ؟ 
گاڑ یی نے سخرشرد عحکردیاءگاڑی چتدگز بجی پوس اف رک پھر ےکا خیا لآ یک دداننا 
لباسفر ط رع نےکر سے وائیں جا تےگا؟ اک ن ےگا ٹی رکوائی ۓےکوواز دیی ؛ سراتھیوں نے 
یا اک دای اشک ئن نے اب دی پا زدالیان ان ین ارک 
نو رھ رکھا ہے؟ مہ رعال بدا یں نآیا.( ہل سمن تا اگوائری رپپرٹ) 
رر رں 
اک قافلریش میا ففل احرمو چیا شال تھےآپ بہت ئررسیدہتے×د بی جذ سے 
شحت لا ہود پچ ۔اس وق لا ہوری مایشک لا نگ کا تھا ۔آ پکوگ رفا رکیاگیا.آ پک بڑحابے 
راس رفص اؤیل کت اہو ْلان وذ او رات ے 
کھامرےساتھ انا فکیا جاے گان رھاکمیاں صاحب مزا کرا نا اہ ہیں ۔أل 
نے بےانصائ گیا وجہ پیا ؟ تو فا جھ ےکم عرلوگو ںکوس مال قیرد یکئی ہے۔ بھی ات 
تما زادگ جاۓے .لک مزادرےکرمیرےساتھانصاف ےی کیاگیا_ 
فی اض ری نکر اش بدناں ر دورد ہکرت دا ےکر ےی چلاگیاءمیاں 
صاحب نے أ کی کپ اپچااادراپق تر بای کی قولیت کے_کرانے میینئل اداکر نے گے۔ 
ااسالہبزرگ 
تح یک کے دوران دی درواز و سے روز انی سےعص تک جلوں کے ے فو ان کے 
سینو ںکوگولیوں ےچ کر اوسلمان نامول دسالت پت بان ہوتے جاتے سور روب 
ہ نے قحب تھاک۔ایک ای سالہبنرگ اپ پا الین ہت ےکوکند سے پرٹھ ےل 


رس 
یتر او وت زندہ با وکانتر بن کیا مگولیا ںآ میں اوردوں کے ہینوں سے پارجیئیں- 
(مض ختیائی اکوائری رپپرٹ) 
کل طیپکاورد 
یف کے دوران فدائیا نم وت جا نپضیی بر رکوکرمیدانمل میں ڈنے رہے۔ 
اسلام کا د ال مگ کاخ ء اب لو ننورٹی اورکوینمن ٹف کان کےلباء نےکلاسو کا ایکاٹ 
کک کے رضا میاروں می شمولیت اغقیا رک ری ۔ پولاس ان سے تا کا خطردمول لینننی چا ہت 
تھی .کی مقامات بر اہلاس پرچقراورانپٹیں برسائیگکیں فو کےایک دسہیخشت با رگا٠‏ 
جواب می ا نے فا ئن ککردیی شور شکاشمیری نے ان عالاتکا تم دیرمنظ زیو ںکھا- 
”رام نے دا ہوررمیس از ہوم مال روڈ پاٹ یآگھؤں سے یکا 
کہ 158 سے 22 سا لکی عم رکےنو جوانو ں کا 1یرس جاوں کل 
طیکادردکرتے ہو جار ہاتھا۔ دو ایک یی سپ رنٹزڈٹف پا 
کیک عیب الہ کیم بی دارنگ کے بخیرفا ئن گکاہف بنا۔آٹھ 
وں نو جوان شبید ہو گئے ان لاشو ںکو میک عبیب اللہ نے اپ 
اتوں سے ٹرکوں میں اس طرح بچھیگوایا جس طرح جانورشکار سے 
جاتے ہیں۔میفظارہانچائی درد ناک تھا۔ تج ری کٹخ وت ) 
یی ابی پیفردوںشاہ 
لا ور چھا لی یش ایک قاد بای اض رن ےگولیو کی بو چا کی ]ا نکو یکھانے والوں 
نے انتائی اتقامت اورکرداری جنگ یکاشموت دی( طغٹرےقوین گرازی رپرٹ) 
* ای رینم وت کے دوران ڈئی ایس پیافردوں شاہ نے ایک رضا کا رکاپ پاں 
ےٹھوکرمس مارمیں+ اس رض ککارنے گے یق رآن ید ڈال رکھاتھا ٹھوکروں سے فر دوس شاہ 
نے ق رن یش ہی دکردبااو ای لسن ےکی شہیدکردیا- 


رت 

چندیکنٹوں مس ریرج لکیہ کک ط رآ پور ےشمرہ پیلک جس سے پپلیس 
کےخلاف پامھوم اورفردوں شاء کے خلاف پاقوی خینو وفضب اورنفرت کے جذ بات اگ 
آنٹے۔ لوک پیل باین تھے ہاب واقنہ نے الن کے یبا تک شدرت اورزت می ×زید 
اضافکر دیاء چنا نچ ای روز ایک پر جوشل جوم نے فردوں شا ہو لکردیا۔ ال کےشسم یہ باون 
زنھوں کے نشان تھ ۔ا سکا بقل اور سماتھیوں ے راملیں بھی انس جم ے جن لی ںا 
(ماونامہکنزال یمان :لا ہور یم جو نہر 2009) 
می راپیررسول اڈنا رقربان 

3 کن بک اپ نے عر ور تی لس نے پورے ملک میں پکڑ کرو غک ری 
تی ۔امیران :امو مم کر مال کے لی ےجلیس نا کاٹ ہککیں۔ ڑے بڑے مریرانوں میں 
خاردارتا رڈ اکر مایشی شی قائم نئیں۔ لو گ فلت رسو لاف سے لیے پرواندوار سے پہ 
گولیا ںکھاکر نت کےراہی ہورے تھ_ 

یھ آ بای ٹاش وت کے پہواوں کے اک بہت بڑے وم ایک ار 
وت بڑاجذ بای خطاب فرمار ہے تھے مسودک یگیل رکی میس عو تی کو ٹیشیتیں جوستتل ے 
مور غکواکھوانے کے ل ےآ یی سک ج ب یم لی ٹپ کی عزت دنا موں کے خونن سے ے 
پگاراگیانذ صرف مردی لیک لبیک کے ہوۓ ا لیو رت بھ یگھ ریا چھوزک 1یس ایک 
عورت شی اورکہا۔'* مولاناصاحب یبر پا زنک یکاسب ےت اس رای می انھابٹاے۔ 
اسے میر ےآ قاد و لامک رلک یآبر دیق با نکردیں۔“ 

یک کرد بہادرگورت ا لے پاں دا بس پل پڑکیءماجول یش ایک تیب جذ بای کیفیت 

سای جار گافازی ادف فکگرتھھط کمن 

نےکل رآ داز لوکوں ےکا اےلوگوال لیکو چائے ٹر ینا ۔أ سے بلا !چنا نچ اس عورتکو 
لگا ادرمولا: نے اپے قدموں مس ٹیش ہوئے اپنے مضے سےاکلوتے نی ےکی طرف اشارہ 


سسہ_سسمیےےسحسسےمسھژٹکسڑسکژشسیییئییجڈ 


٤نر‎ 

کرت ہوتےکہاکہ پا اہب سے پپیلگول میرے سن ےگمز ر ےگ کرای ہے کے سی 
کوچ گی را شا کتا مافراوکولیا ںکھامیں گے اود جب بی سببتقر ان ہو ای چھر 
اپے کو نےکر نااورالراوراس کے پیار ے رسو رت با نکرد یناماد با گورت 
کےجوانےکردیا۔(عخقید نت نوت اورد وقادیاعیت) 
یکےءٹن یلٹا 

اک عاش رسو ل فظ انی ضی لک واقہ یا نگ ےۓ ہو ۓے کی ہیں ایک دن خُ لکا 
سپا تیآ یا اوھ کہا آ پکودفت یں سپرنٹنڈنٹ صاحب بلار سے ہیں می دشر جس بات 
دیھا مر دالدہ صا بمع میرک ابی اہن نے بے کےساتقحد جس کی عمراس وت سوایاڈیڑھ 
سا لکیتحی , ٹیش ہوۓے ہیں ء والدپترسہ جھے د یھت حی شی اور نے سے کال یا ماتھا چو نے 
گیں, حال احوال پچ چھاءآ نکی آوازک ھکیڑی .یرف ن مو کیا اک دہ ردرق یں جرا 
بھی جیب رآ یا (نگھموں می ںآنسوتیرنے گے یدک کسی رنٹنڈنف ن ےکہااماں گآ پ دوری 
ہیں ءٹیے سے یں (ایک فارم بڑھاتے ہو ےراس پر ےج کرد ےق آپ اس ساتھھ لے 
جا نی ,ابی محانی ہو جا ۓگی میں ای خووکویسنیال در اھ اکہراسے جواب دےگولوالدہ 
صارنڈ پکر بولیش ڈ سے بط کہا کی محانی ابی دس نی بھی ہو ںو حض وڈ کی مزت 
پقربا نکردوں؟“ 


برارونا ٹوشفٹٹت باددگی ہے۔ یک نکر رنڈ ف شر مند ہہ وگیااورمیراسیییٹھٹاہھگیا 7 
(ف ری کٹخ خوت1953ء) 
ما اص 

ض کم میں ماتی نام صعفی بڑ شی ماش رسولأ تھے حاتی صاحب کے ہاں 
ایک اد ای آیاءاس نآ تا نا دا کی شان مم سکمتاتیکاا ا بکیا۔آ پ کوٹ شآمگیاء 
تر لی اود ا سیکا کا تما مگرد یا ءا کی زان گال یکر ےک یکر تے جاتے تھے او کے جباتے 


رت٤‏ 
ےکہ بد نت اس ذبان سےتذ نے میر ےآ کر کی بین کا اکا بکی تھا۔ جس ون 


پوس وانے ا نکوگر ارک کےگھ سے تھا ہکردنکی لے ارہ تھے۔ ا سے پپکی رات آتا 
کر یی ای اد کوخواب می زیارت+وئی کپ نے فر ۳ایک ش کی خیل م مرا 
مہما نآ رہا ہے۔ ا ںکاخیال رکناء چنا جیلو مکر کے اک پا بی ن ےکھانا اود دمگرضروریا کا 
اہتمامکیا۔ 
دوت ہبلہ 
ایک م جار وت خوا جن نھا کی رم ال علیہ نے فر ایا ک: 

مرذا ا دیانی کے جا نینم زائموداجدکووکوت دا ہو ںکہ دواگیر 

ریف سآ می بھی دی سے وہاں حاض ہو جا نگا. خواغ ریب 

نکی بجی مر زا رےساتمککاہواوداپتی ہیقت کےتر بے جھ 

پآ مائۓ اود جب وہ ای مار کرام تآز ما و جھوکواچازت وگ 

جا ۓےکش صرفِ پیکہویں:اے فدا ال مرذ اک ایت کے نے ای 

صداقت کا پرکراددہم شی الن بقل یش سے جویھوٹا ہوائ سکواسی وت 

اورا یہلا ککررے۔'“ 

ارس کے حدم زائمودکواعازت دگ جا کرد اپے الفاظا می جورع 

چا ےکرے۔آیکفظدکی عدت مدکی جائۓ ؛] دوفو ںآرمیوں مم 

مھ کے اندداس دعا کا ظا ہونا چا بے۔ ھرزاد کے لاک 

شدر تگیا تا شا دکعالی ہے کون م٣‏ ہے اورکون زنرە رتا ہے۔مرداگی 

ہے :صداات ہے ےڈا ںآز مل کی سی رکرو یہاں ای یکذ کے اندر 

سب وآ جا ےگا ڈر دنت ویر ے پا اُڈانے والا ذ ہر یاگٹس نہ 

ہوگی۔ نہ می تمکو دیکھوں ما جس سے مکو اندیفہ ہد مم می 


7 25 > 
چنا ٹائزم کے ذر یچ مار ڈالا۔ یتم سے وی فدم کے فا گے پرتہاری 
رف سے ہگ کین بدخوا کی جاب رر کر کےکھڑرارہو ںگا- 
اگرن مکو مال متفورہوتھ رج الاو لکیمچھئی تار کو اپنے جوار یی ںکانلے 
کر اچم رش ری فآ جا اوس بی ای جماعت کے سات ھ7 اور ٹم 
ال کیا آ جا ںگا۔ حدم بھی میرے پا کا زومر ۓےکوکیڑے 
ہون ےکی اجازت نہ وگ اکٹ مکواند یق ہوکبیر ےآ دی تم پر لکر سے 
مارڈالیں گے۔ 
گوریمنٹ سے اجازت لین اراتا مکرنا یی سبتہارے ذ مہ ہوک اور مکو 
باضاطدای کک مد یا پڈ ےگ یکراگ رٹ سآ مرکیا نظ میرے وارٹ صن 
انی پرخو نک دوگ نہک سی گے خرس رکارکواس میں ڈنل دی ےکا اخقیار 
ہھگا۔ا کی یت یی لپھی آپنے دارٹوں سےس رکا ریس دا لکرادو ںگا-۔ 
دیھوبہ تآسمان بجٹ ہے۔ بہت جلد ھی ہندوستا نکی ایک موب تنم 
ہوجا ےگیا۔ جوقہارے وجود سے پیدا ہو ہے+اس می درگ زرکرو 
ایا موق نیت ےآیاکرتا ہے۔دم ینرک رواورف راس وو تکقو لکرلو_ 
جب نم اس اراددے اجی رش ری فآ ت2 ابٹی والد وصاح ہے دود ٹواکر 
آنا اورر یو ےکی سے ای کگاٹڑکی کا دوس تکرا لین ٹس میں تہاری 
اپنی لا دوانہہو کے اود یز اپتی اہلیرصانہ سے ہب رکھی محا فک رالینا اور 
قادیا نکواپنے واللدصاح بک قب ریت ذرا فور سے د سیآ نا کہ پوت مکو 
زندگی ٹس دودرودیوارد ایب شرہوں کے اورضرورت ےک وصیت 
نامگ یگ لکرر ینا اوران کے مت ایی ےکر کے27۔ بیس ال 
وا ےکا ہو ںکہ مھ اپنے بن ہونے اور ہارے مرنے پہ پوداشن 


ہے۔ااس کے علادہ چو اود جھ با تچگی ہیں ج نکو جات ہوں یا رٹ 
لاؾ رھ دالا خداجا تا ےج نکو یا نکر خودستائی ہے۔ ال بیام نگ 
کا جلدی چا والا-۔ 

(خوایشن نظائی رسالہ'ظاما لغ '') 

صوثی ایاز مان نیا زکی رم الظعلیر 
تی و وت کے یم میارصونی ایا خان نیازی ( رم ال علیہ ) ایک انٹرولو 
فرماتے ہیں کہ ج بت ری مخ نو تکی اعصلیت سے شناسائی ہوگی ف ھم نے فقا ایت 
خلاف اعلان چہاوکردیاش وت کےگنوان سے چیک ہوئے :میا نول او رگرد ودای ہم 
اس من کو وط او طف کیا لع انظامینے وفع 3:444 زکردی۔ رشع ما فوا یک کی د 
14 تی ہم نے بردفدتڑئی ٹیل گے :یل مم ذڈ یی نمی من ےآیااوراس نے نمی کہ 
اک ات مان چا ہیں ای رہاکردیے ہیں چم ن کہ کہ ہمد کی چا تج نقادیانوا 
کے پیر وجود گی جاہتے ہیں ۔ گی دہ کر دی باہر جاک بچھردفعہ 144 تذڑیں گے 
نارےساقی اک انس مرادی رمفماان دلبراورصاحب نیرت انسان تھا۔ اس نے مار 
سعاتھ دیا جم نے اپنے اس موقف پر احتامت اخقتیارک لی ۔ڈکیکیامیاں وا یگولڑوشریف ے 
مر یدتھا ںا کہاتم دفعہ 14ت ڑویاننڑدچلو با رجا( تم آزادہو )می تم وت کے ملہ 

قادیانیو ںکاظراقدارکیول بوں- 

صول ایاز خان خیازیی ہی فرباتے ہیں ء ایک مرحم جن ما کک قیدہ بت سے لطف انروز 
ہوتے رہے۔اںگرارک سےینسل کے اندر جوللف او وی آ زادگ میں حاصل یس ہوا۔ جے 
میرے ایک دوست نے میریی موشی کے بیرخوددی اپنے طود رکش لک کے ز پاکرادیا۔ لہ 
میرے دوس ر ےک ای می ار ای کے چھدروڈیل روز بعدیی ٹیل می رہے۔اپقدہاک ٹا 
کیا ہجاۓ ھکد ہوا اور نے اپ ال سای سے کل یک کہم سی دنیادی خوش ےے 


رمت٤‏ 
لیو سکیا تھا ۔ک رٹ نے عناخت پر اکروایا ہے می سذ حضو رت یکرت کے سلطے میں تِل 
میا تھا یشر نگ یکاباعح نی گیالمدلیعزت ادروقارکاباعٹ ے- 
۱ صاتزادوسیدشٹض بن رم ال علی(اہنا سو تے ای جوان 2002ء انٹردارصوی 
ایازخان یازی) 
خیب اسلام اپ ری کٹ نبوت صاجزاد دی بسن اپنے ایک خطاب مم فرراتے 
ہیں۔ ای کجتوں پکولیو ںکی بوچھاڑ ہم پھکڑ یو ںکی وکا ہش جیلو ںکی ٹک دج رک 
گوڑیوں یس ج ب کک جان باقی ہے اور مہ یس ذزباان ہے۔ بی مطالبہ سے جائیں گ کہ 
ھرذائیو ںکوافلی تق اردواورغ را کووزارت سےاتاردو۔(خطاب صا جج زا ادویوفیس سن شا 
رقدالڈعلے) 
مولانا شا امو راٹی رم ال عل یکا جھاب 
ایک م رجہ 1974 ءک فیک حم نبوت کے دورا نپھٹو نے مولا نا شا افو رای س کہا اگر 
کی ہی من ایل ضکروں ت ت مک راکرد ےآپ نے برجتجاب دیا؟ 
”وع یکروںگا جومیرے جدامرححضرت ستید نا صد لی اکرش ال تھا لی 
عنرنے نگ بیمامہ می لمسیل ہک اب کے سات کیا تھا۔ میک نکرذ دالفقا کی 
وکا رگ زرد+وگیا۔' 
(ماہنا فافش نبوت اگست 2043ء لا ہور) 


وو و وت 


4282 
حافظدامان تی سیر 


تح ری کٹ نبوت یں علا عاہسقّ تک کردا زیت 
یں وت 1983 میس جب علومت نگل سکم لک پر ال نج ری ککوتشددا 
طاقت کے زور برک ےکا فیصلہکیاء 24ف وری 26٤‏ فردکی 1953 ورام با غکرارچی مت 
روز نی الشان یلیگ مل کےصدرعلام اہوال سنا تسگا جھرقادرکی صاحب رحرۃ ال لی 
زمیصدارت عق ہوۓے جس می تج یک سے وابستۃ صاجزاد وس فی اش نآ لومہارشرے 
مول ندال برای می ؛مولا نا عبدال ریم جو ہ ھی :سی عطاءالشاہ بای ہمو لا نا اخ م 
کیہ ماس رجا رج الد بین انصارگی ہم ولا نا لال ین انز نے شرک تک ء ان تام جلموں 
مخمرر بین نے اپنے مطالبات پرریشنی ڈالی اورقکومت کے مالیو لگ نکر داراو رر ٹ ےکا ذک کیا:۱ ۱ 
ججلسوں می بزرارو کی تحد اد فدایا نپ وت نے شرک تکی- 
6 ھرودٹیکی ددمیالی را تکوکرارتی می سحلومت ن جک رکمل ( جومقلف مسا لک 
کےعلاءکے با بھی اشناک ےگ یکم وت 1953 ءیش قائم ہوئی ) کےصدرتفرت علا 
ابد نات سی رج اتھرتماددکی اور 9 رجنمائؤ ںکوجشن میں صا جزا ادوٹیض انس نآلو پاروی:مولا 
عبدالیا بداو ٹیہ مولا نا عبدال رم جھ ہی تی رعطا ال شاہ بفارکی+ لال ین اخ دغیر :شال 
ےگ رف رکرلاا ری ک کو کی قا ین یرد مکردیا۔ 
صاتزا ادوافقا سن فی لآیادی رمالل لی 
آپاپن یآ پش زندگی نل طرازہیں۔ 
”نی نےکئی علا ءکراممکودیھا وخنلف علاقوں ےنم وت کے منقدیس نام پگ رخ ہو 
آے ہو تھینکرا نکی حالت قائل رت بھی اور لان افسو بھی بشھنڈر یآ ںبھرتے ؛آضسو 
بہاتے ء ہا ہات ۓےکمرتے مت کیک چچلانے والو کو برا چھلا سے اورر کی کے لیے سور: لوست' 


٤ر‎ 


فیفک رت ۔ایک رات می نے ان غلاء کے ساس ےکھٹرے ہوک رک رسیکی۔ 


اے مرے قیل کے بہادد ساتیو! اسلام کے جاناز غازیو نا مویں 
رسمالت کے ہر خردش ہیاہدوادردیننصضىفلل کے رہنمائؤ اش رسمالت و 
شتم وت کے پروافوں چم لیک دین اسلا مکی مظمت جن وصداق تک 
ام وم و ین نو تکی طفاظ تکی ماعط رق دہوۓ 
نمیرے ددستوا قد خانہ ہےء یٹیل ہے٤‏ یر مصائب: ملا ت!احم 
نے بت اکن ے اوردرد نکی فکام رکز ےءوصددمت ١ے‏ 
د نگمز اروا ایت گی ےسب پھھبرداش تکرواورکزم وا تقلال ے 
یلک ٹوا آہ ںھرےککرولم میں ڈو بے رب اورو شی کرنے سے ہی 
ٹیس ل گی اپے اسلا فک ذنرکیوں پنظ رکرو ء ان کش مکارناموں 
پرڈگاڈالواوران کے حوصل وج رت مد یو ںکا مطال یو ان پک ےکے 
مطالم ڈھاۓ گر دوغابت قم ر ہے٠‏ ان پشلم دم کے پہاڑنوڑے 
ےگ رانہوں نے ا کک نکی اورا نکوجر وتشددکی بی بیس چپ ام یالجن 
انہوں نے حوصلں پارا۔' 

حفرت امام ارب نشل رج ال علیہ پکوڑے برساتۓ گے 

رت امام شا تی رض ال علیکاسات سال قیل میں رھاگیا- 

حضرت امام ما لیک رع ال علیگوجلارٹ نگیاگیا- 

او رتضرت تناما مپأشمم ابوضیف رس لعل کا جناز دشیل ےلگا- 

7 7آ یل نت مع کرات اچچ ےکودتے اورمست لندر کےنہرے گا ای 
بے کائ ذدضہ ہمارے پیل جوان با ز جاک رک ایی مگ ےکہ یہ ہیں 


ہمارے نی رجنما اورعلا ءکرام جو بزدلی اور بے حوصلہ ہیں ےکور اور 
ڈد پک ہیں۔“ 
علامراہوالحسنات سٹشھ رام درئی رحمۃ ال علیہ 
آپ نگل اگل کےصدراورگرا نکی حثیت ےتیل ہایت عبرداعتتقامت' 
ما ردکیا۔ اپنے فو اپچنے تقیقت دو جوخیرچھ لی مک رمیں ہین کےم ول نا مود ات کے 
شحم ندت 1953ء علام ابد نات سی اجھقادر یک یق تکااختزا فکرتے ہے 
ہیں۔ 
لح بلنز پا ہیں الیی ہیں جوخودکوشرت سے دو رکے ہیں ء دنیا 
ا نکی خ بیدں ےکا حقہواقفی ٹن صتی زیادہ تقر جب وانے لوگ ان 
پذرگو ںکی عم تکو جات ہیں رقوام بے تج ہوتے ہیں ان بلند پایے 
نضرات میں حطرت مولا نا ابو اسنا ت سی مھ ات دا درکی ( خطی ب مسر 
وزمیخان )کا ا کرای سرذہرستظ رآ ےگا ۔'' 
آ پگ اگ فیاری کے بعت ری کک قیاد تآپ کے اکلوتے بے مولا نا سی یل ۱ 
ا ری اورمیا لمت مو لا نا عبد اتا رخان جیا زئی نے سچالی ءامی دوران شیل می لآ بکوباطلا 
یکعلا ہیل اجھقا درک کوک رارکر گیا او تی عدالت نے ای مزاے موت نا 
ےل ۲ل وت کےم رکز نی رہنمامول نات مظفی شس کت ہیں۔ 
آ پک ایک دن اچاضک اتک ہے الا ٹ یک موا ناس نیل اص تاوری 
( خیب جروز مان (اہور ) کو مال لا وت نے ان یکی سزامٹا 
داے۔اپے اوت بے کے بارے یس دو فرسا خی رک نکوچرے 
گر گئےاوارعت کی ۱ال بی امرے بی ےکی قربالی متلورف ا“ 
موا نا نیل اھر در یکو ای اورشہاد تکی پر مو لا نال وسا یا کاب تح رک 


رئا 
آ شقم نیت 1983 می مول :حا گموداورماسٹرتارع الد بن انصارکی کے جوانے س ےکھت ہیں 
یا مس بکورت ہوگ یکر ول گا انی ری لکک نآیا مولانا نے ئھی ڈکرک نگم 
ےھ کوئی اطلا نی سآئی :تو مو سکیل پکیاگزری ”بل زند ھی ہے پانی سگرعلامہ 
وا نات تیکھبراتے ہیں دا لگ یوک رآ نس بہاتے ہیں اورتہا نکی ز پان پر مولا نا یل اھ 
قادر یکا نکر ہآ تا ہے۔ ہم سب اس صورتھا لکو کوک جب ران تے ححضرت مولا نا عطاء ال شا 
بفارانے بار پا ف رم کہاگ رمیرےساتح ییواقنپٹ آ تن خداجانے می راکیاحال ہوتابگ رچھتی 
علامہاہوالسنات قادرئی پذ بڑئیکوہ دق رخخصیت خایت ہہوۓے ‏ مولا نام یں بی ےکر خوش کپیاں 
اڈ ات ایک بیٹےک جج دوطا کف مم مصروف ر ہت ہیں ال شےصبراو وص عطاکر ےتیل 
طانتھردفردرکا متا یل یہاں بڑے بڈولں کے پاؤں گنگ جات ہیں مولا اکٹ کیاکر تے تھے 
کرش کے نام بآ کک دوٹیا ں تق ڑتے ر ہے اس کے نا مکی لاج رک ےکا و تآیاکبرانا 
کیسا نک رای نوننیں ہوثی جا ہے ہم نے مولا وص ردا متام ت کا پا اورشرافت دش کا 
پیر نکمونہپایا۔“ 
آپفرماتے' چھئی بات نیک ےیل می رااکلوتا نا ے تھے اس سے بے بنا حبت 
ہےاک لی ےکی ا کا اپ ہوں اود میں ہی ا کی مال ہو ؛کیوکگ علا یل امقادد کی 
والدودفات پا گنی یو بھی اولاد سے ےب نیس ہولی بگراس مقام پبعب رک سواہوگ یکیا 
کت ہے پچ راس تی ککام ںیل قرب بھی ہوا ےا سعادت دار بی ہے د ویو ماؤں سے 
لف تر تے جو کارھ يف ک یآ جرو شید ہوۓ ان می شی لکھی ےو مر ے ےھ کی 
بات ہےالہ ماد ی تقر با یکول فرماے۔ 
ناب مفلفعی شی بیا نکر تے ہیں۔ 2نس بمت اوداولوالھزیی سے علامہ اہو نات 
نے قد خانہ می دنگمزارے ا کی شا لکنی یہتمشکل سے نا زم می پلا ہوا انسان لاکھوں 
انمانوں کے ولو تا پاشاء مو لکاشنشا ہگ رحبت رسو نے امتخان چاہانذ بے درگ قیدو 


یصو تو ںکوبرداش تےکر نے کے لے تار گیا ادرشان ے قی کال کشا ب نگیاءکیا ما 

جو ےھٹکا ہ اشن سے بتدار ‏ ار کیا ہیل یآ پکاہترن نف تر و 
کری مکی رک تھا.( وی رصنات کے نام سے وقیاب ہے کی مر قی می کانے او 
بہت استقامت کے ساتھقیدو بنرکی صصموجیں بر داش تکیں جن کے باع فآ پکیا٤حت‏ پر ڑا 


0ت 

تر کشم وت 1983ء کے دوران ایک قاط انداز ے کے مطابتی دس زار شبید 
رارو ںگرفر اود لاتقدادرمسلما نت رک سے متاثز ہوئے ء لا ہورشہ ری ںکر فو ناغز ہونے کے 
بادجودہڑتال مظا ہرےاودرضا یارو ںکگرقناریاں جارشج ۔عالات دن بد ال دے پاہ ر 
ہور ہے تھے ۔گھڑتے وو عالا تکو دج ےگرحکومت نے 6ر5 1953ء سماڑھ وس بے" 
لا ہورٹیش مارڑل لا ناف ذکردیا۔ یمام لاء بت زدئی تھا۔ چوصرف لا ہورک محدددتھا اورائسں کے 
نفاذکا مقص دش ری کت نبو کچل تھا لیکن قابل جار ہ ےکہیہ مار لاء لگن ےکاعمکابینکا 
مور واوروزہ پش مکی اجازت کے لقی راس وقت مر تی دفا مج جنزل سندرمرزاے دیاتھا۔ 

لاہورش رکوفون کے حوال ےکر دیا اود لاہور کے ائریا نر اور چیف اشُل لاء 
این ریٹریچجر ہزرل نشم خان نے مار کو بای لاءلگاد یا اراس کے ضالبلو ںکی خلاف 
درز پریزاؤں کے لف تی عدائیس قائ مکردی مال لا ءکےےنغاذ اش ریس فور کی مو جودگی 
کے پاوجودمولانا سی شی اجقادری ارت “ولا نا عمبدالستار مان خیازئی ءمولانابہاول ال 
اگ گا جاآت اود ولولہ ی۲ لکوگَی فر نیس آیا۔تج یک کے مرک مد دز نان مم پراروں 
ملمان موجودہوتے ١‏ وہا لک دشام ولو گی تیر رس ہوجیں اورگرفماربی کے لیے ا نے روانہ 
سی جاتے۔ 
ول نیل ا سدقا در (رم اڈ علی) 

7 ود18 مار کوسولانا عبدالتتار ان میازیی نے بارنل لاء دقمہ 144 اورکرفو کے 


٤تر‎ 

پاوھدگراریاں دہ کے لے چا ارافرادکی ٹولیاں روا نیش 49 مار کوفو نع نے ودک 
گجیرے میں نےایا۔ اس وقتہ سی مولا نا سیل اص ہقادری اورموا ا بہاول انی اہی “ 
) کال نیا رعطاءلتی تا بھی کے والد) موجود تھچ نجلیں فورح نے سید یں موجودرضا ارول کے 
سات کر فارکریا_ 

موا تل اح ہادری فرماتے می ںکی اندعیریکوٹھڑی می میرے سان سا پچ وڑ 
میا ما زی نے ےرتا گیا ءساراسماراد نکی ارکھاگیاددرا یق گالیوں سے فواز اگیا۔ یگ 
وفع ج ب موک د پیا لک شدت سے میرے سے می دردُٹھا تاس مم خیا لآ اکٹ شبجوکا 
عررہاہو ںگھیی ہو تذ اتی لیلد کےکھا ےکھا الکن دسر ے می ل فیہرنے طام تک اور 
صا گرا مکی ق انیو ںکانت آگھوں کےسان ےآ گیائیش نے شود ہوک رت کی جن خد اکا 
قرت کن ےکہاندصرے می ایک ات ھ کے بڑھااورآوا زآگی”شاہ گی مہ لےلو ایک لغافہ 
ےد کیا جس میں پل اورمٹھائیی ٹس تیران روگ یالکرات مخت پہہرے کے بادچودیے 
س ب بے بیس کک ےت کیا لیکن میرے د لکو شقن ب وکیا کہ ریقوت جناب خاقم اشن 
نل کےصدقہ می سکی ہے۔ می ووکپیل اور ٹھائی ین رو زکک استعا لکرتار پا“ 

آپ فرماتے ہیں' ایک دن ٹس نے ازم وکھرتیل میں ای ری تکا خمالگعاء 
پچرروون کے بعر+الدصاحب یرف ے جواب موصول ہوگیا یس می ںآپ ن ےھ تھا۔”” 
بے ىہ جا نکر مے عد افو“ ہواکرتم رج شہادت حاگل ترک کے .لیکن بر جا نکرد لکا 
الینان پچی ارت نا میں صضف نٹ کی نا لد ہے ہو- 
مو نا عبداستارخان مازی (رحمۃ الڈعلی) 

مو ا ینیل اج تمادری اورمولانا بباول ان تام کےگرفمار ہونے کے بعرمولاتا 
یراتا ان میازی رم ال نے قیادت سیا لیا بکلوم تونیازى صاحب کی حٹت 
فو نے سار ے شھرکی کہ یف مک دگی: کہ بر چوکیاں تن مکرد یکئیں لین ان قام 


ط44 

اقسامات کے باوجھف مو لان نیاز کوک رر ہرگ اوھ مول نیازی اہ کسی ربق 
سے 9 مار کش رد ہونے والے چیاب ای کےکیشن می نم بوت رر: وین بی یکر کے 
اکن ا یکو لکن کش کمہ یی ےلین ب مق ے جیا بآ کی کا3 مار جک ہونے 
دا ا جلال 22 مار تک کے یت کرد گیا اس دوران مولا ننیازی کے خلاف ڈی لیس پی 
رد شاہ کے اومکومت کےخلاف اناو تکا مق رم ور کرلیاگیا۔ 

چنا نی مولان ملف مقامات سے ہوتے ہو ےپصورریس اپنے دوست چا فل وین کے 
یہاچ ارام پذ ہد ےآ پک پردگرا قاکہ 2ظ مار جکول پز درا ای ا کی اور 
الال یں شر تک کے اپ پروگرا موی امہ پہنا میں لین شا ففل دین سیا سے لم 
نے پش کو پک وجودگ یرد دی۔ 22 ار کا یٹ کیمول ای ال 
روانہوتے پولس ن ےآ پکوآپ کے اتی یی را اہ کے ہمرا وش فقل دن کے کان سے 
گررکرلیا۔(ج الم حرش بی کی موت مرا۔مداکامجا مد دوک رلک رت حاص لکرتے 
تے)( کتالپی سلسل مال نم نبوت لا ہوراگست 2043 ار ر7) 

مولا ای کے خلاف فی عدالت میس ڈ کی ایس پلف دو شاہ کےا اورعکومت کے 
خلاف بضاوت کے مقدمہکا آغاز ہوا جس کیکارددائی 26 اپ 1953 ءکوصرف یں دن میں 
عم لکیگئی اس مقصرےم مولا تپ ردا بات حا کے سے 
00 ایک بےکہآپ نے ش کو ولس کےخلاف اکسا یک لس کے کے آھے ہیں ے 
جانے نپا یج کاو ےئا ےھشصنل ہوکر کی ایس پفردوں شاپ لکردیا۔ 
(9) آپ پدوسراالزام ریت ارآ پک باخیانہاواشتحال ای تقار کی وج ےواع یی 
ہد اورانہوں نے تشددا وت بکار یکر ےگ یسا ال سان پچ یس لیےککوم تآپ 
کومکت کا یت ارد ےکرآپ کخلاف مقدمہ بات قائ مکرلی ہے۔ ا خو دخ قرے 
اآپ کے خلاف ای کچھ الام عابیت نہ ہونے کے باوجودفوقی عدالت نے چاتہداری کا 


سؤسسجچھھمممسسوجّسہجًوئےژچےے ےت 


٤تر‎ 

مظا ‏ روکیاادد 7 می 1953 وآ پکوڈ یی ایس پیافرددش شاہ ک ےگل کے ارام می باعزت برک 
کرت ہو ۓےقلومت کےغلاف بخاوت کے ارام یس پا یک مزاسناتے ہوتےکہاکتہارل 
گرون بای کے پنرے میں اس وف تک لڑواکی جاے ج بک ک تہارک موت داي تہ ہو 
جاۓ میک نک رآپ نے مزاسنانے دائے اکر کہا می دسالا ۓ دا ےکائش می بی لاک 
جانیں ہو میں ان س ب کور ھن کی ذات یق ربا نکر یا“ 

آپ نے بےقوف ڈ تھ وارنٹف پر ضتےطاکر د ےا کے بد پکو پا یی کڑھڑیہیں 
خ لکردیاگیا۔مولانا عمبداتار نان نیا زی 7 سے 414 می 1953 کک ا کا لکونھڑی مش 
رے ا دورا نآ پکا حوصلہقائل دید تھا ہآپ پر ذدہ برا برتحی خوف ذرتھاءف گی کا مآ پک 
ببخ نی بہت ران تھے 14 می 1953 ءکوآ پک مزا مو تکوش ریرج تب کرد گان 
آپ نے ائیل ‏ ہکا ؛چنایینٹل مشریف نے ازخودسمارائیاس دیکھا اور پک مز اٹ مک کے 
3 سا لک دی اور 3 ان یل 1955ءکوآپ 2 سای سے زائ مر تک جی لاٹ کے بعد را 
ہوۓ ۔( مھابرعات ول ناعپدالمتتار میا زی مولف سخ 100) 

مولانا خیازگی رح ال لی .کی مزا کے جوانے سے( اخباردی نیشن لا ہور)ککھتا ےک 
مولاننیازی اود دن راف را وف تی عداات سے مزاۓ مو تنحم مال لا کی عدود سے سراصر 
تجاوزتھا ایک :رمودنل تھا۔ جےکوئی قا نون جواز حاصل ن تھا اورال سےقوم دہشت زدواور 
وز رئش مجخت برہم ہواتھاف عکویہی دفسول اننظا کی ام ٹا“ کا مز چٹ کا موق ملا اے 
و ئی ران یس اپٹی ابمی تکااندازہ ہوا اود بعد می چھ یتو ہی سیاست ومحاملات ٹل اپ اگروارادا 
کر ےکاشوق پیراہوا۔( ہو ای یک اص یتم 571) 

عول نا عبداستارخیازیی نے 7 دن اور 8 راتیں پھال یک یٹ یی می گار +ر اک کے بعد 
پر دالوں نے ج بآ پک عھ ہی ت آپ نے فر میا می ری عھ ر7 دن 8 راٹس ہیں جو وش 
و ںمصطف یل ےت کی اط پا یک یھی ی سکز اری مہ ںکیوکہ می میرئی نی ہے 


د4 
او اتی سب شرمندگا: مھ انی اکا زندگی پ نز ہے۔(ت رکفم وت 183ف 3وہ 
650) 
مولا نا عد الیم بدا یی مت ال علیر 

آ پکاسب سے بوائشنمقید وٹ نیو کی مفاظت تھا ہچنانچ ا لک ریک یسپ سے 
بڑامایاں حصہ لاہ ری کشخ نبو تک عمایت اودم زائی تک تد دکی باداش می عکومت نے 
سگ رفاک رلیااودایک سا لت کیکھراور اپچ کی جیوں می علامہراہواسنات سیشامدقادری 
کے ساتھفظر ند ر ہے قید و بنلدکی سخ صعوبو لکو گی جواں ھردی سے برداش تکیاء ا نک 
برانف رات نے پپورے لک میں ا لئ ری ککانتبول بتایا۔ 

(ماہنام۔کنزالا یمان لا ہورم نو تنبرتقبر2009ءبف 7وت) 
علامس یش رارق وی (رد الڈعلی۔ ) 

آ پکا ذا تک تار انا جع نی لف رکم وت 4974ء شکراہتی سے پاور 
کک لا ہو در تکوئنکک بتک دورے سییگارٹل ےا فی ہو کی ہنایات دن رات 
آپ نے ای کک رکھا تھا ۔آخ ال تھا یٰ نے کامیالی دکامرالی سے ,نار فر مایا آپ نے 
ززت ری اگ ون ناک امت مز ز3 رشوان الا ہو رکاش وت 
تار ی اہمیتکا حائل ہے۔ 1983 ءکیت ری کم وت میں حصہ لے پآ پ 3 بادشائ یلم 
پھ یھو ر ہے۔(ما ہنا گنز ال ان لا ہورہخم وت ہیر 2009ء فی 9دت) 
علام مض ورام شا( رت الڈعل۔) 

آپ جامعفرید یسا ال کے پان ؛م ہیں ءددقادیاحیت شی لآپ نے ما یگروارادا 
کیا1953 ءک ین یک می ساجیوال می یل مل کے در تھے اور ریک کے جلو کی قادت 
کرتے ہو ےگ راک یی .سا ڑھھے ات ما وکک سایوال می قی بامشق تک مزاہوئی- 

4 یریک کے دورا چیا ساہیوال می لآپ نے بڑامجا را نان مس امام دیاء 


سن 
ڑل پا یکا ٹ کے جواز یپ نے سب سے پل ایک رسا لیف فرایاادر ریک کےدوران 
پا لوس ہر کا پیاں چواکرپہر ےکک می رکرو اھیں۔ 
(ا ہنا کنزال ان لا ہو رجنخ و تفہ رق 2009 :یف 349) 

صاجز اردان رأئین(ر مع اڈعلیے) 

لک می ہے سوب 

نی کے و ران فیھل ہاو مکش نکیٹی بنائ یگئی تو علا کرام اورشہ رکے مت فی کا 
اہشااخ ہوادھواں دارقء یں ہیں وم کے نی جذبا تک بیرارکیاگیا۔مرزائول کےغلاف 
فقر نکی گکوہواد گی ادرکومت کے خی رتصفا ہر ےکی غرم تکگھا۔ فیعلکیاگیالہ 
رر ی کے لیے رضا ری مقامی عالم دن اورخطی بکی ز رقیادت تھے جال ۔ چنا نچ پہلا 
رمضم مر سکا تھا اود دسر اف رعیرا۔ اس ہگ می اجلاس کے بعد یٹش راو نی اپ ہو اکا 
مک وہ لیے چلامگیاء الہ آیانة مرا ان رای یں بے جم مسچ ریس ایی الشان جلےمنعقر 
ہوا۔ پل کے بدا قوم نے بج پھولوں کے پر ہناتے ۔ ایک تاکے پرنٹھبااد پچ راک فقید 
الال جیں کےجلو میں شع شم خی ان ا ای و اپ 
اف خھرو ںک یکو اور بھولو ںکی چو ںکی پاش مر یڑ ےاشیش نکی طرف روانہہڑگیا۔ 
انیشن کے ا رم میران مم فرذند اخ نوک انھیں مارجا ہواسن ررش رب ں کا لو و 
واول کا رگنو ںکا یش وشرش: جوانوں کے بےتابو ز بات اوشقی رسو لئ ونیم الشان 
مظاہرقائل دبیڑتھا- 

پاروں طرف لاس رالیں تھاےاورگنیں نانے تی اودعتا می اضرا نکھبراۓے 
ہو ےق رکاپ رہے ےک یفن شش ریت سےگزد جا مل نے تاگلہ پکھڑے ہوکر 
ای ان افر رک کی ےجا دوعا ےنت قو پاش بط و دا ہیا ان 
ہیں ساد ہو چا میری ال تقر کےےتاق پک یکورٹ کے چیفٹٹس جنا بج تیر 


2+ 9 مس ش۶ےژش ےچ 


سن 

نے انی ربورٹ ھرکھا ہے ۔ صا جزادہ اراس نکیتقرے نے شب رم ںآ گ لیا دی اور 
تق تجیا بجی ہے اگرقامت کے دن می رکا تقر با رگا خداوندی یں پیش ہو فطرت 
یدرو پک یکر گار ہندے کے ماتدکیا سلو ککیا جا ایک سور کاو ںکا 7 
یکن میں ٰی لآباد ہگ جانوالراورٹ کے جوان شال تھ ملک خلا ف نھرو ںکیکور میں 
لا ہد جانے وا یگ ڑکی شس سوا ہوگیاء ایک پوری ننس می ھن ہد نے اور درو پے مولا نا 
تا نگمودنے مھ دی اور ےکن کاپ کے وارن گرا جارئ ہو ہیں۔ 
شایدآ پک سا ہلل سے چپ اشن رگراک رلیا جا اگرایماہواڈ سی قابل اع ورضا 
کاکوا کیہ اکرخو در ار ہو جات :گاڑ کا سالا دا ٹن پر رکت و کی بھاری جحیت 
ےکی راڈال لیا لیک ان اک وی سٹریٹ اور چندسپای فذرآمیرے ڈ بے میں رۓ انکر 
رات ےگہاصاجزادوصاحب اے آپکوگ رفا بھی ٹنم وت کے پروانے چا تر آۓ 
20 کر نے ھک لان ےکک کی رضا کاروں نےگیرا ڈال لیا و گے اورایک 
اچ خاصہ پنگامہکھڑا وگیاء جب پا سگر ہر رکرنے ناکام وگی تو ڈٹی ری 1 گے 
تھے سے ےکا مولکی صاحب جآ پکوکم دی ہو ںک ررض کارد کوچ ناکرا 
آ پکگر ری کے لے پیٹ یکر دددرضہم طاقت استتا لکرو ںگا۔ می بھی جوڑک اھ اور 
اد یچ مس جواب دیاءئسٹریٹ صاح بآپ انی طاقت استدا کی می ابی طاقت 
اتا لکرتا و ںان من ےکآ پک طائت نا کام ہو جات ےگ می ری عطاقت جا نک بازی نا 
د ےگا اداد عیمس نے رضانمارو ںکوگم دہ ایی اڑا پر لیٹ جاؤاودرضا رگم سن 
ھاآلناد اعد لیٹ گئ ۔ جس نے سٹیٹس ےکہاء جناب ہہ ہے می رکا طاقت اب انار 
ےگا یز ارد ہولیو کی یرسادیگمن“ فا کے رفا ٹوٹ خی کرس ے۔ 

اسیکٹر ولس اوسر 2 72/, کہا پچھاتھوڈ کید ے کے لے پ لوگ ہماری 
رات ئل یہاں یھی ہہم مان گنےانہوں نے اشن سےر یلد ےکی مخت فی لآپاد سے 


سوجح٭٭ججو٭س+صجًٌسےےسم سے 


ردنا 

پان جہاں دادخا نلن پعالا ت ےآ گاءکیاءانہوں ‏ ےکبائٹش تدج ہو ںآ پ ان 
کو ہوک ضہر پر لن ےآ ممیں۔ ”پڑت“ کے لوکوں نے فور ھی ہمار ےکھان ےکا انا مک دیا 
کھانے سے فاررغ ہوۓ بی ت کیم کہ بڈئی ضہرپرچلو اور رہق بای ک ےر ےک ط را 
گروئیں کاۓ نا شی سے برا تہ سا نگ بل چ٥‏ لآ بادجانے والی وی ضہ کی طرف لوٹ سکی 
حراست یس پل بڑے نہر نما زضبریرادای ابی سلا مکی رائی کہ پل کان مم ولس 
وس کے جہپ ٢پ‏ اج ۔ 

شاو صاح بآ پگ رفا کیو ںنیں ہہوتے؟ سپتان نے آتے بی عو لکیاء بیس نے 
اب دہ اک جنا بجر یٹ صاحب نے طاقت استعا لکرن ےکا دی دی 

پش پتان ن یجسٹری کی طرف ذرات ہچ ینظروں سے دبیکھا او کہا کیو ںپسٹریٹ 
صاح بکیا ماما نمی سکیٹ تم وت کے پروائوں پہگولیاں چلائیں جو پیل ہی لے اور 
ران ہونے کے ےکھرسےآے ہیں ۔صاججزادہ صاح بآپ پا منٹ کے انددا رکا 
اورکامی ری کراپ ےآ پکوکرف کی کے لے شی کروی بہت ا چھاجنا بش تن کہا 

پھرمیں نے سی مون‌مل صاح بگوجرہ دا ےکوامی مقر رک کے اور چندضردرئی ہرایات 
دےکر ات ھآ گ کرد ٹ کہ جناب می لگرہاربی کے لیے اپ ےآ پکو ٹن کرت وں۔ لاس کے 
حوال داش خا نگم د اک شاو صاح بھی ڈگالہ جناب می شاو صاح بکڑک یں لیا 
سا اور رلواٹی ٹیب نماں نے بڑ ےجو لے ےکہا۔ وش سکپتان مھا مل ہک تو اٹپ گے 
اوروق کی نز اک لوہ یئ اور گے بڑ کر نکی لگاکی ٠‏ 

(ماہنام ہلا نی بعدک میاہ متخ نبو تک ر2003ء) 

مول نا می شف وکا ڑوئی رم العلیہ 

آپ ن ےت رک تم وت میں ایک ائھرتے ہوتۓ نو جوان خلی بکی حیثیت سے 
زوس تکرداراداکیا۔ سا ہوا کے بننگ علاء نے1 پکواپنےش لع مم ٹ ری کٹخ دو تکاامیر 


مو , 
ہناد یا تھا۔آپ مرگ علاء کے اعتاد بر پورےاترے اوددنگرعلاء اق تکی رح قیروبندگ 
صعو بت ںکو ایل اع ازافقا رج ےک رقجو لکیااورتقر یبا سا یجھرسابیوال جیل میں قیررہے ہیں 2 
جن بھی عءکرام پان درسلائل ےسب نے جات واستتقاص تکی مال تائ مکی اورآنے وی 
نطو ںکمشق واخلاع کی راہیں دکھا می لیکن حضرت خطیب پاکتان جس اعقان ےگز رے وہ 
شال ہے اد رگہرہ ووناگی الکخا لم 2 

آ پک شادی کو چندسا لگزرے تھے اورالل تی ن ےآ پکودوف رز توی راج یر 
اھر عطافرماۓ تھہ جو لوگ ز ند یکی ا منزل مٹ ہیں اورخوش وخرم زنک یگز ار ہے میں وہ 
انداز کر سک ہی نکاس ماحولیٹش یو ہو ںک جدال برداش کرت کت د لگرد ےکا کام 
ےمان بڑےاووں کے اعقا ن بھی بڑے ہوتے ہیں حضرت خطیب پکتا تل میں چھ / 
ا اک نت ھے تن بچو کی دفا تکی ری اد یای م نکی دل بلاد نے والی ہرذ وس ائیاں بج رک 
الا منائیسلل 7 کی تھائیءماحو لکیکیشن اوداس دوران دوفو گر پادو ںکی رعل تکی تر 
ین پ نے نک ردا مامت سے بیصدمہ برداش تکیاو ہآ پ ن یکا وصدرے۔ 

اس صورتال ے فائدہ أُٹھاتے ہو ۓ جیل کے ڈ پچ یمشنرنے قی ل کا دو ءکرنے کے 
بپانے مولا :ا سے ملاقا تک او رکا آپ کے بچوں کے اتا لک جانے کے باعح تپ کےگھ ری 
حالات بڑے ارک اور اس ہیں۔ ابی مآ پکاگھ یش موجودہوتا ضروریی سے اورش رک 
لف د نی اور سا گی شحفصیات نے ھھ ےآ پکا سغادر لپچ یکا ےہا آپ معائی نار کگھ 
دیک9 آ پکوآج یر ئل تی ہے اورآ پکامعافی ناج عوام سے خفی رکم جا گان 
قربان جا ےآپ کےعبرداختطال پک ہآپ نے فر مایا الکو پیارے ہو گے کیاہواءاگر 
رما جا نھگ پ ےی سعائ :ام نی شاکھوں ما یھکم راعقیدد ےکہمارے یا 
ال ک ےآ خ رکٹ ئیں۔ 

آپ کےاں‌عابپڈ پکشن رن پا ہوا اوران پرعزیددفد نات کرد لگ یہا ںکک 
کمسلاقات پگ پا ری عائکردیئ نپ نے اپنےمشن مم سرموفرقی تآنے دیا- 

(نیلاٹ ٹم وت لاح الین سیدی) 


لن 


_.___ .ہس س ئگ ٹْ کت ےس ڈ_-س۔.۔.س سس 


یدرگ شا وگلڑرى رحتالڈعلیہ 
لیے حضرت لا می مولا نا برای شرف قادری رح تال علیہ 


ایل رون ومؤیٰ کے مطابقی دنا میس ج بکھ یکوئی اع لکاپرستا را را ہے ال تھا ی نے 
ا سکی مرکو لی کے مل ےکسی تنآ گا خصی تکومت رف مادیاہسرز ین قادیان سے نبد تکا جوا مگ 
اتا ہے اور یلگ دن سے ری یا ناویا بنا ء ہلل کے زرش لام من جات می اھ 
و تا ےکم دا من دنوت پ فا ہوگیاہوں اوو یا کو یرے رما کئیس بمتا۔ 
اٹ می گیل مکی میس زین سے مب عاک اب رت پیرسید گی شاہگڈوئی رحمۃ الہک 
ردق آوازت نکی ایت یش بلندہوتی سج سک ممیت سے خانہ با مصف ماتم بچ جال 
ہے۔ ارہ کے اکر دہ مد وت پرکییت مرگ طارئی ہو جائی ہے اورقی اتی تا تر رعناتوں 
کےس تھرجلد کم ہو چا تا ے۔ 

7 ۹892ء یس حضرت یسید ٦ی‏ شا ہق سر :تین شرنشی نکی زیارت ے 
مرف ہو ول میں خیا لہ ا میں ستمل قا کیا جاۓ لیکن تضورسید ول فو رم 
حعٹر ممرمصطفی ظا ک یآ پکوخواب مس زیارت ہوگی۔آ پل نے ارشادف ا اکسمرزا 
قادبالی میری احادی ٹکوناو لک انی س ےک رہا ہے اورآپ امو ٹیٹے ہیں ۔فورآوائیی 
پدوستان جا بے اورال خلا فکا یی ۔ چنا نپ وا تشریف لےآئے۔م ذاقادیال 
نے حیا تک علیہ السلا مک انکارکرتے ہوئے خو دک ہون ےکا کو کیا اورعلاء ومشا رواپ 
بجعت کے دأوت نا ے بای سے علا وق انس کے دا تزو ریس :ہآ نے الہ ہلا اور 
دنیارست اس کے جال میں چس گ٤‏ 

راہب پاطا کو پرجاڈ برقلست فاش د ہے وانے حضرت پیر مہ لی شا ہگاٹڑ وی رم ال 
عازن عالات می لکیوگر: نام شی رہ گت تےآپن نےشسس الجداىرڈ انت حیات ا کھیضصس 


٤2 ۶ڑ‎ 

می تاب وسنت کےد ال قاپرہ سےجحفرتکیھی علیہالسلا مکی حیات خاب تک کے جا کم 
قادیا نک ٹوائے سحیت فریب اورجھوٹکاپعدہ ہے۔ ا لکتاب کے شال ہوتے بی ااہا 
ہرذاحیت شی زلزل ہآ گیا درم ذائ سو نے پ رود ہو گ کہا کنا بکا ضرور بر ارک 
پا انل کا حم ہیڈالاگیاکم زان ایک اشتا شا کر کے بیرصاح بکوساظ کان دیااو 
مر یق یی دک یاکرف شا رن پا کک چا آیا تک مر بی می سا تیگھٹوں می ںکیٗ 
ےکی جوزو اہن اتی راو رعبارت رداق لک ناشیرےمویدقراردی ا یکین ہدگ ۔ 

حضرت پ ہرگ اہن سرہکی جلالت شا نکامرزاب اس ترراڑ ھکاس نےککھاک 
اکر یر صاحب مناظرہ کے لے رضا مند نہ ہوں تق میں علا +ک ایی جماعت سے مناظ کر نے 
کے لے تیارہوں جو الس ےی طر عکم تہ ہو سیام ذانے ٹسل مل یضرف برساحب 
کی ذاتگرائی چا لیس علا کے بارے۔ 

ھا قادیائی کا خیال تھا > رصاحب اللال کر نے وال ےکی الال ہزرگ موں دہ 
میدان مناظر دش آ وش کر کیا ایا ہجاے زی موق 
گی جا ےگا ۔لیکن مر زا گی تمام ذ قعات اس وش نا اک میں کی جب رت برصاحب نے 
حرف ری متا بی تو لکرمیا ا کہ ینگافرما کہ پیل مرزاکے انفرادی عقا ند رکفشگوہوگی اور 
رف کی مقابہہوگا۔اورمرزاکوپز رب اشتا کا گیا 5 امت 4900 کول ہد 2 
مناظرہ ہوگااوراشتار کے لت بی منننوربی یانا مفلور کی اطلار دیق لازم ہوگی اک کےعلاوہ 
متحدہ پاک وہند کےمتلف موضع کے ساٹ علاءنے ایک اشتجار جار کیاکہہم 28 اکس تک پر 
صاحب کےسام لا ہور؟ ر ہے بر اد ہار ہے نیک رصاح بکامیشرط لکل ٹل ہے 
ترک متابیل ےپ لکق رر کفنگہونی یاےۓ۔ 

اب ہونا نی چا نے تھاکہمرزاقا دای مور یکااعلا نک رکے میران مناظرہ یف لح 
نا نے ایا زادنا ناوات کا کوک یپ ہود الس تیم ری ۲" 


سژجحص[جووم٭مسسچھسہيہے ےہ ہ_سحصصصےےےےے 


رن 

ان امرددی نے جار مناظ رو پاردن پیل ایک مطبوع خ اکٹ ش بی فپھیاججس بی سکع 
ری تق ری من ظرہکی شا مفلونیس رت ری مقالکر اہول صاحبتش ریف ل ےآ یرہ 
ا نکی طرف ےکس تکاپہلا اعتراف تھا اس کے جواب یں حخرت پیر صاحب کے ایک 
ھریدکام سلطا نود نے ایگ اشتپارشائ کیا جن کا ای ککاپی بد ررجٹرک تاد یا ناش گئی 
ایس اشتہار یس اعلا نکیا اک نخرت پیرصاحب مر زاکی:ش رئا کے مطاہ نف ری مقا لے کے 
لئ لا ہورتش ریف نے ار ہے ہیں ۔ چنا مہ 24 اکس تکویرصاح بگالڑ وش ریف سے عاڑم لا ہور 
ا ہوے پیل راولپنڈری اشیشن سے او پچ لالہ موی سے بذ لی تار ای راگ کی اطلار مرذاکو 
جھوائی۔ 

حضرت پیم ریلی شا ہکوٹڑدئی فر سرہ لا ہور شر پت عوام کے علادہعلا کا نی رع ہوگیا 
بی ال سفت ء بی بندگی لی عد یا وریہ گر کے افراموجو تھے ۔جوضخرت ہر 
اص کی قیادت می می وی دی خسوی ےل کےساتھ فیص لک گر لیے کے لئ تیار جے 
گو باصعا ہکرام کے مق شر نے جوجشمسیل کذ اب اوراکیٰ کے توار یو کا میران نک مل 
کیا تھا آ ‏ شق وت ا ییحی حقید و کے ھائی وج مر قاد بای ادرا کی ذد یت کامیران 
مناظرہ می کناچا تے۔ 

ال الام اورمرزائی دوفوں ہی بھی بے لی سے مرزا کی آمدکا انظارکررہے تھے۔ 
لاہودی پارٹی ےلچ با اث افراد نے انچائ یش سک کہم زا ادا کسی صودت بی لاہور 
آجاۓگردہنہآیاادرعر ہر لکیاکہ بی رصاحب خوداعلا نکر می ںکہمی تق مرک مباہ دک شرط 
دالس پا ہوں جب می لا ہو رک ںگا۔ پیرصاحب نے فر مایا مھ ان اھردتی کےمط و توب 
کے جواب میں جوارے ایک رجیم سلطانچموداس شر کی ول یکا اعلا نکھ گے ہیں ا ب گر 
ہرذاتادیالی اپ زنط سے اعلا نکر ےک میق ربرئی مبا ٹک سک رن جا تق ی سچھی اعلا نکر 
دو اک۲ تق رک بج تکی شر دائیس لے کاہوں لن اس طرف ےکم لسوت چھابارا- 


258 اگ تکا دن انظارکر ےکر ےگز رگیامیکن مرذا کا دوردو رکہیں نام وشن ہا 
الاخھ27اگکس تکوشاہی مرا ہو میں شیم الشان اجلاس منعقرہواہنس می ںخقلی فلا ء نے اس 
کیم یلندک اورم رذ اکے دیل وفرجب اور پا وی جیا نکیا۔اس دا نان اتی قامت زیبا 
کےا اتیرجلو رہوااور پا الیہرگوں ہوک رر لیا۔ 
( ان الما ط ل کَاتَ تَموْقًا )> 
ھرذاۓ ماد یا ی نے خحفت مٹانے کے لے پھواش تما رشا لع ہۓ رن میں من ظرہ کے لئے 
میدران ٹل نآ ےکاعذر یہ بیا نکیاکہ یر صاحب کے م بین بس جو وخر وش حد سے زیاد 
ہےاس لےگمل تا ھتی انظابات کے ایر ہو رش رم رکنا گ می سکودنے کے برابہ سے 
05 و ایک اشتا شا کہ کے اہک اور بی شکرد یا می نم عر لی بیس سور) فا 
کی وک یکر ہوں۔ پیر صاح ببھ یس پھ ‏ خلا خوددی فیصلہک یش م ےکیکو نت 
ے۔ چنایڑ جا زا ' ےنام سسورۂ فی کوک شا کردگی۔ال کےعلاودەرڑا 
ایک مر بش اکن امردعی نے شس الہداہہ کے جواب یی شس با خہنائ ای کا باکھی او لا 
یق نک ریا ما ظر: می شںقلس تکا نر ارک ہوگیا ہے۔حخرت پیر صاحب نے ان دونو ںکتاإوا 
کے جواب میں مشپورز مان ہکتاب' سیف چشتیائی'' کل وکر 4902ء می شال فمادیی۔ اس ما 
آنپتے اشن پاش ات کا زاین باب آ۶ا( گی ایک سو سے زاماغلاط 
نشاندج یکر کے مرزاکی عیاریکوطشت از با مکر دیا۔نطرت بیرصاحب نت ےتعیم یا نگیاکہا 
کتاب کیک سرقہ ہاور قواعرعر ب کی خلاف ودزکی ہے اس اط سےا لکنا بکڑہجزا 
کہا کھاا ےل قائل ذک رکتب میں شاریھ یی سکیاجا کا 
سیف چخیا یکوابل' لم پل عطقہنے م ر1کھوں پررکھا اورز بر رس ت ران ین بی 
کیا ۔آ نع نگ مہب مز ایال ںکتاب کے جواب سے عاجز سے اورانشاء ال الع زہ: قیامتٴ 
تک ان ںکاجو اب کیل دے گگا۔ ٰ 


5× 
اس نچکہمیامرقال ذکر کمن ظر شادی مود م سقکست فائش کے باوجودعرزائی ابی 
ضدبتا نر ہاور بھی کہ اتا نکش اسوکی نے اس کےکفردارتراد پر ریخب کم 
دی ہے انی ضدبقائ ہیں اورک ہی ںکہ جب دمسلمان ہی تو یی ںکوئی اسلام سے خار تل 
کرسکتا دہ با قاعدہ اپنے خل نظ ریا ت کا پرچا رکررہے ہیں ۔ضرورت ہےکہاد باب اقزار 
ملرانوں کےمنظورشد و مطا لیے کے مطا بی رہ وکوکھلاش مق ارد ہے کے ل ےکی دم ٹھامیں اور 
فوریی طور پرمرزائو ںکوکلیدی عہروں سے برطر فک یں ۔اس کے علادہعلا مکابھی فرش ہ ےک 
دوردمرزاحیت کےماذ پر پیرییئیشش ےکا ار رحس تا یکو مسلمان ارت اکا شکارنہہواور 
مر زائیو ںکواسلا مکی دگدت دی کا پروگرام بنانا ا ےتا کہ جوافرادفلیڈ کی بنا ءپرمرذاعی تگکا ٠‏ 
گار ہیں وت اسلام سےمشرف ہوگیل۔ 


جار جار جار لہ مت 


اریت حخرت چیرجماع تی شاہرمۃ ال علی 
صادثقٴ یڑا : 


حخرت پیر بماعحتہعلی شماہ رح ان علیہ می٥ن‏ ر کے ان علا مکی صف اول بس شال ہیں 
جنہوں نے قادیاضی تکو ا لک پیدانٹی کے دن سے بی نکر ادر پان شرو کر دہ نال 
1ل ج بآ پک نات :ەل آ پک دنات ے چٹرروزنل ڑا / نے آپ کا 
شریف در اف تک آپ نےفر مایا ایک ود اوڈیں کے درمیان''اس ےصرف اتا ناڑا 
ہوتا ہ ےکآ پک ولادت باسعادت 1830ء اور 1840ء کے درمان ہوئی (سیرت ام رات 
صف 6پ ازسیدان ین شا فی ودب آپ نے بای تک ریم رآن پاک حف ےکر نیا یچین 
تا ےآ پکواائ ش لی تکیگردامگی ربق ج۲ ریش پچ پرنمازفض نیس ہوتی یمر 
آپ پانرسلو ‏ تھ نزاپنے ہی ریو ںکوام پالم روف اورنیگن گر کاعھمکرتے ربج تھے۔ 
آپ حافظ حد گیا تھ ایک مرجبردوران خطا بآپ نے خوداعلان فرب کہ بے دں زار 
اعادییث بمعراسنادیاد یں کا گی چا امتقان لے نے.( ایض امہ 64) راہب باطل ہکارد 
اورمسلک ہق رائگل سن تک قرو داشاع تکرنے والا شی م سو تتقریپآسواصد یب کآ تاب 
نک ٹین کے بعد بقغاے الی 30-34 اکست 4984 ءکی درمیالی را تہگیارہ ے لاکھوں 
مسلافو ںکوسوگوا چو ڈکراپنے خا ل تی ے پا جائٹیا۔(الیفا502) 

گمراود ٹل فوقو ںکاردآ پکی ز ند کا پم ہشن تھافصوصا قادیاغیت دبائی قادیام تک 
آ پآڑے پاتھوں لیے تھے۔ددقادیاحیت کے سال می لآ پک خدمات جلیل کا تک روکرتے 
ہوئے مولانا ھ عا مآ سی ( مصنف شبرہ فا قکتاب الیاد یی الخادہ )رك طراز ہیں۔' رد 
قادیاحیت کے سلملہ می جواوششیس حافظ یسید جماعت ہی شا ہرم العلی ےی ووتا را کا 


(ھ4 
۱ اک اہم باب ہ ےآ پ نے اس فقتکی مرکو ٹ کی ےتکن دی نکی با زی لگا دئی اورڈ ٹک رمقا لہ 
گیا۔ با پا مزا تادما ٰکولککارانھردوراوفراراخقیارکرتارہا۔ الخ حخرت فر سرہالزی کی بد 
ھا نی میق ایل بنا 

ذیگل می ددقادیا یت کے لے سآ پک طرف س ےک جانے وا یکزششو ںا ابمالی 
کرو کیاجا+اے۔ 

7 قب 1904 مکومرزا تقادبالی بذات خود اپنے حوار یوں کے امو کر کے ساتھ 
ساللوٹ میس اپنے نرہ بک شی رواشاعح کے واردہوا۔ ان دو بیہاں مرذاخی تکابڑاشبر: 
تھا۔ پٹ یکشنرساکلوٹ کے دف کا سپریٹینڈنٹ مرزائی تھا۔ الا مزا قادیال یکو اپنےمشن مشش 
کامیالی دکامرانی کی ذالب امیٹتی ۔حضرت امی مات فرس سروفورآاککوٹ پچ اورطلف 
اذاروں ہگلوں اوزسیروں جس بڑے پیانے پر لے مضعق سے اوق با ایک ماک ساکلوٹ 
ٹس تام خر کا نیش ہیاپ دانہانداز ٹش خطاب فر ماتے ر ہے ۔آپ دلال اہ رہ کے ساتھ 
شتم وت کے ت تع سچھاتے ہوئۓ دن تن اورعقا دحقہ پرقائم ری ےکی تکیرفر مات 
تھے۔آ پاکٹرارشادف رما ےگ 

دوسری نیچ وں کے افقیا رہ کوک مض کیل یکن دین اپنادتی برانارکھو" 

دوراان قیام کوٹ خمام اخراحجا تآ پ نے اپکی جیب مبارک سے برداشت کے سمرذا 
قادیا یکو الہ کن کی جرأت نہ ہوگی۔ جس فے رلک ای مع تکیلے تیار تے دداا کی 
ذات ورسوائی دک کر بن ہو گے اورنظرت ام رملت قش سرہ کے علق ارارت ے واست ہو 
می ۔الرتالی کال وکرم سے مرزا قادیا کوچ راز لیت الکو ٹکار ہکن ےکی ہمت نہ 
ہڑگی۔ 

کات لی پورشرییف “از چی نج رشاہ ام تس ری ۱ ام رتس 1328 مو صفمہ 9 سرت اھر 
رت 'مطبومہ 978 41 مفمہ 248 ؛ یمان پروریادیں “صف 37) 


رہن 
ساللوٹ کےا خی مع کہ کے دوران ایک اہم وہ یی جن کیا کہمرذا قد بای سے 
ایک پیر دکارمولوی عبدانک ری نگڑانے اپےیپ کے اندرمحرا ١‏ نیز جج ہوۓے 
کول کیک : 
”لو ک کے ہیں ہ برا قآیا برا قآیاسنلن ہم پچ ہی ںکہ جب اپڑیاں 
ارکٹ گڑتے ہوئۓ دی نی ( )کہ سے بھا کر پھاڑوں اور 
خاروں یس پچپتابچ رت تھا اس وقت برا قکیوں آا!'“ 
جب کت خا لمات نضرت ام رحات ق رس سرہنے ابی جل امم سن آپ نے 
دورا نت ریپ جوش یج یں فیا 
ٹس بیےدین ےجس نےحضو ٹھچ کی شان می متا یکی ے۔ 
دہ بہت جلد ذا تک وت ے ما راجاۓگا_' 
دو ے دن ایک صاح ب نظ رت ر2 نے ممولوی عبد ان ریم موخواب میں د یا الد ہکہمدا 
ہ ےکہ شک حخرت امام فین ابد بن رش ال عنہ نے پچ مارا ہے اوراس وقت دو ول رکال 
درےۂ ہا تھ اہ شانہ سے نل ےکک رگک پٹ باند ت ہہوئۓ دیوار سے سہارا ےک رکا ے اور 
انا یکر بکاعا ات می ے۔ 
انل خوا بکی ریو ںک یگ یکنحفرت امیرملت یر سرہ: دورا ن تقر جوش می ںآکر 
سنہ پہاپنہ اھ مار تھا جودا تکزتضرت امام زین العابد بین ریشی الع ہک یہی نکر اہ رہواچنامچ 
تھوڑ ےعرصہ بح دمولویعی گرم مسرطان(گ۰دول دا )اے جلاک ہوگیا۔ یہ بد بت مولاوگی 
عمبدانک ریم ساککوٹ می پیداہواتھا۔ اب الیم ٹر لب کی یراس می بھی ساب کےیشمون 
میں نل ہ وگ تھا۔ بچ پیا ء فا کا پا یٹ تیر مک کے و ہشن مکول یں مد فارک 
مین گیا ۔ یک روز ایک پاددی سے الک فی ہوگیا۔ اس وقت نکی خیا ل کا حائل تھا_ بجر 
یس مولوی نورالد بن خلیفراڈل م ذاتقاد ای کی دساطت سے مرزاکی گیا اورقادیان ں خیب 


ری 

وامام مہ ہنار ا اورتنخرت امیرعلت قد سرہکی بد ڈعاسے بلاگ ہوکرسب سے چیپ قاد ال کے 
یش مق مین ہوا۔ 

( “ا لویل انفادیجلددومازمواش عا می مطوع ام تس 1934 389:587) 

8 4908 کو رز قادیانی اتی اپلیہ کےعلاا حعکیلنے لا ہوری س خواکالی الد ین لا ہورگ ٠‏ 
کے کان پرداردہواذ اپنادامفری بھی پیا نے لگا۔ اس کے سماتیوں نے لا ہورش رکےلف 
مگوشوں می لیف یکا شرو حکردیا تو ابلیان لاہور نے حضرت ام رت قد س ہی خدمت ٹل 
حا رہوک رم زاحی تکی فیک درخواس تکیا۔آپ لا ہورتش ریف لا ۓ اورآتے بھی برانرتھ 
روڈ پخوارکالی الدین کےمکان کے مات والے ہار( اب پاغ لی مہ پراسلاميکايدال 
ہے ) می ایک بہت بدا قائمکیااورا کے سات ہ انکر پان ےکا تھا مکیا ایام دخوائس 
ب وق تکھا مکھاحیل ال پچ کئی روز ک میا دعظ ور رہوقی ر میں اورمضتق رات مرزاعیت 
ترد بدکی جائی ری ۔جخرت ام رات قدرس سرہنے ممقا بی علاء کے علادہ بہت سے پیردلی علا مو 
ھی موک کے مر احی کی اینٹ سے ارینٹ بادگی۔ 

ان جلسوں ےحضرت ول نا مھت یم رعبدانڈ گی (ف 1920ء )۶و( :ا ِوڈسامفنلل 
ری (1954ء) یتب ورز مان علاء کے علاد و محضرت امب راتفر صرہء کے خانغا رمشلا نضرت 
مول نا شی نتصوری (ف 1927م )مولا نا عمادالد ین راے پپوریی اف 1982مء) مولا نار 
ری ری رف ووو ۹ء)مولا :فو ران کوٹ( ف 495868 )مولا نپ نر شا دا قسرل 
(ف1920ء)اورمول ن غلام اح داشرا تس ریف 1927ء ) خطا بر 2-6-0-7 

ححضرت ام رحلت نے مرزاتقادیا یکومقا ہی لآ رابٹی صداق تکاشوت دی ےک گت 
دا اود پا ارد پے کے انا مکااعلا نچھی فرما ان مزا تاد با یکومقا ہی کن ےکیسلت 
شی اہذا تآسکا۔ 

ھرذاتقادیا یکو تا یاگیاکہپچر جماعع تی شاو صاحبء لا ہورٹی اس مقص رکیل ئآ ۓ ہز 


می 

کبعرذاجھاگ جاے۔ مرذاقادیالی بولاء یٹ دونٹس ج بھاگ جاے بل ہاگر دہ ارہ بی ںکھی 
رچاذقدم نہ لےگا۔ یق کی نے حخرت ایریا تکویچادی ا آپ نے فریا: 

”گر دوبادہ می تھ کنا ا ہم ٹیس بر کاڈ رج انیس گرم زا کا 

7آخدائفمل× چاے۔“ 

جب مزا قادیالی اپ نمو ٹے وڈ اود نےیشترلاف زیوں کے باوجودمیران بش :۔ 

آیا آپ نے 22 می 4908ء ہندوستان کےکشی مان فر اف واتحفریت اونگز یب عالگی 
گی کرد شاتی سید( اروف پادشاہی سرلا ہورم یش می شی الشان حل کا انتا دکیا۔ اس 
لے می بیصنی کے مورخلا ہبی موجودتھے۔ لاکھوںمسلمانوں ن ےآ پک اماصت می نماز نہ 
اداکی نماز کے بعد یل ےکا آ از ہوا :جس میںشس العلما ولا نا مفت یریم بدایڈ گی (استا وکرائی 
رت امی مات ء یروف ہ اور ل کا لا ہورمو لا نپ وفسرامصفگی روی ددیگر بہت سے نا ۓے 
کرام نے خطاب فرمایا۔آ خر آپ نے صدارتی تق ررش ذف ایا: 

مر زا قا دای تخت امام ہین ریشی ال رعنہ پراپچ اف قیت با١‏ ے۔ 

لن یش حضرت اما ین شی الع کا لام ہول ‏ ووا حا نکر نے پہ 

ھی مقا بے پر ہآا میرئی عادت پیش نگو کر ن کیپ ہے۔ الہتہ ال 

ےک نوم 1994ء یل ایک دفعمرزاکے مقاٹ یں میرئیز پان ے 

نات ایلورڈیش نگوئی کےپئل گئ تھ۔ جن س کا ایک ایک لف اتال 

نے پورافرمادیا اورتھوڑے بی عر سے کے بحدمرزا کا حواری عب انرم 

ذل تکاموت مرگیا۔ اب پگ رمیرے دل شی باربارخیا لآر با ےج کو 

باوجھدکیشش کے می سکرسکتا اوردہ خیای یہ ہےکرمرزا قادیای 

نترب ذلّت اوررسوائ یک موت مر ےگا اورقم ا سک موت اپنیلنگھوں 

سے دیکھو گے میری اس قیش نگو یکوم زا کی یش نگوئی کی ط رخ مت 


رگن 


3:١ 


اس کے بحدآپ نے م بدارشادفرای: 
”جب کک مرزابیہاں سے چلاضجادے۔ بیس لا ہور یں جانا ںگا۔ٗ“ 
حخرت یہی شا ءٹڑدی رحس لعل بھی اس جل۔ می لتق ریف لاۓ تھے جم کے 
اٹام پانہوں نے مقر ت امو رات قد رد ےاہاکہ: 
”شاوصاحب ای قذوائیں جا ہوں ہآ پ اپناکام جار رجیل۔'“ 
ححفرت ام مات ری ال علیہ نے الن ‏ تکہا- 
” آپ چھےاکیلا وڈ رکییتریف نے جاتیں کے۲ 
ضر گل دبی رح ال علیہ نے فرمایا: 
”نمی سگھھرے کا رک رن ےآیا تار بے معلوم ہواکہ ہشکر میرے مقدد 
نیس ہے بلآپ کےمقدرش ہے۔اس ل1 پک ری اوداپنا کام 
تر ےد 
چنا ٹیا گل دن جخر تگالڑوی رم الع دای ںگولڑ وش ریف تج ریف لے - 
آپ نے م رذاقادیا یک جرطرح سے للکارا۔ اسے گوت دگ کرد میدران بی نآ کر اپنے 
دٹو یکا خا تک ےمناظ روکر نے یام بلک نے۔ پا ارد پےکاانعام وصو لکر لنےاگر 
عرزاتاد انی میدان ینمی لآ سنا نو ہم اس کے پا جا ےکویار ہی ںگرمرزا اد یا یکوکرئی 
باتک ماس کی جرآت نہوگا۔ 
آنرکار 28 می 1908ء بروز پبردات کے جس بیس لا مہورد پیرولن لا ور کے ہرارەل 
مصلائون کےٹایں مارتے ہو ےسمندد سے خطا بیکرت ہوم ۓےآپ نے ارشادظ ما کہ 
”مم نے مرزا کا بہت اننظا کیا ےکن وہس تی ںآیا۔ پشگو یکر 
ری حعاد ٹیش لیکن یہ تتادینا اتا ہو ںکیمرزاقادیا لی کاخرائ نیل 


رج 
چکاہے فدا کنل وم سےو ویر ے مقاٹ یئ سآ ن کون مرا 
می( ) سا ہے اور جس صدق دل سے اس بے میٹ کا لام 
ہیں۔آپ ریھیں مج ےکہائل تھا ی آحندہ چوٹی ںکھنٹوں کے اندراندر 
اپنے عیب پاک للا کےسدرتے میس میں ال ںبچھوئے نی ےنجات 
خطافر ما گا“ 
جب آپ نے یرٹ یگوگی فربائی 3 ہنراروں ملمانوں نے میک ذزبان ہوک رآمی نکی 
صدائیں بل دکیں۔ یڈ کوٹ آپ نے رات د بے ف رای اد چ2 س یکو دس کرو 
منٹ پرمرزاقادیالی انی وکیا مولا :ارد نے کل فر ایا ے۔ 
گفء أو گفدہ ال اور 
گر اوہ علوع خر الہ آت 
مزا قا دای اکٹر اپ رمیوں ش ہی ےکی مو تکوعذاب خداوندئی ےی رکیاکرنا تا 
چنا مان کاتھوکا منہ پآ ما شس رات حضرت امیریت قرس سرہنے پٹ کوک ف ای :سی 
راتتھوڑکی دی بعدمرزا قابان کو ہییضہ ہوا نصف ش بک رن ےک عون نے شدرت افقیارکر 
ا۔مرنے سے چچھکھنڈل زبان بن ہنی نباست منہ کے رات اگل رن یھی اورامی حالت مل 
(26 تی 198و دیس روس منف پر ) ماق ہوگیا۔مرذاتقاد یا ی نات مل ے۔ 
لقں دخل فی قعر جھلھ ٦06‏ 
جس وت امی ریت ق رس سرہنے مزا تاد یا یکا لاک کی بن لکوئ ف اتی ولوکوں 
نے اسے پیدئی اکیت نہ دنگ جب پودئی :وگ عد دج ران ہوئے۔ اس بی یگوئی کا 
م ذائیوں ن ےآ تک کی کیا۔ موا نامضتیمورعبدانڈوگی اف 4920ء )نے ف رای الام 
پیک اس پچشگو یحو بکھت تھ.آ خردو سب ے بڑ وکرگی 
(' انکادریی الفاوی جلردوم“صؤ 8 ٗۂء'/ یرت ام مات ص4 ف 44ج 


ہہ کتھھٗصحصحصمسسس اہ ل٭۰+ششسسسسسووکیئیییچھڈ 


ت٤ا‏ 
249 ''ءہ رتیرازمولانا فی ام فی ض م.۰ئ ھ ”رکا ہی پر “٣ي‏ وچ ۔'”صوزا ۓتفی'“ 
صفہ 86 ما ہنا اش الاسلاعم ھی الع دسا جنوریی 934 1خ )1٦‏ 
حفرت امیرملت ق رس سو نے جب عھرزاقاد بای کی ہلا تکی نی کی تو فور سیپ شفکر ہچ 
ا ے۔الڈ تھا یکا شکراداک اراس نے مسلرافو یمان تفو ظا رکھا۔ ابنے حجیب پاٹ مکی 
صداقت ناپ رف مائی اورسلمافو سکوصرایڈ تیم برا رکھا۔ 
ھرزا قادیانی کی بلاک تک رآ فا پرے لا ہور| س کچ لکئی۔ملمانوں نے ہج 
مدوںء بازاروں اورٹلوں می شک رانے کے جیا منعقر سے ان جشتز جلسوں میں حطر ت اھر 
لت وش ر ریک ہوئے اوران مواعناح تہ سے لوگو ںک تی فر ماتے ر ہے۔اس سکم می ین 
روزکک اسلامی کا (ر کے روڈ) کے مییران میس جےمضعقد ہو تے ر ہے جن می لا تحراد 
لکش یک ہوتے رہ بللہ یو ںکہنامنا سب ہوگاکہلا ہو رش رکاکوئ یگ ایا ضہوگا ننس کے ایک 
دوافرا نے ان جلسوں میس ش رات ش کی ہو۔ اس کے بعد اکناف و اطراف لا ہور میں بڑاے 
بڑے جلے ہو ۓے لق بپاہرجیلے یس علا ۓکرا مک یق ربروں کے بحدنضرت امی یلت تل سرہ 
فحص یی خطاب ہوت تھا_ ا نتم جلسوں میس سٹیشمارلوگ اد ای عقائکد ےتا تب ہوک ردوپارہ 
ملمان ہو اوران مس سے کرو بیشتن ےپ کے دس تق برست بر یع تک کے سلسلہ 
قشند ہی دائل ہہون ےکی سعادت حاصل لکی ۔سسلہعالیش اٹل بونے والو کی تحداد ہ 
اتی زیادہہو یآ بنا ہکلڑ ےہ وک رب کو اخ ل علق ائے جے۔ 
( سرت ام رت '2409۷) 
مزا قا ایی بلاکت کے بحدتخرت ارات ددم ذاحیت یس وٹ وخرش سے س گرم 
مل رہ اوردلائل تا ہر تم وت کے لوا یت فرماتے ر ہے۔مرزامیوں نے بوھ اکر 
آپ کےخلاف ہکم کےپھکنڈےاستعا لک کے اعلا ےار لی سے باز رک ےکی نا گور 
کینکت آپ پر نیٹان ہد اورنہت یآ پا رگرمیوں می سرموفر ق*آیا۔ ال تعالی سانش ل: 


وزمی> 
کیم سےنصرت وکا میا آپ کے شھائل عالل دتا- 
ناوں یگ زین گی جات :وو رع 
وف اح کیا بکھے ےشن بدا کرے 
ایک دفت دع اص تلع یاککوٹ کے ای گا ول یس حضرت امرملت قدرک مرہخطاب 
فر مار ہے ت ےک یجدی جولا ہام زائی اکن ستراہ نے تضورسید الب کی شان ارس یس بے 
اد لی کے پجھالفاطا کے ۔ رت افرس ال کستا فیک یکب ناب لا کے تھے ۔آپ نے خودائ کو 
زدوکو بکیا۔ یر دکوکر دوس رے ما بھی اش رکھٹڑرے ہو اورال بد بت اورحببیث جولا ے 
کونت زای- 
هرزائی تق پیل یآ پک ق نگوگی دبباکی سے ذیل دخوار ہوکر بلہ لی ےک یکر میں تے۔ 
اس داعہ سے دوتہابیت بی ذ یل 7رکول پراترآۓ اورتعیلداررع( ”'رعیہ فا ان رْوں 
تصیلی "ہو اکر یھی اور ہیل داز ہندوھا )کی عدالت یں ای کجھونا مقرم دائکرد یا 
”رھ (حرت امی یت قرس مرہ) مسلماٹو ںکوگا وش بر باج کرت 
ہے وت برطا ہی کےخلاف بہت پچ ھگہتا رہتا ہے ۔ مھ ھی جولابانے 
اسےان'ترکنوں سے اق اس نے مج دی یکوحخشت ز دوکو بکیا۔“ 
ماٹرخواش کر الی ای وکیٹ ساککوٹ اف ۹989ء ) خلیفہ رئیا حرت امیریلت و 
سی رٹری مرک بی ان خدام الصو فی ہند )ادرسیاککوٹ کے دی باران ط یقت نے ساکلوٹ کے 
انی ڈپٹ یکمشمرکی عدرالت بیس تبدل مقدم ہکا درخواست شی کیا ۔ اس نے ورخواست قول 
کرتے ہو ایک اگ جسٹری کی عدالت میں مقد ہتف لکر دیا۔ سب سے پیل نقرت 
اقرل امیر تکی حاضریی عدرال کا معابلہ زی بج آیا۔ خواکمالی الد بن وکیل مز اک یکوچ 
آپ سےخص وی عداوت وخصومت تھی بد یں برا نے زودد یٹس سممولی میقی تکا 
مالک ہے۔ ا لکاعدالت بیس حا ہونا ضرورئی ہے ۔حضرت امیریلت :کی طرف ‏ ےکئوگیل 


رت 

پر د یکر ہے تھے۔انہوں نے اود امش کر لی ای ووکیٹ نے یم تف اتقیارک اک 

آپملمانوں کے بت بڑےمقترااورریٹم ہیں ۔آپ ک ےکی لاک 

متقلدین سمارے ملک یں پیل ہو ہیں ۔آ پکوحاضریی عدالت سے 
تق کیا جاے“'۔اگر یہ جسٹریٹ نے ف لقن کے دلاء کےسیی انل 
نے کے بعد فیصاءک یا شاو صاحب نہایت قا پیم اود بن رگ ق 
ہیں۔ا نکی شان ان سے ارخع ‏ ےکہدوا می ےپچھو نے مقد مہ عداللت 

می بلاۓے جا میں اہن مکیاجاتا ‏ ےکشاہ صاحب عدالت ل حاض رنہ 

ہوں اورا نکی رف سے وکیل پروی کے“ 

یی جولا ہے مرذائی جماع تک مدد بیشن نکی عدالت راگ رای کی درخواصت 

دے دیی۔ وہاں بھی مقدرم نمارج ہوا مرزاتیوں نے پا یکورٹ سے جو کیا اور( وردیا 
کی آ پک دوران مقدمہحاض عدالت ہونالازمقراردیاجائے“'۔ف رق نکی طرف ےقائل 
ول اور لاک بیرٹرپیرو کررہے تے۔آ پکیطرف سےکقا میٹ بل معاوض ٹیی ہوتے تھے 
جن می مرمیاں مرش راف 1932ء بھی شائل تے۔ ب بھی انہوں نے ہکجھا۔ 
ا یورٹ سبھی حضرت اق لکوکامالی ہوئی او رآ پکوحاضنری عدالت سے سیا رکھاکیا۔ 
جب اس اقرام مل مرزائولں نے پائیکورٹکتک من کیکعائیت ای مقد مس ای چوٹ کا 
زور زگاد ہا گر سماکلوٹ کے مجسٹریٹ نے اصمل قلدمہ می بھی نار کر دبا ال کے بعد 
رئیو ںکودو پار و ات لکن ےکی ہمت ہوک اورذ ٹل وخوار ہوک رامش بیٹھر ہے 


(تسیرتامی مت 'صف 251:250) 

پر پا یل وخوار ہونے کے بعدمرزائیوں نے حضرت امیریات کے تھے صا جزادرے 
حضرت پیزسد زا وین شا: لف 1954ء) کے غخلاف ایک فو جداری مقدمدازگردیا جاک 
تی بر باری تذل لکابدلرلیا جا گے۔ صا جزادوصاحب اس وقت اورشش لکا یلا ہورم مولوی 


۶ڑعی 
گمہممحمممسسکھسسس حثتبع٭گسسشسشسھٹفٹٹھٌٗ‫ٗ٭ٗھش 
اخ لا اتخحالن دےر ہے تھے۔ اس مقلد ہک پیرو یکیے حضرت اق تقر ربا ایک سا لک 


بد پٹولیاں (اندرون لا ہوردرواز ولا ہور یش قیامف مار ہے ۔مرذاتتو ںکی خواب یت کیب 
کور ضر سے پ شا نکر کےع وارشادکا لیلخ مکردیا جا گرا نک ٹوا اپرید 
ہوگی یمجع پٹولیاں جس قیام کےز مانے می ںآ پکاٹیل عام جار ہا - ہنارو ںکی تحدادٹش 
الحمدھاس ین نے جاتے۔ ب مار 
انآ ارت بت رگ پرے2 آپکالنگربڑ ےن نے بقانم برراتآپ 
وعخناولق عیفر ماتے ننس بی دوروززو یک کے لوک کت کے ل1 0-22 

مدکی ریکل فرت مو لاہ عرم خی پش رف ۹984 ء)آ پکی طرف سے 
روز 6 بھی موجور یکن بھ نے میاں روش رر ےک ادد پی ےکی طرح 
ابی دب یتم کےجھفتاہ کے لگا رت ہو ۓے مرکم لی ای کیٹ مقد مکی پےردئ کیلع 
کوٹ سے باب رآاکرتے تتے۔ موقرالکر نے جوخدمات انام دیی دوآب زر کے 
ا کک ہر 

رات اللہ تی جان اد رات حرت ام رات ری مر نے مخوروعا نے 
بش ریت الڑعلیہ کے ور ارگ پاد بی بس رکا گن ہدتے بی آپ نے مادم عاٹی مبدانڈ 
اسرب یکم دیاک: 

شی لک جار سے زردہپلا1ٗ کی دگیں تڑھاوں'' 

جا صا ؛نے وخ کیا مرک ہونےکافیصلہہو جا فو دی بڑ ھا نہیں ٠“‏ 
آ پنے اشا ریا 

”تم ایھیا ےکا شرد کر ددہ ال لی بر یکر ےگا ٠‏ 

چنا نگ یز نے باعزت برک ہو نےکافیصلہ نایا کا پول پل اورش نو ں کا ےکالا 
ہوگیا۔ جب فاطلا حخرت امیرملت ق س ہو پیا گنی آپ کے ساتحوسب لگ 


مت 
مج شگر با ۓ۔خوشیاں مزا یککیسء خیرا تک یگ ۔سارادن اود رات رد پا کا عاماظر 


جارگدا۔ (سیرت امت ہف 252:281) 
گیزشصفحات میس ذک رکیاجا کا ےک تقرت امیرحات نے بادش ای مسچد لا ہور کے جس 
عام میس اعلانفرمایاتھاکہ: 


”گرم ذائ اپنے دی نوا غاب تکردمی باج ردپ انعام دو ںگاٴ' 
پا علان ارات بھی شال ہوا اوراشتارا کی شکل می بھی عام ماک یا یگ یھ کسی 
نے انعام عاص لک ن ےکی جرأت شہکگی۔ الم ایک دفعہم زائیو ںکی طرف ے ات نی سے 
مگ ےکی ہم اپناملمان ہون غاب تکرتے ہیں ہ پیم دوہی ینک می ش گرا کہ اس وقت 
جحریتب اہی پورسیداں شریف سے ساککوٹ تشریف لے جار ہے تے۔ جب رہن 
ساکلوٹ اٹیشن رکذ بہت سے اشتار اس میلنڈرکلاں کے ڈ بے میس ڈال د یئ گن جس میں 
آپ نف مار سے تے۔اشتتہاردیکھاتذ مطالکاںعم ہوا۔ چنا نچیردوسرے دن بی بتک میں رو پیٹ 
گردار یا گیانگرھرڈ ائیو لکومیدران شی لآ ن ےکی جرأت نہ ھگا۔ 
( یرت ام رت صف253:282) 
نارق اد کے دور می لبھ یآ پ متواتقہ ددم ایت میں مصرد کارر ہے ۔چھو لے نکی 
حول نوت پر بکادریی لگاتے در ےکآ پا بان افش پ ہروقت' قال ال اورقال 
الرسول دی ہوا تھا- 
ضرت امی لت ورس سر ؛نے ۹925ء یٹ شآل انڈ یا یکاناس مرادآ با" کےےم وت پ 
اپنے صدارتی خلے می بھی مر ذاحیت ب ضر بککاری لا تھی ا اجلاس میں ھرڈائیوں کے 
خلاف ایک قراردادیی مورک یگئی جودر ذل ے۔ 
”یہ اجلاں عام جوسا تکروڑمسلمانان ہن کا قائم مقام اور ہر تصہ ملک 
کےعلاے اہنت و جماعت پشمل ہے ۔مرذائو ںکی صداے اصاخ 


ڑەی 
گی بنائی گآ ف نیشنز او رگورنمن ٹآف ا اوج دلا تا ےکی حور 
افاتان' کا الاک قادیاغیاں خابی مستلہ ہے۔ اس می کی عکوم کی 
خالفانہآوازص رم ہی بداحلت ہہوگی ج٘ح سکومسلمان شی عرح بھ یگوارا 
غنی سک مت ۔ اذا لیک او رگورشمن ٹکواس متنلہ میس ہرگز ڈ لکئیں رینا 


(اتا' ار کھو و شریف (ابڈیا) باب تمس 4928 صف 20 “انام 7 ال 
ابمدت کرات یک کافس ملا نلہ مز صف 07,68) 
ایوہ وو جسیہ سر ت کے 
دوران گرا و فقو لک کور تے ہو مرذا قا دای ےجھوٹا اویگراہ ہونے پر بن ٹکر _ت 
ہوۓآ پانےظر مایا: 
”اب ہنفدوستان مہ جہاں ہروق تآزادکی مہ بکی ڈ ینگ مارکی جاتی 
ریہ پٹ رن کے رہب حقرات الا رش لکی رح پیداہورہے ہیں- 
عذا قاد بای کے کوک پہربی کے بحدبکفی ایک پبرروان ھرزانے پیم یی 
کے دجوے گے ۔ھرزا تقاد ای پیل الکو کی ہیی میں ابلید گی کے 
عہدے پر ملا زم تھا دہاں سے مق رکا ری کا امخان دیا ننس میس نانکائی 
ہوئی۔ نچ رآ ہت ہآ ہت مر شیب ہدری ؛ نی ہکس نیو ں کا یڑ ماذ 
ال فداک دک اکر نے دا ویر کش کول کر چان 
ے((ھارا۔'“ 
مز چی اورجھوے یاکےددرمیان مواز ۃکرتے ہو ےآ پ نے فرایا۔ 
4ہ سان کی استادکا شر یں ہوتا ءا کاعک مل لی ہوا ہے۔ دو رو فیس ینیم پا 
ہے۔ بلاواسط ا کلم ڈیم خداوندف وش سے ہو ہے ۔ جوا می اس کے پرخلاف 


٤نر‎ 


ہواے۔ 
ہرہچ نی ان ع رکے ایس سا لگزرنے کے بعد کم رب الا ,لوق کے روبرو 
وکوئی نو تک دبا ے اورالی رسول ال کے الفاظ سے دکوٹ کرت ہے بر اورآہتہ 
آہ تک یکودج نیو تکٹیس لاکرتا۔ جو ہوتا ہے دہ پیدکنل سے ئی ہت ہے ۔کجوٹا 1-7 
اس کے برخلا فآ ہتہآ ہت ذکوکوں کے بد خبو تک دکوٹ یکرتا ہے۔ چپ محرث ؛ جرد 
ہودنےکادگوٹیکراے۔ 
3 حفرتآ دم علی السلام سے نےکتضو رش الا خر کک جت خی ہد ۔قام کے نام 
مفرد تھے کسی ہچ ن یکا نا مرکب نتھا۔ بن اس ک جو ےم انام م رکب ہوا۔ 
۹4 چان یکوئی نیس پچ وتا۔ چا می اولا پش دم الا شس ئا سک رتا ۔جوٹا نی ت ہک چو کر رتا 
ہےاوراولا دروم الار ٹکرتاے- 
(مانارانوارالصو فی “تصور ہابت ایل ھی 194ف 33ء ما بنا ضیائے تم لا ہور(شت 
وت )در 497ف 8 ایمان بر ور اد از مولوی اڈ دای مطبوہ مان 1986ء 
“68د) 
اعلان کے انام پآ پ نے مزا تقادیالی کے پیر ارد کا تج ذکرہکرتے 
ہو فرمایا۔”'ھرزائی جوم زا قادیاٹی کے پرد ہیں نتم نبوت کے اتل 
ہیں ہیں۔ اس رح وو حضو نپ کے بدارج رسالت وڑہوت مکی 
نے والے ہیں۔ ‏ ی ضورنففظم کے حدارع ھرزا تقادیا لی کیل مات 
ہیں بچھران سے ائل سفت و جماعح تمس رع انا قک سیت ہیں؟ ہم 
نے ال نکی ں تھوڑا بل دو خودیم سےعللو ہوک گراہ ہو گئ۔نہاایت 
ترت واستجا بکی بات ےکیمرزائی خودسرکیارددعا کی خی کچھوڑ 
کراورکی خلا ی ایارک یں۔ اس بجی ا نکسلمان مھا جا !انغاتی وہ 


زمی> 

خودکرتے ہیں۔ جماعت ناج کوخودانہوں نے مچھوڑا۔ جب فت کی ال 

سنت و بماعت د خوددبن اسلام مرف ہوکرمرقھ ہو گے اود چاہ ٰ 

ضلاات یس جامگمہ ے ہیں۔ بے وفائی تو انہوں نے خودکی جوراہ راست 

ےگس گیئ ۔طوق خلا بھی1 خرالن ما نف اہوں نے لے سے امار 

دیا۔ انل پرطرہ یک یٹٹض نادان دوسعت پک کے ہی ںکہانع سے انفاتی 

کرو .نا قفاقی کے مب دہ ہیں اورشکایت لی ماری۔ 

گلہ کر ھا کر سے انال ک 
یا طربقۃ ے َخلذْٗ ک 
(برت امرمات صفہ 649-648 فو ات ام مات صف ۲189 30ھ“ 
بانزن214۸,213) 
اکن خدام الصوفیہ ند کے میک ٹر جنززل خوا رع ھکرمالی ای دوکیٹ نے 644 

8 ۔ء؟ودوڈنامے ساس تا ہورٹی ایک جاان شائ کیا ننس مت رمیکیات کہ 

”لم رذاکی جماعت ابتداء سےجفرت قبلہ عا لم روگی فداہ ( حضرت امیر 

لت )اورآپ کے فلامو کی مخالت پک بست دای ہے۔ 1926ء کے 

سمالاض جس ان خدام الصوفیہ کے مو پرمرزا قادیائی کے چنرمتڈرتل 

پانش ری فآے۔ا نک خبیتفساداورشرار تکھھا۔ چنا غچران بش ے 

ایک نے مرزاکے اعنظقادات اود الہاما تکا ڈگ رک نا جرد پک دیا۔ ایک 

مولوٹی صاحب نے جلے یل مزا کے انظادا کی ترد یلرکی ؛ایما نکی 

عقیقت بیا نکی اورمنلشخ وت پیل رشن ڈالی۔ اس موق پرتضرت 

قرل عال امی مات نے اعلان فرما اھر زاکے اما نک خابمتکمر نے 

انگود برااردو پے انعام دیا جا ۓگ اس کے بعد سےس الکو کی 


گت 
مر زاگی جاعت اورتتیتقبلہ عم کے نا مان لوٹ کے ماتین اش ار 
اذ ہد ٹیر ہے۔اب ان کے مطالب پرہم نے و راردد پاپ یل 
پک کوٹ میں کراکے اعلا نکر دیا ہے اوروگوت دئ ےکہمرڑا 
پشی الد بینمود مزا کے ایا نکا غاب کی رشن اس اعلان کے 
بعد ے نا مو ہیں _۔معلوم ہوتا ے کرس بکوکت ہوگیا ہے ۔کوگی سان 
ندآیاجھاپنادعا ٹا تکرسکااورا تاب ڑاانوام اص لکرح'“ 
(یرتامی مات مل 283) 
مندررجہ پل تقاصل ےظاہرہوتا ہج ےکم رذااورائس کے حوار یو ںکوڑھ بھی سا ےآ" کراپنا 
موقف اددقید دا تر ےکی جرآت نہ وگ اور ہییشہت کا لول پالار ا- 
رت ام رملت فذل سر ہیا رد مرذائی تک غدبا ت کا اختزاف خر انصاف پت 
ذائیوں نے ھ یکیا ہے۔آپ کے نییرة نشم ؛ جھ ہریلت حضرت سید ان نین شاہ اف 
0ء )ایت فر مات ہی ںکہ: 
” ایک باد ری میں ایک مرزائی رسب نے میرے ہم سفرتھا اس نے 
پاقں پانوں می سک ہا ہندوستان ‏ جن طاقوں نے یک وقت اپ 
اپنے عقائ دی کا کا رو کیا تھا (ا) اگمریزوں نے حیساتی تکی 
(٣مرزانے‏ اپے نرہ بک اود( ٣‏ )شاو صاحب (امیریات )نے د بن 
تن لن شروںگی۔ انکریز کے پاس یہت زیادہ دولتہ طاقت اور 
حھوسٹٌی ۔مرزان بھی چند شع اکر کے بلڑئی دوات ش عک یی اورحزاہ 
دا خی نکی ایک مل اعت ا مکیاھی اس کے نس شاو صاجب 
ےی سرک ٹل تھے ۔آپ کے پا لکوکی سرمایبھی نت ءآپ نے 
چنویھ یکس تع کیا اور خی نکی جماع تکویھی ازم میں میں 


اتا 

اپ ےللوٹ کے علاتے پربی و رکرتا ہوں تر نظ ر1ج ےک بدڑگی کا 
صرف ایک زمیندارسدہ صاحب عیساکی ہوا اور چو ہر عایت ال 
تر ککا ڈیلدار اور مرے والد صاحب اورصرف چن رگ رگھڈیا لال کے 
مرذائی ہو ہیں۔علاتے کے بای تام لوگ جو لاکھو ںکی تعدداد ش 
یں :شاوصاحب کے پاتھ پرعت ہوئۓ اوداپے دن پرقائم رے“۔ 

حضرت جھ ہریا تفر ماتے ہی ںکبیش نے ان لق رک نکرکہاکہ 

”ىاللکادیی ے جوکوئی اللہ مرو سے پرکا مکرتا ہے اوراسباب ظاہ رکا اہ 
بوتا۔انأ تھا ی ا ےکا میاب ہر مات ہیں 


ال تعال مرا ہیں 
کان بت اللعۂ الما (بل::86] 
آ گار ہو کے بے ئک خداکی جماعت ب یکوخاہ حاصل ہواکرتا ہے“ 


(سرت ام ارت ہف 264-253 

رت اھ رملت فرل رہکی الن بے مال رڈ ادرد بٹی خد مات سے ماش ہوک رر 

صاجزاد وس فی ان شاہ رم ال علیہ اف 1984ء) سمادنشی نآلومہارشریف نے بنا 

خرا تسین ٹی لکیاتھا۔ 

حفرت ام رملت قبلہ ء عا مکی فوجوانی کے زہانے میں قمام تک 
ہنروستان می سکف رکم تکادوردور وا اوراسلام مکی ایی اوالوالعزم انت 
کا انھارتھا جوا ریو ںکومڑاکرنورایمان سے ولو سکوروش نکر درے ۔کفرو 
ایا دکا خقاب جرطرف شکارکی حا یس مرگرم پردازتھا۔ اور ڈرے سے 
کل وش نی میس عافی تبھور ے تے۔ ریما نک یگ یھ گرراہی کک 
تا یک پردو ںکو چا ککر یذ انی ش رہش یکی وج سے خلقت اس رشن 


رتا 

نی ان ےےیحردم رہقی ۔عوام ناس عادات داخلاقی اورا مال د 
افتالی کے باظ کرس ایی رک ہو ئۓے تھےکہاسلائی شان داتیاز 
سناس بک شہ تھے .خی را سلائی رسوم دشا ئرکود بین وائیما نب ٹیش تاور 
صبخۃ ال کے داوندگی رن ککاا نکو اراس بی ند پاتھا کفروشرک کے 
پاریی رشددہدایت سے بردآز ماتھے۔اور ہندوستالع سے اسلا مکا نام مٹا 
دی پک ربست رن پودا ری نرشال سے جنوب اورشرق مناگاٹربے 
تک این می اسلام کےآخری دور ےمم نظ جاتھا۔ 

اریے وت میں جیرویس دمیان اد میں نک وچ یں کہ 
.7 تک ابر تنودارہوایگزارعا می شآخارحیات ہو باہو ےا کا 
تفاطر بہا رآ خرس مردوز شی نکوحیات جاددال جن والاتھا۔ انسا یت کے 
پڑمردہ چرے پر رنگ را بگھرنے لگا۔ پادخزاں کے ریت خوردہ 
درو ںکی عریاں شاخو ںکوا زس رنوخلحت برگ وبارعطا ہو اک دہآ 2پ 
ال لو ہوا اس نی پنضم نے شب وروزسفری صعوزتیں برداشت کرک 
ان میں سلرافو ںک ی1مکھوں می ںپ۹یکھیں ڈا کا نکوجینا در نکر دیا 
اوران کلم تکیدوں می کان کےت رج تی ںگوشو ںکومنو رکردیا۔ 
انساہ ڈرو ںکوتابندہستارے بنادیا۔اپقی تمازت عالمحاب سے پڑمردہ 
ولو ںکوگر مایااورجاز مخوز پیراگیا۔خابیدہاجا بل جگایاادر :شیا رگیااور 
میدانئٹل می لاک ڑاکیاان ےکا ملیا۔ عالانکہاس وقت تو واعنا تھا 
نوع نے والاء نج تھا جو ء تراہم نتھی اور ارک ن صرفحضرت 
امی رات قبلہءعا لم خی سب پچ تھے ادرآپ نے یک وتھااحیاء دی نکایڑا 
اُھایھ““۔ ( نیرت امیرعت “سخ 155,154) 


روم رذاحیت کے بارے میں ححخرت امی مات قمرس سس رہکی شد مات جلیہکی چند جھکیا 
آپنے لا نظفر اہی ںآ پک خدم تکااحاطک رن ےکی کی دضنز درکارہیں۔ رین میس مر 
اریت عی دونأصیت ہے جس نے میدالنامل می مرذائی تکا مق یکر کے ا کان عق بن رکیا 
موجہ ہ ےکم رزالی سب سے(یادہزشٹ یکا مظاہردجج یآپ کےسا تد یکر تے تے۔ 
مرذائ یآپ سےا عدتک ؛خالفت ونماصمت رکھتے ےکم انہول ن ےآ پکی مقالشت“ 
کوک مو بھی اھ سے نہجانے دیا۔ فارطا کے خط ناک م وت پنضرت ام رمات نے ہوکا 
ان نمابال انجام دیے تھ دہ تار کا ایک ددشن باب ہے۔ نہب مرذاحیہنے اس نت ما 
عددرجہ بے یی کا شمدت دی تھا اورانی معاندا کا رر وائچوں سے فساد کے اند ایک اورفماد ہر 
کردہاتھا۔ جواسلائی شکودر وت می مرک میں ان سب سے بد نت مرذائیوں 
ما تین خائ طور پر و حخرت امی رات کے ون تھ اورآپ کے ارسا لکردوحاخین' 
کپلے او ںکاسبب بنا تھے :ندال سے دہا چھی ہرموت برا نکوگکس تک سام اکرنا 
پڑااورآپ کین باوجودا نکی جمت دقالفت کےکاموالی سے چمکنار ہے 
( نیرت امریلت' مز )2٥84‏ 
الفرش حفرت امہ رمات رس سرہ تاد دالیھی مرذائی تک قردید ٹل ہہ وتت خخول 
رہے۔ 1880ء ی سآ پکی رعلت ہوئی اور 1953ء می نی پت بک ختم وت پکی۔ ا 
تح یک شآپ کے فرزن راو رحیاد وشن اول راع الملت حضرت سید عاوظا مان شا 
صاحب(ف 19614ء) سب سے ہو نے صا ججزاد ےش الملات! ترت پیرسیدنورسن شا 
صاحب(ف 1978ء) اور ہریات پیرسیداخ سجن شاہصاحب(ف 1980ء) نے گج اور 
گرواراداگیا۔ 
4ء مس جب اف ری ک تم وت ماع لکامیالی سے جمکناء ہہوئی ملک کے سب 
سے باافقیاراداد ےی الا نے مرزائیو ںکوطی رسک قراردے دیا نے میں نے چم تصور 


۶ڑ(عی 
سے د ھا حخرت امیریلت قور سر ہکی رو افوراسی دان خی سے پھو لے نا یھی اور اہی 
اواا ماد سے ارشاوفرمار میگ ی/: 
”میرے بیڈوائیش نے زندگ یکرت وصداق تکا ساتحددیا ہے اور جابر ے 
جابرسلطان کےسانے بی کے ےکبھیگر ینمی ںکیا۔ اقم ہراں 
تی کٹل ددء را اعت کے خلاف چہاکرواو را پش کوکیغر 
کردارتک پیادوپشخم وت پش نکی رگتااور جو جنا بدسال تاب 
ٹف کی خبوت پر ڈاکےڈالتا کے 
میررے پو ا تم نشم فو تکا دو جرا فی ہ ےکیونتم امت رسو لپ ہداورآل 
رسو لیف بھی _ جا میرارننل میگ لک ہراس ات مکردوجونے بین رسال کیل ا تا ہے 
را زہان کا کر ددت کاخ ولاڈ یوک ارہ ممیت کردوٹس 
کا مقص ز2ر ریس انل سےا جلاک نا نی ہے۔ 
أنھو اک رہمت باخد کرت پہگبی رورسالت بلندکر ن ےکیلے نان شا نکی 
پا نگادد میری دع انی تمہارےساتھ ہیں۔ 
حفرت امی یلت رس سرہ کےاس ارنشاوگرائی بن لکن ےکیلئے تام صاجزادگان نے 
اٹ زدگی رف فک ری ہے۔ ا وت حضور تسار حضرت پیر سید حاذ نار ضل مین شا, 
صاحب اشن ءمبد انل می مع رو فکار ہیں اوردنیاۓ اسااماصرف ایک ہیا در دے 
در ہے ہیں کہ 


رو یت ہر پت ہو ا و 
دہر میں ام مھنگٹھظ سے ابالا کر دے 
(اقبل) 
جو ہچ چا 


رتا 


تھوٹے مد ہو ت لف اروارش 


22 وت أم تک بقا کا ان ہے٤‏ وہ ا عقید نتم نو تکا حفظ دی نکی 
امال اورفیادہ ےکک قید وم وت ات رادم کٹوظا ہے :قد نم وت ہا دی نکی 
تقلیما تو ہیں اکر یکقیدہ بای نیل ر بت تل رضددین بات رگا ا ںکاتلیمات اور 
رن اتی ر ےگا ءاں لیے ال مقییدے پر پورے دی نکی عمارت انم ہے+ ای میں ام تک 
دعدتکاراٹضمرہے من ہبہ ےکہجبشگ ما نے ا قیرے یں نب للان ےک وش لک پا 
ا کے سے انتا فکرن ےک کش کی اے امت مل مہ نے مطا نکی طرح اپنے شمم سے 
مد وکردیا ال ےنم بو تک ححظہ با الفاط رشبم وت اتیل دی کا بی ایک 
حصہ ہے اورسلمائوںل نے پیش اسے اپذا نی فرب چا ہے۔اممت نے ہردور بل اپنا رفر ضط 
ان ری سے انجام دا ہے اورف ری ےکی اداشگی می سکس یکوتائی او تخل کی مرح نہیں 
ہوئی۔خووقر نکر یم نے ال قیدنخ نو تکودا ئن الفا ظا بن رمیا تھا یکا ارشار 7 
”مھت یس ےکی مردکے بای پگرالل کے رسول اور خری می ہیں_" 

(سرةا0ا2اپ) 

لتھالی نے بجۃ لودا کے وت پآ یت نازل فربائی جس می پیل دی ن کا الا نک ی:'' 
نے تمارے ہاراد ام لکردیاام پا انام پوراکردیاورہارے لیے دن 
اسلامکو ین دکیا۔''(سورۃ الما گر:) 

کی کےعلاد دق رآ نکر مکی سو سے ذائدآیات سےعقید ونم بوت خابت ہوتا ے بتضور 
نی امو نے صاف اور دا طود پراعطان نر مایا: مر امت بر تی ںچھوٹے پیراہوں 
کے رابک بی یکا اکبدہ جیا۔ بے عالانکمٹش الک آخرکی نی ہوں ہمیرے بعدکوگی نہیں ٠‏ 


رھتة 


(اوراؤَمرزی) 

لا ےگرام نے الن اقم اعادی کو کردیا ے بن سےنقید تم وت خابت ہوا بت 
اوران اعادی ٹل نحرارروسو سے راد ہے۔ ال مقیرے رام تکا ماع چلا آ را ہے بل 
امت می سب سے پہلااجما ا مک پرہوا۔ بجی وج ےک ج بج سی نے آ ضر ذف 
انت وت پر ڈاکہ ڈال ک کش کی امت نے صر فکہاےتجو لی لکیاء ہراس وت 
تک کون کا سا فیس لاہ ج بب ککرال نا سورکوکیا کر جسد امت سے مد ہا نکر دیا۔ 
تحضر تڈ کی حیات طیب کےآ خی دور می جین اف راد نے نبوتکادڈوٹ کیا ہآ پا ے 
ئل پرکیاطرزٹل افقیارکیاہ پور امت کے لین شعل راو اود ات کے لیے ایگ راہ مادریں 
ےکا 7 رام تکوکیاکرنا چا ہے اور ینگ سب کوبت ایز دی سے ہو اک ال تھالیٰ نے 
اس تج کو جاناچا ہآ تحضر تل کے ارشادات اورز انی ہرایات کے اتی طور بھی 
اہخمائی ہوجاۓ ۔ تن افراد نے نو تکا وو یکیا:(4)اسوپأسی 21م اصدبی(3) مسی کاب 

اسو سی من کے علاتے صتعاءکا رئے دالا ھبس قیلےکا سرداراء ال 7-0 
جا ہے عدیث ٹیل اسے صاحب صنما ءکہاگیا ہے ا کا نا مہہ تھا کہ بب تکالا تھاء ال 
لیے اسودنام پڑگیا۔ اس نے نبوتکا دو کیااورمن کےکودن رو کر کے پور ےجصن ہشکر 
ا .آتحضرت پٹ کومعلوم ہواتذ آپ نے حضرت فیروز دیھی رشھی ال تی عنہکواس کے نما جے 
کے لی ےبھااورتحضرت فیروز دی ری ال تی عنہ نے اسوڈٹسی ےگ یس تب لکر ال کا 
ما کرد یا۔النتھالی نے وی کےذ ری ےب کا کی الا دئ یآ بے نے سحا ہکرام 
ھی ال تھا یه مکو ىہ بات جات ہوم ف مایا فاز ٹمردذ(فیردزکا ماب ہوگیا) ال طر ایک 
تو نی کے خاتے پہ بارگاورسالت سے ححضرت فیبروز رشی اڈ تی عنہ ن ےککامیا کی ند 
حاص لی لہ بن خو بد جوقبیلہ ناد بش رکتاتھاء کھ یآ حضرت ٹل کی حیات ار 
میس نبوت کا ذو کیا اورکئ اف راداکٹ ےکر لے بے نے مروف سوا یمان رحضرتضرارنن 


رتا 

از و شی انگ تھالی عنکوا سکی مرکو لی کے لی ےکھج ءانہوں نے ا لکا مو اص رہکمرتے چہوئۓ ا پچ 
حم کیا گر چلجہ قابو میس نی ںآیاء ہوا کگیاگگر باقی لوکوں کے ساتجھ نک ہوک اورمسلمات 
کیا اب وکا ھران دالس لو ۔ ابی ححفرتبض راررشی الگ توالی عحنراتۓ میں ت ےک آحضرریں 
ٹپ کا وصال مھگیا۔ 

تیسرا می خبوت مسیلہ تھا ج یرامہ کے مہو لہ بنوعیفہ سےلتلی رکا تھاء اس نے 
حضرتۂ ول کی جو تکا اکا زی ںکیاء بک نیودت میں ش راک ت کا دو کیا اس نآ پٹ کو 
:ھا مس کی طرف سےئجرسول الہ کے نامء بحعداس کے ال تھی نےتہاری خبوت یل 
ٹج ش ری کک دیا ہے اس لی ےآ بی ز لن میرک ءآ وش پکیگ رق بی زیاول یکرت ہیں۔'' 
نال لفوم) 

اس کے جواب میں حضور ےم نت رمیفر مایا مھ رسول الاے اف مکی جاعب سے مسیلم 
اذ اب کے نام علام ہوا پہ جھ دای تکی اتا کر ے۔امابعد از لن اللی ےءال بے پاہتا 
ہا لکاوارث ہناد جا ے۔ '(دلال ال :ۃمانالے) 

اس دن سےمسیل کا نا مکذ اب پ ڑگیا اور ال کے نا کا حصہ بن گیا تضور اک ری 
نے ذ مین کیم کے بارے میں جواب دی الکہ کی ہے ال تھے چا ہتاہے ءا لکادازٹ دناتا 
بے او رخیوت میں شالت اورا ےآ پکورسول اھ کے واب مس ارشادفر با کہ ی بات 
کے دالا سب سے بڑامھوٹا ہے اور ہہ بات ال نقائل ہ ےکا يک طرف دھیان ہیا نددیا 
جاے۔ الہ راس کے قاصدو کوک ہاگ رقاص کان لکن چائز ہوتاف تم دوفو ںکگردن اڑا یتا۔ 
تو ار کا سو وا ور ینمون ہکایک لے کے بھی بھوٹی وت پرداش تی اور اسلام 
اورسلمائوں کے لیے ا سکادوکی نا نقائل برداشت ہے 

اسوپکسی دوہ اسد یکی ط رح آحض رٹل کسی کا بک زین کی اود اس کے 
زا جمہکا ھ وت نی ملاس لیے ححضرت ابو رد بی زشی ال نل( جن کے ساس ےآ پکا اس٤‏ 


ہس سس سر سد سح اح سح سد سس ری سس سے ےتوہ ہا مسا 


رتا 

ضنرموجودتھا) نے مل ہکذاب کے فتے کے نات کے لیے ایک فک ربھیچا نس میں پڑے 
بے ھا .کرام شی اتمم تے اورتما مھا تی ال ڈتھم نے ا اشک شی ہا ا کیا یں سب 
سے پہلا ماع اورسب سےتوگی اورمخبوط ایام شر نیتم وت کے خلا ف مق ہوا ءال 
یگ میں سب سے لے حضرت کر ری ال تی عنہ پک جضرت شرتل نع تی الع 
اورآخرمیں حضرت مالین ولیدربتی اڈ نہ نے شک رکیکما نکی ہیکذ اب اہنت یں برا شگر 
یں سحیت عد یق الم وت می لچم رسید ہوا سمل فک اب کے خلا فشم وت کےجحفظ کے ال 
پیل مع کے میں پا سویھا کرام رشی اگنر شید ہد :اشن مس ات سوق رن جی کے حا فظو 
عالم اورستر برریی صا پرکرام ریشی ال مکھی تھے ۔ ج بک ہآ ضر تال کے زمانے میں لی 
جانے وا تما جنگوں میس ش ہی ہونے والے ما کرام شی ات مکی تعداد 59د ے۔مسیاں 
کاب حخرت شی شی الڈعنہ کے پاتھوںجنم رسییرہواشس پرامہوں ت ےکہاکہحال تکف رٹل 
پیرے پاتھوں ایک بڑےسلمان شمید ہودۓے جے ہآ ایک بڑےکاف رکم رسیدکر کے میں 
نے ا لکانداداگردیا۔ 

ای ط رع ری سلسلہچکقار اور 87 ججری می تا فی نے ند تکامجھوٹا وو یکیااورتضرت 
مصحب بن ز یی نشی ان تھا ٹی عن سے جنگ مل ماراگیا_ 

9 ری میں حار تک اب ہشٹی نے نو تکا چھوٹا ذکوٹ کیا خلی بد امک لن مدان 
کے پرنز: مارک ہلا ککردیاگیا۔ 

19 ری می خی نے نو تکا جو ٹوٹ کیا ۔خلیفہ جشمام جن کبدالمکک کے دورشل 
ام رعراق الدب نعبدرا نس کی نے ا سے زندوجلاکرراکوگردیا۔ 

9ی یس مان بن سمعا نتجی نے نو تکا چم وٹا کوٹ کیا امیر رات غالد:نی‌کیرالڈ 
قس رکیانے اسے ند وجلاکرراکوکردیا۔ 

دورع با سی میس بہا فرید یٹ پورگی نے و تک جوا دتوٹ کیا خلیغہ او وتعفر نصور چم پر 


رھ 
خادم بن نمز بی نے ا لک عکوکست دی اورا ےگ رفا رک کےا ںک گر دن ُڑادی۔ 
شیا بن شھ نار گی نے 27 اجکی یس ہو تکامچھوٹا دیوٹ یکیا۔غلیف ہمقل کے زرمانے میں 
موف نے ا کاو عکوقکست در ےکر لاسرا ٹک نزو پ تڑھایا۔ 
امک بن مبدالہ نے 222ج ریی یش نو تکا وٹ وٹ کیا غخیزمتضعم ک ےکم برا س۷ 


ایک ایک موا فکرمیحد وکردیاگیا۔ 
عیب نپح ل می نے 303 ہچ ری میس ضوتکاسچھونا ٹوٹ یکیا۔ یداد کے لوکوں ے ا سک 
7 0 و 


مد الپ باسندی نے 322 ججبی می نبوتکاچھوٹا وو کیا .اشک اسلام نے مواصر وک 
کےگاست دی اور کا ٹک رای |اسلمی ںکوگوا: یا 
میس نے 320 ری یش بد تکا وٹ و کیا قب مور کےاحواز کے ہام : 


ایاڑا یں ماراگیا۔ 
اٹنصو رسکی نے 329 جوربی یس نہو تکا وٹ کو کیاکین ین ز ہبی سے بک میں 
گلست ہل اور لاک ہوا۔ 


امغ ری نے 439 جو کی بیس نبدتکا موا کو کیا حا اھ رالدولہ ین م ردان نے ایگ 
وس گ کر ںوگ کردا یاادرشیل یش ڈال دیا۔ 

اج ”می نے 880 جرب یں نبوت کا وا وو کیا اک عبدال لکن نےگرارکر سے تر 
ٹس ڈال دباجہاں ىہ ہلاگ ہوا۔ 

عبدالن مکی نے 068 جو ری میں خو تک ٹجھو وٹ یکیھا۔ااس نے ایک روز فص دکھلوایا_ 
الا سے ٹون بہتاد ہا۔ یہا لت کک ہلاک ہوا۔ 

ہا ں کک برفتر بکی مس رعدٗبورکرتے ہوۓ بیمنی ری ما ہرہوا ی٥ی‏ میس اس پت 
نار یکاذ یک ال مرزاخلاماحرقادبای کاذب ہے جوکہشرتی ناب کےش( گرداس پر مقام 
قادیان ٹس 1839یا1840 کو پیدا ہدا۔ درا ائی ا ری وی ہانر :کی اور لیم حاصس لکی 


سسمممےمم_ مم صے-ے×- ۔۔ سس سے سی ں..ِںر رلٌٰ 


ىبن 

وم کے حمول کے بعد ڈ پٹ یکشن کے وف میس نوکریی ایا رکی اور بعد می ابیز سرکارکی 
بہربانو ںکاعگزیا۔ 

ھرزاغلام احدقاد یی نے پیل میددہون ےکا دتوٹ کیا او یعدب نیش ل کسی ہون ےکادتوٹی 
ایا ار زی ارٹل نو تکا وی کیا-_ یفتاگر یزو ںکا اپھاوکرومسلراوں کے اما نک 
اون کاذ ریہ بنااورا کے تھسا تھب راسلام ما نت کے ساتھعیساعیت اور یہ 
دی تکی نیش ی کا تھا ابی متقصد کےتمول کے لے مرا غلام ا تمادیا یکودگوگی وت 
کے ےتارک یاگیا۔ 

علاءاسلام نے ہرمحاذ پر قادیاضی تکا تھا ق بکیااوداس کے ز ہرککانٹۓے کے لی ےج رر 
او کن و نے پ ضس نے اس فقت کےخلا فآ وا زی بل دکی دہ فوت ز ماش نظرت 
پ ہرعی شا ہگوٹڑ یی ریت انڈ علیہ ہیں ء پچ راعلی حضرت امام اجسدت الشاہ اتد رضاخال بریلائی 
رم ال علیہ بضرت پیرسید جماعحتہگلی شاو رر ال علیہ بحضرت مول با خلام ون رتصورئی رج 
علیہ جضرت ول نا لام قاد ھی ردئی رم ا علیہ میاہراسلام مولا نا فقی نمی رم ال علیہ 
استاز لعل رہ ولا نا کی رھ عال مآ سی رر ال علیہ حقرت مولانامفتی خلا شی ری ال علیہ 
علامہاہوا نات سٹشھ ا تقاددیی ری ال علیہ ہم ولا اعد الیاید دا لی ہمت ال علیہ مولان عم 
انچ ردئی رت الگ علیہ علا مس شود اص رموکی رعی ال لعل ۰رت مو نا ابو لنص رمنفور اجرشاہ 
ر5 ال علیہ صا جزادو سی فٰض ا ئ٢‏ لو مہاروٹی ریت ال علیہ صا جج زار ان راشسن شا رم 
ال علیہ نل آبادگیمجاہرحلت ولا نا عبدامتار مان میا زی رمۃ ا لیران ملا ما کےعلادہ 
اورمیارنامں نان ون اوزأَتَزض 4او یاھتا نکی می 1 کی می تام ایت 
علامیشا ہاج فورائی صربق رم یلیک یکیش وکازشی سے دنگ راراکین اسی کے راتس رقاذیائیو کو 
یسل ایت قرار وی اسر پاکستان می ںا دیاضی تکااطقہ بنرکردیاگیا۔شیان اب کچھ ج بکہ 
پاکستان می قادیاضیتآخریی سا اس نے ری ےلکن دہ پیر یکوئی موقہ پا توے جا ےکی دتے 
ال پاکستان می سا ٹیس چاری ر کے ہو ہیں۔( جوا نا مول رسالت ازحافظاماختک سید ) 

لہچ لہ لہ پچ 


رت 


ہرزاقادیالٰکاتتارف 


تمھید: 
تضورسی جال مس خی رسول اور خر نی ہیں ۔آ پک ین ندمت پایمان اتا 
تی ضردرکی ہے بفنا آ پکیابدت درسالت پر پکو نی دسول ما نک رآ پک اتی ت کا انا 
کر نے والائخت مکاراوداسلا مان ے۔ 
عقیدر ٹم نبوت ضردربات دبین ٹل سے ہے اورک رآ مات کر پر متعدداحاد یڈ ٹر ینہ 
اوراہما امت سے ثابت ہے حور پرٹو رشع وم الشٹو و کے وصال کےقر یب جب کچھ 
لوگوں نے تبوت کا ڈٹوگ کیا قذ خلیضہ اول ححضرت سیدن صمد لی اکب ریش اللہ تال عحنہ نے تمام 
مصیکھتو کو الا ۓ طاق رکک ا ن کا بر وق ت نیٹ ضردر مھا اوراس تق تکو پور ط رح 
وا کرد یا اگل یمان کب نی نیو تکویصورت برداش تی کر سکت۔ 
عدیٹ پا کک 7 سے مرکا دو عا لاٹ کی بنشت کے بعد نو کا دوگ یکر نے والا 
کاذب (جھوٹا) ب نیس ۔کذراب ( بببت با تھوٹ) اور دای ( دوہ ديۓے والا۔ اورت کو 
پچھپانے دالا م ہے۔چنا نمچ ہیارک شریف یش ہے: 
7 دعوم الساعة حی ییعٹ دجاألوت کذابوك قریبا من ٹلٹین 
کلھمیزعمرانه رسول الله 
امت تا 2 اکنڑیں قرب جھوٹ لولے والےدچال پیا 
ضہہوں۔ان یل سے ہرایگ بیدگوٹ کک ےگا ارودالڈکارسول ے۔ 
کذراب اس لم ۓےک راس نےحلوق بیس بل خالقی پ وٹ باندھااورد ہبی ایاجٹس 


۱ 
ہے ک6 قرب ہہت 
ہےحوب مداعلی لق دالا رک فیلات نا صکاانیارلازمآ تا ہے اور ال ای مل سال نے 
ولا یت وتطبی تکا کوٹ یکر کےکوئی عام دجوکانیں لوت ورسال تکا کوٹ کر کے بہت ہڈا 
کرد یاے۔ااس دٹوکی کے بعد پر بروزی وی رہ کے الفاظ سے اپے دای ہو نےکوم یھ 
اش کردیاے۔ یادر ےکا تنا تکی ہ رج تضورخا کناٹ کی ظمت شان ا جا رکر ن ےکی 

چھاک گنی ے۔چنا موا ہب الدغیش لی فک ایک ردای تکاآ تر صا حظہو: 
ولقں خلقت الدئیا واهلھا لا عرفھ مکرامتك ومنزلتك 
عندی ولولااے ما خلقت الدئیاً 
اور یقن جا ۓ میس نے دنااودایل دنیاکوانں لئے پیدا ف ماک ایل 
پان راو ں تھہہاررے ال لع زت وغرت کا اودرمیرے نزدیک ہےاوداگ رق 
مہوت نو یس ڈنیا پیدانفرباتا- 
پنا خی تضو ٹل اقم الاخیاءعلیانقیۃ دشا ء کے بعدنوتکا گی جہاں اپنے دبال ١‏ 
مک ب ہو ےکا شمودت د ے۸ ہے دا لا سکا دوگ ی تضور رح اللعا این پت مکی درب الا 
پک یکی تق رب کچ کرد ے۔ وت کےکھوے معیوں ک ےگھٹیاکردار سے خدا ےت 
یں اوررسولو ںکیظمت ات بھی ولوں می متا ےسا 'تصرف الاشیاء باضد 
ادھسا “'( نز انی ضدوں سے پپچالی جات ہیں )۔ کے مطابق سا وداق ںک ہج ے چان 
ران ںکی تر رمعلوم ہوئی ہے۔نبوت کےبھوٹے مد یکوقدم قدم بر ذات ورسوائ یکا سام ناکرا 
پڑت ہے۔ تی قدرت خداوندکی ہرحال مٹ اپے ہچ خی درسو لک اعداوفر می ہے اراس کے 
نو ںکو پررنک می ذلیل وخوارکرکی ہے 
مرزا قادیانی: 
عدیث نرکورٹیں دچالوں ٹل ےمرزاغلام اتدقادیالی بہت ۂمایا لحقی تکا عائل ہے 
اس ل ےکم تنا اس نے مت اسلامیکوفتصان ایا شاید جک ککوگی د جا لجھیائیں بہٹچا 


رہعاا 

مگا۔دتیا ایک بہت بڑ ندمت جواسلام شیب بھی سب ےآ س ھی ۔ ا کس پچ 
ری ای ۔اہذااپنے دشل وفریب مز کی دچا لاں ےآ گ ےن لگیا_ 

زمنظرنفمون یس ا کیا بیرت کےختلف جا وایت ہی اختقمار کے ات قا کین کے 
ان لائے جار ہے ہیی .تاکہد خی حدگک انداز وک ری لک ہو خبوت ت کیا۔ دہ دکوڈا 
مان ک بی ام کی دو یی کذاب ددچالی ہے۔ ہا ں اگ را کاکوئی وی اب قول ےت 
دہ جو اکس نے خوداپنے ایک در ذ یش ری لکیاے: 

عم خاکی 1 ہل مرے پیارے ئ آزم زا ہوں 
ہویں بشر کیا جائے نفرت .اور انماوں کی عار 

خاندانی پسر منظر: 

مزا قادیال یی قو مل او ریت برلا ھی ۔ با پکاام فلا نشی داد ےکا نا عطاح 
ار پڑدادر ےکا تھا یت میں مات زشنی رج ا کی اس لے کسوں کے ز ہان میں 
ملمافو کی ہا اٹھکا اتھددپے تھے 1887 ءکی جن کآ زی میس مرزا فلا شی نے 
سیاکلوٹ کے مجاذ پر نر یو کی ایت اپئی طرف سے پا ںکھوڑے خری دکر اور پا 
جوان ہش کھج دے۔ کی فدارگی کے نیچ جس أسے درا رگودنی می شکر یع تھی( مرزا 
یا نے ا لکرکاپاٹریاججی گال کا بقذفریلط ١‏ پزکرے) 
ولادت: 5 

مرذاکے بقول صن ولادت 1839ء با 1840ء( تریاق القلوب ) لض کے نز دی 
8 "مھ راودا سپاسنامہ کیا۹4937ء ہے۔( مو عکوڑ)_ 

ناممرذافلاماحد ہے۔(ق رآ ام اعد بی پاک می لک نیکانا مرک ننس ما طاید 
قدرت نام سےگھیا اس ڈو کی ترد کان چا فی . یز اس کالغوی مع بھی اس کے دنو کی 
جا نی س) 


س”صمممممممإ سس ممسے سإ سس پہپإز<جح ہیی ]٣__‏ 


را 


چن اور تعلیم: 

ول مزا جات سا لکی ع می ق رآ نیم اور چند فا ریکتائیں پڑ لی پل رپچھو لی 
۔ دی ایک شیع عال مک لی شاہ انی ے مہا اہ سا لک مم وھ عق 
ت اط بکیج شکتایں اپنے باپ سے بڑھیں بقول مزع ی کا وق و یہٹ 
اپ ظا نعحمت کے پیش نظ رزیادمطالیجے سے رۃکتاتھا ضا شد ود یبا تک داگزاری 
لیا مق ما تکی پروی یھی خاطرخواو دک یلم حاص٥‏ لکر نے میس حا رہی۔ 

(الل کے نا دنا لوکھان ےآتے ہیں ۔ دنا کبیا سے کیھٹ یں ۔۔ دہ اپنےکیے والے 
شاک رداورامت کے استادہوتے ہیں مان کے پش مر دا لال ۓ پڑخادزاردگا 
مود زنک ضر حدبیثہ یں تع لی ادرا رادم دم تک ابتقائیکتائیں۔ اتا 
ماک خطرۃایمان بن جا تا ہے۔ لی طب کا مبھی ہد حاصلل شک اگوی خرد یمان دی 
ادخطر: جا نپھی۔ بای :تع مکااٹ ہ ےک یرپ فارکی اور رد تر سی فصاحت و بلاخت 
ا اوراخلاط سے ہیں-) 

ہرذا قا دای بچڑیاں مارکر وت ضا خکرتارہا۔(سیرة ال ری )او رلک ا سے سنزشی کے 
سے پکارتے تھے بیت الک :لی تج یکیلڑکوں ک ےکن پرایک دفیگھ رم شر لی نیا 
ماس پپ نے کے(میقی چوری )ا ایک بین یش سے فی ورای ہوں مس کر باہ رٹ ےگیا۔ 
ای یکر ڈال ہوا ٹک قا۔ (بر”البدل) 
رشباب اور ملازمت: 

جوالی می سآ دای اورجھی جوان ہوگا۔ چنا نچ ایک دفعرمر: اکوا پنے دار ےکی جش نس 
دورد پے لیم ےکور واسپپو رکچ گا ا یکا ہچ اذھل رزامام الب یی ہدیا بش 
اون فرا مر ےر رو2 اشن ساری ‏ ضائ کر دی ٣م‏ 
اڈ آتا اي لے مزا سیالوٹ رئا جس پنددہ روپے اہواد لام ہوگیا۔ ہیں 


ج_!جششسےج<ىِْٔمپوکج سس چجچ ہہ ےی _ےے۔ 


رتا 

پادریوں سے مناظرےاور تیلقا تی بھی ہوٹی رہیں۔(دوسرا سای مر امام الین ادعرإ 
بآ خرأس نے چارے کے ایک قانطے پر ڈاکہارا) 

ہیں ملازمت کے دورانع ڈاکٹر ام رشاہ صاحب سے انگس نکی گی یک دو کراج 
امیس )جن ےنگ ربز کی میں الہامات یس مددیی )میں قافو ی ابو کیا مطا ہکیا ارتا : 
اعخمان دیانگرکامیالی نہ وگ ت2 اپ کےکنے ب ارسال (18685+4884) کی لازمت 
رگم والپی ہوگئی۔ لوٹ میں پادری ہھکر کے سات بہت دواوبا تھے انکر بے اپئی ممایمت 
ل ےس یکونو تک مدگی بنانا اج تے۔ برطا نوئی ہنلدکی منٹرل ای یجن سکی روایت کے مطال 
ڈپپکشنرنے پاراشفائ لکوانٹروییو کے لۓ طل بکیا۔ ان ین سے مرزاخبوت کے لے نا 
ہوا۔ ( ارز ماس بہقادیاھ 
الھام کا دعویٰ: 

اب ای نے برناثر دا کہ شھے اہم ہوا ہے اورمیبرٹی دعا ٠ی‏ ںول ہہوٹی ہیں 
رانے می الہام سوچ تھا أ کا نام یت الھک ھا الہا کی کے لے ایک ساد سابارہ 
ہندول کا ملازم رکولیا۔ لالشرمبت راۓ اور لالہ ما وائل 'قاد ان کے دو ہندو مائص میم 
مقبول الد عا ہو نے کے امھ رگھی شہروں می سکیل مۓےڈذ نزرو از اونگ رکا ساسلشرو ہو 
لوک :بی تکی درخواس کر تے کہ اک بھی خدا کا مکی ںآیا۔ 
مجددیت کا اعلان: 

یماش کلافورئی جس کے پاس ھرزا اع تس راکرد جن تھا نے میردیت کے اعلان 
مخوردد بات ھرزانے ہنارو ںکی تاد یس اشتمارچواکم بورپ+ ام بلک وافریق رگ کے وڑا 
وغی روک گر ای کبھی ال نہ ہوا گی ڈو رالد بین نکی تھا ع رز اکا ماع تھا۔ جموں میں 
تھا۔ مر زایا اوراس سے ار یگانٹھ کی ۔ مر زا کلف دیو ئوں یس اس کا مشور وی شائل رہ 
مج رد ی تکااعلان 1889ء ٹ لگیا- 


را 


ھوشیار پور میں چلہ: 

زہرور یا ض تک شہرت کے لن تین م ریو ںکوساتھ نےکر ہوشیار پارگیاادد چاٹی کے 
فی اشا رات نشیمک کے لے میس میٹ گیا۔ یہاں الہام ہو اہ 20 فردری 1886 ایک 
لی برک تک حائل لڑکا پیر ہوگا۔ ال کان ت مو انل رکھنا۔ 22 مار 1886ء اور 8 اپرنل 
8ءء پل رام یلمون کے اشتھار شائیع گے ۔ چونکہ مدان دش نکو زم لکرن چاہتاتھا- با 
ای پا ہوئی۔ اگ تل وق رٹ ڈرو ہوئی 7 17ے 7 ء ڑکپ اہوا۔ ے 
نمو ائُ لکیاممیامر ووسواسما لککا ہک رم رگیا۔سماڑ ھے سات سال بعد پھر پارک امھ پیداہدا_' 
ھرزانے أس یکو نمو انی لق اررےلیامگر دوبھی مرگیا۔ 
إمیج هوتے کا دمویٰ! _ 7 

مجردیت میں زیاد وم تنظرتہآئی جج ون کا دنو کیا اوران کنا ب شک فوع مل 
ود اک خدانے میرانام مر رکھا۔ دوسال صفت م ریم میس پروش پائی ین یکا رو جے بن 
گی اوراستارہ کے رنگ میں عاملہ ہوا۔ بر یھ میم مکی بنا گیا ییں میس این ع رب 
گناہ جواب 14سا لکی سو ہیا کا ترتھا۔ درنٹشل ک اورپ رکچ موخودہونے کے دوفوں 
و ے اکس نے پادگی باری 1894ء یم بی کرد ہے تھے۔ 

ال کے بدا ہور:لدعمانہاوردگی کے مناظھروں میں بر بیط رح لس تکھائی۔ 
”'آسمانی منکوحە“ کے حصول میں نا کامی: 

ہرزا اج بک ہوشیار پور مرذا قا دای کے ہہنوئ یکا ضضیقی پھائی اورا کی پچ رادم نکا 
خون تھا۔ ا کی ینپمک کم خوش جا ھی مر زانے اس کےتصول کے لئ الما گن لئے 
کہا اگ رمیرے با ۓےسی اور ے کا عکیاف خاونڈھائی سال می اور للڑکی )کا با پان 

مال میں مر جات ےگا اراس لک یکومسرے کا میں ب یآ نا پڑ ےگا کیونکہ خداکافیصاد بجی ہے۔ 

مم اس پگ بھی ودی ش رہ واجوکن اب ودجا لکی پٹ مو ںکاہوا اکنا یں 


' : حصد جج سس سے سے سے سے ےس رد دح نے ےس سے سے سے جح یدع 


مھدی ھونے کا دعویٰ: ۱ 

2ء م کان پو چھ اہک ماک ہو مہد یکہاں می ؟'بولا۔' میں ہی ١‏ 
ہیں ۔' گرا کا ہار زیادک لکرننو سںکرتا ھت ک یگ ریز مہری سوڈان ےکی ط رح أ ےک 
خطرناک ڈکھولیں۔ 
آتھم عیسائی سے مناظرہ: 

جنڈیالشنع ات رسےسراوں نے نیسای پادرلوں ےمرڑا ویر 
اہم میسائی وق متھا۔ یدرو دنک مناھر ےکا کلاسم رذا. ہمہ لے 
انداز ‏ بای عم پنددہماوکک پاویہ یکر جا ےگا (لڑنی مرج ےگا )گر اں ےل 
امجا ھی لف ند باا درمز بہت یل ہوناپڑا۔ 
دعویٰ نبوت: 

مرزاکومچدد شی لک او رکچ مود ہونے کے دوؤں کے بعدا تی ال منزرل پر یچ 
ضیا لآیا۔ چنا نہ 1900ء یس مس نے دٹوکی نو تکبھی داغ الا _ 

(بقو لکھوومردور) یت کے خیب مرذاطا ہد انیم نے دودران خطبکئی ارم رز اکے 
نی اوررسول کے الف ا استعال کۓے ۔ ئن امردای نے ُرامنایا مر ڈانے خلیہ کی تا خی دکی 
میٹ بھی ا لکافرا زیر کاپ چاکیا خلا 
1۔ چا خدادکی ہے کر نے دیان یس اناو لپھہں'“ اخ اللاء! 
ض2ے۔ ”جھادراذوگی ےک ہم ول اورنی ہیں '(مماؤائڈ ) 

(رر5اء1905ء) 

تر ید تہکا جو بھی خطلف مرعلوں مس ہے ہوا۔ یلیڈ دبروزی نی پھ صلی عق 

یا اور ام النمیا دی رہ( محاذ ال پچ رجا الصفات اورالضل الانیاء_ 


رك 
حضرت پیر مھر علی شاہ صاحب رحمة الله عليه سے چھیڑ چھاڑ: 
مرزائی تکا اھ فو الِ د لھا تھے ۔تبلہ حا لم رت چیہ شا صاحب لس 
رر یں۔ 
خواب می ںآحضرتاپكا نے مرذاخلام ام ہد بای کی تردیکاگ م 
دتے ہو نے فا لکن میرک اعادی ٹےکرتاوی کی سےکقرد مات 
اورقم امو بی ہو“ 
چنانآپ نے 1899ء یس نزو لک اورحیا تک کے موضوغ رس الہدای تع اور 
تمام ہندوستانپشمول قاد انتک پھیلا دمی۔م رذ اقاد یالی نے اس کے د لا لککا جوا ب نو تد باالہت 
صخرت پیر صاحب رعمع ال عل یکل رفو یی کے مقا ےکا دے دیا۔صورت بیتجوی کک 
ووٰوں ( می حر گال وبی رمۃ ای یورم زاب لا ورس جج کر کےق حراندازگی کے ذر لیے 
فر نج مک یکوئی سورت پا اس سور تک چال سآبات نےکرد اکب یک خداوندکریم جک 
3 ون ری می بہترین معارف کے اولشی رھ کی نی دے اورھونے سے رطق 
ین نے۔ دوفوں سات نٹ روبرو ہیوک موی ھی پر الف ڈیصلہرد بی ۔ برصاحب 
تار یکر کےاطلاغ دیی۔ 
چنا نچ 25ات1900 کا دن مقررہدا۔ پرصاحب ایک رق کے س اتیک دن پیل 
یلاہ ور ےئ ا گے دن جب بادشھا بی مرکو ہجو رواش ہود پا تھا رات می مز اتیوں کے 
بڑے بڑےاشتمار گے ہو تے۔ پیا یکافرا ایل لا ہورجران تک پیکیاہور اے۔ 
د٭ بات جوھرزانے خ می ںاھی یکی' اکس حاضرنہ ہوا تة ال صورت می بھی از ب” 2 
ہاؤںگا 'عوام وخوائ نےآنکھوں سے دک چلیا۔ 
لی سضر تگولڑوی رحیۃ ال علیہ کے تحلق سن نے دوسریی شی یکوئی کی ہوئ یت یم 
8ء میں جو جیٹ وکا ہی ہآ ۓگا۔أس می آ پک انققال ہو جا ۓےگگامکگ راس میس مرذاخور 


سس 
مرکیا۔ پیر صاحب نے مایا۔ائیٹھ پائوٹ نیٹ جیٹوے بدلیگیا۔ 
مرزا قادیانی کی موت: 
دع قبول ہہوگی اورقدر تکاملہ نے فیصلفرادیا۔ چنا نج رق ا ایک سال بعد 268 ۴ 
۵8 وم زاپ ےکفروش رک ساتحدد نیا خا کگیا۔ مر ذائیوں ن ےتفقیققت پر پردہڈا کی : 
کش گرم زا کے می باصرنے ال ک ےآ خ رک الفاظ با نکر کے با تن خمکردئی۔ مر زا کا 
حلدیقا۔ ‏ "نی رصاحب شھ دبائی ہی ضمدکیاے۔'' (حیات ا۶ 
ای مکی دعاء شی مرزااوراس کے ایک ساب اتی ڈ1کڑعہد ایم کے درمیا نگھ 

تی ڈاکٹرصاح بک دوسریی پشگوئی کے مطا بن مرزاتقادیا یکو 14 کت 1908ء ے 
پیل مرن تھاچناخیرد وم رکیا۔مرذاقادیالی نے جوڈاکٹرصاح بک موت کے تحلق بکو ی وی وہ 
ھی پورینیس ہہوگی اوردہسا لہا سا یک زخدورے۔ 
مرزا کی بدحواسیاں: 
سیر ا ہدیی حصددو مکی ای کعہارت ملاحظہو- 

”ڈاکڑ می شر اتیل صاحب نے بجھے بیا نکیاک ہتفر تک موور 

علیہ السلام (معاذ الیم معاذ ال ) اپتی جسمالی عادات یس ایی تےکہ 

جح وفعہ ج بتضورجراب پنتے فذ بی چچی کے عالم می ان کا ایڑگ 

پاں کے تےکر یش جمداد پک ہد جائیتی۔ اد بار ای ک کان 

کاشن دوسرےکارج بی لگا ہوا تھا دنت اوقا تکوئی دوستتضور کے 

ل ےگرگاپی(جتا) پر لات ھ آپ بسا اوقات دایاں پانوں بائجیں مل 

ڈال لیے تھ اود بایاں دانٗمیں میں ۔ چنا چا ل نکی کی وج ےآپ 

دی جا پنے تھے (قادیالٰ رہب الب رۃالہری) 

آ پک( یف مرزا قاد یا یک شیر بی سے بہت پیار ہے اورمر بول 


1> 
بھ یآ پکوعر سے ےکی ہوگی ہے۔ اکا مانے می ںآ پٹ ی کے عیلہ 
چس وت جیب میں می رک تھے اورسی جیب می ںلکڑ کے ڈھلکھی رک 
اکرتۓ تے۔ لین مر زا ول جا تھا نے کے ڈھیلوں کے کی 
جیب ہے (قادیا نی مہب کالتقہماڑن‌اھے) 
سو چو کیا یہ تھا سی شا نبوت کے لاکنی ے۔ 
کھانے کی پسندیدہ چیزیں 
کرارے ککوڑے ۔ سالم مرن کاکجاب +گوش تک خو بکھن وگ 
لوٹیاں۔ مرغ اوریروں کاگوشت۔ اگو کی کاکیلا۔ نا گپوری مرو 
حیب۔مردے۔ مردٹیآنم۔ برف اورسوڈالیمنہجر۔ باذاری مٹماال 
(ہنددکی دکانی سے ہہوں پامسلما نکی دکانع سے ) ولا بچی ارکٹ ۔ مقگ- 
خر مفر ح ھی ۔افیون۔ ٹا تک وائن ( اذ راورنشرد ہی دای شراب ) 
اور برانڈڑیی عالت مرف میں جات بی تھ او مرن دان یھا) 
(ڈاک بغارت اعم قادیای) 


لباس: 
لف روایا تکا خلا کر تے ہویئۓ مناظ مر اسلام موا نا مج عم راک ردگی رت ال عل 

فرماتے ہیں: 

مم رز کے سرپ وروی اوہ لک کی کی نیہوت ۔س رن کے 

نچک شمل کات ہوا۔ نجس بان۔ چ- چست پاجامہ با فرارہ پہنا ہوارشی 

ازاربند۔ ایک یں چاو ںکا ھا۔ پوس می ام گرکالی پ ہے 

(جس پرنشان گے ہوں ) ادبر پا ہوا فیدر چ مہ دایاں باز و ہگ کی 

یر تا ہوا 


رت 


بے امصتەرز اکا ٹٹوا- 

اراس کےساتھ چر ےکا اکفتقی علی بھی شال لک رلیا ہا -- 
تحریر اورزبان: 

انا ۓکرام فا حت دبا قت اور ای ولطافتکامرکز شع ر ہے یلین ترت ہو 

ہے مرذا ا ای کیاع لی فاری اور أردو ری یں پٹ ھک رکم بھی صن ز بان د بین نظزہی ںآجا_ 
رف وٹ کی بے شارافلاط یہ فا ری ہی ب۲ نویس ُردنوں مج سبھی موجود ہیں ۔ کرد 
جا ضیف اود وعدت وع کےاستعال می بھی الیگ لکھلا جا ہ ےک شا دا ٹوس جماعت کے ذ ہین 
طا لب یھی عار ہے ۔ چن دنق رے ملا حظفر بائہیں۔ 


٦‏ اورجی مو سوک ش رای تک انتداء وی سے ہوا۔ (ازالے) 
تر انام ٹثدے۔ 


2 ا سک ماناک کی (راین) 
جج مم کرے۔ 
3 پیایک ای تراردادے۔ (پشرنن) 
ون ترارداد مث ے_ 
7 قھت عدہ جج الگا کو دکراورا نار دروم مت ککمتا یت 
(ازالنہ وادہام یش ) ئا ںکائ ہیں ۔خوائ اورتاخبا تخ نیس ہدحتی۔ وخیرہش 
داح دروخ کا مل استما لیا ہے پر وسر لام جیلاٹی برق مرجم 7 ضف ر, مانہہ یل ال موضو پر 
مل پش ے۔ 
ہا تک مرزاقاد ہا یکی شانگ اتی ہے ڈہنوڈڑنے ےی لتی ما م و تک 
مشھتیںت ارسود ھی بالات ہیں ۔کوئی شریف بصاغ آد بھی دوطرزبیاں اخیائنٹںش 
کرسکما۔ جوم رزا یا مرو ںکا ط)٤‏ انتیاز ہے۔صرف چندمنالش حاضر جیا۔ 


رت 
2 می ولوئیجچھو نے ہیں اورکتو ںکی ط رع مپھو ٹکامردارکھاتے ہیں 
(زشیں نیا مم) 
4 میاہی نآ زادئی 4887ء کے بارے ٹیل مرز اتا ے۔ 
”ان لوگوں نے چچورو ںقڑزاقوں اورترامیو ںکی طر١‏ 1ہ گونمنٹ پتملی رو ںککر 
نات“ 
ہے مھ ولا ناسعدا نگ لد صیانوىی کےکثعٹلقی_ 
”ول یم پیل باحون ہشیت ہعفس در کیٹا“ 
تاریخی معلو مات: 
ھرزا تقادالی رج ےکتنا نا بلدتھا۔ اس مال بس اس س ےکی انسوں ناک فاطیاں 
ہیں ایک طو ہی تصہ ہے۔ بیس یہاں ایک مشثال بی کرتانہوں حضورسید ول کے والید 
اجرسید نا حخرتعبدرالڈ شی ال تا ٰ عنہ ےآ پک ولادت پا سعادت +0۸07 
دادما ہد وسیدنا آ ہبیش ان تھا نان اس سے پچوسالل بعدوصال ٹر مایا لگرمرزاکپتاے- 
”ارت کودیکھ و آحضرت (ملل دی ایک میم لڑکاتھا جن کا اپ 
پیدلٹی سے چنددن بعد ی فذت ہوگیا اور ماں صرف چند ماوکا چو ڑگر 
می (جیاء۳) 
اتی جبات اود بر وی وت ۔ شقن یک دجال اورکذا ب کا کام ہی ہے۔(عزید 
ایس مض یگ رانیم دیھیں) 


2-۰ 


ترزا گے فرشتے: 

1۔ رای (مکاشفات۔ت یاقی القلوب) 

ثِ شرل (مکاشفات.ت یاق القاوب) 

) یی (مکاشفات۔الیشریی ھی ہیی الوق‎ ٠ 


سسسسسسسسسسس متس ىىةةميس6سس سس سے۔م مسوم مت 


ارہمة 


4 ئا رت رک ہو) 

- من لال ( تر 15ج) 

6۔ طط ( رکز ہو 

مرزا کے بعض الھامات: 

التھالی فا ے: 

٦ہ‏ تو ہمارے پان سے ہےاورہہزدل ے ہیں۔ (اضامم) 
2 بابدالی پش اتا ےک نت اتیل دیکے۔ 7مرحوارق )' 
3ہ رناعاقع۔ مارااب عا گی ٤ے۔‏ (باٹین )رہ 
4 ”انت ملی ہھدزل وا “تق بج ےمنزلیغر زند کے ے۔ (حودارق) 
5-۔ ”الع ولیں“'اےمیرے بے ن- (الفریٰ) 
ا ریہ رددہ اگ یئاور نیا لی یش ہوئۓ یب الہام پل مل ہیں۔ 

۹ می شال تیاں۔ (حعالرق)' 
2- برفعانما_ (راین) 
انگریزی حکومت کا غلام: 


صرف ایک دومقام سےطمروریی اقتامات یی سن جاتے ہیں۔ 
۹ ۔' یی ع رکا کٹ حص راس سلطنت انگ بک یکی جا نید دہمایت می ںگز را 
ہے اور میں نے خخالشت چاداور گرب گی اطاعت سی ارت یکن 
فا کہا ئیں امھ یک جایں پا الماریا ں رسکی ہیں۔ یش 
نے ایی ابو ںکوتا مھا لیک عرب مصر:شاممکائل اورر مکک پاہیا دیا 
ےا 7 
( ادا نہب کال اق القلوب) 
2 _ درخواست بضوریشھیپوگورنر بہادر دام اقالہ میں ”اکسا رمرزاخلام امم ازقادیان'“ 


۶ڑ کھ >٤‏ 
مور 24 فروری 1899ء ش اتا ے۔ 
“ماش درخواست ے جوتضورکی خدمت یساسا م بن رداشہ 
کرتا ہوں۔ مدعانہ ‏ ےک ہاگ رٹیل غدصت خاصہ کے فاظظ ا 
نے اورمیرے پزرگوں نخس صدق ول اخلائس اور جو وفاداری ے 
سرکار گر زی کی خوشنودی کے ل ےکی ہے۔ حخایت نما کا شی 
جہوں۔..۔ اس خودکاشت پوداکی نت زم اور اعتیاط اور ۰ اورلوج 
سےا ط۔ تقاد بای نہب مو الین رسالت از رة اتل قادیالیٰ ) 
خدارا سو ہے اورائتصاف کے دشمنان اسلا مکی یچ پ لاس عدکک جات ہے او ریا 
شان نیت کے انی ہوکی ہے نس پیک او او گا رسلمان ھی جب تنک سلمان ہے ۔ 
اعلام کےخلاف ایی سازش فی سکرسکتااورا ای رفر وش یں ہوکتا۔ 
حرف آخر: 
اس سار ےۓ مو نکو جو ہا یلت می سککھا گیا ہے۔ بخور امیس اور چاتز لی _کیا 
ھا تاد بای نی ہی محہددہ ما شون اللہ بلک ایک صا مسلمان ما ایک شرلیف دبا غرت انسان 
یکہلا نے کا خی ہے۔ دہ خدا اور رسو لأکا ای اور ا سلا مک مد رتھا۔ مر اہ یت نہ پکا 
نائمہیں دن کےخلاف اسلام مو کی تی نگھنائونی سائش ہے۔ انسوں عالم اعلام 
یلما نان پاکتا نکھی اس کے خطرنا کم زائم سے وا یں ۔صرف ہمارے ون عز یی 
ٹنیس دوسرے اسلائ یما نک می بھی تقاد انی مسلمائوں کےبھیس می اع عپروں بر فان میں ۔ 
س چ کیا تک دعات کے لے ابچھا شون ہے۔ 
لوت کا علاءمشاٌ کاء وفادارسا تافو ںکاء اس تمزہ وہک اورلات کےتھا می 
خواہو ںکا اون فرٹ بی ےکاپن دین و مہب اورک وم تکوبچانا چا میں ننول 
کو داش پر ےکوہڑ ےکا کیک 
(ا مار تھا لے ے می اکٹ مار کا خلاصدماگیاے۔) 
اہنامکنزالا یمان / شم نیو تن ر 2009 


ارتا 


پروٹیس رما ذظ رکب 
صدرادار ف رورغ لملیم ال مرآن لا ہور 


عرذاتمادیائی کا کات کا سب سے بڑاجلماز 


کیا نیکر مض یی یملف ال کے بعدکوئی یا یکن ہے؟ ا سکا جواب -داے انار 
لکن کے یں ۔تمام نو ں کا ینعی ہکقیدہ ہے۔ بکمہمدی بوت سے ول وت 
طلبک رابج یکفرہے۔ 

تق رآن پا کک آفاقیت: جامعیت دج کربت اود مار یب و اش ہون بی ڑکفویا اور 
واجب الا تا ہونا سب کے س بن کےتقسورکی تفاصل ہیں حضرت مھ مھ فی و جن نی 
نود انسان کے لے نی ورسول ہوناضم نبوت ىیکا ناش ہے۔ 

معلوم ہواک رخ نو کی انعیت ےآ گا ہوناہرسامان کے لے لام وضرورگی ہے۔ 
توص]ااس دورمیس چیہ اسلام یش نما تک اورادارو لک پشت پنیا کے ذر یج فتتہقادیامیت 
نے نم انداز سے الام شی کےہتر اتا کرد اہ ءا ایا نکوقادیاحیت ے بچانا 
بہت ضردرکی ہو چا ے۔ 

ملمان بٹخ بوت کے معابلی بمیش سا ر ہے۔ ج بتک مسلمانو ںکوفل واختیار 
ر ایابد بتک موتع شدد گیا دہش وٹ ے تحرف ہو کے شا نم“ فی خر نکی آٹھ 
گے۔افسوں پیا قد ارخلائی یس بدلا مان زوا یکا شکارہوئے اورسیا 1ہن ںکواسلام پر چھ 
کے کان کا موقعہ باج لگا 

حطلیث پرست فرگی نے رب کے پٹ مکی علی السا مکذحوڈ با ہا کا وت بیٹا 
تا در ےک ریس شون خدا ول جس سے دوسرا مد اگ لیا ینم زمصعفقی ےک یکنکرت دشا 


رن 
وت ا سے ای ]نہ بھائی۔ اس نے سب یت تقسو تو تکو پا ما لکرنا چا او تخل 
شور یدوس رافرا وگ ہکار نکر انیو ںکوفرد دیاکرشن سےمسلما نآبیں ہیں دست و 
گر ییاں ہو گے۔ جا ٹر یردیا گیا شا یسور حی دالیم رسمالت یک دضرے سے حادب و 
متصادم ہیں ۔ بات بات پرٹرک وف کن ےل مارے گن او بر بر فضا اس قد رگد 

ہوئ یکرووذ ات اق جس کے نام بس کان پردو ہا لک یکا میا ھا جا تھا موضسو رم بکٹ : 
مناظر و ہوگئی انسویں! بہت سوں نے قرآن بڑھا مگ رت یه حظدت رس مص فیطل کے 
لئے عالی مد اکسا ےلات ومرانب اور التقابات نو اہے ظرت وم ولا نا کے لج مقر 
ہوئے اورد وشن کے لے سب پا کان کے لے بر تع لی ککانی بھی ۔ 

تام انال ۓگرامکاچناؤروزازل ہواتھا-(وَاْ آعَد للَۂيِلَْان ایی )یی 
مو کن افطاء ہوتا ہے۔ نی تر بیت ای سے بہرویاب ہوتا ہے ۔ می شع عی لیب ہوا ہے۔ 
می واجب یلیم ہوتا ہے۔ نی واجب ال طاعت ہو ہے۔ نی مومتو کی جانوں ھی زیادہ 
ان ک یتر جب ہوتا ہے۔ نی کے یہ کے خلا فی مین وسومکووئی ایا ریس ہوتا۔ اتی نی 
ک مرکو بلا چون دجام ہے خداوی خدا ےج سک نشانددی می نے فرمائی .ہی مض الیم 
ےہ ٹک زکوئی نورق حر ے تنسو ررسالت ونبوت اور نہ لئ تقصورآخرت بل رہرفقیر: 
ا ایی لک ساس کیم وی ہے۔ 

اوراب دوزماہآیا کی نکا کی مار خلا پچپرو کا تی راک ؛ف رت ککی عداا تکانی ءکفار 
رن ک کا خودکاشنپوداکبلا نے پظھ رکرنے والا رون شر نا می فرگی سے( جو برطانوئی ا ٹس 
سالوٹنش نکا نجار نج تھا)1868ء ی ملاقا تکرت ہے اور چندروز بح دعداا کی نوک ری کچھوڑ 
کرمناظم جن چا جا سے او بر نر دواپنی ہوان نف سکوا لہا قر ارد ۓکرمجدد ہمحر ث ہم ہدگ؛ 
موتود کچ موتور نی نی اورپ صلی نی کے نگھڑر رت دو ےن رو عحکرداے۔ 

ایمان والوا حر صلی علیالسلا مت پیراہوتے بی ہصوڑے میں ارشاد 


وس ت0 


آرانا لیے 

نيْ عَب الله اتنی الکتاب و جعلئی نبیا (سرمرمغ) 

میس ال کابندہہوں۔ اللہ نے بج ےکتاب عطا فرمائی ہے۔ یھ نمی بنایا ہوا 

اورش لچ و نے کےتچھوئے مدگ یکو بر بارل پبھ یں 27 لت ار کے 
مناظم ہے ۔بچدد ہے با محر ث ہم ہدکی ہے یائ سی ۔ با خر خدااورخداکابینا بج خداکی جورو(یم 
الک بناہ جا میں ان ہغوات سے ) ہونے کس ےکشفوں سے نےکر ہے سگھ بہادد ؛ بش ری 
جا ےنفرت اورانسا و لکی عار کے می نوا پھاندتارپا۔ ۱ 
ححضرت ہنی علیہ السلاممکا کو متا دتھا نول ماس شش لک ہو ن ےکا مدکی بڑ تر 

سے اپے استنادوں کے نام با نکرتا ہے۔ ضر گی علیہالسلام ن کو ناب رای اورشیل 
ہو کاکذذاب دویدار برائن اجمہ یکو پچاس جلدوں یش کیھٹ کے وعرے پر اس زمائہ ٹل 
ناو ںکھا گیا تعفر ت گی علیہ السلام نے کی کا فی یی کی ۔ بیع انال بد ےھر 
ےاکعتا کی نے اگ بی تمایت ںات یکنا یں ہی ںکران سے پیا الماریا ںگھر 
کک ہیں ۔ححفرت کی علی السا وو اق کی تا حاصل درتی جج شی مکی ہون ےکا وا 
مدکی خودکو گرب کا خودکاشن ود اکا را جحفرتئھلی علیہ السلا مکنواررے ر ہے اورمیل لی 
ہن ےکاوٹویداردہ ید یوں سے شاد کر نے کے بدا پت رج رش دارو کو جوان ہگ ے٠‏ 
چو ٹس ا سک نید کے برای ۔بھو نے الہامات تر اشزار ہاش سکرتار راہ اموات وعزاب 
کے ڈدرادے دبتادہاءلا ئل وت فیبات دیتار ہا ءال نے بن ےکوعا کیہ وٹ یکوطلاقی دب گرم ری 
کم اتھ کی لہ ذلت درسوائی نا مرادیی حص رش آئی حر تی علیہ السلام کےا ب کی 
ھردے زئدہ ہو چاکیں می کے پرند ہوایس أُڈبیں.. ماد زادانر ھ بیغ ول ء بی دالے 
تحذرست ہوں مل لک ہو نے کے مدگ کے مضہ ےمگالیاں صادر ہوں ء عدالتوں مض مان 


رت 
ا رف لکراۓےء لوگو ںکی موت کے یو ےکرمے اور ا نکیا زندگی ال ںی رسوائاں 
ہڑہاۓ ۔خودآ فا بپگیٹڑر وکولا ہور میس مناظرہ کی زفوت دے اور وت رہ پگ مر می کسر 
ار ہے اورایک ویک نار و ںکاطوق چینلیٹر بی نکی موت مرے حر ت گنی علی السا مت 
اسان سے' ماد “اج میں اونشی می ہو ن کا گی طاعو نکوویل شبوت یھ رائۓ ۔حظرت 
یی عل السلا مکوت ان تھالی زعدہآسافوں پر نے جاۓ اویل ہو یکا بجھونامدگوی ہیضہو 
چٹ کے اما می بنا ہوکراپے پا غان یش رتا قدملت چت کراب دجود ےدنیاگ٠پاگ‏ 
ارے۔ 
ان دالوا خدرانۓلم یز لکیاتم کیا یش نی لک ہیکت ے؟ می ہکا ے؟ پگ 
نیس چ انہک ودای ےکھی جلند باتک دعا کی لاف ڑل یک تاب رے۔ 
اوران الہ !اسلاماو ارول کا نرہ بی ۔الکا نید دن ہے ۔اوتارڈش یل و ہنرو 
جب یس ہیں یے رام کشن ؛مہادمرگقم بد وغیرہوشنو کے اوتا رٹیل ہے۔قرآن پک 
نیل پیک کےتقسور سے بالئل اک ہے۔اودم زاہہ ٹوٹ کرت ےک دوشی می پیا ورک ن کا 
اوتارگی۔ 
اگ رآ پکوسی اد بای ےانشوکرن ےا موقیہ لق اس سے بی ںآ پ لم زا کوکیا 
ات ہیں قادبانی بد یھت ہوم ۓکرسوا لمکرنے والاکس دییتلھ یکا ماگ ہے۔ جو اب 
لف انداز میں دےگا۔اگ رآ پ ا گی بات ای کر تے ہیں و دہ با غرم زاکوشیل رق راردے 
گا وراگر اس سے پ کر ن ےکا تذ ود پپائی ایا رکرتا چلا جا ۓے گا بیہا لت ککہدہ بیگ کہ 
در اکم ''رذ اوھ ہرگ او رکا مار تے ہیں اود رآپ سے ببرضورت جان 
چان ےکیکوش کر ےگا۔ 
دوستو !اھ یآ پکوانفاقی ہوا وی الیے دکاندا رکا جیأنی اشیاء باہو آ پ ا لک اشیا. 
یتم یکر میں تد نھ ےلاک راپ ما لک ریف کے پگ باند ھھےگا او راگ رآپ ال سک اشیاء 


کے نقانس جیا نکرنا ش روک دی ق ا ںکیکیشش ہوگ یکا ننس سے جان تاذ ہیں 
دوس رگا و ںکوخراب نکمرے می عا لقادیا خی تکاے۔ 

دستوا قادیاشی تکذب واقزاء ہے تیعل سمازیی سے ۔تتخریس رس الر تم ضف کاٹ 
یراک کا صد یا باداش کی ہے۔ ددقادیامیت پڑ یئ ۔ جک اور اسلا مکوقادیا میت 
جایۓ۔ 
ایمان دالوا تاد یاضیت ایک عفریت ہے جواسلام اورشیتمصطق نا چا اق 
تشق فی اٹ ا کی وت ہے۔س ورکا نات رف موجودات حضرت “نی ٹا کی :_ 
کے ہوتے ہو ت ےکا مر زمےورز نے یٹنیس ہوک ۔ شس دل بس مد بیاوزھد جے لا 
ہوا کے لے قادیا نکیاادرقادیالیکیا۔ کرش فا می ہے جس دل میس خب مون ٹپ یس 
ایمان والانئیس ۔اورٹنس دل می قاد انی ےحبت ہودہ تنب وَفقل ول“ _ 
ال یمان ور م“طف یش واف رت عطا فرمائے۔آ بین 

انا گنز ال یمان / شتم نبوتک ر۱0۵ 


ا ماد اہ ۳ہ ٭ 


4 


اإومز ہلا ہور 
ھرذاتقادیا یکوامو تی ےآ ئ ؟ 


ھرزا قادیانہ ہین کا شکارہکر 26 مئی 1908 مو بروزمشل بوفت ساڑ ھھ دل بے رات 
لا ہور یس وا لپ ہم ہوا۔ ا سکی ا یکو ما یگاٹڑی پ لادکرقادیان لے چایاگیااورقادیا نک 
ماک سے اشن والے اس مدکی نو تکوقاد ان بای ناک میں کرد یاگیا۔ ا لوان از 
کرت اوت سے مو تکک اور موت ےت فی ن تک کے پروگرا م کیل یں ہے۔ 


یآ ون بیشہ 

۰- مل 

وتیے:۔ رات 

ار اڑج دی کے 
موم یا 

ہیھا۔ گ 

ارد 26 

شرا۔ لامور 

ا می نخان 

من قادیال 


ا ہورے اد انج سارک پر نے جایاگیا ما لگاڑی 
بند تق کیل ووالْٔش کے مطابی مندرجہپالا مارے پ و امک یلیل ہیں و یک 
اذ بز مال مرن ہنددستالن م زاے قادیان ن ےکی علمائۓ اسلام سے مب ہکیا۔ 


رت 
مال سنت نام الین نل سے خابت ہے اورمبللہ ج جو نے پرال ہکا عذاب پا 
اپ کک نازل ہواکرتا ہ ےکیوکہ اس مبابلہ ٹس ھا قادیا نی نے رب ذوا چلال ےکک 
درخواس تک کہ مو لان جھو ٹکو جےکی زنر میس ماردے۔ مبابلہ می مرذا قادیاٰٰ جو ا 
اس لئے ا کذ ا بکوائل کے ہچ ریف مولانا ا تس ر کی ند می مارن ےکا پروکرام م نکیا 
تنسب سے پہلاسال بتاکم زا قاد ال یکو مرش سے ماراجاے ۔ اس سوال پرساد ئا 
نار یاں ال کےحتضورحوالتا ہودہیں_ 
بفاربولا” موا ال سکم رے جوا لن ےک یش اپٹی فی سے اس کے و جو دوج اکر اک سیاہ 
بتارو ںگا_“ 
کم ای ولا ےر رے جوا لن ےکر می اس کے پچھیپھز ے پچاڑدو گی“ 
یس بولا رب ذداپلال !ا سے میرے جس دے می اس کے پور ے کو پھوڑابنا 
دو ںگاا ورای یا دکگکرا کی جان نطوں میس گی“ 
سرددد الا ا لک کاکیات !تھے اس پرمسل کر دے اس می اس کے دما کے پر تچ 
اڑادوںگا''_ 
نما بولی' اتی یا توم !تھے موق دے مس اسےڈ ا سکراک راک مارو گی“ 
خمرضیکہ مارک بیار یوں نے بی سعادت عاص٥‏ لکرنے کے لئے اپنے طف میں خوب سے 
وب نز ولائل و یے۔ ای ککونے می مسٹرہیضہ بیٹھا تھا۔ دہ بڑے اترام ۔س ےکھڑرا ہوا اورال 
تاٹی سے زاب ہوک رکیےلگا۔ 
شنمولا!تیرے پاس بڑ ے فط ناک اورہولن اک بنا یاں ہیں یش ان کے 
مقاے یس ٹینیس یکن موا یوک ہتیٹی مارگ بتار ہیں یش سب 
سےگندہ می ہوں اور تیرٹی سمار لوق میں سب سےگندہ ہے ے۔ اذا 
اصول می ےک گند ےکوکندہمارے۔اس لئ ھرذاکو مار ن کات میرا 


دی 
ھا ے۔ ماحول پر نا سی چا ای اور نیل ہیضہ ان می مڑگیا 
پچھرسوال ٹھاکرا سک مو تکاد نکونسارکھا چاۓ ؟ 

پردن الہ سے الت انی سکرنے لگا کمرز کی موت کے لئ ا لک انتا بکیا جائے 
کھرزااسل کے امن بی تپ نڈ پکر جان دے اوروہ ا سے پٹا رکا دک کر اپنے کی ےک 
اکر کے ۔لیان مکل نے روتے ہوم ےکہا۔ اے الم رز اتاد بال کن ا بکاکہنا تک ہف لکا 
ون بڑائتوں ے۔ 

(دائع ر ےک یرت ال ہدرگ می مرڈایشی را ایم اےصم٥فحہ‏ 8 پر اپٹی والدہ کے جوالے 
سےاکھتا ےک حضرت صاحب مل کے دنکوا انی سیک تھے ۔ ) 

ای ےت ےکن وٹ جک کو تھے نے نات وا وشن 
ب ہلا اتا خداوند ارب مہ رے سا تح انصاف بی ہگ اکا سے مکل وا نے دان بی ماراجاۓ اک 
رپقی دنا کک جن ولس اس پرانتو ںکی بو چھا کر تے ر ہیں ۔کہ دیھومردوٹس و نکخوی تا 
تھا ای دن مرکیا۔چلرکیانھاشگل بای لےگیا- 

سوال أُٹھاکراے دا نکو ماراجاۓ یا را تکو- 

دن کے گأ میرے ما تک !اسے دن یش مارا جا ۓےکیوکمہ ہاپٹی نھو تاذ ہکا سار اکام 
دن می ںکیاکرتا تھا۔لوگوں سے پیی دن میس لا تھا۔ چھارکی رقوم کےنٹ یآ رڈ رون میں بصول 
کرت تھا۔ دن میں ہی اپنے مریدو ںکیپگفل س اک نیس اپ المامات سنا تا تھا۔ دن یل ہی 
مناظظرے اورمہات کرت ھا۔ دان یں کی پچ ہیی میس رشویں وصو لکرن تھا۔ اکر دن یں بی 
لوکوں سے بیعت لا تھا۔ میرے ما تک اس نے میس بڑ گناہ سے ہیں اس لئ مراقرس 
چنا یا جاۓ اورا سے دان میس بی ماراجاۓ - 

راتاگل وگ رآواز میس بولی مہرے نال !اگ فیصلہاس کےگنانہوں اورسیا ہکرف نول کے 
اسب سے یکرنا ہے اذ می رے مولا! میرے دل کے زشمو کی زان سے شی داستا نی ںکھی 


ن۔ می رےمولا !مہ یلاع رکی شراب را تکو پت تھا۔ بھانو سے ٹانگیں را تکود ہوا تھا_ را 
ىی ا(7 اک راسےاپنی خیطان دق ےداز تھا اوران ان کے لئے شطا لی وکرام عطاً 
تھا را تکاتی میں ادرحیا سوز شا عر یکرت تھا رات کے اندعی رے میں چی انی ال صا 
اف شی اضجام دا تھا ۔لوکوں سے سار د نکاڈرہ ہواچندہ را کوچ گنا تھا اور 
ےآ وا اگ تھا را تکودی چقی بی سے پا بی ہی کے امور اد خیا لکرتاتھا اود 
جب بر شیطانی کا مکرت ےکر ت ےتھک جا تن امت پردراز ہو جا تھا اچ ردا تکی تاب ا 
نال یں نو جوان لٹرکیاں سے پھ جھلنگس اور ینگ انساخیت بے یئ کی ہوائوں مم 
غمیرتی کی ننس جاتا۔ رات چیگیاں نے نےکررولی ہوئی گی ۔ میرے ما لک !میرے 
زان اورمیرے د لکی تہوں یں ایی ایی داستائیس ھی ہہوئی ہی ںک اگ رشرم دمیا یج پیا 
کمن ےک اجازت و یں ادن خودتی مر ےن یل دست بردارہو جا ۓگا- ۱ 

جوابدن نےبھی تڑ پکر ولا لکی شی کن چلا دی دوفوں مرف کے دلاکل بڑے وڑا 
تھے۔اہنرادوڈو ںکوراش یکر تے بہوۓ فیصلہ ہو اکم رز اکورا تکو مارا جا ےگا اوردان ش١‏ 
جناز :الا جا ۓگا۔ ایوں رات نے فرسٹ پوزیشن اوردن نے سیانڈر و زلیشن حا لکی۔ 

بی صا ہوگیاکمرذارا تکومردار ہوگ لن پچھرسوال ُٹھا کرات کے کے ہے 
جاےگا؟ ۱ 

ایک بولا!''اسے رات کے ایک ب ےکیونکہ الس نے دا داحدکی شاان یش بدکی رڈ 
سرائ یی ے۔“ : 

دو الا !”ا ےرات کے دو بے 2 کیا جات ۓےکیولکہ بیرویۓ ز شکن رکا کا تا 7 
ستوں یی الراوررسول الکاسب سے پڈ اشن ہے“ 

تن بول  !‏ نکی اس من بی ےنڑا جا ۓکیونک اس نے ال رسول الاو راب اللہ 
بڑ ے کیک جلے کے ہیں“ 


چار وا نی نس اس ہار بے مردوڑاجا ۓےکیوکمہ یہنا کے ا یاروں اوران کے 
اوں سے انچائ نون وختادرکتا ے۔ 
اطع دگرافزآواپ پےق خ نے مو وق راک یناز نب 
اخ یمیس یں 'أنٹھااو زع رت لکرنے لگا۔ 
”ا ےس ڈیم ١اگ‏ راسےایگ بے مرا ا ایک جہ مک مزا ےکی ۔کراسے دو بے 
لکن بوڈ“ کیاگیا نذا ےصرف دو جا مکی مزال گی ۔ اکر اےے جن بے تھا ک گیا 
رف جن جوائمکا مرک ب مھا جا ۓگا۔اگراسے ار بے گڑ گیا نذا ضرف چار 
مائمکامتب مچھا جا ۓےگا۔ اط رع دات کے بادہ بی بھی ائ کا مات ےک اما فا نکی 
دترم می صرف بارہ جرائم ہو لیکن میرے ماک !اس کے جائم ا گنت اور بے شر ہیں ۔ 
ا ۶ا تار می ہویش ہریت سے کے دجہت سخ ہوا ہے یں 
ا“ ا کہاجاتا ہے ۔کیونکم زا قاد ای ہرپلدہ ہریت اور ہر جبت سے اسسلائی دنا کا بجر مم 
ہے۔ اذا اس کے تام جرائ مکو ای ک''اصطلاع“ '' وس فہ ریا بھی بڑ کر اڈ ھھ ول 
ریا ہے۔اسے ساڑھھ ول بے ماراجاے ۔ د ںکاجواب ہد اعقی ول ودلش پنی تھا 
کی لن فو ری طورپرمر زا قادیال یکا مو تکاوقت ساڑ ھھ دس بے مقر ر+وگیا- 
سال اکم رذاقادیا یکس مم یں ماراجا ۓےگرئی یس یاصردکی مل ؟ 
گرا ن ےگ گر دلای د نے ہوئ ےکہا۔ اے مدا! اس گی کے مہم میں مردارکہ 
ینگ کی سردکی کے موم میں ھرا تق ا لکیامیت بے حیقیت ایک دودن ٹل جا ےگ اوداگر 
گی یس مراف اپنا جشن بد جا ۓےگا۔ ایگ غایامرجھ مرداراورادپہ سے ہی ہک موت ۔ منہاور 
قح سے نات کا اخرارع سس لک ن کا غخلاظت می ںٹھڑا جانا اوداوپہ سے لال اورجلالّٰ 
ا یت زیو کےپھبھ ہیں لی ےکا زیاخوں ےدام چٹ این گے۔ جناے 
کاعلوں جہاں سےگنڈر ےگا بد لوگ تاب تدلا تے ہوئے لیک بھاگ جاتھیں گے اود ستعلی نی 


زەو 
پاہنتوں کے ڈوکرے بر سانمیں گے۔ ۱ 
گرٹی کے دئل سن کے بعد سردی تن ےگر کی افادیت بر لیخ مکرتے ہے 
ےون میں مت ردار ہو کااعلا نکردیا اد ول مزا ادا اکر کے پپردکردیاگیا۔ 
م ےر گرب یکا ٹہ وگ یلین پچ رسوال أٹ اک ننس رکھاجاۓ ؟ 
مگ مای سآنے وانے سارے مینہ ماہرقانون دا نکی ط رح اپنے اپے تل میس خ 
سے توب تر ولا دتے گے لان ما ہیاس بن پیسجقت لےگیا۔ شنحیارب کےتضمورتہا متا 
اورا تمرم کے ساتھ نت کر نے لگا۔ 
اے رب ذوالپلال ! م گر ما کا آغاز جھ سے ہی ہوتا ہے۔ میرےآتے بی لوک 
گت ہی ںکیکر گنی اورکربی سے من کے اتطاما تک نے گت ہیں ۔و یذ سار ےگا 
رٹ اپ جن بہونی کن گا کےآ خرکیکشر ےکا اتا بک رلیا جا نے وی سو نے پیہ 
والا کام ہوگا اورمرز ےکی مو ت کا جش نکھی ج ین پر ہوگا۔ می رکفو بی اور اگ معالی 
کی مرزے کےشسم سے پدیذ شف اور ڑا ند کے ایی ےطوفانُٹھا میں اگ کہ الا مان دالوف 
ال کےعلادہمیراایک کی بھی ما ےکم سم اورم سےم رز قادیالی.م ےگا 
سے یت کرابم سے گی اورم سے ینا ر17 سم س ےکی اورم سے مرل.. ماہ سیب 
راتا ادرمارے مین چپ ساد ھ اس کے دلا نار ہے تھ فیصلہمیرٹ پہہوگیااد رگ 
قرار ایا۔ بی نے انال سرحعت کے مات ھآنگ بڑ ھت ہو گرم جوئی سی سے مھا 
اورفرذسرت ےبشگیرہ گیا ک رانیم تا رہوردی ے۔ 
تچ رسوال ٹا یک تار جن کون یرگ جاے؟ 
تار ک ای بارکی ہو ےکا موتع د اگیا۔سارئی تاریوں نے ىی'سعادت حا 
ککرنے کے لے ولا د برائین کے ددیابہاد ےلکن جب 28 تار نے اپنے انمول وا 
د ہے شردم کے سمادگی چنا ال لک ذباخت اور فطاشت پیش نٹ لک را یں اور ماحول* 


و 
حم تکی ہواؤوں ےےجمونے لگا۔280 نا راڈ کےحضوداجماکرتے ہو ےکٹاگی۔ 
”رب اسم ات والارش !اس بیکاذ بکاپودانا مم رزاخلاماھقادیای نیرگ ے 
گرا کے پپے نام کرد کوگنا چان ذ دہ پور ےگچٹیس نے ہیں اس لئے مرا 
ق رت اورفریتقڑے۔ 
4ر8 تار نے م زا قا دای کور ےنام ککہترو نگ یکنواتے ہو ےکہا۔ 


زا م داد 4 

فازم< لدع 4 

لات ا ہی 4 
تادیالٰ ۔اندی۔ا۔انع۔ یت ای 
ی۔ لنادب۔گی< 0 
زی تا برن گے 4 
لت 206 


38 مت یک انی مزال اوراچوتی دیل پرسب نے ا سے مپارک پاددی اورئیس مارک 
پاادو ںکی صدائوں یں 26 تا رن کوگولڈمیڑل دےدپاگیا_ 

مو کی از مقر دکر نے کے ہلپ سوال ناکم رذ ا تما دبا ی کوک شبریس ماراجااۓے 
دای دع رکیپ مین دانے سار ےش رچھولیاں پھیلا چھ یلاک ال سے یع رادطل بکر نے گے ہ۸ 
اک نے دب الع کم رز قادال کے بارے یش انم وفص ےآ گانکیا۔ 

شلا ورای با پر بڑےوقار ےاأٹھااورگویاہوا_ 

فداونداپشرتیرے دع ل یلاک وش نود پننے کے لئے تپ دہ ہے ا ںکانپ 
اپے پیییشھل زان بذ بات لئ ہوے ہے لین اےمظا کل !ا کا مر ہے ذم ایک ترضی ہے 
ج مج کنا ہ ےن ۔س پچ کنل ا دجالی نے تیورے ول یکا بر مہعی شا ءکولڑوئی رض 


ڑەی 

ال یکول ہورکی بادشائی سریش مماظظرےکا من یاھا۔ جواب می حضرت پیرصاحب ےکا 
تھا اے مرزا ا دیالی ق با دشا تی حرش آ۔ ایک ینار رتو چڑھ جااوددصرے پرٹ بڑھ جات 
ہوں ادردونوں چھل تک لگا تے ہیں جو ہوگا بی جا ۓگا جیجموٹاہوگادوم رجا گا اک ادن ٹس 
بدا خی اک شکارقا وآسگیااوراپنےنھیوں پر رش کگرد پا تھا بشن دقت پرعیارمرزا ایال 
میران سےفرارہوگیااورش داخت پھیتار ہگیااوراس وقت ےآ غخ تک انام کےشھھلوں ٹں 
لسر پا ہوں۔ مہ راوج دا گار وین کا ہے ۔کر بات اے مر ےجو ان ےکردےتاکہ یس ا پت 
چھلج ہوۓ کا جےکوٹھٹراکرسکوں .ہمولا ایس بیکھی دکود باہو لک داز موت ای کے جناز ے 
کے ساتھ جو سوک لاہ ور کے جیالوں ن ےکر نا ہے دوکوئی اورش نی ںکرسکزا ابچ رس ای ددر انا 
نیا ہوں سے ریگھی دکد اہو ںکہ 1953 مک یتم نجو تکین یک یس لا ہو دکی بہاد مانکیں اپ 
زس برا رکیل جوان ے تیرے نول کی عز تہ دن ول پر شا رکرد بی گی۔ لا ہور نے انا مقدمہ 
خوباڑااورفا برا 

مضہ نے زم اب لحکراتے ہو لا ہوزکو مارک باددیی او راگھو نکی زبان ۔ے 
گغشگوکر تے ہو ۓےکہا. انشا ان جلد تی لا ہوری عطاقات ہوگی۔ 

بی من لے گیا مر اتا یانی لا ہویش مر ےگا لکن ری سوال أُٹھ الا ہور مل 
مس مقام پرھرےگا۔سوالی مت می ”نمی ما سرت اک رکا ہھگیا اد رین لگا۔اے ا لک! 
لک میدرافوں یل مرتے ہیں مجھراوں شی مرتے ہیں ۔کوہسارول یل عرتے ہیں سنددول 
یھ رت ہیں۔ فضاوں بی ھرتے ہیں۔ شاہراہوں پہرتے ہیں۔گیوں یس مرتے ہین 
مکانوں میس مرتے ہیں ۔کمروں مس مرتے ہیں برآعدروں شس مرتے ہیں بادر گی خانول 
میس رت کن .اون میں رت کین زی کل اون ین رت نو حا نکی جا یا 
کوئی نی مج ۔ک :می بھی الیک یت ہےء می ابی ایک وقو ما ہے می رابھی ایک 
غراف ہے۔ ایک موت مر اندریگی ہوجائے .گرا جج اگندو اما نبھی جم لی مرا 


کت مینست 

قام تک بھی لکوئ نویس مر ےگا اوراس کےس تق یھی نہ یا لے ۔. ےکر دو نے لگا۔ 
رب الھز تگوااس پت ںآ آگیااؤزڈیھلیٹی نمانہ کےی یں ہ کیا نخان رن فور ایا رک 
یش اورایک زوردار یہ لگا یا اود پوداماحول زعفران ڈارء نگیا- 

رسوال؛ٹھاکمرذزا اذیا کون شی سکیاجاۓ ؟ 

سوال سخ بی سمارے شر پہ یکر نے ہوئے سپا یو نکی رج الرٹ ہو لئے نان 
پان نے اعازت ططل بکر کے سب سے پل اپنا خطاب ش رو کیا .۔ ا د ان رد انتا 
فکان بواا ہو اہر پان 

اے ماد انم !یں نے مر یک ےتغم لیا۔ مہرب فطا ئل اور ال میں پلابڑھا۔ 
اپن نام کے ساجحدمی رانا مکھا۔ ےی اکس نے اپ زبدت کا مرکگز مایا اس کے بر پک ردو نکد 
میرے نام سےمنسو بکیا جانے لگا فی فلت قاد ان ۔ ا تن ےی ے دج9دکوگای نادیا۔ 
می ریععزت ناک می مطادگی۔ دای مج ذیل ورسواکردیا۔ می نس یکومد ھا نے کے قایس تر 
7 إا۔ دیرشم کے رات اوٹھ ھکر نے گے۔ مر ے دا کاخ پراورم ری دا آ‌انگاروں کر 
ہونےگییں۔ : 

اب اسے نکر نے کاپ دکرام امیر الا ہج کہ را دع رکیپ پچ ولا بیز برا 
اٹپ می رمے ایاپ ردکیا جاے تا یق مل اکرا کی لیا نو سکوں ۔ نے شماوں مس ات 
جا یں پر ےکوڑوں میں ا سکیٹ کن سکوں۔پچھو فو ںکواس کے نیف د مان پک 
ارتا دکینکوں اورسا نو ںکوا یک یآ واروز ہا نٹوپ لاح رسوں۔ موا یھی رےاد مال یل 
جدمیرے ول ٹس ای ک لی مردت سے نک ر ہے ہیں ۔ فداوظد میورئی انی ں قبو لکر کے۔ 
تقادیان کے دلائل انی متقیقت ےکیٹ رادان کین می فیصلہسنادیاگیا- 

پھرسوال اُٹھا مکہ مرا تقادبالی مر ےگا تذ لا ہور ٹس بڈن نجادیان یس ہوگا۔ ان کے 
جناز اوس سوارکی پر کوک قادیان لے جایاجاۓ؟ 


4100 
راہ لولا! اے می رے وا نے ےکمردے مس دولتیا ں بچھا ھا ڈک ران ںکام تل ڑدو ںگا_ 
کا رای !ا می نے نوا تےکر دے شس زارتے می کی ویانے مل جا کرچھٹر+وچاؤں ۱ 
او یدگ مڑجا گے 
بس بو !یاجار! ا سے ہشن سوارکردے ‏ را سے می خراب ہہو چاو ل کان ریم ڑاہد 
پچ د لکرد گن ہو جا ۓگا۔ باقی قد یالی دجکا اک پھو لکر چو گن ہوجانمیں مے۔ 
آخر یس ما گا ٹڑی بوکی ا ےتھار اک یس انسان سک تے ہیں کا ری بھی انسان سر 
کرت ہیں اورٹس می ںبھی انان سفرکر تے ہیں نین بج میں بھی ربکر یاں :گید ھ ؟کھوڑے + 
پچھترےء دن مگامیں بھ می مرخیا ںٹوگفیں٠‏ کے اور یلا کر ایک مقام سے دوسرے مقام مہ 
پر بیاۓ جاتے ہیں۔ ا عادل نم اہانسان کے روپ مس اور سے بدتر بی لوق ہے۔ 
را ال کا رف بجھ ٹیس سوار ہو کات بنما ہے۔ لبغرامی سآ پکی عد الات ٹیں بڑکی ھا جز کی اور 
انکماریی ےے درخواس ت گر لی ہو ں راع کیا جانے الاڈ کے دال پڑے 
وزلی تے۔اپراما لگا ڑ یکو ا سکا مال دےد یئ ھیا۔اں کے ات ئی پہوکراکمل ہوا او سی لک 
وت ست خرام ند یک رخ ار انل دنہارکیگر دش پادئی ررجی۔سودرنع مظر کی 
کو ےلوغ ہوکرمخر بک لید یش ڈو ارہ کسی ہوئیں او ئی شی لگ رگکیں .1ر 
6 یئ یآمگیا مت لاد نآ گیا ٹر ہبیضہ ما ہوک را ہ ور کیا. زا قاد انی 20 می بروزمنگل 
اپنے ایگ مرید کےکھرداتحع پرانڈرتھ روڈ لا ہوروارد+وتا ے مر یڑوں کے جوم میس خیطانی 
نگ کا ددرت دہ ہے۔ دنن اپٹی مسافت تےکر کے اپنے اجچالوں یت رخحست ہو چکا ے۔ 
0 7 0,""" 
کا وت گیا ہے تر ون گیا ہے پا رق رم مرا رعلوہ مفرمی نیت اور رای بپا ھا 
سے ہیں اور خوش وی ں حر رر ہے ہیں۔ پیٹ کا ترلیئ مرزا تقادیائی دوٹوں پاتھوں اورجٗں 


7 و ا کور مو و یں یں 
دانوں سےکھانےککا صفایا اع ہیں رت یھ ریہ لیا مر پہ بغار ہے میں پلاد 
: 


ے دست ا کر شب خون ہے۔ پیٹ کا ەلکا مر ٹا ےمان خی تکا ٭فقاخال 
2ى با وآ دا شا لاڈول 
5 را انال ے ہیدشمہ انا ہے۔ ہیا الما ء٤‏ والیٹری نکی 
رف دوڑتا ہے ۔کزروری ادرنظاہ تسم پر فہک بی ہے۔ جب فارٔ ہوک رتا ہف را تک 
ور نظرآد ا ہوتا ۔ہے۔ ار پل رلٹادیا جانا ہے ۔ رای مت رت کین یی 
مغ چا ال کے ماج خایشی لیبن ہناد جائی ہے ۂرہیضماپی یتھکر دی ہیں۔ 
تیم نک یگولیو ںکی رب وارد ہد دن مگگتے ہیں وستو ںفحط 02080 ٠‏ 
ای ہو نے ےم زا قاد بای چا اتی برک ریا پیوس عیب کٹی ہیں۔ ما تھے پ ھنڑے 
سجن ہیں۔ تن چیلرے ہیں] یس پچھرارقی ہیں اورنگک ری کی خبو کا ٹوٹ“ 
کرتاے ایال ھا اگ ڈاکد کہ ےت ہیں 'ڈاکٹ کہ نی بی کم میا 
سے لگا ر ہے ہیں یکن ذا مہ ھرزا ا دالیم مسٹرببی مزا قادیا یکو چپاروں شانے ج گر کر 
نے سارہو کا ہے ۔۔دبھار پگ یگکٹری کی سوئیا ںآ ہتآ رآ ہرد ینک ری ہیں ۔ میے ساڈ ۓ 
دس بے ہیں ند سائئیس پاقی ہیں ۔ مو تگھ کی دبوار و کی ہے اورفرشتد ایل نے فولا دک 
اتھوں سے نیف سم سے رو لال لی ہے او رم زا قادیالی کا نا پر یضہکی اکن با اٹک ے 
ین وہ وگیا ہے فائوں می تاد بنیز بانوں می یی بلندہوتی ہیں :الہ شون شور : 
جات ہیں گر بروزاریکاپازارکرم ہوگیا ہے ۔کفر بے سہاراہوگیا ہے ۔ انم الاڈ با دا 
مفارت د ےگا ے۔ کہ وکٹو رکچ تا بھائی مرکیاہے رگ یکا می اتا لکرگیاہے۔ بی پیک 
اریارا نل ڈگیااہے۔مسیل کا بکا سا مضہ مو ڑکیا ہے ۔ججسو ٹ کا ابا مرکا ہے خباخ تکا یا 
فت ہوگیا ہے۔ دیل وفری ب کا خالوئل بسا ہے ۔ک بالی داش یکا یھو پھا خاش :دگیا ہے اور 
لیو ںکا ہی اسٹچنم میں ٹف رہوگ یاہے۔ 


5 


+۶ 


: 4102 
ھر بی کےگھ یم رذا قادیاٰی کی اش پک ہے۔ بد بونے اپنے جوجردکھانے رو کر 
ہے ییا۔ ا ہور یں مر زا قاد ای کی مو تکیافوی+ہ سرت بادصیا کی طر کیل جانیٰ ہاور 
اشقان رسول اب لا ہو راس فرگی غیكو”کڑ اہی تو ہیں“ کے ایوس ایوس“ کڑ ای کولوں “کی 

گید ی ےکی نف تار رد کرد تتے ہیں۔ 
گھرو ںکاسمازاکوڑاکرک کڈ ابیوں میں ڈا لک رپچ کی منڑ مروں پررکودیاجاتاے۔ 
:ران رھ روڑ ےمرزا قد بای کا جناز ونگ لکرر یڑ ےا میشن روانہ ہوتا ے وی جاڑے٢‏ 
بلوںم رید ےکم رے تا ےمرز ےکا لا ڑا ی یں ماش جال ےا 
کڑازیوں کےکو لے فضائیش ھکر تے وت ۓےآتے ہیں اورمرزا اد ای کا منہ جوم جو“ چم جاے 
ہیں۔ ایی تارینی' ”ابی پارکی 'ہوٹی ہ ےکم زا قد ہاگ خلاظت می ڈوب ڈوب چاتا ے۔ 
طفاطت کے لے آے ہوئے سپاہیو کی وددیا ںبھی خلاطت ےمج رجالی ہیں۔ بڑئی مت 
اورعرمت کے بعدمی تکور یر ےاُشیشن پر لا اگھیا۔ می تکوقادیان نے جانے کے لئے مال 
ای می س کپ ککرائی جان گی لن جب اصول برست اکھٹر یلد ےافسرکو پت چلاکمزے 
گیاموت ہیضرے ہوگی ہے اس نے ر یلد ےانون کے مطا ای ےکک رصاف الکارکرد یا کہ 
می ایک دای مل ہے۔اس لے خطرہکے یٹ ینمی تکو یئ کیا جاسکتا۔ ایال ا 
اگ ایل انگری: اض کے پاس پچ اورردر وک نے گے۔ جنا بآ پ کا انکر نی نی ر بے 
اٹیشن پر بےیارہ مردگار ڑا ہے۔مسلمان ٹہ خرا نکد ہے ہیں اوہ مآپ کے بزائۓ ہوئئے 
ذا تک خاک پاٹ ر ہے ہیں۔ اع ریادے ظا مکی طرف ےش لعم کےتحت می تک 
ال گاڑکی بی ب ککیا جانا سے اود مرزا عقاد ای کروںء پھتروںء دنوں ہگائیوں ؛یٹسوں ء 
دیو ں مکھوڑوں بعرخیوں پنوس اورشن مرو کی رفات می تقادیان ردانہہوجاحاے ۔قادیان 
بیس چنفویں ا سکانا ناد جناز وڈ ھت ہیں اور رقادیا نکی خلا تکوقادبان می سکاڑ دیاجااے۔ 

نشی فاں سے زییش ابی خگہیں سے کہ جہاں! 
ا ١‏ واتے تا زور "اکٹ رظ 

( ماجنا کٹرالایمان ‏ شر وت بر2009ء) 


4103 ( 


ولا نار ضاخمان بر یلوئی رح الگ علی اوت شت خر 


جزاء الله عدوہ با بائه ختم نبوۃ: 
(شن خدا کل فبوت سے الیار پر قدائی جتزاء) 
امام ات رضا محرث ہہ یلوگی رتمیۃ ال علیہ یہ نےآتضرت ایخ نبوت برد را لعل 
ہتارینی حوالہجات سے شاب تکمرنے کے لے 14 اتی“ نتحل تاب 1317ء 
ذابی 1899ء می تنیف پر ائی جس می سال جنا بث دای مد وٹ کیاکی پل 
۔ے 49:. جب 4317 جوا تفمارفر مایا اکہ۔-- 
”رت لی وفال :وص کوانبیاءورسول خابت بے ام نے 
لل ےکیااہکام ہیں اے سیکہنار دا پاٗئی ۷“ 
گر چی زا قادیال یکا کاب کے جواب یارڈٹش پتنا بش رگم ان اصل مقصد 
ضر ری کرو داز روہ ھا اسودین سی 
رسولمتوو ل نلم کسی نی جددکی بش تکو یتین قطعا مال د بای جانا فرح قراردیاے اورأتخ 
وت کم رکوکاف رق ارد پت ہیں ۔آ یا ت ق رآ نکریم کے عااو ,تقر یبانمیں (30) نھمی کر 
ا جیما راس کے تارف میں خودفر ماتے ہیں۔ 
”ال ورسول نے مطلقافٹی وت تاز وف مکی ۔ش ربیعت جد بی وخیرہککری 
قیریں نہ(گائی اورصراحا ماقم مآ جایا۔ توانر اعاد یٹ یش ا لکا 
ا نآیاہے جا ہکرام سے ا بتک تام ات جوم نے ای معن ظاہرد 
ترادرویوم وا تفر ا یق نام براجما ںکیا۔تقام اخمیاء کے فا میں اورای 


ج- سے کے ڑ۶ 4104 
ینا برسلفذاء خلغا مت خراہب نے یکر م ہكم کے بعد جرمدکی نہد تکو 
کافرکہا۔' 

قیفر راو افقد( ا رضا) نے اپیکتاب (جز ءال عددباا یش +2) 

یس میں اس مطلب ابھانی مھا وشن ءاسماخیددسناجم وجوائع سے ایک۳ 

ہیں حدشیں ینکر ببارشادات آ تناما ئۓ لم وحد یت صبارکعقائدہ 

انصول فقہ وحد بیث سے 30 نویس ؤک رک ۔ الگ _ 

:( اي ضوى جلر6>ؤ و9و) 

مند امام اتد و می نے رسو لک یم الف کی بر حد یت پاک/ ںجھ ینف کر نے 

رت کا شک وش دوزک روا ےر 'لوکات بعد ذبی لکن عمربن الخطاب ''ا, 
( مو )کے بح درکوکی ۳ بی ہوتا و کھمرزان خطاب بہھتا۔ 

آ ریشم ولانا جن ایی یں رم کی زورداركأق یلا ءوجودرے۔ 
عحنرکی وت سے وت از کنز‌ نے 
ناو جات در ہیں .سال کاجواب دتے ہو نف رماتے ہیں۔ 

”ماف کسر کہ ہکیونک یرکف یکقید یں ریگ 

( جز ءال دو دہشت نبوت جفحہ 7و مطجو ما ہو 
2 السوء والعقاب علی المسیح الکذاب: 

(ھو ہے بذاب طاب) 

امام اد رضا محرت بر یلو رح علیہ نے مز الام اج قادالی کے رد یل ب ان 
رازہ شقل برضفات 23 متفق مولوبی عبد افج اکن ام رتس رکے جواب جیل 1 الاشض 
0 تر ]4902ء می لم بندادر شال ف مایا شی مرزا قاد انی ہے دوک وت کے تقر با 
ایک۔ا ل عد سا کا سوال تھاکبردامرذائی ہونے کے دس زوجیت ک کیا ا ام ہیں۔ 


رٹ 
رای 


بجر سد 


( 105 ٭ 
ول صفات بیس اعت کے میں علاء کےفنووں کے خلاعہ جات درن یئ گے ہیں جن یل 
لاق مر زا قادیاٹ یکوکافرقر ارد یاگیا ہے_ بزمنکو نہ کے ز وحیت ہن کی۷ نے اگ دخ 2 
ےا ام صادر کے گے ہیں۔ 
اما جررشا ال پر یل ی رر ال علیصفہ 6پم زالو دچال لان واثقال ٤‏ 
اب در ۓےگ۷رھرزا اد یانی ک کنب (ازالداد ہام ؛ تی ال رامء داٹعخ انبلاءہ بر ان ا یہ با 
ت۳ ۸ غیرد ہے تاد پالی کے پشزنشپورنشپورکفر امن رمیفرماتے ہیں.۔ ساتح دی ( را * 
یڈ انے مین ایک ا انی جا وی یکا جواب دے ہو کےفر مات ٹوکرا۔ 

ناد پافی اس اوہ لک یآ می سکمہ یہاں بی ورسول کے می وی مرو ہیں ٹن 
روارہ پا رد نہ ءاورفرستادمگر پیل ہیں او ص یل بس تا وی یا کی 
اتی .ادگ ہند یی سےک یکول اپآ پکوالکا 0 7 
7 ھ6 


می ہرگ مرائیس بل قب دای شی بی را اریں نہو تقصوداو رکفر وا ا١‏ 


1 ×حد یث مہا رگہو دنگ رفاگی ے کو ےکر شنن کے 90 الفاظ بب 
تقد بانزوں تلق اجکام می فرماتے ہیں۔ 
”ان اقوال کور وکا قانکل بے پاک ہکاخ بعر ءکذابء نا پاک ہے۔ اگ 
انال مزا کیتھرمیوں می اسیط رح ہیں نو وا لہ دہع اقینا کافر اود چ اس کے ان 
اقرال باان کے امشال نع ہوکراےکافرنہ کی دوگ یکافر ہے 
(اسو:ولعتقا پل یپ اذا مہ 20٣ا‏ زامام ات رضا رت ال عل ینوی لا ور ) 
دوسربی نہر فک گوئی بر داد اسلاام رکئے وا لے ران کو اط بکمر تے ہو ئے 


رواٹ میں 


4+0 


“اسم رزا قادیای کاٹ ٹیش چون دچ اکر تد فاخر وا کیک 
کے پیرد کہ چےخودائن اقوا کس ال بای کےح تھی ش ہد ں فک 


وا کرزآ 


کھل ار ادد یھت لت چرم رذ اکوامام دپیٹوا ول ق اکن ہیں .فا قینا سب 
عر یں ہب خی نارہیں۔“ 
(السوءوااحقا بل یک اذا یف زا ماز امام :جم رض رز اف علی“خور لا 
فاذبانیوں کے احکام: 
میلک دی اسلام سے غار نہیں نوران(قادیانیوں )کے اجکاس دح مت بن کےا 
یں۔ 
4 بس با وص فک یکوئی وا ہا ا عطا مک رکر ےد مکافرو لکی سب سے بن مر 
مم ے۔ 
بٔ- جوا ل(مزافلام ا ھقاد بای ) کےکفروعراب ٹس فی کک ے لقن تو اف ہے۔ 
(السوردالعقا بڈ کاب مفہ 214 ءاز امام اترر ضا رم ال علیمط و لا 
آن ریس سا کاجواب د نے ہونے فرماتے ہیں۔ 
”شوہ رکےکفرکرتے میکورت فو رأ ہا ےئل جات ے۔ آنیا رۓےاسلام 
لا اپنے ال قول و اہب سے فرب سے بابعداساام وذ بفورت ے اخیر 
نابح جد ید ئن ال سے تر ج کے رثا ۓگ ہے ۔ چواولا 6ھ یناو الا 
وہ برا نکام سب ما راودا مکتب میں دائر وس ان ہیں 
(اسوءالعقا بک جن انکذابمفحہ 24ءازامام ا راضا زم ال مل مہو زا ہو 
8ے حسام الحرمین : 
تاب امام اد رضا محدت ب یلو دی ال علیہکی بڑئیمشبورومع روف تھنیف ے١‏ 
لق از بان شش ہے۔ ا لکااردوت جھم نین رضاخماں صاحب نے ”مین ادکام وید تا 


4107( 

لام کے نام ےکا ہے ۔ بیایک ای ا ٹل ےجود 8 ات بیط ے۔ 

اس ےک کان روڈ لا ہور نے شاف کیا۔ انس پرجماز مقدیی کے 7 علما ۓےگرام و 
متیان نے اپنی تد یقات در کی ان مفتیا نکرام نے با آ ‏ پکیعکیس تکااختراف 
ہت ہوۓےآپ(امام اص رضا رم ال علیہ )ک اعد برق کالقب عطاف اياتب بن 
جن نۓ پیا ہونے وا لن ےفنئوں وڈقوں کے عمقامد پا طالکفر بی اوران کے تق شرگی اہکام ‏ 
کی ل ے۔ان بی بھی س رڈ رست بجی خائص فی مرزا لام اضرقاداٰے۔ 

4324ھ بطالق 1904ء ی سکاب مفظرعام پآ گی اص رضامحرث بر موک رق“ ال 
لیس فتن کے تھلق یف ماتے ہیں : 

”ان می سے یک لن (م زائیہ )ہے اوداھم نے ا نکانا مخ مھا ۔غلام 

اقاد بای کی طرف۔۔۔ دوایک ۔۔۔دجالی سے جواس ڑ مانہ یس پھداہوا ہوک 

اع اج ہدن ےک وٹ کیا اوردائ را ےک اہو دجا لکذا بکاشل 

ہے۔ ابی کاب (برائن فلامی )اھ یراتا گل تاب تا: یگ شیطالن 

جییادتی سے سے۔ شون کوئیوں میں ا کا وٹ نہا حم تک رت ۔ے اہ رتا 

ہے۔ لوڈنی شنقاور تک مرھصیاں چڑہتاگیا۔ ال نے چا مانب تق ال 

کان میم بنالیس ہمسلران اس پرداشی نہرہو نے اورصٹی کے فضائکل انہوں نے 

ھن شرو مع نول ائی کے لے اٹھا نی عاِ السلام می عیب اورشرابیال جانا 

شور غکییں۔ اس کےکفریات مویہ اود بہت میں ال تا لی مسلمائو ںکوای کے 

اورمامدچالوں کشر اودے۔“ 

(صام اف مین فی 20 ازاما مات رضا رض الگ عاہہ !موک نویلا ٭د- ) 
عقاممرمرز اق طور پر نے کے بعد کی کے خ میں فر مات میں ۔ 
”'خلاصکلام بی ہ ےکی( طا کبزا قادیالی )٢سب‏ کےس بکافر مرن ہیں۔ہا 


جماناصتاسام سے نار ا ہیں۔“ 
(صاملھ مین پمف 20 ازامام اعد رضا رق لعل لوف پلا بر 
4 الجراز الدیانی علی المرتد القادیانی: 

(قادیاٰ مۃ یف ایٗگرر) ٤‏ 

2 تقادیانیات امام اتد رضا محدث ب یلد کا یناب ستطا بآتقرىی تسا یف 
ہے کہ 3 محر الأرام 14340 لی شا می رخاں قادرتی اکن کی بحیت کے سوال 
شاب می کانپورسے شال ہوئی - 4984م م رکز اچ در ضالا ہورنے ات دہ با ران لیا۔ 

رس الما مرذاخائ قادیالی کے مسطدوفات کا کے رد ککھا کیا ہے۔ سال 
ایآ ت تق رآنی ادرایک حد یٹ ہارک بن یکر سے( جس سے اد یا کی علیہ السلا مکی فا ت 
پا ندلا ِکرت تھے )یددیافتز :یا ھک ہآ خراس استقد لا لا جوا بکیا ہے۔ امام ام رط 
ال ب یلدیانے ٹکودوامتدلا لکاج اب دیے سے شترقادیاوں کےاس پٹ میس الا ے 
کے اخ راس داسہاب جتاۓ اور بچفرسمات وج ے وا ۷٤‏ اکہآجت ترآلی قادباوں رک 
دیس بن کت فرماتے ہیں۔ 

شک تواب ایک اعرضردری ہ ےکہ اس سوال دوجواب سے بزراردرجراہم ے۔ 
متلو مک رنالا زم ہے۔ بے دیو کی بڑگی راو فراد ہی ےکر ایا رکر سی ضروریات 
دن کا اود نٹ چا بی ہج گان جس بی ہوکش دست د پان 


٤ 


۔ 

مولا نا مولوی یم الد ین مرا دای مولا نا مولوی ظغر لن پہارئی ‏ موی اج اق 
رگا ایی مرگی :موی رما ؛ موا مود ا می شی لھا ۓے جات ؟ رہاظ 
رام چنروغیر: سے مناظ رمک کےمظف ومنصور واییں٦ٴ‏ کرای حرت امام امہ رضا رن ال عل یہی 
خدصت م۲ لآ ۓ امام اح رضا رم ال علیہ نے ا نکاششیح تکر ت ہو نے ف مایا 


سح مم ےک ےش ...رس  ً...‏ و 


۹109 
”خادیانی درو بھی چا ہی سک اصول چو ڈکرفروی مال می ںکنگوہو_ 
ایس ہرگزیموقع نددیاجاے ۔''(ملنونا ت ئل محضرت رحمد ال علیہ صف 190) 
”ان (مرزائوں )کا متصداس افتزراء سے دفا کے غاب تکراے اور جب دنا تک 
ات ہو جا گنی کےنزد یک ندول شہ گا ایک شی لکانزول ماناہڑ ےگا 
(ا نات ا۹ل ی حفرت رحر ا علی مہ 436 ازابام رض قیۃ الما یلوم پرگ یلا ہو ) 
منطرحات وطاول کوثاب کہ نے کے ل جآ پ نے اس دع الہماک کے رد مل 
یا چو ات ت رآ دواحاد یٹ پارک پش کر کے ال نع زائیوں کے اتد لال کا جو اپ دیاے۔ 
زا کے بارے میں امام احمد رضا رحمة الله عليه کے تاثرات: 
'ڈ بافل پ تشم میم ء چا تا یدا نار سول الکاش کی من ھا7 
کیا کےےکفرہ ال ک ےک ب :ال کا دقانیں :ا یں ہا نکی خیش٠‏ 
ا کا ناپاکیاں ہا لک اکا ںکمہعال مآشکار می پچ پ می کی اور چہاں شش 
و نل ددع ولا اٹہ کور ران اش مان لگا ؟'“ : 
(الجزازالد ای عی ال تر اناد انی ہف 28ء امام ام رضارقتالڈعلے) 
قادیانیوں کی چالاکی: 
”انیو ںکی اخلاغیگذ کر نے والاءیرسولو نکش یگالیان دی دالاءے 
ق ران مجیدکوط رع طرح روک نے والا ہل ما ھی ہون محال شک ر ول الک 
شل .تا دیانیو ںکی چا لا یکراپنامسیل کے نامسلم ہونے سےگر یکرت اور 
ان کے ان ص ری ملعو نیکفرو ںکی بج و ڑکرحیات و وفا تک کا لہ 
پچھیرتۓ ہیں۔“ 
(الزازالد ای بحم 28ءازاما ام رضارمۃ ال علی) 


الام اتد رضافا قادیامیت سید علیرالسلام کش بوراوصاف جلیلہ متا تک پا 
یق ان میدرٹش کور ہی ںکھنے کے بعد یا دجالل کے بار ےش فر مات ہیں۔ 
”خاہرے ستقادیائی ان بش سے کو ہوا پر ءکیوگرنٹی لیب ہوگیا۔۔ 


ازالرادہام ےگفیا ےر کیفزمات ہیں۔ 
ہہ رعال یل غیت ہواکہ یم ڈنف لی کاہیں۔“ 
قادیانی کے سفید جھوٹ: 
تقد رای مدکی خوت تھا اور تبمو کاب ہٹس کے 
محھرکی دالے فکاح اور اخیاء کے چانددانے بے قادران 


طاعوئن ار مے کے پیش ن۴ ولی :یرہ ؤژں- 
(الجزاذ الد یالی: بفحہ 4 ازامام ند ضا رم ال علی۔) 

نڈ ج48 ات ق رآ نی نا حاد یٹم پا کر اوت لعمادیی افدارانقز بل ڈن ر نا 
نشی ور بای ۔ےعہارات وط رہ درف کرقاد یانیوں کے وفا تک کے مس کاز در دا 
نزااے۔ 

آش ریس اما مات درضافاضل پر یلک رتحت الڈعلیف ماتے ہیں۔ 

والمرزاثیة لعدا کھآرا 'یس(اج رضا )اتا ہو نکمم ائیوں پرشی بڑئی 

امےہ_ (ال از لد یاٹی مخحہ 39ازامام اخ رضارمد ال ىل) 
٠۔‏ الصارم الربانی علی اسراف القادیانی: 

امام اج رض رہق ال علیہ کے صاجزادے جناب ت2 الاسلام “ولا عامد رضا مان :مت 
العاہ. نے سب سے پیل قاد بای کے رد ہی لکانپور سے موصول ہونے وا لے ایک امناء 
جواب میں پیر مان افصارم الہ ای لی اصراف النقاد بای“ قکمبندقرمایاج ماجنا تح زی“ کے 
نی شاروں میں سلسلل تم دا شال ہوتار ہداز اں کا بک صورت یل 4348م" بط 


ں شف ہے۔مرزا نام اھ 
ےے دی ۶× نے از بروست رہ 


اس خاف کیو 


چٹ کے اق ےک وو ا 
8ء زا ول 1328 رھ“ وو الو طاہ خی پش سکشہ بہارشریف نے لف اعم ان تین 


7 لا نا وم :و پاشیش ہونا ضروریات دن سے ہے۔ جوا لکامگر ہو یا 
:ال کیک وشپرلوشی راددرےکا مر وحون ہے 

لین بات رانین پ 4ذ 97) 
7 رر مان یی خوا ضو نظ کے ھکس کیپ تک 


امادوار ےےکافرے۔ 


نی قرا م امت مرجوء نے لفظ رات ٹین سے کی مھا ہے وواتا نے 


رٹل کے بعدکوئی نی دہہذگا حضور اق نے کے بعدرکوی رسول نہ 
یدام امت نے بھ اا کش املا وو 0 ہیس 
جس از ناق انی میں انی نکوا مو اورا“ تفراقی ب نہ مانے برای 
شی سکی طرف پیر ےا کیا بات نو نکیا بک جا رسائ کا بک ہجے۔ 
اےکاف کین سے بجھوما یں ا ےک قر ایس کے ہادے 
ںام یں کاا جا ہج ےک ال یت کوک اویل سے ین تب 

07 ان نما ران فی 90 ہشول سال بحوم 7 پظ وم ضا فا“ 


تضور ار 


امام اطدرضا محرث بر مدکی رع الڑعلیذرماتے ہیں۔ 


” جی ےآ چ تل جال قادیالی کک را ےک ہخاقم انان ےش وت کشر لمت 

جد ید ومراد ہاگ نوا کے بح دکوئی نی ای شرلجت مہ رام روج و الم 

ہکرت کور ناس اور وقجیث اس سے اتی وت جھانا جاتاے۔'“ 

تن رین صن 01ول سال دض تازامصرضاقءللمیلیںذافاؤزشن 

7- فخھر الدین علی مرتد بقا دیان: 
( مر ا دیائ یپ تر ى) 

امام اج رضافاشل ب یلوئی رع ال علیہکی حیات مدکی نآ پ کے برادرگرائی جنا 

ضرم ولا نا لوٹ ئھرنسن رضاخان رق العل ےکی زیرادارت قادبائو لک دہ رت 

ایک ماہواررسا لٹ گاابجراوفر مایا کا عنوان تھا قہ راد ینعی مر بقادیان' جوقاد او ل 

ای ط رع خ لھا ۔اس 1323ھ ساب 1905ء کا ایک شمار ہج کہ 1952ء شس لا ہور 

دو بادوسیدرالوب گی رشوی کے میا ہتمامٹ ہواہمارے زمپنظرہے۔ 

رسانے کے اجرا مکی وج جات جال نکر تے ہو ے لن رضا اع رت ال علےے 

فرماتے ہیں 

”سمالہا؛واری ردقادالی بقاعت الہینے ال وبت پررنگیق یک بھال 

دو ار جا ہلان تحش انل کے(مذا) مب نۓ ۔مارانوں ےھ 

شریف ان ےمتل جول ٠‏ ارحاططءمسلام وکقام سی کلت نر کم دیا۔ دن ش 

مسلرانوں میں فی یراک مر نے والوں ۓےے العذاب الادثی دوت العذاب 

آکبر گی“ (قبراللد ین نی مر بقادیان “مہ 3ہ مدع لا ہوشع خانی) 

تقادیالی”انوادوا لی نطثرت رحمۃ الأطا گرررہتےے باب 208 

می کا یکو معلاۓے ابل سم تکوگالیاں ‏ بدز بای اکا یب بای لمات شال برا تآ ۓ ا9 


ج 13و4 

آخرکارن گآ کرایک متاظھرےکاشم درےدیا۔ 

قادبانیوں کے متا ظظرہ کے اشتھار نام (اطلاع ضرورگی )کے جواب میں مناظمرے کے 
لئ حضرت مولا ا سن رضا نخان رج ال علیہکی طرف سے سال ایت اورگ' جواب اطلار 
ضروری شا ئ جکیا٘س می سن رضاخخان رحنۃ ال علیڈرماتے ہیں- 

”ہا ہا قادیانو ںکوتیادر ہنا چاے ال جخت وقت کے لئ جب داحدقماراپا 

ررلمانوں کے لئے بانزل فرمات گا او مو کب ءبپوٹی دق یکا سب سے 

ال بے کو زیل جاۓگا۔ٴ' (تبرالد نی مر بقادبان ٥ف )٥‏ 

جک دوسرےشارے میں وگوت مناظمر+شرائا وط بی مناظ رو من درع ہیں ین نکا ذکریجی 
کیاکیاے ۔ اد بائیوں کے وورسرائل پفلٹ اشتبا رات دیرہ دتتیاب نہد گن مل امام 
ات رضارمیۃ العلیہ اورغانوادوامامامدرضاکوگالیال ہ بد بای کانشانہ بنا گیا ےج کاذکر 
ول کر تے وف مات ہیںں۔ 

”پارے پھا تو اعززمسلمافو کیا شیا لکر تے ہک ہہ مگالیو ںکاجوا بگالیالں 

دمیں۔۔حاش لہ ہرکنیس پان دل کے مرلیوں اوران کے نودسا خ5 مرزا 

قاوبانیکوگالی کے جواب میس بیدکھا میں ےا نکی 1نی صرف اتا دک اکر 

کھولیس مکش ت وہنواتہارئ یگنر یگال یت آ کین نرالیکئل :قادیالبہادر 

یش سےعلا مان کوٹ بیگالیاں دہ ےککاچھنی ہے خفظر اد“ 

( قب رالد ینعی مر ہقادبان ہف جم وی لاہور) 

ہرس لے می تع دپال مرذاتقاد بای کےکفریات الہ کےجبوبانء ال کےرسواوں 
تک ودای ز ئل پہقادیالی کیم دارگالیا نل فرمائی ہیں فرماتے ہیں۔ 

کیوں مسلدائو ! قرآن ساب قادبای؟ ضرورق رآ ن چا ے اورقادیاکذاب 

بویا ۔کیوں مسلمانو! جوق رآن پا ککی کی بکرے دوملمان ے یا کاٹر؟ 


4414 


ضرورکافرے مض رورکافرے۔“ (قراللد یىی مرن بقادیان بە“ف 12) 
مصلمان مزب ق رآ نکوسلما نبھ کی سکہہ کت قطعا کافر مر ءذن لبق ء بے دبیی' 


۱ شک ہی ورسول م نکراورکفر رکف رجا ۓ۔ الله لعنة الله علی الکفریی۔ 
(ق الد ی نکی مب بقادیان ٥ف‏ 42 مطو ےل ہور) 

8۔ الدمع الدیانی علی راس الوسواس الشیطانی: 

انام اھ رضا میٹ 7 رت اللہ علیہ اور ان کے صامجمزادگان: برادرگرائی نے 
فادبانیوں کےخلاف جو ہکا ا سک یتفم جھل فآ پ ما حظدکر چے ہیں ۔ اس کے علادہ بہت 
سے ا یے ر سال ؛ پفلٹ ؛کتایں ہیں جک شال ہونے کے بت روغ یگمنا ھی می بن یلگ۰یں۔ 
مرکودہ الا رسالہآپ امام اتد رضا نخان رجمتۃ ال علیہ کے صا جزادے نے ردقاد ایت می شک 
سے مگرافھوں پک تل شال سار کے باوجود مرکودہرسالہدستیاب تہوسگا_ 


ماہنامرکٹرزالا یمان ا شخ نو تفم ب2009 


نو ف1 


( 4115 
قادیانوں کےامام 
قادیانی مرتد ھیں: 
”اعکام دنا سب سے بدتر مر ہےاورم رت وں یں سب سےخییف تر مر متا 
تادہائیٰ نجچریء پچکڑالو کیہ پڑت اتنے آ پکویسلما ن مکتت ہنماز وغیبرد افعال الام 
ظاہرجالاتے ؛بایں ہھررسول الف کی تق می نکر تے یا ضردد یات دبن ےسیا کاانکار 
رکھت ہیں۔ا نکی ال با وگوئی دادعا اسلام اورافعای واقوال می مسارانو ںکیافل اتار نے 
بھی نے ا عکوائحیث دواثراور ہرکا امک بپہودٹی :نھ رای بت برست :وی سب سے بد 
کردیاککہ اکر پک ؛ دوک را یواتف ہوکر . اونرتے۔ 
( دک ش لیت فمہ 444 ءازامام اد رضا ہمت پرادرڑلاہور) 
قادیانی کے پیچھے نماز: 
فا دای چک الئی ویر ہم ان کے پچچینم ز ہاش پل ے۔' 
(۱طکا شر بیتپفہ 144ءازاماماصدرضارحمالڑعای ۱ھ لا ہور) 


قادیانی کا ذبیحە: 
”ان سب ادیاٹی کے ذ یخس دمرداد وترام ہیں ۔ اگ چہ لاہ پارنام الی یش 
اور کے یی پ ہی زگار نے ہو ںکہ یسب مر بن ہیں۔' 
(اجکا ش رایت ب٥ف‏ 142ءازامام اجررضارمۃ العلی) 
قادیانیوں کی زکوڈ: 
”کو کاروپریقاد یا یکود بنا حرام اوراگرا نکو ڑکا در ے ڑکو ةادانہہوگی _ 
(ا زا ش ریت “٥ہ‏ ۹59 ازامام اد رضا رمع ال علیمط+وےلا ہور) 
قادیانیوں کی نماز جنازہ: 
” تقاد بای وغی رہہ مکفارمرئم بن کے جناز دک نما کی جات ہو ۓ پڑھناکذرہے* 


( 4116 
(ملخوضات لی ححضرت رحمیۃ از علی مہ 98ازامامما مرضاخان رمع ال علی مطبوے پروکگرلی یس لاہور) 
قادیانیوں کو مظلوم سمجھنے والوں کے احکام: 
”قد با یکوا حل ملانان سے (مشن قد بایوں سے پایاٹ ) ےمظلوم 
جا اوراں ےئیل جول بچھوڑن ےکوعلم ونا تی کے والا اسلام سے ار 
ہے۔ یوک اپنےشو ہربرقرام ہوگی۔ جبکک تےمرے سے سلمان ہوکر اپ 
النائکمات ے3 ہدگکرے۔“ 
( اجک ش تفہ 197ءازاماماصدرضارحیۃ الگ علی :مو ے لا ہور) 
قادیانیوں سے قرابت داری: 
”کرابت ہوک دہ( لک یکا پاپ ) مرذائو ںکویسلمان جات ہے؛ اس بناء بر یہ 
تقریب (شادی) کی نذ خودکافر ومرمہ ہے۔ علان ۓکرام حر مین شریٹین نے 
تقادیالی بت پالا تقاق ف مایا کہ جو اس کےکاف ہونے می کی فکرے دوکھی 
کافرء اس صورت میں ف لی ےکہ تھا مسلمان مت وحیات کے سب 
علاقے کی ےک کرد ی۔ ار پڑ ےق چٹ جانا مرا مہم جائے نوا کے 
جنازےئش جاناترامءاا سک قب رپ جانا ترام۔ 
( فا وئی فو جلد 6ف 81ء ازامام ام رضا بر یوک رتمۃ الڈعلی۔ ) 
مجدد وقت کے لئے: 
”بہت سے لیگ مرذاغلام ا قادیا یکومیدد مات ہیں۔امام اھ رضا محرٹ 
کی رم ال علیہفرماتے ہیں حیددکاکم ازم مسلمان ہونا ضروریی ے اور 
قد بای کافر دم تھا۔ ای ارتا م لات ج ین ش رین نے بالا نا یت ریف مایا 
جال کےکافر ہو نے میں ش ککرے ووگھ یکا فر ہے 
(ف وی رضو یپ جل د6ط ج) 


( 4117 
قادیانیوں کی نماز و خطبه: 
ناد انیو ںکی ماز سے نا نکاخطبہ:خط۔کرودمسلماان جییس ۔اہاسدت اپ 
آ زا نکپکرائل ریش اپناخلبہ پڑھیس ءا پٹی بن ع تک یں می اذ اع وخطبرد 
جراعت شر مت رہوں کے اوراں سے پیل جو ”اد الٰ یکر گے پاصل مردود 
ھی 
(نادئی روپ جلد3 “فہ 779:ازاماماجررضارمۃ الڈعلی ومن لآباد) 
مرزائی کا نکاح: 
مز ائی مر ہیں ۔کھاھو ٹین فی تسام ال مین او رم مر بد باعورت ال کا 
ڈیا کسی ملمان پا کافراصلی یا مت خر انسان با جیدان جہا نج رم کسی ے 
یں ہوا ٛیس سے وکا نز نائے ہوگا۔ 


(اوگی رضو یجلد 8 ہ فی 143ءازاماماتدرضارمیۃ ال علیہ وھ لا ہور ) 


مرتد قادیائیز ےر 
ین کے بس یکوبوت یجول +وقردوم اق کافرو 
7 ے۔گر ری ول ا ا کے لے انے 'اں الله تعلی ٤ى‏ 
الو الع مرن وقال ذنبی الله صلی الله تعلیٰ 
عليه والھ وسلم/َ عم لیس یَْرِقّ “من قاد یا ایا 
مرن ہے ج سکیمبدت علا ۓےکرا تین ش رشن نے با نات ریفر بای ہ ےک 
”من شک فی کغرتا فقل کفد ''ا سے معاذ الج مدگودیامہدی یا مچددیاایگ 
وی دد کا ملمان چاننا درکنار جواس کے اقوالممعونہ شع کہا ک ےکاخ ر 
ہونے م ادلی شن ککرے دوخودکافرمرقر ہے وا لگ تھی الم 
(اوگی رضورجلد 8 سخ 148ءازاہام اص رضارمد العلی ) 


قادیانی مناظر: 

شی امت ابو ات مولان مج حشم تی ان (رھ۔ النعلیہ ) مناظراسلامراوی 
کہ ایک روز بدغمازحصرایک ا دای مناظ راخب بنت ومباح امام اح درضا محرت پر بای رھ 
العلیہ کے پا آیا۔اام اتد رضاررمۃ ال علینے مجیث دعال قادیالی کےکفرقطت تتیہ بل 
فرماۓتز قاد ای مناظ را جواب ہوگیااورآ خرکارماجزہوتے ہو ےکن لگا۔ 


”وہ جمارے حفرت مرزا صاحب( مرا غلام ام قادیالٰ) نے اپ کاب 

”لبیٹ سکھھا ےک خدانے میرا نام غلام ات قادیا لی رکہکر جیا کہ تر 

مال بعد تی انبور ہوگا ءکیونکہ غلام اج اد ای کے عددگھی تی وسو ہیں اورنس 

وت ہمارےحضرت(م رز اتقاد انی )نے دٹوک نو تکیا تاس وقتکگھی 1300 

<کاز انھا۔ 

امام اہاسضت امام اتحددرضا محرث پر یوک رہم ال علیہ نے اس دجا لک ا لگ یناد جددگا 
ساب کےورآیر ۓ اڈاد یئ ۔اماماعدرضارحمۃ لعل جا علومفتون نے فرمایا۔ 

القالفر+ے۔ 


تل اکم عاٰ می ندب الَطاك ول عل کل اقاے الم 
4 2 الو وو هد زین 5 
شی و سےا ا رٹ 
والےگنزگار پر شیطان اپ کیا ہوک انچ ڈالے ہیں اوران میں اک جھوے 
ون 
ا یآ یت مبارکہ کے عددمبار کبیا پور تروس ہیں گویاربعزدشل نے 
ا ںآ بی تک بی یی اس با تک رف انار ہک دیاکہ 0ء میس این 
و تکا کوٹ یکر ےگا شس کے شبدر نام کے عددجھی ترہسوہوں گیا 


( 4119 
انی بڑے بتان دا ل ےگگاروں میں سے ہوگا۔ دہ ہرگ ہم رجمالی نہ ہوگا۔ بگمہ 
خیطای دی نازل ہو اکر ےکی اوردہاکش جھو نے ہیں۔ 
( تاب اب سنت بجفہ 204 ءازقاری یح رطیب صاحب دانا لاد ) 
قاد انی ماظن کام ہوکروائں چلگیا۔ یہی یہ بات قائل ذکر ہج ےک۔ امام اتد رضاخان 
یی رم ال خ ینلم الا عداد پر ری دستزی ع اص تی۔ 


انا کنزالہ پان بت نہو تن بر 2009 


ار جار جا جا یا 


4120۶ 
ڈاکصفدیمود ڑکا ؤار) 


2 22 وت اورکیزمیاا وا نیا 


بای اکستان اورکقید و 27 ب.- 


تا تال ےکس لان خر پاک دومترصروں سےعیدمیلاد ال یا ایت 
حتقیرت اور جذ بے سے ما تےآر ہے ہیں۔انکریزو ںکی خلا کی کے دور می عیدمیاا دا وأ 
اق یبات پڑےشروں سے ل ےکرتھہوں اوردیباتتک ضعقدکی جات تیں کن مل ورورو 
علام اوینیس ٹن کی جا ی یس اوراسوۃ حتراوراسطائی ققلیمات تق ریری ںکی جات تھی عید 
میلا امیا و ٹم بدت کاچ دا نک ساتھ ہے اورسلرانوں ن شر وت ےنش کے 
تقاتے پیش فہایت لو اورمقیرت سے مجھاۓ ہیں اودال جوانے سےگگ کسی سا کو 
کامیاب کیل ہونے دیا۔ ند جان ےک وشن یمان اورزش ن کلوامت نے جکمرانو ںکومشورد دبا ھا 
ککہدہ اتال اصلا حا کی آڑ یس اس جوانے سے ڈ کل ریشن مس تب کی جسار تک می ۔ 
اتاج کا سلسلیشرد ہوا بے ےک پڑ ےکک ےجعفرات نے پو چک ہقا ران کا یفن میں 
کیا مونف تھا؟انہوں نے خائص طود پرم رف اللہ ان کے وذ مرخارجہیناۓ جانےکاکھیصننی خی 
انداز مل کرگیا- . 

س ضوع پر فآ نے سے پا اتتالکعما ضرور یبگتا ہو ں کت انم رم ٭ اللہ 
علی کے ب ریلم سے بے ناو خقیرت کے واقات تار م جا ہا پل ہو ہیں مین 
ان کے سوا گاروں نے اس پہلوکو یی ا اگ رکر نے شش یی ںکی۔ ہمارے یکول اورلبرل 
رشن خیال طتے ابیے ذراسی توارو ںکورجحعت پمندکی اور یمرٗبی اج پند قَ این میں جب کم 
نبوت وش رس لکل ہار ایمان اودتقیر ےک بج ول یک یا گز رح ہیں اوح 


4121(7 

ین : پک گی ہش ای بن لوک رداداری ٠‏ انمان ددقی راس تگوئیانصاف اورعدل 
وی رکا مت مین او رکال نوہ ے ضے سیامسلمان اپنی منز ل متا ے۔ 

قاتشم ہیں بی ںکی ریس 4896 یش انکستان سے بی نے سد وکئی بر انتا نکی 
ہم جہ تآزادفضا مم لگ ارکرآۓ تھے منہج ہت ہی انہوں نے سب سے پیل جم آق ریب 
شرک تکی ہو ھی عیدمیلا دالوف تقر جب ؛ج٘ سک فو ا بن الک نے صدار تگا۔ 
دوڑھائ یکنٹو لکی اق جب درودوسلام کے علادہاسوة حستہپرتقارمراو نع خوانی ہش ھی _ 
للففکی بات یی ےک یہ 14اگکست ۹898 ء تقر لگن یکون سوج سنا تھاکہ 14 جمارک تار کا 
ام ترین سن ک کیل ین جات ۓگا۔ 1896ء یس ہندوستا نآ مد سے نےکم اپنی زندگی کےآ خر 
مال 948 ۹ ہیں تام رن و ات ےعیدمیلا دا فک تقر یبات می شک تکرتے رے٠‏ 
ےاتراڑہ ہوتا سےک۔ان کےقلب می تق رسو لپ یککرن رش نچھی۔ اکر چہ بظاہردہ 
رز یتخصی نیس تے ءالہن بج ےکوئی ججر ننس ہوی جب رشن خیالی کےیلم بردارنفرات ام 
موا تع پر مولوی دی جنا ںکیچچھقی کت ہیں ءکیوکہ عفرا کلت سے قاص ہی ںک ہمت رسول 
ٹا صرف مولو یو کا خاصانییس پلیسلمائی ا الین تقاضا سے اور ہمان کےقلب وروحں 
جب ول کیٹ سے رشن ہوتے ہیں۔ 

قائزدائشمم یرٗبی روادارگی انساٹیبرابرییہمعاشرنی عدل او رق می اتاد کے قائل تھے ء اس 
لیے و ہیی سکگی تف انی اورفرقہ بندکی سے صرف پ ہی زکرتے ر سے بن سو یکس طور 
پر حوصاین ھکر تے ر ہے۔ پٹیشا روا تع پسلمانوں کےاتھا دی مساک او نی فرقہ بندگی 
کی متا فی اکر ےک یکششی ںک یکن مان قامداپئشعم نے ای لکامیاب نہہونے دیااور 
بھیشای سازشو ں کان ڑاس) ض نس کیا۔ ات یں کے جوانے سےا ن کا موتف وا تھا :نس 
گی رشن لف ان کے ایک ان یسلت ہے جوانہوں نے سربیگمر سے 40 جون 4944 و 
جار کیا( جوالے کے لی وت 


4 ۸ ۵۸۰-اندد0ہ ٢‏ 5ا 51361060 310 060168م8 


.۹٢٥۵ا‏ ا۱۹58 8323113 ٢۶ںہ۷‏ ۸۸۵۰۵۹ 60 لات 

ہوالیوا ںکہ چب اکیرعلی ایم ال اے(ررکن نے لے ٹو ایی بانے تاد انف ما انردیا 
ٹس سے مان پداکیا نیشم ا یو ںکوسلم لی کی رکنیت دلانے کے لے روز مس تر 
کر نے کا سع رن ہیں ا جرد پیچنڈ ےک کرتے ہو قائد ام نے اپ اس ہا 
یش دا حکیاکسسلم نیک کی رکنیت کے لیے سلمان ہوناضرورکی ہے اوران سے سو بکرہٗ 
دو تن سے پالا ترکسی اق رامک سوج رے یہ لکل فلداور بے ناد ے۔ ا ین 
اشن دا اردان کے انم ود ےھ اس اب مس اوہہ 
وا کر ے ہیں ۔ مطلب کہا کیمسلم میک کے رک ننپیں بن سے یوک دہ اسلام 
دائۂے سے نارع ہیںء چنا را کو رج اج ےک ہہ رظف اللہ مان 
ا کا قابلی تک بنا پر اور تو کور پا تا ڈہاٹ ٹس اساس خشرکت دی کے لے و 
7ء می دز خارجہ ہناد یا گیا تھا ءجن سط رخ ہنرو کن ای جوکندرناتحرمنڑ لکووزی یقافو 
مقمررکیا گیا تھا مققد اناوت ںکو اصائہ جن تحفطاء اخماداورسا کی بربرکی کا پیام دینا تھاء جو 
معاششرے کے رشن اصول ہیں ۔ خووس رف ارڈ نان ؟ بھی ال تق تکوخو ب کھت تہ چنا خ 
انوں نے بار ہق ر 1948 و انرام کے جنازے می تو شرک تکی نان نراز نز و کے و 
ایک طط رف ہ ٹک کھڑاہوگیا۔ 

2 کےآخرکی مال می بھی جسمان یکن درکی اور بای کے پاو جو دقا امم نے عید 
میلا ایپ تقر جب مس شرک تک اور ید لک با تح کی ۔عیرمیلا دای ا 
تق یب کا اجتا مکر تی بارایعدیا اشن ن ےکیاتھا نس مم لگودز جزل پاکستا نکو مرکو گیا۔ 
قائدائض مکی تقر تقوب پاتان کےقام اخباات ی 27 او 28 یرکشان ول یسا 
مھیرمے سا سے اس وقت 28 جن ری 4948م ک روز نام اتا بکیافوٹھکا یج اب شش 


سس سستستستستتےتےکتتس_ لہ __ہ__ لیے 


٭( 123 ک 

تقرمربھی موجود ے اورقا ند األمم بارالیوسی یش ناوخطابکرتےبھی دکھائۓ گے ہیں۔ ال 
تقریب میں قائد الم نے اپی زندگی کے ایک اہم پہلو سے خلاف “مو پردہ ُٹھایا۔ ذرا 
پہ سے پیک ڑوم کش کا وین سوا _ارکیاکتا ہے: 

”یس نے بارایٹ لا کر چا تھے بہت کی ان (008ا کا یگئی :لین یس 

نے لک ا نکواں لیے ت پیا د کہا کے ددواڑے پچ دٹیا کے بپڑے بپڑے 

قانون سسازوں (89 و ۷۷ہ ا) می کر اسلا سك کا اسم مار کبھی شائل 

ا ہے 

اس سے اپنے نی لم سے ا نکی مگہری خقیدر تکا اندازہ ہوا ہے۔ ا تق ریہ بی 
قائدئشم ن ےکہاء ایک طبقہ ان بد چکرشرار تکرد ہا ہے او ہد ہا ےکمہ پاکستا نا یتور 
شرلعت اسلامیہ کے اضصولوں پیش ہہوگاش ریت کے اصول شی ہیں ءا ن کا اطلاق انسالی 
زگیب بھی ای ط رع ہوا ےجس طر تی وسوسسا لکل ہوا تھا. قاون ش رلعت سے نر 
الو کڈ ئن دای کیک مرن جن انلم الام سواہ 
انصماف اورسب کے ات ین سلو کککھا ا ے ؛اسلا م تصرف رقم ور دابات اورروعال تل مات 
کا ئمومزناس پیل ضابہظحیات ہے ۔ ہم سب پ اتال یں دیما شہئی یں تیر اورد جن 
زار اش وروں نے ےگیار اگکست 7ھ وا یق مرکو اپٹی مرش یکا رن پہنادیاے اورصرف اکا 
تقر کا ڑعول پپے ہیں ہ عالانکمہ ا ںکق اور 14 اگکست وا یق ریس بہتىی بای مشزک 
ہیں لین ہبی ا تقر یکا وکنا کرت ےکیوکشرلعت کے کر سے ا نکیآروڈں پ پا 
رت ہے اورخوابو ںکا فرب ٹون ہے۔ میں نے جوکھھا وو شال شر ومواد پچٹی ہے۔ جس سے 
انا سکیا جا کا (لشکر بی روزنا مہ چک لا ہود :545 بر۱2017ء) 


ویو رو وت 


زمعد 
ملک پاکستان اوخ وت 
مجر جال مصطف بچردیتور 
قد تم خبوت اورعلا ما تی رد الع 

اللہ بک نے بندو لک رایت کے لے نبوت ورسال کا جو نظام اٹ مکیا تھا و 
ابا فکو پوراکرنے کے بعدتحضوراکرم لم ٹم گیا تام ان یا رامعم السلام اپ عہد 
وت ورسمالت کے تھا تھے پور ےکر تر ہے :تضور اکر برا یم الشان سلہ کی 
ہوئی اورپ کے بعدنبوت ورسال تکا ہرم ارک سلس لیم ہواء اب اگ رکوکی خہوت ورسالت 
وٹ کے قد ہکا فرقر ار ات گا کیہ اب د نیا کی دیس سسٹ دی ہیں ءال انظا مفطرت 
تحت اور انسای معاشر ےکی ضرودتوں کے ین مطاا وت ورسالت کے قا مکمالات ا 
تا نے س ٹکرس رکا دو عا لف مکی ذات بی تعکر دیئے سے ہیں ء دنا کو ایک وصرت تر 
پونے کے لےش رع تی یکوآ خر اورتیشکل در ےکروتی کے ملس کو بن کر دیا گیا ے؛ا 
اسلام کےاس مفقۃنظ یکا قشم خبوت' کہا جا تا ہے:علامہاقبال رجمنۃ ال علیہ پسل بج 
مفکر) ہیں جنہوں نے نو تکواجنتا کی اسائس قراردیاے :ہو تم ہوئی اود جتتا شر ہو 
ہے علامہاقبال رم ال عل کی بیدا تار مہب عا لم ایک تۓ با بکااضافہ ے١‏ 
اپ اگرزئی خطبات کے باب ”سک راف تک رو“ کےہفہ 128 رککتت ہیں۔ 

6 ۱۸ ۷۱۶۷۷۰۰ اہ ۱مزەم ٴط! 2٥۱ ٥٥۰ ۲٥۱۹٢٥۲ ٦٢٥۱٢٢‏ وہەما" 

۶۲۱۲۵٢ اذا ؟ہ‎ ٣ہ‎ 56۵٥٥۶ ٥ہ‎ 582۸۵ ط٥٥۷‎ ۰۸ ۳١ ء۰٤‎ 


200 ٢١ ۱۱١١١٢٢٢ ۷۰۲۱۹٣۰ ٣٣ ٠ہ‎ 13٢ 3۹3 ط١‎ ٥٥٥٥6٥ ٭اا أہ‎ 
ےر 3۱ا۲۷‎ ۱٥٥۴۲٥۵ ١ دوہما٭ط‎ ٥١ ٠٢٢ 1 
۳۷٥۱۲۱٥: ۱ا‎ 5٥٥٥٥ 89 ؛)8٤١ ام5‎ ۲٣٢ ١٥ اا١‎ ۲٥۷٥ا‎ 3٤٢ 5ا‎ 
ہ٥‎ ۵٥۲٥٥0 5١ اط٥ادہہود ہا‎ ٥۲۰١ ۱٥۱۹٠٢٢ ۷۰۲۱۹۰ ۱١ 5٘ “ا‎ 
٥11۰۱۷۵۲۰ ہاڈڑھ٢‎ <×ہں٥حدد کاا ٥ا ٥اماحاادں ٥وا٥٢۰۱۷۸٥) آہ‎ 
0٥0۷ 1۲٥٥ا دادا آہ ط۲زط ع۲. ۔ہہ‎ , 38 ۱۳١ح١‎ ٠٠ داحاد <٭طا‎ 


4125 


×۰‪٭ىمحب[٤‏ کک آجرطئائکرگکک َ-  َ‏ --سروک‫ٛکدکدودطتدموصنةٌٗٗ‫”‫دٌٌ-ےءع.بفھ؛+-سمحجووصصس-حد-ص-صسجچ‪-تآتصستصححسیس_-ست--“ 
آہ ٦۲ط‏ ۵ ۸5 0۸ا تاذ نا53 ٠٥ ۷١۷۲‏ ۲۷۶م ٠‏ ۵۱۷٥۶٥۲م‏ 
5اا 10٤61| ٥٥٤. ٣٣ ا5ا37١ م۲۱۵٣ ٥۰۷ ۲٥۵۱٥٢۹‏ 1100۷۰۸۷۹۰ 
۔.ہہاناەطاج ہ۱۷۸۷ ئ: ٤ہ ٥٥ 11۹0۷۲۳-9 ط٥ ٥٥٥0‏ ہمنا:٥)۲ەم‏ 
٢٣‏ ۵۸۸1ء ۰آزا :٥ط‏ ہہاام ۷٥٥م ٥ ٣٥٥‏ ٣0۷۵۱۷۵ا‏ ٭اط۲_ 
۷(۹ 3(6 ١٠ا ۱۰۱۲٥٥۲‏ ۱۳۵۱۸ دو!1 اد ہ١۵٥٥‏ نام٤‏ ٥ط ١۷٥۲‏ 
۴ط ۱٣٢١۷۷۸‏ ٭طا 682[۱(۷ ۲۸۶ ۲۱۵۳ 5610٥٥٥009۸6095‏ ا0۱ 
۵9 ١١٠۸ادہاہ:‏ اہ ہمانا:5ج ۲٥٥٥٢٠٢۹۰ 1۸١‏ ۷۵ہ ئا ٥٥‏ 
٥۱5۱801۱ 393۱ ٥‏ ۱۵ ,م2۲ا5ا ٥‏ ماط95ہ× ٥۲٥۵۸۸۰۵۲۷‏ 
5ا ام۸٥٥1 ۲٥۵۵۲۸ 800 ٥×06116066 ٠٥ ٣٣١ ٥0۲۵۸۰ 3041 ٦٣٦١‏ 
١٥ 13۸۷۲۰ 301 ۳۱۱۹٥۳۷ 38 50۷۲٥۴٥۵ 7٥5‏ دۂ۷ھا ٢‏ 1591 
13: 581-6 ١ط‏ أہ ە٥اه٭م35 1٤٤٥٠٥٤٥٤‏ ا3۱ 3٥٥‏ ٥٥و٥/۷۷٥٥‏ 
103۱8١۷۷۰‏ ٥ہ‏ 
تر جمہ: ا ساط سے دیکھا جا ۓ ویو ں نظ رآ ۓگا یبن اسلا مل کی حیثیت ۱د نیاۓ مم 
اارزمانہ جدید کے درمیان ایک واس ےکی ےہ اپے ‏ رشمہ وتی کے اختبار ےآ پکاشلقی 
دٹیائۓ ق یم سے ہلئن ای وی کے انقبار ےآ پکاٹکن ز مان جد ید سے ہے ہآ کے وجود 
سےا ت انمانی وک ومت کے وو چٹ ےمکشف ہوۓ جوا کےآ تد ہر کین مطا لن 
تءاسلا مکانلپورجی اک یآ گے لکر مار خواوطور پاب تکرد با جا ۓےگاءاسنقر الع لکاظہور 
ہےہ اسلام میں خبوت اپنے شتم کے اککشاف سے اپنے مرا کو ےہ انل سے م گر 
یرت وصل ہوئی ہےکرحیات انسا یکو بمیشہ ےکا طرح ڈدریی کے ذر بی چلنا یھ ےکی 
5 7 ۷م 7 2 02171.711920 
کیفیت می یس رکھا جاسک تاب ل شعور کےتصول کے لے انسا کو ال خر اپنے انسانی دسا عم 
پرانھارکرنا ہوگاء مکی وجہ ےک اسلام نے برای بشوائیت اورموروٹی مللوکی تکونخمکردیا ے؛ 
قرآن میس ہار ہارتفل او رتجر بے پرزودد گیا ہے: ھا فطرت اور عال تار انسال یکذ رام 
قرارد گیا ےکیونہ ام ذرائ علخ وت کلف پہلو ہیں 


رتعا 
علامہاقبال ری ال علیہ کےاس اتتمادسے تا اخذ ہوتے ہیں:“ 
٭ راسلا سم نیا ق دی اور ماضہجد بد کے در مان واسطہ ہیں ءآ پگ 
انلم چٹ کے اعقبار سے ز با نفد می سے جا سک رو کال د ولا 
ےرت 
٭ مور اسم وراصل استقر ا نل کےنبورکانام ہے۔ 
ج7 آپٹنلم کےنبور عم وحمت کے اہ نے جاری ہو جو تئۓ دور 
تقاضسوں کےئیین مطالقی ہیں- 
٭ ‏ جو تاپ ےش کےاکشاف سے اپ ےعرد جک کی ے۔ 
ج‫ حیات انسانی جوف تکوت کرآ تندہنبو تکی ئا ج یس رب ء وہ اہ سال" 
ے نودھا ام لکربی ے۔ 
خخرضوتاعلان تم ری ٹوامیت اور موروئی ملوکیتے۔ 
٭ -۱-ےن-سمخخمخی جٹوایت او رخ ملوکیت لی اوتجربالی علوم بر زور فطرت اور تار 
ذرائ لم پر تار :خی خم وت کے ابتزاۓ ترکیجی ہیں ء ان ذرائح 
ایا نکا تقاضاکرتاے۔ 
٭٭ .٠-۱-نمشتم‏ زی چٹوایت اوخ موروٹی ملوکی تکا ار نقیجضتم نو ت کا نار ے۔ 
٭ سستعئف ادرتجربانی لم پہزد رکا انفاراورفطرت اورتار کے ذرائ لم یرتا 
اکا رەتم ند تکااکارے۔ 
بعراز و جو شر پر ٣م‏ رک 
ہزم را رشن زور شخ عرناں کردہ ائی 
علامماقبال رم ال علیہ ڈرکودہالافاریشع می س کے ہیں نیا رسول ڈنپ آپ کے ب 
وت ہ نہوم مس نشرک ہے ہآپ نے عرفال نا کیٹ سے بن مکنا کور نف رمادیا سےا 


یکی ضرورت نیس رہ ءاقال کے ار یکلام شی جا اقم وت پردہ اشعار لے 
یں پڑ کرقاری زیص فشعریی ذو قکیا کین عا٦‏ لکرتا ہے پک بٹیشا رک ریاکقیا ںبھی 
ےآ ےپ لکرہم مزیداشعار ےار نکی فیا تٹکر یی سجن پل اتال کے 
یکلام سے ار لکن ریبدت ے وائنگی اورقا بای تک ظز دیداو لا کن بل 
ئک خدبات کا جا مز: پت کرت ہیں۔ 

اور یما لکوشاع کے روپ یں د یھت ہیں اراتا لکوزیاد دی ےا 
نے عالائک اتال نیقی نر پارےاتے جاندارادرشاندار ہی ںکق مک ینگ رک می تکےاام 
تھے پپرےکر کت ہیں :علامراقبال نے اہ ملف مضاین ؛مظالا ت بُتطہوں او رخوم ٹیل 
ےئد او رمث پا ٹس ردقادیا می تکافربیضاداکیا ے؛ا پے پجھاقتیا مات د یھت ہیں 
ٹش چا پگاکرا ا لن یٹ وت کے کے بڑے پر ارک( )تے۔ 

ا پڑت جھا ہلال بر کےاک خط کے جواب می ںککھت ہیں : 

1ن1935ء ور 

مرےکترم پڑت جاہلال! 

آپ نے خنا باج ھکل طا ہشکر یہ جب می ن ےآ پ کے مقالا تک جواباآھا 
تب یھ اس بات کا فان تھاکہ ات یو ںکی سای رو شکاآ پکو وپ انداز کی ہے درائمل 
نس شال نے ما ورپ ےآ پ کے مقالا تکاجوا بککعن پآ ماددکیادہ یت کہم دکھال 
لی ں7 پکزکمسلافو ںکابدف دا کر اہو اور کیو کرای نے اپ 
نع یت شی ل ایک الہائی بیاد ال جب میرامقالہ شال ہو کان بک 7 رت سےمعلوم ہو الیم 
افنمسلما نو ںککی ان اسبا بکا نویس جنہوں نے مقادیا ضی تکوایک نماض قااب مل ڈھالا: 
ا عر یہ براں جخیاب اور دوس تیگ پرآپ کے مقالات پا وک رآپ کے سلما نتقیرقندو ںکویے 
تما نکراک یا م ئک ایت سےآ پک ہعدددٹی ہاور یا ل جب سے :اگ ہآپ کے مقالات 


( 6128 
نے اتد بیوں یل :سرت اورانہسا کی ایک ا ری دوڑادی ہآ پکیفضدت اس خایڈٹی کے پیا 
کا ذمہدار گی دنک اج رک پر تھاءبہرحال تھے جونی ےک می را جا ٹر خایاغابت ہواءجےکو 
” دیضات سے پھھزیاد وٹین ہےگرا یں سے خودا نی کے وائر کر میس میٹ ےکی 
سے بجھےی''د نات ےکی رگا بجلا نا پاٹ سآ پ وشن دلا تا ہو نکی نے یہ 
اسلام اور بندوستتان کے ساتجع مبخربین نول اور نیک تر بین ارادوں بیس ڈو بکرککیھاء ب۱ 
باب شی لکوئی شک وشبراپنے ول رنڈ رک کہ با کی اسلام اور ہنروستان دونوں 
یی۔ 


لا ہورٹ لپ سے نی ےکا موق چویش ن ےکحویاء ا کا مخت انویں ہے میس اان ول 
پیا تھا وا ےکھرے سے باریس جا سکتا ال اور تام عطالت کے سبب 
عزلمتگمز یں ہوں اورتھائ یک زندگی رکگرر ہا ہوں ءآپ تھے روز ناف میں اکآپ پھر 
ا بتشریف لارہے ہیں؟ شھکیآذادلو ںکا اشن کے بارے مآ پکی ہوجو 
کے ماق ما خطآ پکوطا انٹیل ؟ چون ہآپ اپے خط یٹ اس خیاکی رسینئڑ سککیت :ال 
بے ان یشہہور ا ےکہ رخآ پکوطا یئل 
آپکا پش :ئراچال 
اھ انے حوص ول ریب ھا نل + بدا لیلیلٰ) -۔ 
جدیراہیات(ایان)عاء اقَال کینشوو راب ہےۂ اس اتال کے خطبا۔ 
شال یں !ایک اقاں پڑ ھت یں٠:‏ 
7 تم وت اسلا مکا ایک نبایت لازم اور نیاوی اتور ہے الام یں وت 
چیک راپنے معرا جکما لک گنی :انا ا ںکاخات ضردرکی وکیا اسلام نے خوب 
تھی تھاکدانسان سیارون پر ذندگی نی سک رسکتاء اس کےشعورکی ذا تک 
کیل موی یوں یدوخ داپنے دسا ےکام لیا مھ کی و ےک اسلام 


غ ( 129 

نے اکر تی پنٹوائ یلیر سکیا یا موروٹی بادشاہ تکو چائڑننٹش رکھاءیاباربار 
تل ادرجز بے پر زوددیاء ھا فطرت اورعا تار کنل اضانی کم رچنمفبریا 
ق اس لیران سب کےاند مج یکنض رہہ بیس ب تصورات خاححمیت ہی کے 

خخلف پہلو ہیں٠‏ ہم نتم نو تکو مان لیا گو یا کقید وی مالنال یکا ب کا 

شی سکواس دو ےاج نیس پچتاک اس ےیک مات چوکی ءافوق رہم 

سے ہے اہائئیں ا کی اطاعت لاز مآئی ےہ خاحمیت کا تقصور ایک طر عکی 

نفمای قوت ہے جس سال کے دلو کان آ ہو جات ہے“ 

(پ نچواں خط نکیل جدیداہیات اسلائی ج٣‏ 193,98) 

حخرت امام اد رضابریلوئی رم ال علیہ کےخلیقہہمولا ناپ وفوس ھ ال یا بر لی رم اڈ 
فلامہاقبال رح انعلیہ کےگی دوستوں میں سے تھے ہآ پک تاب“ انی نج بکامح 
ا ےش نبوت کے مناظرانادب کید اہی تک کاب ہے+اس یس پروفیس یرٹ کیا دہ 
نر یں شال ہیں جھآپ عیدمیلاد ای لم کے جیلسوں می سکیاکرتے تے اود ان ٹیل 
تقادباخی تکارہ تے ت٤‏ تاب پاک و جن یٹ لکن ادرو ںکی رف سے بجچپ بل ہے پرو 
ال یس برفی کے ناماپنے ایک خی علام اتال رمنۃ لعل کھت ہیں : 

”ہا ںتک چھیمعلوم ہے پروزکا مت شا مسلاخو ںاید ہے اوراصلل ا کین 
ےہ میرک راۓ میں اس مت ہک رین ینصقی قادیاضیتکا ا تک رنے کے لےکانی ہے 
(یر فیس شج ال یاس مرن کے نام توب 7 من 1937ء) 

دارلعلوم دلو بنلد کے الیم یٹ ان اتزعدلٰٰ ن ےکاگرلیس کے ما ایک سا یظرر 
کیا کرت می نظریات ےنیس وشن ےن ہیں ء علامہاقبای رج ال علیہ نے اس سیا کی اور 
گر یمراسی مین ایر نی کاب تذرب اندانش پیا تھا تق بکیاء اس من کی کر اہر 
اقمالیات فو رح قادری نے اپن یقاب اقب کا خر کی مت کی سکیا ہے اس سلسملہ یش 


اقبای کےاشعار ہت شور دنتبول ہیں: 
ا ا یں و ا 
دلو بن سجن ات ایی چہ بواٹی است 
مردد مر جر کہ مات از وین است 
مسر ری رر ررش 
یں برساں خی دا کہ خوف ہی اوست 
گر پہ لاہ ریدی۔ ام می ات 
تین ال یکیا سرن کرتے ہو علامراقبال نے ان کےنظ ری طیت وق 
”ا دیامیت کے افکا رکا قراردیاادر نظ وطنیت وق میت 3ۃ ایا تک مل 
ان دوس مھ ایک گمرا میتی ہے نل کات تع اس دقت ہوگی ج بکئی دقق ان مل 
موررغء ہندی مسلران لف ان کےٹنس رام رستمرفرتوں کے بین دافکارکی جار تا م2 
کم ےگا۔(مولا تن امن کے جواب من 9بار19385ء) 
اپنے ای خلا ایک اور کھت ہیں :”درا نظ رم ایک جدیدزوت کاخزاا] 
تال افارکوایک ایی راہ پ ڈالی دیتاےکراس سے وت موی کےکائل ول ہونے 
انیارکی دراوکتی ہے“( موا ان اص د۲ل ک جاب یش) ۱ 
پیل تھاعلام اتال رتمۃ ال علیہ کے نر ذتھرے سے پکنڈمو کلام اوراب قا رن 
مت می اقبال رحمۃ ال علیہ کے اشعارٹٹ ہیں ؛جب مزا تا دیائی نے مہدریی ہدنے کا1 
کیا تھا تعلامراقبال در ال علید نے مرذا قادیا نی کی مہددی کات یکھو لت ہو ۓےضرب؟ 
ف65 پرفرمیا: 


دنا گر ہے ای مجدکا مق کا ضرورت 
”جس گی گمہ زره ع ال اؤار 


( 131 
جب مز الام ات تن ےن مای تاد یلا ت رو کیو ںقعلامہاقبال رحمۃ ال علینے مرذا 
کیطرفاطیف اشارہکرتے ہوۓ ا سکاب میں فرمایا: 
مرن مھ بۃیے ج اویل جا کر 
چاے خود اک جازم خریجت کرے ابعباد 
خر جب مر زانے نو تکازگو یکر ڈالا تشخ ہو تک ایما نآف ریش کرت ہوتۓے 
رت لا مرا قال رحیۃ لعل یکا دوک اورخوصورت انداز ملا حظ ہکا ۔ 
یں خد ما شریت شم کر 
بہسرل ا رسالات 2 ا 
میں التھالی نے ہمارےرسول پرشرلجت مم کردگ اور مار ےرول بررساات 
ٌُ کر دک ہے ایک او رف مات ہیں: ۱ 
7 ا لا ا 
او گل ںا 2 ا اقوام را 
ت جمہ: ہار رسول رسولوں سآ خرکی ہیں اور ہ مآ خر قوم ہیں اب قیام تیج نفل 
ایا مکی رف جئیں سے ہے۔ ایک شعرں حدیٹ اک کے الفاظ لا نی بحدی“ کا بڑے 
پیارےانداز مم چیندلگایا: 
ابی بعلی ز اصان دا ات 
.تنآ وین مکی امت 
جب مرزانے اپ ےآ پ کوٹ رآ نکی آبیات قد کا مصدا رانا شر عکیا ق2 ایک پار 
لام اتقبال حم ال عل یکا محرکت م آیا: 
ضر یر ام اس 
سا آکلہ ہو قرآن بخر از خد غےد 


۔ 


ریئو 
ہارےزہانے (اگر یز کی عبد )نے ایا کشر پراکرڈالا ہے ےق رآن یں اپ علادہ 
وی سآ ہآخ میں علام اتال رم ال علی کاخ وت کے موضسو رپ ایک اورشع ملاظ 
فرمائیں: 


و عق وق می دی ول دی آٹر 
دی قرآن وی زان وی ین دی طر 

(ابنامیامفرگرگڑ) 

فا نا میں رسراللتعف م۲4۹7 8 ءافظامامتگىسیریی 


جا ما ہ0 


٤دددو‎ 


کر زمیک حفظ وت اور 
تا اہنت علامنٹا:ا مور رقۃ اڑل 


بوگئی 1968ء کے اداخ رما1969 ء کے ادا لک ذکر ہے می روز امہ نگ یں بقیت 
رپورٹ ک ےکا ممکزندہاتھا۔ ایک دان وفت رم مرک کی اعت ابمد کی جاخب سے بحدماز جم مور 
دکرارتی میش ای کیٹ یح کا دکوت نا مہ ول ہوا۔ بد دتی فو رسحجد ہے ہا ای کگرصہ 
۱ صولان فی اکا دئی رمع ال علی فطابت کے فرائ انام دتے رہے۔ لگاپ کے بعد 
معلوم ہو اک رج کےنحصلسی مق رتا لغ الام تحخرت شا عبد الیم عصد لق رم ال علیہ کے 
صاجزادرےمولانا شا وا ورای یں جوعالی عی یش بیرد یی دورے سے دائہ ںآئے ہیں۔ - 
مولانافورانی نے اپ یقرب یآ خر کین جیے می ےق رس زدرخطابت پیدا ہو ماش نے 
دن چھوزکرجرت واستجاب سےان کے اکشافات جک از مرے لے انشمافات کی تھے سنا 
شر کر دیے۔ مولانا ن ےکہاکہاس وقت عالم اسلا ما سب سے زیادجگکین او نیم خطرہ 
قادیالی ہیں۔ ج ود ہجوفیت کے ساتحو لک اسلا مکوختمان بہار ہے ہیں۔ مم جہاں 
جہا ںبھ گیا قادیاضیو ںکواپتی بجر رفس ماوں اور بے شماروسال کے نات مو جود پایا۔ شش 
نے دنیا کے لف علاقوں میں متقدو مرا نکا مق کیا اورنش مناظروں میں انیس عب ناک 
تی یی ری ین ا وتشپ ناج کہ رات 1میا 
مقار تکرےاوراسے پاکنتان مب یسل مافلی تق رارضدیاجاۓ۔ 
مولا نا ورای نے فر با اکعلومت پاکتا ن حا کےسللے می ج بیردی زرمباولدد ہق ے 
ا ںکا75 فی دقاد انیو نک جا ا ہے۔ ان قادیاشوں نے اسرائل کے دوشروں جن اورتل ایب 
اپے مراکز ہنائۓ ہیں ججیہ اسان کے ام ائل سے سفارتی تعاقا میں لان متا 


٤ددم‎ 

قاد بای جب چا ہیں امرائحل جاکھت ہیں بعدازاں مولانانے قادیانو ںک ان ہرگرموں پیل 
سے رڈ ڈالی اود جایکہقادیاٰ کس طرح اسلام کے نام پہ لوپ اف ریقہاورام ریہ میں انا 
جال بچھیلار ہے ہیں اورا نکازیادہ تر نتان خی سلسوں کے ہجاۓ بچھونے بھا لے سلرمان ہں_ 
مولانانے جوتقعیلات بیا نال د٭میرے ہی لیس بگہاجشارع می موجود یہت سے 

افراد کے لایس ۔قادباخول کے بارے می اپ علاء سے پی بھی بہت بوخ آیا جن 
مولان جویگےکپر ہے تھ ددا نکاذائی مشاہروتھا اوران کے انداز سے صا سو ہور ھک 
شماید دو ال دور بش پاکتاان اود اسلام جشکن ال تقادیاول کو یلت ہیں۔ مھ اچ اصل یک 
اشتراف ےمان ا لکاکیاکیاجا ۓکہ ہماریانسل کے بہت سےلوگو ںکو1970ء کےا تقابات 
ےی اواب دی علا کے سیاست یآ نے سے ل53 کیاتتم نو تک ر یک کے دودان اپ 
علماء کےکردار کے بارے می پھر پیر گی شا جنادکوں کا ں کک مشیر ذرائ تض 
دپاہے۔انہوں نے ان ذدا ادا پناس رما کے ذر یت پور یٹ ری کشخ نو تکاس رکز او رپ 
اورافراد یکو نا دیا جھے بر ما ال با تکا اختراف ہ ےک کا کے زمانے می خوداس بیادگ 
متقیقت ےج یآ گاویس تارف ری کن وت یس مول نا مودددگی کے علاد ہگ یی او را کرو 
سزائے موت ول یی .1987ء یش جب ایم اے بنیز کیگھیمر (701919) کےسلسلے میں بے 
رآ روزنامہ جنگ ترحیب دینے کے ےکا مکا م وت لا اد 82ء اد 53 کے ا خیرات ظرے " 
گزر ےل موم ہواک سا لت ریک کے نما اوررٹیل اس وق کیل کل کےس براوحضرت 
مول با ابواسنات رتمت ال علیہ تھے اور جب می آ گی ہہوکی تاس یش جعارے دورہنما عولا نا 
عمبداستا مان زی اورمولا نا مھت یتیل اج قادری اش یکوٹھی پھال کی جوی: ہوئی اورشن 
الخ جحفرت خوا ہق رالد بین سیا لی رع ان علیہ نت ری ککوک کھ پانے کے لیے طوفالی 
دورےۓ گئ ۔ ما رع اب اپلسدت نیل دیوارزندا لکردیے گے ۔ یدوس رک بات ےک بعدازال 
ا نکی خدمات لیکش وو خودانہوں نے پیندکیا اور نہ ہی ابلسد کیپ ندگی اور وس تل 


وٹ کے باعث ا مین می ںکوئی مناسب کا مکیاساسکا۔ با تکہاں سےکہاں جانگی 53ء 
نتم نو کین رک می را موضو ٹنیس اور اہر ےک قتررعلاء او رتحصوص]ائل اب ال 
یک کے بارے یش جھھ ہیں زیادہ جات ہیں اوراس پ تدش ڈال کھت ہیں می ور 
ایض باداشتو ںکوف رک رن ےک یکپش لکررہا ہوں کہ پاککتان می استعار یت کے 
گاشتوں کےخلا ف یت بی کاچ او نیقی یں منظرأ اگ رکیا جا کے اورقوا مکو یمعلوم ہو ےکہدہ 
ولک ہیں جنہوں نے ہی خابت دی او تخل عزاجی سے اس خطر ےکن ناندت کی 
ہاو رکیونہاس دوران عالات نے ھا دنت مولا نا شاو افو رای کت جبکردیا۔ال 
لکش بیکرو ںگاکہ دی دیا خت دارگی کے سات تحص وعییت سے الن ام موا اک رکرو 
جب ال نیہ ریقوت کےساتھار بابل وخقدکودلا یی - 

اس مو پراکرٹو یت یکانقا ںکا کر گیا جاۓ 9 بیشد یانا انصائی ہوگی۔ 14 جون 
70 ءکودارالسلا مو کیک مک کے میران مس جشیمالنشان ارام ہواء انس مم بھی بے یک 
عفای کی حیشیت ے شرک تکا موق ملا اورا سکانفنس میس شع رساات کے پروانو کا جو و 
راودا حدہگاوانسالی سر کا جوم بھی فرامش نی سکرسکتا۔ میں نے مان کی ہشیت سے 
رای ٹس بڑے بڑے تل ےکور سے ہیں جن میں چی مجیب ال نیکانشت پار ککا جلسہ جناب 
ذوالفقا ری بھٹو کےکورگی اورلی ر کے جیلے اورچھ رجمجیت علماء پاکستان کے زم امام بعد ازال 
بہت بے بڑےاورتا نی اماعات سے خطا بپھ کیا گر جو دولولکا جومظا ہرد دارالسلام 
ٹوب کے میدران می ویک می ںآیادہ پیش ن قائل فرامش اور تاجن سربایہ ہے اس اہَام ٹل 
ار جمعیت علاء پاکستان نے اتقا بات مس حص لیے کے یل ہکا اعلا نکیا اور طرریقت تن 
الام ضر ت نوا قرالد ین الو رتمۃ لعل بتعی تک سای زندگی مج آمد کے بعد پیل 
صمدراورعاا یودامد رقموئی رحر ال علیہ جتزلمیکر یٹرکی شخب ہو ئے کانرنس میں جحعی تکاجھ 
مخشور جار یکیاگیا۔ اس میں جنیاد یک بجی تھا کہ نظا صلی کا نفاذ اور متقام مض کا جحنظء 


مین نے اعلا نکیاککہمتقاممصشقی کے جحغظط سے جھارا مق گھوٹی خبوق ں کا نات 
ین میں ا ںیم لان اج میں مطال کی اگ یاکہقادیاخو ںکوغی سکم اقلیبت قراردیا جاۓے 
کید جہدوں سے ہثاا جاے۔ بی بات یرہ ےک ایک سال جماعت کے ابتالشو 
دستو ری حیشیت سے اس مت ہکا شا لکرناءا کا اعلا نکیا جانا اودا ںکاپڑرے زور وشور 
مطالکرنا+یربیرے لیے پہلا تر تھا کیوکی نے اتقابات ےق تقر با ہرسامی جھا 
کے پل سے ہیں ان کے رہجماؤ کی پر کان فیس نگ اخبار کے ےگورک ہی می سا 
اعت کے “نشور اور یدک مطالہہ یل ا کوشا لیڈ پایا۔ پچ رعالات نے بے ہحعیت: 
پاکتل نکی جاخب ےو بائی ا یکا امیدواینادیا۔اتقالی جلسوں می بھی تا ہاو ںکوغم 
تراددیا جانا اوران لکلیاری عہدروں ے ہٹان ادا مطالبر با اورشاید ہ یکوئی جلہ ہوٹس 
ہارے ان نے ہزم مد ہیا ہرس کیا میدران ی۲ لآ نے کے بدا نکیا سب ے یا 
مقصدمقامم “علق کےتف کی جد ججداورقادیالی مرگرمیوں پر ترفن اکائی جا ےکی نہیں 
ص٣۳‏ لیت قراردیا جا ےگا “ولا شاو اج فورائی رت ال علیراد پرو فیس شاوفیلی رح 
علیہ کے ساتھ بش ےج 30 جن رکی 1971 ءک دن جیب الکن سے ڈھ اک ہیں مطاتقا تکا موق 
ہے ال طاقات ش جوسا کی اوددستورکی مواملات زم بن آۓ انیس سی اور وقت کےت دک 
کے یی چوک ری صرف ا سگفنگ کا حوالددے دہاہوں جو مالعا مرزائیوں کے پارے' 
وئی۔ال مو پر مول نا شاو ورای نے جن جیب الاکن سےفربا کہ ہماربی جانب ے ای 
ام مطالبہ یرش :و کہقاداتو ںکوغی سکم اقلیت قراردیا جاۓ اور سکلیدی عہروں ے ہٹا 
جائے اس پآ پک ایال نل ہے ہب الکن نے جواب دی کی دیو ںکافتیآپ 
علاقہ کا پر وردہ ہے جمارے یہاں ڈھاکہ مس انہوں نے ایک نشین تا مکی تھ بے مسلرانو 
کے دبا اورہنظاہرے کے باعحعث دہخودتی تح کرے ریو ہو گے ہم نے اس فت وی بھی 
نی ُٹھانے دیا۔آپ دیکھت ان ائی اج ڈھ اک مار مارای ہے میہاں برا ںکاکوئ کا 


+ 


کی مق نیس میں ال اشک راداکرتاہو ںکمشرقی پاکستان یس بیقاد بای جانورنٹل مات بعد 
یش جیب سے لاقات کے بعد جب ہم ہو شا با پچ مو لا لی گی جی مم آھہر 
اور جم لیک ڈ اک کھو ےنگل ےرات کے و تو ہوئی تو مولانا تورالٰیٰ ے 
ےم رڈ یل در یھی ہم نے میسو چا اکردو مطا لع مل روف ہیں اس لے اپنے اپنے 
یں مج سو گے جب نا ش ےکی میزیرمولا نا سے طاقات ہوئی نَا نکی یھی صوجی ہوئی 
یے ددرا رز و کے ہوں۔ ناش کے دوران وو شکگراور ا مو ہی ر ہے جب چم نے 

سےا نکی ما وی اورلک رکی وج بھی نذانہوں ن ےکہاکہ جھے الما سو ہود با کراب 
ری پاکتان نیس پ سکنا۔ اد یاٹی صرف اس لے اب ہش رتی پاکستان تڑن ےکی سان لکر 
ادہے ہی ںکہمشرتی پاکستان میں ان کے قمنیس جم کے ہیں اورصرف مغخری پاکستان گر 
پاکستان رہ جاۓ و وہ یت ہی ںکہقاذیانی انیٹ کے قیام کے سلسلے میں ان کےعزائم زیادہ 
مان سے پورے ہو نے ہیں اورسب سے ڑگ بات یہ ےکرکحلومت پودکیط رح ا نک یآلکار 
لن گی ہے۔مولا ای دم یتک ا موضسوںپرکنفشگوکرتے رہے۔ 74 
پا تکاقو لکر نے کے لے تا ریس تھ کہ پاکنتان ٹوٹ چھی سکتا ےگمرا گنو سے بیرورہوا 
سک فا سوگوار ہوگئی اور ول اضجانے خطرول سے دز ہے لگا۔ 28 فور یکو بے مولا نا شا اتد 
فوانی مل یع بدا مصطفیٰ از ہر ؛ رفس رشاوف ان اور مولا ناتسن حقالی کے سا تج کر اتی کے 
لان صدر میس کی ان سے ملاجا تکا موق ملا یو یس تقادیائیول اورمرزائو ںکا کر ڈرا 
زیاد ڈنیل ے ہوا مولاع نے اس موق پراگر می می سلکفنگوکی ۔انہوں نت ےکہاجناب صدر! 
کیا آ پکومعلوم ےک ہاو انی ملمافوں سے مع وحییت رکھتے ہیں اور ا ناشن اسر اتل 
کا کرد ے؟ ج بک پاکتان اوداس ئل کے درمیان سفارتی تعاقا ت یڑ ہیں ۔قادیالی 
جب چا ہی نیو اک راتے ام رائل لے جاتے ہیں اور پاکستان ٹس یہددئی س رما کے ذر ینگ 
لیت کےخلا فکا مک رر ہے ہیں ۔مولانافورالی ے با ل٦‏ کی اک جنا بصدراکیا آ پک 


4)8 

عم ےک دب1 دداکل پامتان کے ائدرای کآزاد یس تک رع ہے ا کی اتی عد 
یف یملف رقاں ری ہے؟ لگا خان سے پا اک ن ےآپ سے پیل کہا و 
شر پاککتان کے لوگ ان انی اد ےنفر تکرتے ہیا نآپ پچ ری اعم ایم اح کو 
ماتحومش ری پاکستان لے جا رہے یں ءال کے انی ارات مرت نیس ہوں گے_ اس“ 
اب شل ما خان ٹ ےہا کچھ مج یکپناہے۔مولانانے جب یرد ھاک مگ نا 0 
کین یکاھ فیس پار ہا دہ کر مث ہو اکدرساحب یگ بد تاتوں ۱ 
عاص کیاگیاہے اے ا لآسالی ضا لی نیج ۔ 
3 4971 ءکوق گی کسی کا اجلاس ملت بی وکیا او شر تی پاکستان مل عالا تد 

بت ہوتے لے جن ۔اسں دوران مو لان شاو اتد ورای نے می اپنے اس بے ےآ گا کیا 
پاکستا نکونگڑےککڑ ےکرنۓے کے لے جس اد یانیو ںکی سازشو ںک تفلا کا اعلا نکر 
جس خام می کر چا ےکہ ا عطر کم از دہاپنافر پوداکردیں۔ بہجلسہ 19 مار جک 
ا ہھا۔ثوا ما بی تدادنے اس ہل شک تک اوردوباراس جم پش پندو ںکی طر 
سے ہد اور جب یس ہل گا وش موجودکارکنوں نے مار ھا ان لوگوں نے ہی ا 
روزنام ارت پرتملہکیا۔ دا ت ڑب ونڑکی اود با ہرکڑیی ہوئی ای کگاڑ یکو نگ لگا می ۔ا 
جس یش مولا ورای نے جولق ےکی ا ےس نک بہت ی(نگھوں می سآ نسو تے لع لیک پھو 


آلکار بی نگئی ہےاودابہشمرقی پاکستا نکی مد کی ماش کا خ ری راو نڑشردرغ ہونے وا 
ہے۔ش رق پاکتان مل فو کاردا یک جا ےک اد بھارت مداخ تےکر ےگا۔ ا ھن 


پھنتوں 

اجاورسوران ملک کے درمیان حال جیٹس نیو یرک جم مات ہہوگی ہے۔ ام ای اد 
اشن ہفتہکرا تی میس باتحھآئی لین کے ایک بے یس یی ککیایض اہم ھخصیتوں سے ملاقجات 
ایس اس بات پا لکیا ےکسش ری پاکتان فی اسان پرایک بوچھ ہے اورا کا 
ون إس ح یج فصد ہے۔ قادیاضو ںکا ال تن یس پھارت اود اس رائل سے راب 
ولا ا ورای نے ا لفن میس جوتصیلات جیا نکی وشن اقبارات ‏ ستھوڑئی بہت 
وئی یں اورا سک ایک رکیلداسائل پف بھی شائ ک گی تھا جن سکیلنکن ہےکہ چندکا 
۱ ا ببھیاپنخس لوگوں کے پاش موجودہوں۔مولانا کے اندٹے ہا لے اوردنیانے وکیا 1ے 
ا شی پاکستان بس جوکاروائی ہوئی دہ بالاخنش رق پاککتا نکی مدکی تع ہوئی 7 
4974ءکو انہوں نے مھ ا نکوکھلا خواککھداجٹس می نشرقی پکستان می لک جانے والی 
انیٹ کا ذکرکرتے بے اد یایوں او رتحصوص] ایم ایم ا کی ون دشن مرگرمیو ںکابھی 
گیا تھا۔ جب ذوالفتقا رع یپٹو برسراقق ارآ اود پکمتا نکی قوئی ا سک یکا پہلا ا قاعدہ 
مال لا مک یوار کےزمرسامہ ۱44 پل 4972ہو با یا یذ وا بھی سو لا ناخورانی نے 
اما بقہ وت فکااعادءکیاادر پارلیمالی تار ںی کبہگی بار پا رلیمنٹ کے اندیسلما نکیتمریف 
ناش شا لک رن کامطال یٹ کیا 

انہوں نے 458 اپرل 4972ء کوق می ای سے خطا بکیا ا نک یت سیر وداوق یا اسسی 
: ات 119+118 +420ب شال ہوئی ہے مولانا نے فر مایا عیوری دستو ری سکہاگیا ےک 
انا کا صررسلران ہوگا۔ریمسلما نکون ہے؟ ا کی وضاحتنٹیں ۔ اس مک میں اسلام 
این مم کے نیشن موجود ہیں و ومسلمان بی نکر یہا ںحکلوص تک کت ہیں اود جو ردر+اڑے 
یعس تکرنے کے لیے سے ہیں سلمان ضرف دہ ہے جوا کی وحداشیت او رتضوراکرم 
گا ےآ خر بی ہونے پرلیقین رکتا ہے.۔م رذائی اورقادیالی مسلمان نیس ہیں پھر کے چور 
للازوے؟ اکراسلام کے نام پرکھران بن سیت ہیں۔ 


رفنھا 

انقاقی کے با میرئی خوش لٹ یکس ارت مو یی ہمانو ںکاکیاری می مہ 

تھا اور نے اپٹی(نگھوں سےجکمران پاٹ کے اراکی نکیا جاخب سے ہڑگا ھے اورموا 
تقر کے دوراا جدراححل تکا مظا ہرود نیکھا۔ سان ز مراعطلا عات ونش رات مولا کو از 
قرب کے بعلد یٹک فرمادیا۔ می لپ کر ہو ںک علا ملا نک یکوئی نتم ریف اوا 
سان یی کا کر کت یہا ںک کفکہجحعیت علء پاکستان کےتاماراکی بھی ایک تم ریف 
یں ہوک 
جحعیت علاء اکستان کے رک نت ئی ای اور پا یما اٹ کےڈ پیامیڈرعلا رہد 

از رک نے فوراا جج و لکیاانہوں نے اپن ین ری بھی مو ا ورای کے موق کیا 
کی اورکہاک ہم جات ہی ںک۔اجمالی طور پراوراختقدار کے ساتحومسلما نک یتریف ا سآ تین 
جاۓ تاکہ جولوگ انف لم سے فائحدہ حاص٥‏ لک رن جاتے ہیں اوردہ لف اسلا مک تم یف| 
ھی سآتے ان کے لیے اس لفظ سے استفاد کر ن کیاسد باب ہو جاۓ مسلما نکیتتریے 
سللے می علاء می سکوکی اض فیس اور بش مول کو نی زئی نٹ کہا ہم ا سکرو لکر 
اومسلما نکی قرف ہردقت بن کر نے کے لیے تیار ہیں ۔اس کے بح مقر 4972 
جبت چان ابد کرات یکا شم وت نہ شال ہوا اس می مولا نا ورای کا ایک مع کت 
انٹرد وی شال تھے جے مول نا ابودانزشرصادقی صاحب نے اپت تاب شاہ امو رای 
بھی شال کیا ہے اود یہانشرویوخو دای کہ ایک دستاوی کی حقیت رکتا ےق می اس یکی 1 
سا زیٹی نے جب اپنا کا مرو عکیا ا کے اجلاسل م بھی یت کے ام مولا: تورالا 
تی کی تمیم ملما نک یتریف اور یاس تکاس رکاری نرہب اسلا قرار ہے ےٹتلقی 
گی۔آ میفی ماکرات کے دوران موا اگواپے اس مطال کیل مک وانے کے لے وا ک آ4 
ی بھی دیناپپای۔ نراکرات کے دوران مو :ا نے سیا می مرکا مظا ہر کر تے ہوتے ا 
ہی میں ٹیش لکردرمسلما نک یتریف کےاگری :کی تر جم پراٹار لی جنزل جناب مکی بختیار 


دھنوا 
ا ۓکرالیا۔وائ رےکہ یت جم حعیت کےقائ تج رخماپروغسرشاوف ردان ن ےکیاتھا۔ 
اسلائی جمہوریہ پاکنتان کے ستفل دسقور پرمولانا شا اقدفورائی اورا نکی جمحیت ے 
وں نے راۓ شماری یس میک رک رج نمی لاہ ہمادے بہت سے مطالبات مان لیے گے 
ان ابھی دستورگمل طور پر اسلا نل ہے سب سے بلک کید عہدوں کے لیے 
نکی پابندی ہو لی ان اورارت اد پ پا نی ولی چا ہے جس کا مقصمدقادیاغی تکو ایک 
رہب تراردلانا ہے۔30 جو نکوقزب اختلاف اورحکومت کے 37 ارکا نکی انب ے 
اردادا کی یں می کن ےکا شر بھی قا ربدت موا نا شا اجدفورا یکو حاصل ہواچھ 
نکی میں قان رقاب اخلافکی پادیمالی پارڈ کے کیل رٹری جز ل بھی تھے ۔تو بی اکب کی 
ڑگ کیٹی ءر ہی رکیٹی اوراسی کے ککھلےجلا موا نا ورای کی فراست ایمای اورسسل چرو 
اض اولاشموت ہے ۔عرزانا را جب اسیا کی فص یکیٹی میس ٹیش ہوانذ مول نا شا ار 
مال کی قیارت می جحعیت علاء پاکستان کے قائل تھرارکین قوئی آسھی علا مہ عبدامصطفیٰ 
ہی ء ناب مولا نج ذاکراور جناب مولان ھی رضوگی نے مرزاناصص رپ 2 7 سوالات کے 
ار کے تی مرزاناصراورمرزائیو ںکا فر یب دو٘ل ابی طرح بے نقاب ب وگیا۔مولانا 
در ےعرصہیس دومھاذوں پر رگم ر سے ایک ا سیکا محاذ اوردوسراراگواس مک مجاذہ اب 
ا ولا ورای ےلیم ساتھیوں مرک ینا تب صدرمولا تاعمودشا ورای او باب کے صدر 
مکی اوکاڑ وی ء یڈ یکھیپ کے مولانایشی ادج قکوشرف اسیریی حاصل ہوا۔ ہمحیت 
ا پاکنتان کےسیکر یڈرہی جنزرل ححضرت مولا نا عبد الستار اع خیازئی کےخلاف متدددمقر مات 
نے گنۓء بے شارخباء وا ئگ فا رے گئ ۔ مساجد کے لا وڈ اچجرض اکر لیے گے ۔ وفعہ 
کی پارندری شد ید ہوکئیکن عاشتقان “ضف مکی میدوجہد می سکوئ یکیئی سآئی۔-40افرار 
ما لک کیک میس اپٹی جا یں نچھاو رک کے خو نکاجونذ ران نشی لکیادہ اس پا دک یکو چاوداں 
ا ہے شیدکی جوموت ہے دو ماحیات ہے '۔ یہد فداکے دعدے کے مطالق 


رگ 

پمیشہ زند ور ہیں گے ۔کوتی دنیاوئ یک ران انمت وانے اناو ں 01101 
کن۔ دہ عاشقان“ فی ہیں جن کے نون نے اسلا مک یآ مار کا ے۔- 

۳ء اور 1974ء کے ال شہدا رو سلام جن کے خون نے متا منص فی 
جمذ کا راس دکھاا اع ای رو ںکوسلام ج نکی تر بانیاں رگ لانیں ۔ ہل ان مسلمانوں؟ 
جنہوں نے مقا ىعصمضفیے وا ئن یکا بے مال مظا روک کےوکھاا ے۔ 

یس نے ا ون می جن تال اوروا یا تکاسہارالیا سے اورا سیکا مطلب 
کرنا ےکچرقادیالی متایگوام کے ذجنوں میں جاز و رکنےاوراسں مقر د کے پہلو و ںکوأ اکر 
کے ےا ام شا اوران کی قیادت مٹش سمل جدوجہد یکئی ہے۔ برد بت ہی د بت 
ہوگیا۔ا ای کے کرک مں‌ے مھ رکی جار دی ھی اورا بھی اکرکوکی سرکاری درہا 
ہ ےک ہقاد انیو ںکوی سم اقلی ت قرارد ہی ےکاسمراذوالفا ری بھٹھ کےس رجا سے اور جوا 
لگا جدد جج دکاس رانا جا تے ہیں تذا نک مال ایک ای اض کے ج ویج خا 
لڑک دا ہدنے پ جا ۓک کال نے پڑھایاسرامیرے 


تر پور نو پل 
ہام پی اےسند ای 


(قھتماء کتان) 


۳ہ ہی 


عریلخت اورمادر ےک و ےنم کے معانی بن کر نے ہکس یکا مکو دک کے مارح ہو 
جانے؛آ نر کک جانے اودہرلگانے کے ہو تے ہیں تھا اب لت اورا لیر نے پالا تماق 
آفاق الین کےسعی1خرانین کے لیے ہیں۔ ہر لت دھاور ےکی روسے خاتم کےلعی ڈ اک 
مان ےکیامہ رک ٹیس بلل ساس سے مرادوہمہرہے جولفانے راس لے لگائی اتی ہ ےک راس کے 
اد ےکولی نز باہر حےنباہرےکوئی چزاندرجائۓے۔ 
بی مو نکی چارحدشی کی سسلمرکناب لکل :باب خاقم این میں میں رشن مس 
کن احاد یٹ حضرت سنا او ہ رر شی ال تھالی نہ سے مردکی ہیں اورایک حضرت سینا جابر 
ایدارک ری ال توالی عن سے ا لآ خر حد بی شریف انی الفاظ میں تر نر یکتاب 
النا تب با بنخل انی جا ص٣٠‏ ۱او کاب الا داب :باب الامال لزا ۲٭ا ے۔ 
منداوداؤدطیالسی شس بعد یٹ شریف حضرت سپا ا ار جن کبدائ شی الال عن 
یاردای تگردواحاد یٹ مارک کے ملعم کی ہے اوراس ےآ خر الفاظاىہ ہیں :خكصمھ 
الالیساء ''یرےزربیرےانیا پکاسلسلٹح گیا“ مند اھ میں تھوڑے فی فرقی 
کے ساتھ ال ممو نکی احادبیث مپارکرخرت الی ای نکعب بحضرت سیا الوسحی غ درگ اور 
منرت سینا ای ہر و شی الل تھا امم سے ) ہیں حضرت الو ری ورشی ال تھا ی عرے 
یک ارردایت ہے ہفرماتے ہیں حضوڈل نے فربایا:” جھے پچ باقں مس اخیا و یلت دی 
ے۔ 
0 کناٹ کل می کا اع زازعطاغ مایا گیا ہے لین با یمر اورسعانی ذ ) 


کے 


1> 
,)ا ششخب کےذر یت مددیٹ یک ے۔ 
(3) میرے لیا موال غیت علا لق ارد یئے گے ہیں- 
)ھا میرے لیے (سادگی) زی نکد ہناد امیا ہے اود پاکیزرگی حاص٥‏ لکر نے کاذ راہ 
( یی می ش ریت یں نما زص رف ٹخص ون عبادتگاہوں میں میانی جرد ے زین پہ پر 
پڑی جات ہےاود پل نہ لے میری شربیتملبر وی ٹ/خم کے ذرہیے وضواو نس لکی عاج 
یا پور کی جا اگے۔ 
(8) تھے سا ری لوق کے لیے رسول :ناک بھی ایا ے۔ 
(6) او رھ پرانیا(کرا مہم السلام )کا سل یلیٹ مکردیاگیاے۔ 
حخرت اس ریش ال تی حنرسے ددایت ے ہفرماتے ہیں ءرسول الڈنٹپ ا نے فر 
”رسالت اورخوتکا سکس لم ہوگیاادرمیرے بعد :وی رسو لآ ت ےگا اور شوگ نی 
خر ت سیدنا جیر بن عم شی ال توالی عن سے ردایت ہے فرماتے ہیں رحضو 
جانا 
”یھ ہوں مل اتد ہوں۔ میں ماتی ہو ںکرمیرے ذد تہ سےکف رف وکیا ات ۓےگا 
(قی ما دا جاۓگا) ٹں عاش ہو سک میرے بعدلوک حثرمیں جع کے جاتیں گے( 
میرے بعد اب اس قیامت بی لی ہے )اور عا قب ہو ء اور عا قب وہ ہے بس کے 
کوئی نی نہ ہو (بفارکی حد یٹ نہر 3532 مل حد یٹ ر2354-124) 
رت تین اہوامامہ بای شی اہ تھالی عنہ سے دوایت ہے ہف رماتے ہیںءرسول ال 
کٹ نف میا: : 
”الد ےکوگی نیکئیس بھچاج٘شس نے اپنی ام تکود ای سے نہڈ را ہو لگ رن کے دو 
نبدت می دہ نہآیا)اورب می سآ خریی تی ہہوں اورقم آخری مت ہواب ا عحالہأ ںکتہار 
آندر می کنا کے (این باریس 307ء متدرک عاکم جلد 4 580 عدیٹ حر 36 


ححضرتستی اع ہدایڈہب نعمرد بن عائش دی ال تھی ع کو ریف رماتے ہو سن اک ایک روزرسول 
اڈنا اپنے مکان ےلگ لک ہمارے درم یا نتھریف لان اس انداز ےکوی پَفْظّ ام 
سے رخصت ہور ہے ہیں ہآ پکاپلّانے تن م رجف ریا: 
ییحی أىی ہوں''نپرفمایا:”اورمیرے بحدکوئی یی“( منداجرجلد 2 ص172) 
حفرت امام ا ولیہ یشی ال نا لی عنہ کے زمانے می ای ہش نے نبو تکادوٹ یکیااور 
اعلا نکیا شون دن اکیش اپ نو تک علاصت یکر دوں ۱ اس اما م نشم ابوطیز ری ال 
آ تھا یع نے فرایا: 
۱ ٹیس س سےنبو تک علامتطل بکر ےگا دوجج یکاف ہو جات ےگا کیونک رسول اللہ 
ٹل نے فر ما اکن نمسرے بحدکوگی یں ے۔ 
لام اہن جرم طبر ائشہو خی رق رآن'قخیرطری“ شآیات با/کَهلَیكَ تَُْلَ 
ال وَخالع الع ا مطب ما ‌کرےں: 
”و وذات جس نے نو تکوٹ کردا ورس پل رنگادیا۔ اب قیامستکک بددودا نکی 
ہے یی ںکھلگا لتق رابن جریجلد222٦1)‏ 
بنروستان سے نےگرم رئش اورن وس بتک ؛اورت کی سے نت ےک رجگ تک ہز مان میک 
کےا برعلء و تھا اوح شین ومفس رین رہم اذ تھا یکاتضر جمات سے یہ با تھی طود پہ 
ثابت ہوجائی ےک ہبہکیصدیی ےآ کک پورگ ڈنیا اسلام تقورب ات این کی 
خری نی دی جع ری ےحضو رن یکریٹاٹ کے بعدبوت کے ورواز ےکوہمیشہ ہمیشہ کے لیے 
بن نی رکر ہرز مان میں تام مسلمانوںکاشفق علیہتقید ہر ہے اوراس ام میں مسلمانوں کے 
رمیا نشگ یکول اخلا فنئل ء٦‏ کی ش١‏ ستضورسی الین شر رسول ار سے بعدرسول یا 


بھییوں 
نز ملعال حد یشنم 38793) 
حضرت یر عبد اشک بن جیب شی ال تھالی عنہ سے ددایت ہے فرماتے ہیں :یں نے 
۱ 
: 


ھی ہدنےکا ٹواکر ے اوج اس کے وکوےکومانے وہ (ششقی دوٹوں ) دائرد اسلام ے نا 
ہیں۔ 

ام الین کا جمفبونالقت سےخابت ہے جوقرآن مجیدکی عبارت کے سیاقی وسباق - 
اہرے ہج سی قرع کر نے خودفرمادئی ےنس برصحابرکرا مہم الرضسوا ن کا ھا 
ہے اور یت “حا .گرا مشیہم الرضسوان کے زمانے سے لن ےک رآرج تک تمام و نیا کے مسلران' 
اختلاف مات ہیں اس کےخلافکوئی و امضپو) سے او کی تۓ مد کے لیے نبو تکا درد 
کھو لۓ وا نے مرق رین او رین اسلام ہیں اورایے لوگو سک سے سلمان لی مکیا جا سکتا 
(مطلب ہہ ہ ےگ اہیے لوگو ںکو ہرگ زمسلما ن/ ناک ہگو/ امت یمج بی کے اخ را سکیا 
0)۔ (روز امو اۓ وقت 7 تب م2017ء) 


رن نوا 
لواۓ وقت 
سا تتبر۔۔۔۔ایل یادگاردن 

مات تب رکا دن اسلامیان پاکتا نکی امنکوں ءآ رز پوں اورتمناؤ کی کیل کیادن ے 
ایک سال پیلے پاکتا نک پاریمنٹ کے دونول ایواتوں نے جارینی تزمی منو رک یھی جن سکی 
اتاق را سے می اش سار تو ئی 1ی ہش ل نی ینان کیا اوراس کے ذر لیے 
مزا خلاماھقا دای کے پیر دکاروں قاد ای ولا ور (م ذائیوں پکوغی سک قرارداگیاتھا 

تاد انیو ں کا متلہکم ویش ندے سال پیل شرورغ ہوا۔ برطا دی حمرانوں نے سیا کا 
ماھرادگی ایینڑے کے تحت اسلا مكوصعف تیپانے اور امت سلمہ میں اختظا رکا پچ نے کے 
لیے قادیاٹی پور ےکی کاشتککار یک ی٠‏ بیصخیرکوددار ارب قراردیا۔ اہی وقت انرک 
ملمانوں سٹو یش لاج ہی اور وا کال جلا کر نے می مصروف ہو گئ ای عالات 
کے تجہ میس مرزاظظاماجحرقاد با پیل ای کم اودمناظ رکی حییت سے الج رااور بعد بس سس نے 
اپنی نو تکاذ راکنا ککردیا۔مرذاغلاماتھرنے انی دومواللا تکواپتی نو تکاذ کے یادئ 
ثگات قراردیاجاگر ب کے لےتشولی کاباعت بنے ہوۓ تے۔ چنا غچ اس نے سب سے بس 
براعلا نکیاکراب جچہاوترام ہے اوراسل کے بعد اولوالام ( انکر بی )کی اطاعت لا زگ تراردی- 
عالائمہ چہاد کے پارے بی اسلام کے چو کیدگی احکام ہیں اوردہتی دنیامتک کے میا ہر بین اسلام 
کےسا تھا تھاٹی نے اپنے بے پایاں انام کرام اور لامحدودنوازشات وعنایات کے تووعرے 
کرد کے ہیں :و سی مسلمان ےئیل ہیں ۔ بی وجہ ہ ےکہہرمسلمان کے دل شس تیاہر ین ےکا 
خوائش ہم قت اگڑائیاں یق ہے۔ مرذاغلام احھرقادیالی کےا سراس بالل اجتمادکی طرف 
علام۔اقبال رم ال علیہ ن بھی مہات جائع واطیف اشار ہکیاہے۔انوں نے مرزاتقادیالی اور 
ان کیک ری انا فکاذکرکرتے ہوم ے٤‏ فرمایا: 


148 
آن ز ایان بود و ایں ند ناد 
آنں ز غ پیاد وایں از چاد : 

چہاں تک اولا مرکی اطاع اتی ہے ا سکام خودال تی نے دیا لان چندشرا کا 
کےس ات ج نیکوسا کر کے مرزاغلام اقاد یالی نے وا اسلائی تخل مات او رع رق ری سےکھلا 
م افکیا۔ا اذ ش7 رآ پک نے ہم دڑے الک7 جھیوے۔ 

يکوا الله وَإِْعَلرَسُوْلَ 2اولی ار منگھ (ر7شاء 

”الک اطاع تکرہ ول ای اطاع کر اودالوالا مرک جم ے ہو“ 

او لت اڈ تا لی نے اس اواوالا مرکی اطا ع تکامگم دیا ہے جوم یس سے ہوگ' اوھ اگر 
وہ اولی الامراطاعت ای ء اطاعت رو لکا فادہاپنے گے سے ارد ےو ران ا کی 
اطاعت کےکھی پاینزنیس جا ایک غی سم اواوالا مکی اطاع تک جاۓ- 

حول آزادی دقام پاکستان کے بعد اگر چہقادیایا تکا سک از ول ہوا چا تھا 
کیو کر م کک یرد لا اله الا الله محمد رسیل الّه ےاورا لا قلما تک 
تر وع داشاعت اوراسلائی تذایب وتقدن ک ےتفہ بقا کے لیے ہی اہ کو حاصس لکیاگیا لیکن بد 
شی ےآزادی کے بعد یمتلہ سا )صلخت ںکافکارر ہتس کے ایی متظ ریو رکر نے کے بعد 
ایا لکنا ےک ہارب اگ چا خطہ سے سای طود براگکست 1947ویش اپنا ست اود یلپ کر چلا 
گیا تھا جم ایھ یتک اس کیککر و کاخ جو کاتقوں تھااودا نی یز و ںکواس پک سرز ین ش 
تقادیاوں نے اپنے لیے سہاراالیا۔ اد باب اق ارکی طرف دبھتے یھت جب امتمل کا 
پا نبرا ریز ہوگیا 1953س با تا عدوطود پت رکٹ نبوت چلال یگئی جوتض است دانوں 
کی عیاریی دمنافقت اوران وقافدن کے نام برا با بکلوص تک خی رج وی کی وج ے ا کام 
وی ترک کےیلم بردا ری علا ءکرام ٹم ار باب سیاست :تا جر خرن تدگی کے ہرشعبہ 
ےلت رکے وانے ہزراروں افراومیتی مظال مکا شکار ہدئۓ اور ناک دخون میس ہا ےلین 


: ( وم44 

ملمانوں نے طرح طرع کے مصائ بک تہایت خندہ شال سے متقابہکیا۔ بہرحالل ات 
مل کےابمان ڈقیرے کے نے کا تن جو ںکاتون رہا- 

یریک بظاہر 1983ء کے مال لاءادرطالمانہ دوب سے د ب کین می نی رگ 
یس چاری اورزندہ وقائم رج یکیو ںک ا سکاتعلق مسلرافوں ک ےکی د نیاوی مادئی مفاد ےل 
تھا۔ بللہ یروب ود لکا منلہتااو را ہر ےکم ایک سلمان اينے رو ءدگلی کے محاملات می با 
خت جان داع ہواے او ماع طور ہآ حضر تب کی ذا تگرائی سے ال لکیاحب تکودہ بہال 
کی دوات سےکھی خر یدانییس چاسکتا_ ماک یگمل ایمان اور پتعز مکا نت تھاکہ ث ےآ مین 
73ء می صدر اور وزم اتلم کے جوعل فتجو یز سے مئے وو حقید دش وت کے مظہرجھے 
قادبائیوں کےخلاف سلرانو ںکی پک یکامیاپاتی جو بظاہرمحدوشیانان اب دیکھاجاۓ نمی 
اث یکا میا یسا ت ترک می نکی میادغابت ہوگی- 

سا تہ رکا جا ریک سا سور اسلاصیان پاکستا نکی جم ےرک سرگ ری ادرجدد ججد کے 
می طلوغ ہواء دی 1974 مک ریکٹھی جواس وقت شرو ہوگی بد بوور یا ےاششن 
پٹلیم الاسلا ما ربوہ کےطلبہاسا تذہ اورربوہ کے جزارو ںکیغول نے پپادر سے دالچی پہ 
چناب الپ ری کی ایک لوگی پر لرکرد ہا جس می نشتر میڈ یک ل کان کے ایک سوساشھوطہسوار 
تھے مل وج وں اانھیوں اوزگواروں ےک تھے۔انہوں نے طلہکوخقت ز ووکو بکیاجھی 
میں طال عم شد ید شی ہوگئ ۔ا کل اوردید ودلیرانہ تم کا بب ہ تا گیاھ اک تن 
کے بیطالم یلم جب تفرسگی دورے پر اود جار ہے تھ نو راس جس رہودو ےگ رتے ہوتے 
انہوں نشم وت زندہ با سکیأھرے لگا ےجس پر بوووالوں نے اتال کاب کرام 
بنالیا۔ 

رہ ہٹیشن کے اس اخ یکا من ک گرم ز بردست روکل ہوا اوران ابا نک صورتَالّٰ 
گکڑنےگی۔ پور ےکک را اس کےخلاف مظاہرے اور الس شروئ ہولی ضس پ جخیاب 


(مدی 
حومت نے اس واق کی عدال تقیقات اعم دے دیا ارز کے ایم اےضدال یاخحتتائی: 
ا رمق ررکرد گیا ناب ای کےاجلاس مم قادیائیو ںکواقی تق راد ہے اورکیدریی اسامیوں' 
سے جٹان ےکا مطالکیاگیا صورتھال مز یرگن ہوٹی جس پروز ئل مپٹو نے ایک بین جار 
کیا ٹس میں عوام سے اب لک اگ یکدہ امن وامان قائمکرنے می اومت کے س ات تیاون'' 
لیے (فواۓ وقت 7 تقبمر 4975 کی نما اشاعت ) 


رع مت 


2 جن 
شقم وت دی نکاخیادیحقیدہ ہے اس پراسلا مک پورگ غمارت قائم ہے ۔یقید مخ وت 
پہایمان اور لکا تذ دی کال زئی اور جیادئی تقاضا ےق رآن چیم ستقریبآ100 آیات اور 
24 اعاد یٹ مبارکہشی مقائدباطلاکی فی کے لے ہما برا کاڈ ٹکر مق ۔کیااورت رآن 
اعد ی کی رنیم سخ نو تکا ا مضپوم اتی تالیطات تصانف اور یا نات کے کے وا 
ار ےا ےسیج ری بی اوراعتقادکی رما یکی۔ ان اکا بر بین مت میس چرم گی 
اگل دئی رحمیت ال علیہ ولا :اتد رضا ان بر گی می ال علیہ ؛امیرحات پی سی اعت کی 
ای پورکی ریت ال علیہ شوک تی نگیلا فیرحت ال علیہ ہمولا نا واب الد ین براری رتمۃ ال 
علیہ :لاٹسنا ت تقادری رحمرت ال علیہ علا مہ ابوالہ رکا ت تا دی رحمۃ ال علیہ ہخواح رق الد بن سیالکی 
ال عایہ: علامہبد لیا بدا و فی رم ا علیہ علام اجمیسعدکاھی رمع ال عليے:صا جزادہسیر 
یس سن شا, رت ال علیہ ءمولا نا عبد تار ان میازئی رم ال علی.ءمولان شاہ امرورالیٰ 
تد لئی رت ال علیہ :حضرت مض یگھودشا ہگجرات رض ال علی:علا غ برثی الانب رارق 
ال علیہ عل ری ہدالخفور نار وئی رح ا علیہہھولا نا چٹ سسلم ریہ ال علیہ +مولانغا رتنم 
مت ال علیہ ء علامہ شاو عارف ال ہتقادرگی رن ال علیہ ءمولا نا عامدگ نان رتمۃ ال علی۔ء 
صاجزادوسیدافقا رشن رۃ ال علیہ :صا جزادومیاں شل ا دشر پور رحمۃ ال علی علام ید 
وداج رضسوی ریہ اڈ علیہء اورٹسٹس پی مج گرم شاہ الا ز ہرک رم ال علیہ کے اسما ۓےگرائی 
قائل ذکرہیں- 

1953ء می ئ ری کن وت کے اد از نشی علامہ ناسنا ت قادری رمۃ ال 
علیہ تھے رآ حضرت مولانا سی دیدارسی شاہ الویی دنت ال علیہ کے فرزند اکب تھے ۔آپ 


جعیتعلاۓ پاکستان کے پیل مرک بی صدرکی حثیت سے مارجخ 4949 ءکودتور۔ا زا 
بیس یی یک جانے وا یر ارداد ماد کے من ٗسسین یں شثائل ہیں 4953ء می مولانا 
عطا ءال شاہ بر بھولا نا سی داؤخرز فی اورسنامطفری شی سیت تام مکاح کر کےعلاء 
علام سیر ابو نات قادرکی رمع ال علیہ کوستققطود پرنل۲ سم لت ری ک توم نیو تک تا 
کیا۔ ال ری کک قیاد تکرتے ہو ۓےآپ دم خلا ء کے چھمراوگ یرہ ئۓ اورایک سرا ی٣‏ 
حیددآباداو رگ رین لبیل نظ در ہے۔48 جن ری 1953 ءکوقمام مکاح بک ر کے لا 
اور ۂڈبی اورسپای جماعتوں کےرامروں ہش ل1 کی اتا ن مم پا ری نیشن ہیں بی ٹ رک 
وخ 1 میگئی۔اوداس وقت کے وز رام خواج ام لد ین سے مطال یک یاگی اکا 
ا؛ئش قاد]خو ںکوی سک ای تقر ارد ےک قراردا جوا ستیداحسعی رین غبرص ہاو 
ئل نے یک یھی چو ہر ینف را ہا نکوان کے عہرے سےفورا مر فکر دی جائے 
تج ری کٹ وت می توبات ملا نام یراتا ران خیازکی روم ال عل کی خ مات روز رن 
رر داع ہیں۔انہوں نے اب سلم وش نیڈ یش نت یک اتانب یک نا شر 
3 اود 1974وک تماری کشم نو تک یک بھالی بھہور ہت بت یک ھا صلی و ا 
تحف نا مول رال تال کے پلیٹ فارم ےکا ہائے تمایال سرانام د ہے ولا نا عبد متا 
ان نازکی 1973ء سے 1989 کگک جحمعیت علاۓ پاکستان کے ھرکز ھی زرل میکرٹری> 
رۓچ ا پاکتان ک ےل بھی صوبائی اسھی کےمبرت۔آپ قام اسان کے ب ر 
یٹ ؛ تن دورح بائ یا اتا کے متحددم رج اور وفاثی وزی نذأبی امو ری رے۔مولا 
عمبداستار نخان نازئی نے 28 فروریی 4953 لا چان سد دز خان ما ہورکواپنا ہیڈکوارٹر بن اہ 
تر یم نو تکا آغا نکیا ۔آپ الن دوں جخجاب اس کےگہرتھے۔آپ نے جتجاب ا 
میس نفادیانیوں کے خلاف شر ارداد جن یکر ن ےکا پر کرام مایا ا ا ٹا یآ پکو شا 
تل ہور می فطل رکردیاگیا۔ اس کے بعد 9اپ لکوقی لگ دییمگیا٭ ۹ب ہل سے 128 


رك 
فی عدالت میں مقدم چلنا زا بالاخر 7 مک یکوفوتی عدالات نے مزا مو تکا مم 
.ہو میں فی عرفسٹین سی مین اسینی سصیت عالم اسلام کےی٥لیم‏ اکابھ کےبھر پر 
اع ادرعاگی دباۃ کےتحت مزا مو تکوعمرقید با مشقت میں بدل دیگیا۔ مولا نا ماگ 7 
سے 44 مئ کک ھا یک یک کی جس قیدر ہے ۔ 29 اب یل 1958 وضماخت پرد ہیی ال 
رح آ پجموگی طور پر 2 سال ۹ ماد اود دن یل مل رے۔ 7 تب 1974م کا دن ہمار تو ی 
ادن تار کیا زا ایت کا عائل ہےاس وق ملمافول کے دم یدعطالبہ برا وق تکت 1 
بی نے اد یائیو ںکوجمپوریی اور پارلیماٹی اد یی سکم افلی تقر ارد کا جار ساز یصلہ 


(روزنا نواۓ وقت 7تت م2017ء) 
ماتوذجغظ نا موی رسالت 


رر وت 


یرتشم نو تکاکا مکی ےکریں؟ 


ل|م طاہر ضوی 


یہ کار را بے ازلی سے ٢‏ امریز 

راغ سیل سے شر بی 

(اقبال رمدالل اہ 

کفرنے اپنے ترک سے جسداسلام پر ٹن جھی تی رآ ماۓ ہیں ءان ٹس ے ادیانیا 

کا تنک تین ہے یسل ےمضتی فیپ یا لے کے لے ف گی نے ارت اد کےا 

یں بچھاہوا یت قب سلم می اتاردیا جس سے پور یلت اسلامیہ جن شی ہی ناو اورافر 

کیاطرف سے بترم رت ائعم مرزا قادیانٰی کیاصورت ںآ انس نے ق رن وسفت کے دامن 

جارتارکیابٹم ال ین کی ذات ار کو لاۓ ‏ جس اسلام پر جھ کے لگا اورش ری 

اسلا می کے وجووکٹچٹن یھ یکردیا۔اکی ارطھ ادیی تی کے ہر ارت ادنے بتراروں الو نک 
ناد اادرآچمگیا ٹل خطرناک جار ے- 

انکر نے اپ انی نی اودا کی اکر کی نبو ت کاپ عگیڑوں کے سراقے 

پروان چڑھایا۔ وٹ نوت کے پک ےکوچلانے کے لے وی علوم تک ز ول دیا۔ کا 

کے لج تجوریوں کے من کول دیے گئے۔ ایمانوں کےسودے ہونے گے۔ ایال ہ 

والوں عقوت کے افعا مات ءموسلا دھاد بارش شک طرع بر سے گے۔ گے میں تاد بانیات' 

لوق بن والوں کےمسروں پر اع عہدوں کےتارع ر کے گئ ۔ جوگروہ قد ایت ٹیل گے 

ٹس جاگیروں سے داز اگیا۔ فاقو کی جکن سےہجن کے و لکباب تھے ءایمان فرش یکر 

اب بین گئ۔ یس انی دوات اود لا کے زور سےقادبالی نو تک مکڑا چا را 


تع 

پگڑ ےکاکوچوان مرزا ایا 1908ء ٹش اسبال سے مرک یشنم دئل ہوگیا۔ جو نے نی نے . 
نیعت کے بین مطا اق انی یفن ذ ند یکا1خری سان بھی نٹ خات یں لونالیندکیا۔ 
دای کے؟نم رید ہو جانے کے بعدی فورالدین ءدرحقیقت ”فقو الد بن“( گنی 
: ہوا ورای نے نخاشہما زنبوتکا کاروباف ستھالا۔ چرسا تک اپنے خی اتھو کے 
ٍ و کیو منصب نبوت درسالت ےکگھاتار ہااورآخر 1944ء ی۳ موت کےآپنی اتھوں نے 
ان مزا اد با یکوتش یپ نم میں ٦ھ‏ شون مرا تقادیالیبنادیا۔فرلد بی نکی فتن سز زندگی ے 
وذ قادیالی کا ایالد ین گموداپنی موروثی نبو تک مسندفراڈپرنمودار ہوا۔ 1947ء ٹش 
اپ اکستان مع رش و جودی سآیا تم ذایٹرال بین را تک تار کی جس برق پچ نیکرشم رات ا“ 
ا سےفرار ہوک رلا ہو رمیا اور پاکستان کے اندرقادیامی تکا داممنڑیس ب کی ارت ے 
گااشرد عکردیا۔ بے شارکیدکیعہدرےء جا داد یں اورھراعات لو بنغ ال خان قادیال یک 
لیمکت پاکستا نکاوزخارجہہتایااوراسلام اورملت اسلامیکاناق اڑایگیا- 

جب قادیائیو کی خرمستیاں اد چرہ ستیاں حد سے بد کی سلمافو کا اشعبر 
وکیا اور 4953ء میں ملت اسلامیان پاکستان نے ایک شوفالیٰ درا رن یت بک چلائی۔ 
امت پر یھ ہوۓ جابرجھرانوں نے عبنم وت ینلم تم کے دہ پپاڑ و ڑ ےک 
ا دک کہ بلاکوچیزخا نکیگر دی پھینشرم کے مارے ججنک جا ہیں ۔ لا ہور می ماش لا 
گر دیاگیا۔ درندوفت جنزل الم خانکو اٹل لا نٹ یرمق رکیمگیا۔ اس پچھرول 
ال از رٹل نے صرفشرلا ہور می دس ہرار عاشتقانمصصض یف مکوشہی کیا اور ہراروں 
اا وا مکوتیلوں می ٹمس دیا۔ 

دا ءکی لاشو ںکوسزکوں پرکھسیٹا جات اور کی ںککار پ ریش نک یکوڑاکمرکٹ اُٹھانے والی 
اڑول میس بر کے دوردراز کے علاقوں می سکڑ ھھےکھودکر ڈ نکر دیا جاجاء یا در یا داوئ یک 
کے پپردکرد پا جا ا پویس کےانچا یلم دتشدداورف جک یکولیو ںکی و چھاڑ مت یک کو 


4156 
دبادیاگیالن دلوں کے اندد لے والاطوفان اپتیذ لو علی سے پکار کرک ہکہدہاتھا۔ 
)ری سے اخ تنا بھی جلی تر نیں 
جج ر کی ہگ دل ے مر ھی نے ہیں 
بنا کی چ ے گردن ونا شعاروں گیا 
4:. ے‫ بھ مر عیداںہ گر ٹھی تو تیں 
ہایس سال بعد 4953ء یت ری کم ہو تکوکھ سے 1974 کین ری کت و 
لات رب ک ایک طوفان نک ری اود ہطر فی لی ٹوا سیلاب کے سا نے ایال 
تما مت سہارول اورسازخو لمیت ش ونا شا کک رب گن اور پاکتان کا 
7 تب 974 1وی سکافرقر ارد دیا لن قاد انی اپے منصوبوں پل چیرامیں چو 
کین شی پورےزوروں سے اری ہے اوریسلمان نو جوانو ںکوعنلف بٹھکنڑ وں ے؟ 
نایا جار ہا ہے۔مرزاتقادیالٰی کی خرافات جچپ دجی ہیں ۔ شدائر الا یکواستعا لکیا جار 
غرضیکہ فو ایس نو تیج کاٹ اکو(نتوذبائ ہیام کرنے پگ ہوثّ ے۔ 
لن دوسری طرف امتمسل کا ای کک رتحدادقادیاشو نکی ز ہر ناکیوں اورا 
خب بالن سے پل ناواقف ہے :جس سے اد بای گیب رکے فا دہ اُھاز سے ہیں اور 
نے اپ ارت اد ہم یہت تی زرگی ہے۔ عالا تکی ان عھینو ںکو بھا مت ہوئۓ راگ 
ملمون می تا بای تکوکیشرکردارکک بچانے کے لئ بھتبادیۂ یی کی ہیں جلن* 
ےانشا ءال تعالی جلد یآ پکویبودونصارئ یکاہ پالتقا دای اگ + وذ ڑج دکھاکید 
خطیبوں اور ادیبوں سے رابط: 
جاک یآ پ حقرات اس اھ سے ہف یآ شنا ہی سک ٹین الات اتی محافت پر بہود 
قتضے۔ چوک ید انی پرے عالم اسلام افو پاکستان کےخلاف یہودیوں کےا“ 
اس لئ بیبودیصحافت ایی دنیائٹں تاد بائیو ںکومظلوم ہتم ریہ اورسلمانخا ب تک 


اپنے سارے وسسائل استعا لکرتی ہے۔ اس برا پیگنہ کے لئ خودقادیانوں کےبھی 
نع سے درجنوں رسالے پکلے ہیں :جن میس بچوں ؛مو جوانوں عورتوںء پوڑھوں کے لئ 
انگ رسائل ہیں ۔علادواز یں نشی فرش سلمان افو ںکڑڑھی اپنے سات ملا لت ہیں - 
گی سے شائعح ہونے والا انام 'مسرت ڈائس ٹاو لا ہور سے شال ہوئے والا پچدرہ 
مہارت ا کی وا شال ہے۔ اوری دن سے بے بہریلسی ساتندان سے اپنقق 
یانات اور رز شائعحکرداکراپٹی نا مہا دمظلومی کا ڑھنٹر وراپٹے ہیں ۔ ان کے اس پا 
ڑہ سے متاثر ہوکر سادو اوح مسلران یں مظلوم نے کت ہیں اون ائڑیں ا ببھی 
فو کا ہی ایک فرق ہیی ہیں۔اس لے عاہیننتمضبوت کا فرش ہ ےک دوقادیاوں کے 
اط ناک لک دندا کن جواب دمیں۔اپنے علاقہ کےنطوں کے پا جانمیں اودا نکی 
وٹ وت کے مت کی اہمیت اور نز اک تکی طرف مبذ و لکرائیں ۔ا نکی خدمت مل گز ار 
لی یک ہاپنے ججعہ کے خطابات یش متشم وت ما نک ہیں ۔ مرا تادیای ا لک مجوٰ 
وت اورقاد یانیوں کے ہمقامدوعزائم سےوام النا کور و شال کرای اد یہو کی خدمت ٹل 
ا یک کرد اپ مکوقادیانیوں کےخلاف جچہادشش استعا لک میں ۔ رس ال وج رائراوراخیا 
ٌ ےم قادیالی مازشو کو بےنقابکر بی ۔امت" مل ےسا ےا نکاکردہ اش گن اور 
نل یس ان کے شیطای منصوبوں سےلوگو ںکو گا کر یں جب خطیبء بیائول ےالنا 
ار وکح ری گے اوراد یب اپنے کم سے ا نکی بھیا جک سازنشوں نے سی ادعیٹرسی 
ا کرام یتکل 2 تچ ہواوکھائی در ےگا۔ 
إیران عظام سے رابطە: 
خققادیایا تکا کی کے لئ یم نی رکے ران عظام نے بڑئ یتیل القدرخد مات ر 
اجام دی ہیں ۔خحسوصا یہ ہیی شا ءگوٹڑدئی رمتۃ ان علیہ چی رماع تی شاءرحمۃ العلی خولیٹر 
سیالوکی رم ا علیہ خوات فلام دنگ رتسوری رمع ان علیہ دغیرہکی غدبا تآب زرے 


مد 
ین کے قابل ہیں ۔موجودہ دور کے پیرا نکرا مچھی اپنے الا فک خیرت وحیت 
ہیں ۔دومرذاحیت سے شدید قب فرت رکھت ہیں ۔عاہ نم وت لن بذ کو ںکی اد 
تقادیاضیت کےخلاف جہادکا اعلا نک یں۔ پان خظام کے یل بن آپ کے ۴م راب 
گے۔ا دع کے فلخ نیو تکی للکا رفضا می کو ےکی ءاوعطرقادباشیت شیطان ک ےکن 
سوارہوکرفودوگیارہ ہو جا ۓگیا۔ 


سیاستدانوں سے رابطه: 

پاسالن تم وت سے درخواصت ہکوہ اپنے اپ علاقہ کے ران ون نک 
مین بوئی نکیل ہکؤسطرز ء بیشن مصو بای اورقوی اسبلیوں کےمہمران, نیرز حا 
وزرانۓےعلومت سے ما قا تی سکم یں ۔علادہاز یں علاقہقاشہ کے الی اہی اوہ ی ایس پا 
و سس مر جو یو 
اور صاضان کے پا جا“ میں اورآئیش فتنقاد یاحیت ےآ گاءکر میں _عات وملت کے ظا 
قادیائو کی ن پک سرگرمیوں ےا آئوس شع کی اور تا یت سلیقہ وابنطمام کے سا تا 
و تکا لٹرپچرخود اکر ا نکیا خذعت میس می یکر میں ہک تی انظاەمہ سے لن ےکا 
اسلیوں اورکلومت کے ایوافو ںی کٹخ نیو تکی صدابلندہواورقادیا یت ذ مل وٹوارہوں 
طلباء کی ذمه داریاں: 

سولوں مکالجوں اور وئیورسٹیوں کےطل کی ذمہردارگی ےکہدہ اپے اپ اداروا 
تاد بای لا ءکی فی تا رکرمیں او راگ رقادیالی استادشی ادارے بی پڑھار ہے ہو ںو نا 
نا تھی فو کر اورا نکی سرگرمیوں پفظ ریش ۔اداروں می پحقید ڑم نبوت ک تاد 
قاد ا حی تک کرای کے موضومات پرنکٹر کا ہما مکرریں او ربا اور اسا نزو ہیں ار 


4159 (۶ 

گریں۔ ان بی د ہنی یرت پی اکر یں اورقادیائیٰ طل کال سیل با یکا ٹکرانمیں ۔ بھطلوں 
یش ان کےکھانے کے بن ان کک رامیں .یلما لب قادیا فی اسا تہ سےنفر تک می سکیوک چو 
ٹس حضورب یکر یا بای ہےء دہ مارے ل ےحترم نوس ہو کتا. اکر بشھتی سےکوئی 
قدانی امتاداسلامیا تکاممون بڑھا اہو ملما ن طلہبال سے اسلاصیات پڑ هن ےصاف 
ارد یی اور براہ ادارہ کےفوش یں فورأىہ بات لاٗیں کین کوگی کافر رق اور زت بی 
ملمانو ںکواسلاسیات پڑھان ےکاتت ینیل رتا 
سادہ لوح قادیانیوں سے رابطە: 

قاد یاننوں یں پاپ ےبھونے بھالے اف رادشی موجود ہیں جو ای فلاح دار بن کے لئے 
مزا قاد ا یکو بی اودمجدد(نتوز ہام تلیمکرلت ہیں ماز ہوگاضاداکرتے ہیں زکو 7 دتے 
ات رآن یدک حلاد کرت ہیں ۔کسطیبہ پڑت ہیں اوردشرعبادات ور یاضات مم بی 
معردف رت ہیں۔( گر چہ یسب پان کے اط یقہکارادرخقاد کے مطا تی ہوتا ہے ) 
اب نم و تکافرن ہ ےکہدہ اہی سادو لح ادبائیوں سے راہ ری ۔ ان کے سا نے 
عرذاقا بای کر یش رس مرزاقادیانی کی خرافات سے پردہ أٹھ تیم رذ قادیانی کے می 
ھک یکھائی سنا یں ۔شم بو کا الاک مضہ م مھا ھیں۔ قادیاو ںکی ال تھالی ء دین 
اسلام :تق رآآن جیداوردن رانا ۓگرام کے پارے مم کی ہہوئی بواس وکھامیں ۔آ خرت کے 
انجام سے ڈراتہیں ۔انشثاء ایآ پک کی کارکرثابت ہو ںکی اور بہت سے او قادیا یت 
سان یرے ےلگ لکراسلام کےا جانے می ںآ جانمیں گے 

یروں نے بل م شح سا ری 
ماف .ےد ھا کن خرل مم سے 

نو مسلموں کا تحفظ: 

رپ ارت کےبفل وکرم سے ج بکوگی قادیالی ‏ قادیاغیت کے خار زار ےئگ لکر 


ےھر سسجت 6لڑَست ‏ جس ےک ہف 


ہس کواریں؟ جاتا ےت قادبانی اپنے جال سے نے ہوتۓ شکا رکا تا ق بک تے ب 
ا لاف تم کے لاد یں ڈداتے ددکاتے ہیں ۔ زاریش جو افش 
اپنے الف سلم بھائیکوسین سے ارک ۔ا کی ہر رح سے تفاعط تک می اگرووظ ریب 
قو ا ںکی مالی معاوخت کر بی اکر وہ ڑھاکھھا یا بخرمند ےت کسی دف یا فیکٹربی میں ملا زم 
دلوان ےکا بنلدویستکر میں۔ انا ءال رب الز تآ پکود ناد خرت یں ا کا رخ رکا نیم 
کرےگا۔ 
میربی زندگی کا محمد تیرے دی ںکی سرفرازی 
میس بی لے ملاں, مج بی لے نمازی 
سر کاری ملازمین کی ذمه داریاں: 
قد یا ول نئ زی کی شید یآ سامیوں پ فا ہیں . ھل خووکوقادیانی ا ہرکر ے 
اورپ سامانو ںکالبادواوڑ ےکر معاشرہ ی۲ لکھے ہو ہیں ۔اوراپن ارات سے قادیاۂ 
ای رہے ہیں۔اپے اپ ےگاموں میں ادیانیو ںکومج ری کر رے ہیں مسلان ملاز من 
ایازی لو ککرتے ہیں ادرقادیا لی ملازمو لکوت قی کےز یں پر چڑھار ہے ہیں ۔میوں 
اں‌رنت مل طور پران کے رش ہیں اورشنگڑو ںکولوٹ گرا کا >د لی ثکال ہے یں 
سرکادگی اورم سریکارکی اداروں کے اندرقادیای تفئیں قائم ہیں اور تب ضرورت النا 
اجلاسں مضعقد ہوتے رت ہیں ان کے ماخ تکا مکرنے وا لے مسلمان ملاز ین بے میا 
زندگی بسرکرر ہے ہیں ۔الگ رکوئی ان کے خلا فت ن تھا اٹ کر ہو می با اٹ ہون ےکی وج ے١‏ 
داز کے علاقوں یں ا سی ٹراسفرکر داد پت ہیں دفت کی یکا ڑخرابکر وادپے ہیں :ال 
ضرورت ‏ ےک کلک ہ اسلام اورمسل ران عازن کے لئے ص یکارگیاء (ھم سرک رکی اور برا 
اداروں می تفم نو کی شی ائ مکی جامیں۔ چا ںی مسلمان طز مکی فی ہو ۱د 
اظی کم فو رآرا لئ مکیا جا اورال پرا جا کیا جاۓ ۔ادارول می تیشم خت 


سی 

ہی ۔۔__ ے۹809 ٭صصیہہتے ہے 
لین مکی جاے۔سلمانو ںکود نی غیرت دلاکرقادانیوں سے ان کے تلق تٹخ مکرانمیں۔ 
ان تیاوہ: پگ لکرنے سے پتھونڑئی ہی مدت ںاد یاضیت کے ب تکواوند ھے مضہ پڑاپائیں 
۔ 

ا رب ول سم کو وم زمرہ تنا دے 

نفک یگ وگرا دے جھ روں کو ٹیا را 
گناہ عظیم: 

قادیانیو ںکودستوری طور پر ای ت تر ارد جانے سے ۰ بت سے مسلرانوں نے 
قادیائوں ےر مت نال ےکررکے تھے ۔ملراتو ںکی بٹیاں قادیاغوں ک ےگ رزوں شی بیائ 
ہو نیس 4974ء می قادیانو کی سلماقی تقر اردیئے جانے کے بعد پسلمانوں نے 
قد بانیوں سے اپئی ٹیو کی طلاقیں حا اص لک ریش اورقاد انیو ںکی مٹیو ںکوطاا فی در ےکر بمیشہ 
کے لئ رت یش کر لج لیکن فسوی صدافسویں !آ جب کی عاقت :ا ان یش مسلمرانوں 
اودرقادیانو لکی یا ںآ ایل مل ایگ دوسرے کے ہا بای ہوی ہیں ۔ یوں خداک دعرلّ پ 
ایک گناوہوداے۔ 
ای ن نت خبوت ایل مسلمانوں سے فورآراہطقائ مک یں او رئیش ق رآن وحد ی ٹکا 

ری می بتا نمی سک ہقاد بای کافراورمر ہیں :اس لئ ان کےساتھیسلرانوں کے اح نیس ہو 
گت ۔ مات امام ابمدت ای حضریت امام اص رضا نمان فاضل بر یلوکی عم ال علی کا فوگ” 
ھرزائی اود مرذاحیت واز دونو ں کاخ ہیں“ ا ےک رتعداد جس چیوانے کے بعد فر تیم 
کیاجاے ۔انشاءا یآ پکیکوششیں نگ لامی ںکی اور یبت سے مان ا گنا وک رہاورذات 
کیا ود سے تصرف با ہرگ لآ نہیں گے گیا نی طر من ہو دیکریسلرانو ںکوڑکا لے کے 
لئ ےآپ کےا اتمراورمماوانہول گے 

فقوت ف٠ق‏ نے بجر غیت گز پالا گر دے 

وہر میں ائم مھ ٹم سے اُچالا کر دے 


مختلف زبانوں میں لٹریچر کی اشاعت: 

قادیالی اتارک تق قں کے ایجٹ ہونے کے نا پودی دنیامیس وبا کییشکل می کیل 
چچگ ہیں۔ دو تکا ری کی ہے۔ جماروں ت بیت یا بین اپ ابیسی مرج ب کپ چا 
پا مفمانداز و شکرد ہے ہیں۔ ایک م ربوطپروگرام کےیحت دنا ےتال فما لک می ا نگ ا 
زبانوں می نش ریچ چھا پکروافرقدار مہ نشی مکرر ہے ہیں ۔ جو ایک خعلر اک صورت عال پید 
2/7 ےن ے‌ اےیے تام سلاو ںا رش ہے۔ ہکن کے ودوصت یا رڈ دار یا وا 
علا ےگرامءبیردلی مم لک تصوصاافریقہرٹ موجود میں ۔د وقادیاحیت سے متولقرلٹ ران کے 
پا یں ادرئی لک ںکرددمقای ان مل ا کات جمکرداکراپن اپنے لک می تین مکریی' 
٢‏ کہ پر ہفتقادیامی تکاد یاب ہو گے۔ اپ عززوں اورووستوں ے ہیں کرد ہخود یکا 
سای اوردوسرد کی اس چہادیٹ شال لکرم یں کوک 

جھٗ حم وت ۷ طرف ور خیں 
لادیپ وہ جن کا مزاوار شیں 

قادیانی مردہ مھم: 
شرما کوئی قادیانی مردوملمائوں کےترستان مس ڈ نس ہوسکتا کن تادیائی خو دک 
ملمان ظا رکرنے کے لے اپنے مردے1کٹرملمافوں کےقبرستانوں میس ڈ نکرتے ہیں۔ 
نس کےنتیجہ می بہت سے شہروں ہی مسلمانوں اورقادیانوں کے ما ٹین لڑائی جھکڑے ہے" 
اور لمانوں نے جن لمیت سے ادیانی عردو ںکوتیروں سے اکھاڑ باہر چھیگا۔ ہنا حکومت 
پاکتان نے ملمانوں کے اصول موتفکو مات ہو ملک کےتمام ڈکی سی ضرا تکوکم امہ 
جار کیا ےک رجش کی دو ےگوئی قادیاقی مردملرانوں کےترستان میں ڈنکیس ہوسکتا۔ گر 
ےعلاق یش قادیانی ای خیظ تک تکرنے ہش یکر یں فورامقابی بیس ےراہۃامٌ 
یں اورا :قافو پیل درآمرکرانیں- 


س-دل۔ ‏ ۔ سم ملس 1س سأ٤ں‏ سرپ چ٭چت ےہ ثغخغةٹطظصص '__۔ ‏ آأس_٣آۃ٢آۃ__١_‏ 


رت 

قادیانی مصنوعات کا بائیکاٹ: 

تقاد انی ملمانوں کے پاتھوں اپنی مضنوعات ف روخ تک کےخوب دوا تکماتے ہیں اور 
پچ رسلمانوں ےمائی ہوئی دواتکا ای کش رحص بو وج دتتے ہیں ۔ جوضو پٹ مکی یاکز نتم 
وت کے خلا ف خر ہوجڑے۔اس تم ے ادیالی لی نکونفذامی تی ہیں ۔قادیالی نو تکا 
ارچ رچچتا ہے۔ ال نی ےاڈڑائی ہے۔ قادیالی ادادے پروش پاتے ہیں۔ نر کہ 
نو تکاذ رکا سار کاردبار چا سے رین تقیقت سے نا آشناملما نحفلت میس ا سحگین جزم 
ش ریک ہیں۔اس لے اننائی ضرددبی ہ ےکم سلمافو ںکی راس نا ڑک اورا ہم نت کی طرف 
مبزو لکرائی جا اورآیٹس ایا جات ۓےک رج طر قادیانی مردو ںکابائکا ٹم درا ے؛اکا 
طرح تاد بای مصنوعا تک بائیکا بھی اتہائی ض ردری ہے ۔قاد انی مصنوعات مل زا ان امم 
ثبرست ہے۔ ای تم نو تکافرسش ےکددہخوام الناں سے ران ؛ ول خریت :چٹ یء 
اپارہ جام اورجیگی وہ اعم با یکا فکرایں۔ اپ اپنے علقہ میس مقائی علا او معز ینک 
. 07-۴( پاڑارو لکا دو کر بی اور دوکاندارو لکو دی خیرت دلا لئے ہو ۓ یزا نکی 
ممنوعا تکا ہن دکرن قاد بای معیشت کے گے پرکچ کی چلانے کے مترادف ہے ۔کیونک ینان 
تیادہ شیطان ہے جو شیطانی نو تک چلار ا ے۔ 

عحبت سے مج ےکو ران قرآن اور صاحب ٹرآن سے 
نفرت ےہ بج ھک شیطان ۰ ثزان اور قادیان سے 

شیطانی یی کالچوں اور یویورسٹیو ںک ی تق یبات مم شیا نکی لئ فی مہ اکن 
ہے۔طلبابرادرکی یہ ىہ اسان چپ اراس کے موس کالیچوں اور یویورسٹیوں کے ہوغلوں اور 
کینٹینوں مم شیزان سپلائی کے درواز ۓےکھونے جاتے ہیں اورملمافو ںکوشیڈان پلا اکر 
لاھوں رو ےاۓ جاتے ہیں خل فکیلوں کےمیچوں بھی داد ی گیا رف لے 
تل نخشہوں ےتعلق رک وانے پروگراصو ںکی اشنار ا زی یکر کے زا نکجئی زبروصت 


رکہیئ 
شر حاص٥‏ لکردی ہے اوراس شر تک قوت سے انا ارہ بار کا رمی ہے۔جھاہ ری نتم خبوت 
متعلقہ ادروں سے فورکی رابطہقائ مک میں اورسلمانوں' کویشینزا نٹ کے بھ اتک نعموبوں سے 
آ گا ہکرت ہوئۓ الن اداروں می شیٹرا نکاداغلیمنورئ قر ارد ائں- 
قادیانیوں کی کلمە مھم: 
ملمانوں کے پر زور مطالے پرصدد پاکتان تر ل مھ خیاءل عم نے قادیائو ںا 
شعائراسلام کےاستعال سے روکے کے لے 4984ء یس اتا ظادیاضی تآرڈیس جار کیا٠‏ 
جس کے مطابقیق 
دبا اکر وپ پالا ہورگ رون( ج نو واج کا بای دوس ے نام سے ۳م 
مگرتے ہیں )کا کوگینس جو بل وا ہیا بلواسی و وگو مان کا ہرکرے یا اپے 
فہ بکواسلام کے طور پرموسو مكکرے یا الفاظخواہ ز بای ہول اف یک یا مم 
نیش کے ذ ریت اپ خرہ ب کن اشجیرکرے یاددمر ںکوابناغز ہب قول 
جک یی وت دے پا بھی ط ری سےمسلمانوں کے نی اصاسا ت۷ا 
رو عکر ےہ ای کن مکیامزائۓ قیدای ہی حدت کے لے دئی جا ےگی جو 
تین سا لکک ہویکئی ہے اوردہ ج ما نکابھی تب ہوگا۔' 
لن قادیانی خودکسلمان خظاہرکرنے کے لے اپے مکاوںء انی دکاقول اورعہارت 
گاہوں پرکطوب اود دن رآیا تق رآ نکھت ہیں ء اور ات نا اک سینوں پربھ یکلہ لیب کے نے 
ثاتے ہیں سخ زوت کے شاونوں ےگز از ہ ےک ہا لیے قادبالی جہنہوں نے اپ پلیرسنوں 
پک یہہ کے چا ہوں :ایی س کلک حوالہ وش سکہمیں اوردفعہ 295-6 کے مطابی مقدمہ 
در کر یں جن تقادیانیوں نے مکاتوںء دوکاتوںل او راد گا ہوں 7- یکول قرآلی 
آ ی تک ری ہو وہاں علق تھا شی الن کےخلاف زمردفمہ --298-0:285ءرپپرٹ در 
کرائتیں اور لاس کے ذزر بے ان مقامات ےکم طوبہ:ٹوانمیں او راگ پولییس بہاشہ بازیکرے 


4165 

فو رآحدرالت می مقمدم دا ئک میں ۔ اط رع اگ رکوئی تقاد انی اتی عبادتگا ہش اذان دےا 
ایس کےخلافبھ یکاردائ یمکرانیں- 
حلقه وار تنظیمیں: 

قاد بای اسوروں نے اپ ا تی ن یکی اگمریز یی ضبوت چلانے کے لے علقہ وار 
یں مکر گی ہیں اور ہرحلقہ کے لئ ا یک مر پا مر ہے٣‏ مار ینا نتم نبو کو چا روہ 
بج و کی علق واخہیں امک یفخ نو تکا یسل یں لائیں پر ےعلاقرش 
قدنخ وت کے ذیٹان وضو بر لے نعقرکرا میں ۔لوگوں سےا دنو ںکاسونل بائیکاٹ 
لزان میں .مسلران ہقادیائی دوکانراروں سےسوداصلف یتر یل اون سلمان دوکانار:قادیاغول 
کوسوداسلف نردمیں۔اگ راد انی ڈاک ھا قہ میں موجودہوق مسلما نکونکویں کے پا جانے سے 
ری لماک وقادیاخو کی شادوں اور دنق بات یم شال ندہونے دی ۔خا یل 
کیہ ںکوی مسلرا نی قادیا ان کان زبااز جناز دنہ پڑ ھھےاورن یکول قادیالٰآپ کے 
علا کسی سو ری راز پڑ ھھے۔ ایی صورت ہون ال مردودوفور کک رجوالہ پل سکریں۔اں 
بات کائ !اع خیال رش کت لآپ کے تو دای خرکسلمان اکر سی ضز 
دز نکر ا رکف ازجا وع وی 
عر بت نٹیس جار ان اہ مامور تقر دی ۔انٹاءالڈھفڑ یی حرت مج قاد یا کون ٹل 
,۶ رے اؤز زا تکوسوں نظ رآنۓ ےگا ادرانشا ءال ران ٹیل سے پجھتا مب ہوکرمسلما نبھی ہو 
ما کت 
قادیانی اور ملکی الیکشن: 

974 1ء می قومی لی نے مفقطور برقادیایو ںکوخی لم افلی ت تراردے دیا ین 
ادیائیں نے قوبی 1سپکی کے اس جا رن از فی ہکوج مک لی می سکیا۔ د ہآ بھی حین 
پاکتان یکا ہناد تک۷اعلا نکردسے ہیں ایال کو سل نل تی ںکرتے ۳ 


رمەی> 

دہ انگ دی لاف ںکونٹی لم کیچ ہیں ۔ دی خی سلمقلیتوس (ہنددہعیسائیءپاری وخیر: )کو 
علومت نے ا نکی آبادگی کے تتاسب کے اط ےق نی ای اورصو بائی اس مرنشتیں ری 
یں دوسری خی لمانیتوں کے مار ےق اتی ا اپیانیشمتوں کے لئ بڑےز وروشور سے الییشی 
لص لیت ہیں کن قادیاوں نے خوڑکوغی لم اخلی لیم ذدکرتے ہون ےآ بک اشن 
نی لیا اورا نکیشت بھی بمیش لی راقی ہیں ین نشی کی بات ہہ ہ ےک ہقادیانی 
ھیش اپ نام سلم دورد لک فہرست می دد کرت ہیں ران کے پل ایک بد امش اور 
خط ناک ہتعیار ہے۔ٗس ے دولا دن سیاست دافول ے اپ ووڈڑ لکا سوداکر کے یں 
ےق می استوا لکرتے ہیں۔ان سے مراعات حا لکرتے میں اورضر درت پانے پان 
سے اپ ےق اخبادات بل میا نات چچپواتے رت ہیں لان ایال خووکسسلمان ملا ہرکر 
کےبیطورام روا اشن میں حصہ لت ہیں ۔ ماصی می ای بہتکی ایس ساسٹ ےآ نی ہیں۔ 

اہن ٹم نو تکافرشش ہےکہدہالکشن کے وٹوں مس اتکی تقر ہیں حالات و 
واقات پگپرک نظ گل -قادیالیٰ نوز امیر واروں کےخداف مرکم علا چلامیں۔عحوام سے 
قادیا وازیای ماع ل کا با یکا ٹکراخیں اور جوا انی خووگوسسلمان کا ہرک کے نیشن میں 
حصہ نے رہا بہو اور جن قادیانوں نے اپنے نام مسلمان دوٹرو لکی فہرست می در عکرائۓے 
وںء ان کےخلاف قافو کاردائ یکر میں اورقادیانوں کے اس خط ناک مر ہے کاقع ت مک ر 
نات 
رہ قادیانیت کورس: 

ملک بی پت دیاخغیت ےک طور رآ پآ گاوافرادکی داد کہ تکم ہے۔اس اف راد کی ے 
تقادیا ی ناصانا ائحدہاُٹھارے ہیں اہ ابا ولا ء+ہعلماء ہس رکارکی دق روس یکا ری طز مین خرن لک 
زنگی کے ہرطبقہ کی رھ والےسلرانو ںکوخاقم انی ایخ و تک چنا رح مل 
بنانے کے لئ پر یلدی ملک کے جمان بیعش سو لا سید ہریت رسول شاو صاحب 


ہد 
ٹیل آباکگررگ میں اپنت مدد سے می جرسالی و رو ور وقادیاضی ت کور کر واتے ہیں ۔شل 
ہیں نا مورعلا ورام قاد او کی بھا تک سازیشول اور تقد یاشیت کے دی رخطر ناک منموبوں 


ےآ گ+کرتے یں اوراس فتکامحاسپرکرن کا نیکھا تو ہیں ۔ تام دطحا کا ف ری بندو بست 


تا ہے :وا کین وت اپنے ات علاقہ سے زیاد سے زیادواحبابکو نشیف لائیں- 
خوب تر بیت عاصم لکرمیں اودد لال کے:ہتیاروں ےس ہوکر اپنے اپ علاقوں می تن 
وت کے شی کا کی ڈوٹی سای 
نومسلم کے قبول اسلام کی تشھیر: 

جوقا بای بھی اسلا قو لکرےاخیا درا لک مددسے ا لکاخوبشجیرکی جاۓ۔ 
اس کےاعزاز یں پاریو ںکاابما مکیاجائۓ ۔ائن پارٹیوں شر وقادیامیت کے م وضو پرال 
ےق ری ںکرائی جائھیں ا سک ری سکانف سکرائی جا جس یس دوقادبایت پان ت کیج 
اورا امو لکرت ےکی دج رات با نککرے۔ اس سے اد یاضیت یل وخوا رہوگ اورانٹا اللہ 
بہت سےادیاضیو ںکوب ہمت وحوصلہہ وگ کروی شرف اسلام مکل گے۔ 
ایڈیٹر کی ڈاك میں خطوط لکھے جائیں: 

اضیارات٠‏ ذ راخ ابلاغ ریڈ کی پڈڑیکی حثیت رت ہیں ۔ لیکن اخیا رات کے 
صفات سای لیڈدو ںک نت وبروںءان کے بیانات اور ری کانفنسوں کے یصو ہوتے 
ہیں۔اداریصفوبھی بڑے پڑےالوگوں کے قبضہ می ہوا سے لان ای یٹرکی اک ایک الا 


سلملہ ےجس می قوام اپ نمی سای ہسیاسی اوداقتقمادکی مال پآ داز آٹھاتے ہیں اورکیک 


عا مآ دی یک یآوازپپرےکلک میں خوا وعام نک اتی ہے ملین وزارت سے متحلقہہھ 
اس وزار تک کک جاجا ہے۔ ماک نت وت ا میا رکفو را مال میں لائیں اور 
مندرجہ بالائچو یپ ھت ہی ای رک ڈ اک کے ذر یجےحلومت کےسا نے قادبانوں کےیتحاق 
اپ مطالبات بی مک میں ۔علت اسلا می کے جذ بات سےکلوم تکوآ اور می اورقادیاخو لک 


1٥و‎ 

شراگیزیوں ےعکوم تکوآ گا وکریں۔ اخبارات کے علادہ لک کے تمام نربہی وس سی رسائل 

جرام میں بیسلسل آ پک ڈ اک“ آپ کے خطوط' آپ نےککھا وغیرہ نی رہ کےمنوانوا 

سے تائم ہےآپ فی طود ران رساگل و جرائ ں ا دیایت کے خلاف اپنے جذ بات چڑ 

کرس اوروام دوس تکواا نکی فتنرسا مانیول سے ہو شیک بی ۔آپ کے ایگ دوہ کاڈ 

کٹ تا دیاغیا تکی لی لاک ررکودےگا۔ انا ءانڈہ نود لت مرکو ینہ بناچے اوراحا 

ا لںکارنی کک دحوت دہج _ 

چند مفید تجا ویز: 

عقید ٹم یو کی شی راو روا مکواں قد ہکی بعیت سےآگاوکرنے کے 

اہب ناخ وت ندرج فی لاوز پک لک بن ۔انٹا ءال بہت فا و ہوگا- 

4ے مال تم و تکیلنڈ شاک کیا جائۓے۔ 

2 ہما لیخ وت ڈائر کی شا ئ کی جاۓے- 

3 ساجدیش جہاں دنگ رآیاتترآلی داحادیٹ مقد ھی ہوئی ہیں ان کے ات 
عماج شبدت پردلاات ۔کرفی ہوئی ق ری ایت اوراعا د یٹ مقر س بی وڈ 
7009020 

اق دی راک اورکرلوں اذا خاتم النبین لا ذبی بعدی “کے پار. 
دواروں پلاۓ جائٌیں- 

5-۔ 3 ضدت کے م وضو پرآیات ت رآلی اوراعادیٹ رح لأَكَّلاً کی مر بین شی 
نوائی ای اود ہگمروں شس لگائی جائیں۔ 

و لی یاری جامیں جن پرکھا ہو و قادیالٰ اسلام ارگ دونوں کے غدار 


کور سولوں اوکالچوں کے لے ایی نکر ار سے ای جن میں ایشتم بوت یا 


( ہ41 
قاد ایت کے بارے یس ایک مت بین ملک ہوا کے یچ 
آ2 سیوا ای سک کی کی بسکوی۔۔۔۔۔ک ہو 
صدرنۓ جن کی رات سے و زعرو کر زہائے کو 
کہ تیرے ساتھھ دنا شش بزاروں ول دھڑے ہیں 
لو! 
شخم بت نکی اسای ہے 
شح بت دی نک رورے۔۔- 
شتم وت دی نک یآ بروے۔۔- 
ناڈ تھ وٹ وت کاکاممکرتاے! 
وگ یٹک فاظ تکرتاے۔ 
دوال ہین حیدکی اش تکرجاے- 
دوال کے رآ نکی تفاظ تکراے۔ 
ودنا موس رمالا تکی تفاظتکرتاے- 
دوانیاۓ سا نشی نکی صداقتک تفاظتکرتاے۔ 
ووفرشند دی حفرت تر یل علیہ السلام کے١‏ ان ہو نکی تفاط تکرتائے۔ 
دداعادیث رس لف مکی طاظ تراے۔ 
دو یکر کاظ تتاے۔ 
ووھ یمور ہک یععس تک تفاظ تکرتاے- 
وو بیت ال لکشم تک قاظ تک راے۔ 
دوروضرسو لپ کی نا مو کی مفاظ تکرتاہے۔ 
اما کرام شی ان تھا تج مک زقو لک تفاظتکرجاے۔ 


وہوائل بیت کے لفقر کی فا تکرتا ہے 
ووعات اسلا می کےایما نکاچویرارے_ 
دہوعدت امت کا یپ ے۔ 
دوعات اسلا می کے ایا نکاچویرار ے۔ 
دواسلائیاگر چا اتکبرردارے۔ 
!ہہ تا نکی نظ یائی اور تخرافیائی سرحدو ں کا مان کے 
ناک زی سککخلاف ماش کر نے والےےداروں کے لے عا ہرک رہے۔ 
دہویبودونصما رٹ یکی خ ا ناک پالو ںگوتاکام بنائے والا بیدا رخ زبایى ے۔ 
یٹ و ردام الو ے پیا 
منہموڑتاہے۔ بے دق کا مظا رہ روکرتاے۔ !1 
اےافراحت اسلام یا آٹھو ان کے لے الہ کے سول کے لئ ال ےد 
لے جا اگ اود جا ادرقادیانوں سے پمر یکا و جا 
اے می رےمسلمان پھوائو! تضورسرور حا لٹا کا ایک فر مان خی نوج سے 
ہمارےآ' قاناپف نے فرایا۔ 
' ولک مرک یس او ید کے اپٹل ۴ +0۸۵۷ 
کرنے والوں ادراس کے د یدالو ںکوایک ہی خر اب میں لبیٹ نے ٠“‏ 
مسلمانو !اس وت رو ۓ ز م۲ن پرقادیاحیت سے بڑ ھکر برائ کیا گی اودا برائ وا 
کرخامش رپنے دانےلوگوں سے ڑ کہ کون ہو گے۔ ‏ 
آ ود یھت ہیں یں یش بر نیس .کی ںآپ بجر ونیں۔ 
جلارکی سے اتی شاشت پر بکرتے ہیں- 
مبادایں ال کے نذا بک بیلیا ںکڑگک پڑیں_ 


+د یں چچرں چر ود ھی چو ا 


کی ال کے ماب کے بادل شعلو کی بارش برسادبیی- 
کہیں فرش ز من کے ا سککڑےکوٹ اک رآسان پہ نے جائیں اود راس یچ تن 


ول ہے 
چوکٹے تبروں ہے غالی ہیں ائئیں مت بجولو 
جانے کب کون کی تضھوے جا دی جاۓے 
انا کنزالا یمان 1ش یو تت وہر 2009 


ار جار لاجر 


اد یاخو ںکی شر حثیت اورا نال بایگاٹ 


20 


ہارے ہاں بہت سے لوگو ںکاٗ انا ےک یردرست ے کہقادیان خر ررسلماورکاف 
لن یی غی رسک اورکاف رت اورھی ہیں لا بہودی ہویسائی سکع ہنددہپاری ‏ بھالا 
تج نصر ف اد بانوں ےگل بائیکا کہ چلائ جال ےآ ٹرییوں؟ 
اس سوا لکا جوا ب عوخ لکرنے سے پا بیدا 2 اکا ضروری ے ہکفا رگا ۶ 
اقامؤں۔ 
1 عام اف :ایانس جوا ول شیکافر ہد اے عام اف امطلقکاف کے ہیں۔اس شس 
معیسائی ہکن ہدوہ پا ری ویر دسب دافل ہیں ۔ا یی ےےکاف کل ام اعلاح یراہ ےکف کا ہار 
ہیں یک پرعال می لک ہے بیاسلا مل ضد ہے۔ دنا قا مکافراپ ےکیراسلا 
ٹیس ڈگاتے ۔ دولوکوں کے سا نے اپ کفرکواسلام کے نام سے جی یی سکر تے ؛ با 
راہ بکی اپ انگ الک پان ہے اوران کےشتا رادقا نی مد ہمد ہیں ۔ 
2 منافق :ایا جوزبان ےل الا اید رسول اللہ کہتا کراپ دل کےا 
کاچھاتا ہے ا یکو سکومناقی کے ہیں۔منا فی کاکفرعا کاخ سے پو ہک ہ ےکی وکا 
: گڈراوریچھو ٹکوتع گیا ما ۶1 ہت خط اک ہوتا ےکیونکہ وو بھی وقت دم کرد ے 
کون قائل جلائ نان پیا سکتا ےم روف منا فی داہن اپ اکر دا سی سے پوشید 
گے۔ 
53 مت :فیس جودین اسلام یں ال ہوک مرا سمچھوڑدے او رکفراخقیارکر 
اورطر جب( کتالی یا خی رکتالپی یش دائل ہو جاۓ اسےم کے ہیں- 


رسعتقیئ 

علمد سے پارے می عم ہ ےکا پر الام کیا جائۓء الام کے پارے می ا 
جن می ںکوئی شی دش یا بصن وق ا سے دورکیاجاتۓے-ٗ اگ ردون مان تو اسے 3د نک تیر 
رکم جا اود ہرلکن طریقے سے اس مچھایا جاۓ ۔اس دوران میس گر وو دای اسلا مکی 
ےن ذ لیک ودنا ے لکردیاجائۓ تما مہف بٹگگوں پکومتوں اورتو این می بات یکا 
اوت ہے۔اسلامکا بای دہ ہے جواسلام سے مر ہوجائۓ :اس لے الام می م رت کی مزا 
ت ہے یلکن اسلام نے اس می بھی رعایت دئی ہے وی باخو کک یم یکو رعات 
اس دختیں ۔گرقزار ہونے کے بحد اگ جرم جابت ہو جا قے حلومت اپ با یکوفورگی طود پہ 
نے مھت دے دیق ے۔ وہ زارممائی ماگےء تو برکرے میں أُٹھان ۓےکہآمندہ ایا 
بی سکرو ںگاءسمارئیعرحکوم تکاوفا دارب نکر ایچیشمریکی رح زن دک رکرو ںگایگر 
ت ای ئی ںغ اورا کی ماف ا ال قو لجھی جاقی ہے مگ راسلام انی رعایت ہے 
ےشن د نکی مبلت دی جائی ہے۔ا ںولقا نکی جائی ہکرت بک نے معائی انگ لے 
ڑاے کے جا ےگ انسویں ےک بی یھی ا سلام ٹس مر کی زا راتا کیا جا اے۔ 

مر کے واجب اقتل ہہونے پرامتکا اجار ہے۔فقہا کے نز دیک زدشین میس سے 
ا مرن ہو جا لیا ٹوٹ جا ہے۔اگرمیاں چوک مرگ افقار گی اوراس دورات 
اگ کی اولا دپیرا چا ےت ذدہولد ارام ہوگی 3 ات بللمردارے:خواەوہ 
ناب کے نرہب میس دائل ہواہ یا کی اود خرہب می ارت اد سے کا ءذ جج گوای اور 
ٹت وغیر نل ہو جائی ہے فقہا کے نزدیک مرقرمسلمافوں کےقبرستان میں نکی کیا جا٠‏ 
گرا سک لاش لوس ہوۓ ک کیاع رس یکڑ ہے میس ڈال دیاجاۓے- 

مھ ل: ایا ایس جو نا ا سلا ایز سے ہو ےکن پا ا میں ع تا رکفر یر اہو 
ال او یلات سے یں عق داسلا قرادد اہو اپ ےکفکاسلام غاب تکر نے پتلاہواہویا 
رت نف کی خبو تکا اعراف گے کے وج دکا فرادعا تر رتا ہو اق رآن ید 


آیات+اعاد یٹ ما کہ یاصحا ہکرام ریشی ال تھا یٹم کے ارشمادا تکوتڑموڈکر پل تا 
کر کےا نےکفرکواسلام غاب تےکر ن ےک یکو کراب با سام کعقا کت ات ہیں سے 
پر یالھ نکرتا ہو اتب لکرتا ہو یاشرگی اصلاحات والفاطتشہ بد ل ےکن ان کےاجھا گیا 
علیم بو مکوبدل دے۔ لا اٹتم وت ,نزو لک رمع اع اور چہادکا کا شک ےکارنا 
امائی موم بد لکر نے جوم اورمطا اب بیا نےکر ے؛اے ز نل بت سکچے ہیں۔ 

ند یکا محاطیمرتھ ےی (یادوگین ہےزھ ر5 یت رو لیٹس کیک اس 
کی ۔اس ل کہ ال کے پان مم سمازنش یشید ہ ہے۔ اس پرممزانے موت لا 2أ 
جا ۓگ خواہ تال با وق کر ے۔ بی نکی مزا ہے معافئڑ ہولی کہ ہرعال 
زا ار کی جال ہے۔اتاط رر زنک زان سے معافنیس ہوک :ال پمزا 
لاز جار کی جا ۓگ یکیوکہال نے زخدقہ کے جم م کا ا یکا بکیا ہے میق اپ ےکذرک 
ثاب رن ےک کش کیا ہے۔ اس مت ویک شال سے اس کیا جا تا ہے ۔ش بجعت اسلاء 
شراب ترام ہے۔ ا لکا پیا نان یا غرید وف دش تکرہ منو ہے۔ا بکوگینٹھ شراب 
کرتاچقددایک تم کارابکرتاہے۔ ایک دو ریفس سے برارگنا زیاد دنا قابل 
ہے۔ائل ط رس شریعت یں ننیرتراماورنس تین ہے۔ ا ںکاگوشت فروش تکرنابٹر بنا 
ظیرم ے۔اب اگ رکوئی وی خر کا ارشتفروخت' تا ےاورصاف صا ف تا 
تزیما اگوشت سے جس سکولینا ۓے مےنے ہوکش خر یدن چاہتادون نے۔ پین خ 0 
کام بط ر2 ےم سے ےی ڑا کین ہے دواول' 2 ںان دیوں کے 
میں ڑ لن دآسا نکا فرق ہے ای کا مکو متا تام کے نام سے میس سےکوکی دس ٘ 
ایگ ترا مکوف وخ تکرتا ہے علالی کے :ام سے جس سے پر سآسانی سے جموککھا سکتا 
اگل می فرق بیہودیوں ءعیساوں ہکموں اور ہندووٌ لکا قاداغوں ے ے۔ 


ای رکھدادرہنددوخیبرہاتنےکٹروکف رسود بی کر تے ہین ایال اپ ےکفرکواسلا مکہ 
یکرتا ہے۔ اس بات کوئی کیک وشن سکہقادیالی زم بی ےکیوکہ بیلوگ بظاہر 
ان ہون کا ذڈوی کر تے ہیں اورمسلمانو ںکوگمرا ہکرت کیل ق ران مجیدہاعادیث رسول 
حا ہکرام ری ال تھا یتم ہنا ہروزدے نہر دائمگی نا ہرکر ت نظ رت ہیں۔ 
77 0 0 10 ا 
برت می بھی اسے نل مھا جات ۓگ کیونلہ اس نے ای ککذ اب مدکی نبوت اورمطت یکو 
اور پادی مانا ہے۔فتہاء کے ند یک جس خی علی لصو والسلام کے بعد ی مدگی و تکو 
رہم یدرد ہرہب تق کملمان تی مکرےء ا کا بھی دح یٹم جہے جوخود مدکی نو تکا 


علاء وفتہاء کے نز دیک قادیانی دن یں جو اسلا مکوکف راو رکف کو اسلام مکی ہیں۔ 
لیت می زن لی واجب اصل ہے ۔زن بی ہمرن ےھ زیادوبدتر اورگین ہے کوک رھ 
ورک دوبارواسلام یں دائل ہوقذ ا لک تقو ہے ملین نہب کت فیس مر کی 
ا کے پارے میں متہاء نےکھاہےکرج٘ نے خودار ادا کیہ دا میمرت ہے؛ا لک 
ا لا پرجپورکیا جا ےگا اوراگردواسلام ندلا نذا ے لکردیا جا ۓےگا.ع رت ذالد بی نکیا 
او دوالد بن کےتائع ہون نکی و سے کم مرن دکہلاتی ہے :اس لے الن کے با ہونے 
ادا نکی اسلام لان پرجورکیا جا ۓےگابناناگردوا لا قول شک ےتا انی کیا 
ےگا بیس وضر بکی ممزادگی جا ۓگیا۔ الب ہتس ری پشت ‏ عرق رک اولادپرعرتھ کے 
ام جارینئیس ہوتےء بگعا مکاف کے احکام جار ہو تے میں نین اد یایو کی سی سکھی 
جائئیں تا ںکاعم زن بت اورمرت کار ہےگا۔ساد وکا ف ایس ہوگا وکیا نکاجو جم ہے 
رواسلام اوراسلامکوکفرکناء یما نک یآتند سو یس پایاجا حاے- 

الخ تا دای ھی ہیں ہنواودواسلام پچ کرت ہو ہہوں یادہ پیا حر" 


ہوں مجح قادبائیوں کےگھ ر* ٹس پیداہٗ ۓ بہوں اود یکا نکوور ٹچ ٹیس لا ہوتے ان سب 
یکر ہے .مین مر اودز مل کا وکا نکاجمصرف نی سک دداسلا مکوچوزک رکافر 
برا نکا رم یی ےکرد بن اسلامکوکف رکچ ہیں اورا ےکفرکواسلامکا نام دپیے ہیں اور 
دای ٹس پایا اتا ہے :نواودہ اسلا مکویچوڑکرادیالی بنا ہو یا پیا قادیالی ہو۔ ال 
خو بھی بہت سے لوگو ںکوقاویائیو ںک یقت عو ہیں_ 
ا ن‌تامباخا تکا خاع ہیی ےکہ 
ٹس اسلا چوک را دبا خرجب اققیا رک نے+و ور رجھی ہے اورزنٗ 
ا کی بھی اولادیشی اپنے دالد بین کے تائع ون ےکی وجہ سےا مر 
ند یگی۔ 
ا سک اولادگیاولادم نیس پگ خالھس زع یق ہے ہچ ہے برا رسلی ہوا 
سب زن بی ہیں۔ 
َ‫ عق اورزظدلپی دونوں واجب پشتل ہیںءدونوں سے ہکم کے مھاشی موا 
تعلقات رکناترام‌ے- 
عتقیدح وت کے“ فو مکداپنے اہر پہرکتا ا زم اورضروری ہے۔ایا 
جا وی ءہال ہوگی جتادی لکرنے والےکوکف ےی بچا سک ۔ ا دیالی مہ بک تا تر 
جاویلات پ ہے ۔مرذ ایل یکا مطالکرنے ولا اتا کہ بوگر دو باب تاد یی میس باطنی 
ال پرستذرقہ بھی دوقدمآگے ہے ۔قاداوں کےعقامکراورائس پرا نکی جو یلا ت 
زندقہ ہیں ھا ء کے ز دک اگ رکو کیٹ حضو بکرم کی و تکااعترا فکر تے 
شعائر اسلا می پاند بھی دکھا ےلین ضروریات دبین (مشلا مقید وخ خبوت ہقیدہ جا 
نزول حر کی علیہ السلامء جبادو یرہ کے خلاف معقاندرکتا ہوق وہ زم لئ ہے۔ یا 
ضروریات دی نکوالییمن مای جاوی لکرے جوصھا کرام شی الم این اورا ہما ا ِ" 


٭ 
٭َ 


تنگ 
را خلاف+تقا یٹ شرلی تک و دق ہے خلا کیٹ کنا کر خر ' 
ریم ا تر الین ہیںںگراس کے یہہ ںآ پک کے بعدشای ابر دزی نآ سا ے- 

رو ںآتمہاس بات پثتحقق می ںکہزن بی داجب اصل ہے۔اس ےہا کا ہکا 
پن لان نشوار ہے۔ ایک دفعہپارون الرشید کے سا سے ایک مد تی شی کی ایا ۔غلیفہ نے امام 
اوایس فکواس سے مناظ روکرت ےکیلے در ہار جس طل بکیاادرگم دیاکہآپ ال سے مکالہو 
مناظ روکری امام ابولیسف نے غلیف ےکا اےامیرام ون در سی ہگوارگوا لے اور 
ابی ا ںکا من م یئ ۔ ریذن لقی ہے ھرنننی سک را سکومناظردے مچھایاجاے۔اس زن دی کا 
یک بھی زن ود ہنااسلام کے لج طر نک خابت وکسا ہے" 

(جا رت بفدادازخطیب الوگرج14گ283) 

امام الانیاء سیدالکوین ضےخ رآ نرادالی دای“ ی 27 وت پر خی رزازل اور 
یما نک یآ دیی کے کن ہہونے کے لا نی ش رط ہے امت مل کا متف قد د ےکعفرت 
مرف لن جال کےآ خر نی ادررسول ہیں ۔آ پل کے بات مکاکوکی نشی 
خی ری بھی ہ بروزی بات یئ سآ ےگا حضو رب یکر یہہ رھ مکی نو کا ات ہو چکا 
ہےاورآ پل اقم این عی1 خرالاخمیاء ہیں ۔آ نے کۃام امیا سا شیہم السلام کے 
رآ خریی نی ماناضردر بات دبین اورقاحداسلام یس سے ہے۔آ پکگٹاکے بحدخبو ت کا ڈول 
31 اکفروطلالت ہے۔آ پل کے بعد جک بیا وت کا دوگ اکرے وہ کاغخر رط ءڑنھ 8۶ 
اورواجب اتل ہے۔قرآن یرک ایک سو سے زان دآیات مبارکہ او رتفور نی کم 71 
2 2 وسودں احادیٹمبا گال بات پ لال تل ہی سںکرتخفور نا اق انی نک ا قاٰ 
کے خر نی اوررسول ہیں۔ا بات پرایمان'' قشم خجوت'کہلاتاے- 

شتم وت اسلا مکاتفقہہاساکی اوراہم تین ذیادکی مقیدہ ہے۔ دبین اسلا مک پچرگ 
'مارت ا سکقید و کھڑی ہے ۔ بیایک ایا ا قیدہ ےک گرا می ششوک دشباہتکاذ را 


سابھی رخنہ پیدرا ہو جائۓ فو ایک ران تبصرف اپئی متا ایما نکھوبیتا سے بل دو حضرت؟ 
نپ کی امت بھی خار جع ہو جات ہے۔ پپوری امت مس کال ام بابحا ےک ہب 
اول نی ضر تدم علیالسلام اورسب سےآخری رت ئرمصضفی نٹ ہیں ۔جی کہ لاک 
کان ےلکھا ےک ہ: 

”وی لد بعد ہنا صلی ال علی ےل مکف یلا جھاں'“ 

منیی ہوارے نی کرٹ کے بحدوتکاذگوکی باجائ ام تکفرہے۔“ 

کرشم وت تادیایوں کے تام حقائدونظریات زنا دقہ کے زمرے می ںات ہیں 
فا تک یقلت کے یی ران کے صرف چند ز ند بیقاش عق نکد ددر نع سے جاتے ہیں ۔ اس کے 
مطالہ ےآپ خوداندازہلگالی سک ہقادیالٰ دنگرکافروں ہے کس 
یں۔ ا 

دای زناد تفر ۹ :مر زا قادیانی مرسولال ے(خوبلظ) 

قادیانو کا سب سے بڈازند بقانقید ہہ ےک ون مرگ نیو تآ نمی مرزا قاد 
پذات وڈ محھرسول ال ہے .(فتوذ ہاو )اس سلسل ہی مرزاقادیائی ڈوک یکرتاے: 
. بن پکرائ کاب میں اس مکالمہ کےےقر جب می میدق الھی ہمحرسول اللہ دا بن 

اشدا بی الکفار رجا عم اس دق ال یں میرانا مج رکھگیااو درو لچھی _ٴ“ 

(ا یی کاازازسفی ب:ندرجروعا نی خٴائع جلد 48ص 207 ازم زاقادیالٰ) 

سم مآ وم ہوں یو ہوںء می ابرائیمہوںء میں اساقی ہوں ء میں تقوب 
مس١‏ ائیل ہوں ء میس موی ول ء میس دا جوں می لیبن میم ہہوںء یی نج ہیں 
زج تقیقت الویمفہ 24 * ہم ندرجردوعای خزائی جلد 22 صفہ 624 ازم زاقادیال 
ھرزا قادیائیٰ کابیٹا اپے پاپ کے وگ 'محدرسول ال یش ان الفاظ ‏ سکرنا سے 


دہ 

”اور چیک شا بہت تا کی وجہ ےک مزگود(مرزا قادیانٰ )اور / ۰ل 
می کوئی دوک (فرق) باقی غی سک ران ددنوں کے وجودیشی ایک دجو دا یگ م 
رکتے یں جیا الغدچ موود نے مایا سے ےار جودی وجودہ( دج وخل 
الما میم 1۹)اورعد یٹ شی لبج یآیا ےک (عرت رم نےف مایا کک 
مسوخود( مرزا اد ای )میرک قب ری ژ نکیا جا ۓےگاجس سے بجی مراد ہ ےکمدہ 
میس نی ہوں شش یب مود( مر زا ق انی )نکر یلٹا سے ال کوک نیش ہے 
لوت سے جھ بروڑیرٗ نگ میں دوبارودیا مآ ےگا تک راشاعت لامک 
پداکر ناسل تو بای ودان الک ون 
تئ9 کےفران کے مطالق تما مایا بلطلہ ھا مخ تکر کے 
اسلامودیا کےا تک پچ ےا سودرت می اس بات کل تب 
رہ جانا ےل۔تقادیان الما ت‌ رن کا را کا وعد وو را 
کرے جار ٤ال‏ مِلھلا لوا ل٤ہ‏ م ٹر اتا“ 


) ز: افص لس 108۸ءا زا شا اتا اے ان مرزاقادیالٰ) 


ری ٹ انی استعدادادرکام کے مطاِ نکمالات حطاہدتے تھے یکو بہت ٠‏ 
مس یکو ریگ رکم موفود کوق تب بد تکٹی جب ا نے نو تگھ بنا حقام 
کماا کو حاص٥‏ لک رلیاا ودرا رقاب ہوگیا لی خ کہا ۓ لی نکی خبوت نے 
سج موگو کے مو پچینیس ہٹایا گآ گے بڑھایاادراس در گے بڑھای اک با 
کیٹ کے پل بیپہلو اکٹ کیا“ 


رح لفصلسفمہ 4143ءا زم انی راج رای این اےائن مرذاتقادبالٰ) 


ہم ےکی ضردرت بی یی ںآئی کیک کی مود( م زا قاد یی ) ن کم 
ل نا ےکوی ا اگ چڑیں ہے جا اکہ و شخودفرماتا ہے صارو جودی وجودہ جز 


( 180 
من فرق بی وین صن فا لی دماکی اور اس لے ہ ےک ال تھا کاوعدہ 
مخ اکردوایک دفرادرخات این کودنیاٹٹل' جو کر ےگا جن یسا کلآیت1 ھی 
مم سے اہر ہے٠‏ یں موکودخو دش ا رسول ال ہے جواشاخت اسلام 
کیل دوبارہ دنام تشریف لاۓ ؛ ال لے ہ مکی ہک کی ضرور یں ہ 
پا اک رشن ول الک کک ادا و ضردرت ب آق _““ ٰ 
(ر افص لصف ۹89 ازم ذاش اجھاپین اے ان مزا تا دای ) 
گیا لالہالا لی صول ال کے معائی اداوں کےنزد یک الال لم رذارول 
الہ یں ۔ یم اکر زا قادیالی کے ٹٹے مرذزانشی رات ن ےکھامکرمرزا قادیالی خورررسول الڑ 
ہے۔اہذاہمرذا قادیا کو رسول الما نک ریگ پڑ ھت ہیں۔اس لئ ہیی اکلہ بنان ےکا 
فرررییں۔ 
مرذا ایالپ ایک خائ مریدقاش ندال ینام مرذاقادیانٰ کی شان می پیر م 
گے ہدے انا یکقید دا را راغ کاے- 
سے و ب مہ" مم 
00 0ق 00 و 
ا ا ا پا ا ا ا 
ری ا ہے 2 نٹ ان اض 
- 
ض 


ا ات اک 
ایس آگے سے ہیں بد کر اپ ان 
گی 7 ون ان نے 
رک رتو 7 قاں مض“ 
(اخیار بدرقادیان128ک7۲ر1906ء) 


سس ہہس سس سسلگتےےتےکےےسسصصد‪‪۹‪۹‪٠‪‏ ٦ن‏ ۹‪ں_‪٣ -_٣_‏ 


سینا 

جب ال ولفرا ‏ تید ہپپاعتراضش ہوا قا دبا قیادت نے جلق پت لک رح اب 
داد ونہایت افنسوں ناک ہے طلاحظیف انگیں- 

نید م ے جوححفر تک موور کے تضسور پ9 کی ائی اور خ نل اک ہوۓے فی 

صورت میں یک یگئی او رتحضوراسے اپے اتد اندد لے گھئے ۔ پچ رٹم اقبار 

در 25اک بر 4906م می چچی اور شال ہوئی ۔ یں حطر تک مونودکا شرف 

سماعت عاص٥‏ لکرنے اور جز کم اتل کا صلہ پانے اوراس قط وا ند رخود لے 

جانے کے بعر کی کیا پت ےک اس پراغتزاخ کر کےاپ یکر دی اییاں 

وف تکرفا ںکاشموت رےیے“ 1 

(اخہارروزع رز أفضل 23اک 1944 ۸) 

تقادیانیوں سےسوا لکرنا جا ےک کیاصحا کرام شی ال تھا لی عنہہتا لن نان ٠‏ 
امت مسلمہ کےعف رین می دشین ہب گان دین ء اکب بی نبھی یی خنقیدرہ رکھتے ےک اللہ تعالیٰ 
ان حعی بکرم تحضر تگھرسول انل کوقادیان میں ددبار ہم یحو ٹک ےگا؟(نحوزپائڈ) 

ال ز یا نفقیر: کے پادجورقادیالٰ خررسا نج ؤں۔ ا لںکفر يکقی رکون 
اعلام کے ہیں۔ ا مقیدرہ کے نہماۓ وال ےکوکافراوردائرو الام سے نار پت ہیں گیا 
کین م زا دبا یکم رسول اللہ صلی نہکرے پا یہ می“ مھ رسول ال ےمراد 
ھرزا قادیانی نہ لے تد قادیاضوں کے نز دیک ضسلما نیس ۔آ پ خودفیھ لک بی مکک راس ے بڈا 
بھی اک زم اریا+وکھاے؟ 

تر نی ےک ہدیا اپن ال لمقیدہکواسلام کے نام پ شی لکرتے ہیں سید کہ 
دوت رر رر کے ذربیے اپنے ال زط یقاۂتقید کیب رپرنشھیرکرتے ہیں اوراگ ری کیا 
جا و وومظلوم بن جاتے ہیں اود پرد پنن اکرتۓے یں کرای اپنے خرایاعقیدہ کے ماق 
زخدگی بس رکرنے سے رہوکا جار ہے۔ میق انسای کی خلاف ورزی او رز ایی اکہار پرڈزشن 


182 > 
روڈ دج .×ط ا بلاشپرا 
عخقید ہک مناء ہپ رقا دای زع بی ےکر دہاپ ےکفکواسلا متا اودلوگو ںکوا سک ینغ کرتا 
قادیای ناوت ر2 حضورن یکٹچ می وین 
تقادیانیو ں کا عقیردے:”1 تفضرت کٹا اورپ کے اصحاب۔۔۔عیسا تیوں کے 
کان رکھا لیت تھے ما لائییشجو دب یت اورک چب اس میں پڑی ہے۔“(فوزبلظ) 
(مرزا قا دای کاکنوب:اخبارأفضل ا دان 2ھ فرورں 924 
قا دیو ںکاقید ہ کہ بش 7ڈ مکنا ہاور ڑے سے بڑادرجہ پا سکم ےتا 
مھررسول الأنٹلا بھی ہہ سکتا ہے '(نھوزبالظ) 
(م زایشی الد نو دکی ڈائری ءا شب رأفضلتاد یا ن نر *ءجلد 0 47۰4ء 2را ل922 
قاد ای کاعقید ہ ےکم رزا تا دیای کاشخلیت تما انی ءکرا یشمول معنرت مرن / 
جو ہے.(زتقیقت الوگیص 73 مندرجرددعائی خزائی 22م 76 ازم رذ ا قادباٰ) 
ار نکرام ! آپ خودفیھلہکری کہ ای ےگمتاخاشہاورز ہے مقا درک دا کت 
پھ اک ککاف رہوگ راجپای ہمان رش دک اورادیایوں م کیا فرق بای وکیا نلم مہ ےک 
دو ای ے ام دکواسلام کچ ہیں ۔خ وک سلمان سک ہیں اوراگرکوکی تن تق رک ےکآ پ شا 
و تسس یزیر : 
1 ہیں۔ا ںوت کھت ہیں ۰ 
قادیا دق ر3: وت جارے۔ 
قادیان فخ ہت دح ہیں جواسلا اتی قد ہے۔ ووسدانوں کے اس اہم 
کومردوپضتی ءشیطانی اوقائ لف تکقید ومک ہیں -۔(نوزبارظ) 
(ملفوضات 10 مم ۹427از مزا قادیا نی شکیمہ برائین اد یح جم 139138183 
مندرجددعائی خم:ائی جع 24ص 306ء354 ازم زاقا دای ) 


ریو 

مزا قا یا ٰتاہے:” موک ہے دوش نے تھے پاا۔ یش خداکی سب راہوں شش 
ےآ خرىی راہ ہوں اور شی ال کے سپ ارول میں ےآ ری ورہوں۔ مت ہدج 
جج ےکیھوڑتا سے ے ینک میرے اخ رسہتار یت 

شی نو صفہ 88 ,تد رجرردعانی خزائ لد 419ص 1م زاتادالٰ) 

تا دیو ںکاعقیدہ جےکہ پا خانو ںکی خیاست اٹاوال چو با گی جو چود×ہزالٰ و٠‏ 

جیل مس دی رہ کا ہو۔ ا لک مال دادیاں اورنانیال* بھی ابیےجی سک موں میں شقول 

رچی ہوں :وہ مار رکاتے اورگوُٹھاتے نہوں ہاگ رمسلمان ہو ای دہ نی اوررسول بن سن 
ہیں۔ 

(ت اق القلبیس162مندرجروحائی خزائی ع48 279- -200انعرزاقادالٰ) 

تین عیشت وت کےسل لے م خلف زخد ینابلا تکرتے ہی ںکخا تر اضف نک 
می نیو ںکی مہرہے۔ لین پیل ال تی وت عطا اکرتۓ یلکن اب حضو رن یکرم لی 
اطاعت سےثوت لگا یی ٹن آپ ےکی ا طاعت ادراحا حکر ےگا :پا ٹس 
برا رذگادرکی گے اوردہ نان جا ۓگا بھی کت ہی کن یکم اپنے پہلو ںکی آخری 
ہیںءآ مز و نے وا ننویوں کے یں بھی کچ ہیں ”جو بی ہے :دچیگئیل ھت ہر 
شس انی حت وش اور داضت وا ہرات سے نی بن ما ہے بجی کچ خی کیو ت گا 
انت ے ام تح بیال‌ے ےکی ہرد وم ہئی ہے؟ سے یش جار گل ء۸ ہاچ ہے۔ 1 

ن زا کے باوج دد ای خکرسلما نکچ ہی اوران عق کے مان دالوں 
کوکاف ا ےک بین زنادۃ یی نام اسلام کا لیت ہین اب ےکف ربق کدکواسلام کے نام پچ 
ٹپ کرتے ہیں کا ا گی بات ےکسماڑ ھے چودوسوسال سے امت ررش 
رات کے مات رارک اس متفقرادرنی رز لنقید +کے ماۓ والو ںکوکاف رکا جار ے۔ 

ادا زناد فی رونفرآن گیزا 5دا بازلگا۔ 


قادبانو کا خقیدہ ہ ےک رق رآآن ہیدہ مرزا قادیالی پچ دو پاراترا۔ اس سلملہ ٹس 

قادیانی کا اتا ہے :لپ م کچ ہی ںک یت رآ نکہاں مو جود ہے؟ اگ رق آن موجودہوتا سی 

آن ےک کیا ضردرتٹھی ۔مخشکل ت بجی ہکرت رن دنا ےا ٹیا ہے۔اسی لے ذ ضر 

لئ یکم درسول الأم لا (مرزاقادیا نی )کو بروزی طود پردوبارہدنایش مبحو ٹک ر کےا 
پق رآ ن شریف ااراہارے۔“ 

(کیہ افص لصف 173ازصاجززادی مرذایٹ ردام اے این مزا ادا 

ھرذا ا دای کنا ہے :”ق رآ شریف خداکیکتاب ادریرے تک بات یں ۔“ 

2ج کر ئموعددی والہا مات فے 77ض ہار ازم زاقاد با 

وومیدکہتا ہے :”کے اتا وگ پرالناعی ایان ہے جی اک ہر یت اوراکیل اورترٗ 


(انی نہ ر4 صف419, ند رجرردعالٰ خزائع لد 17 صفہ 454 ازم زا قادیا 
قادیانو ںکا تقد ےکیج رآآن میرم سخ شمرو ںکاناماعزاز کے ساتھدر نع 
مھ ینہ قادیان۔(ازالراد امش 40 من رجرددعاگی غزائین ج3 ش1440 ازمرزاقادیالیٰ) 
تقادیاخو ںکا خقید ہ ےک ہق رآئن مجیدقادیان کےقریب نازل ہوا۔ انس سلملہ مم 
دای نے قرآن ید آیات مک ری فبھ کی ۔صرف امو ض لا تفر ہیں 
نا نراہ قریبا من القادیات۔ ویالحق انرلناہ و بالحق دزل صدخ اللّهُو 
رسوله۔ 
(ت کرو ومدوگی دالہا ءال 69 چا م ازم زا قادیا 
قادیاخوں کا حقیدہ ہ ےکرقرآن یدک مندتھ ذی لآیات مزا قادیالٰ ازل 
ہیں ۔اب ا نآیات کے مصداق جحفرتگھنفانیس بب رزاتقادیائی ہے۔(نعوزبالظ) 


7 کرت دباۓںدہ ا ظنمھرنھیون) 
نے رنول لی 7 کر علی لنکقا رر ۶9ر مارک 7 

ٹہ چا انمزاقادیالیٰ) 
مین وا یس و القرآن امیر (ھ۳ئھ 

"کر خروم دی دبا تل 388 ٹن ارم ازمرذاادیال) 


7 م ار پ ا 


”وماارہ 
( کید بات 4ٹق چارمازمرزادیالٰ) 

اسےککچے ہیں ذنادقہ ۔سب جاتے ہی ںکیق رآن مدکی ڈکورہآیا تحضورن یکر ٹا 
پنازل ہوئی ہیں متگرقادیالی کے ہی ںکہ ات مرزاقا یی برنازل ہوئی ہیں (خحوذبانڈ )اور 
لو یکرت ہی ںک ہپ سلمان ہیں اور راہب اسلام ہے۔اگرکویٹ کے کرت ر رآن یدگ 
مندرہبالاآ یا تآ نمی مزا ا دیالپرناز فیس ہوئی تة تا دیاننوں کےنزدیک این کافر 
ارت ہے اوریے ہز نادقہ ج١‏ کا مب برقادیانی ے- 

دای زنادق نر :حر تی علیہ السلا مک نعین 

تادیانیوں کا خقیدہ ےک رجخر گی علیہ السلا مکوگالیاں دی ء بد زہالیٰ او رجھوٹ 
لوس ےکی عاد ت یھی انہوں نے ایل چا کیگھی۔انکاکوی ونس پگییجزہ ما والو ںک 
گنیگ اں د ےتآ پ کے اتد سوا ۓعمردفرجب کے اور ھی تھا 


(اضا مم حاشییں 7,6,5 ءمندرجرددعانیٰ خزائی ع44 294۲289 ازم زا7 

قادیايوںکا امقید د ےک یتیک علیہالسلا شراب پیا الج 

2 (صکی و ح73 مندرج ددعائی خی 7۹19ءا 

قادایو ںکاعقید ےک حر تی علیہ السلا مکی تن دادیاں اور ناخیاں ز نا کاراہ 
شحیں.آ پکھریوں سے تکرت ے۔ 

(اضجامآئفمٗماش یہ مندرصددعانی خزائیع 11 291ازمرزا 

تقادباو ںکاعقیدہ ےک ححخرت مری) نے نا جائ ق٥‏ لک وجہ سے اوس ف نجار نا 

شس سے یا کیا پ رض تہ علی الام :ابی دالد وت مری الام ےگا 


دوماہلم۸ پراہہیۓ ۔ 
“تشخوح ص20 در ددھانی زان ع49 مس 18 :یش میس 24 من در ردعالی خا 
0 356:3586ازمزاقادیاٰ) 


اتا ءکرامال تھا یکا خائ ا تاب ہوتے ہیں ۔و ہجو گن الفطا ءہوتے ہیں ۔ا 
ےکا ای کی شان اس می “مد یھ متا تی ای کش سکودائرواسلام سے مار 
ہے۔ حر گی علیہ السلام ءال تھالی کے بگزھ: رسولوں بش سے ہیں ۔ت رآن 
رت می علیاسلا مکی شان ہ۲ کات نال ہو یں لک نآ نال مزا دی 
آپ ککتحلق جھ بازاری زان استعا لکی ہے دہ قائل صدنفرین ہے انسوس اہرقاد الا 
گرورڈاقا انی انام حعفر تنعل السلام کے تلق ب کتاخا ہنا ند رکتا 
کاشیرکرتا ہے اودا سک کرتاے .اس کے او جودوہ اپ مرج بکواسلام اوخ رک“ 
ہے۔اس ےک ہیں زم 3ہ۔ 
اد یایز نادقف 8 :دنر مد مستوں دمقاما تک تن 
قادیاخو ںکامقید ےکی ذاقادالی کے اتی سحابکرام ہیں- 


67ہ 4 
(ضیرت الد ج3 128ا زم زان ھا مذادیلٰ) 
۱آ تاد او ںکاعقیدو کیم زا قادیال یک دک ام مجن ے- 
(مخوطیات اج بی او ل ل555 ازم زا ادیالٰ) 
قادیاخو ںکاعقیر+ ےگہٹرزا قا دبا ْکاخا لان ال ہیت ے- 
کے (دیشین 5 ازمزاۃادیال) 
تد یایوںکاعقید و کہم رذ اتاد یائی ۸۹00ا سان رش ال تھی عنکے برا ے۔ 
(زنزول !یع ص4014 ند رجرددعانی خزاکی 18۴ گ 477ازمزاقادیالٰ ) 
قادیانیو ںکاقیدو جک چہادترام ہے۔اب جو چھاوکرتاہے دوخدا اشن ہے۔ 
(تجفیگوٹڑوٹمیری 4۹ مترجرددعای غزائی ع 47ص 78,77 ازم ذاقادیالیٰ) 
قادباخوں کا مقیدہ ےک ہقادیان ( مزا تدالی اش دی ) جانے پر سے (یادہ 
اب ے۔ 
(ئزکالات اسلامس 352 مندرجددعای نمزائی ج5 ل352ازمرزاقادیالٰ) 
قد انیو ںکاعقیدو ےک الام کے ددھے ہیں الیک بک دا تا کی اطاع تک بی اور 
- ےاس سلطنت ( انم رب )کیج نے اکن :فا مکیا ہواہے جشیی نے نھالوں کے پاتھد سے 
پنے سا ںاد انیو ںکو نا یی سودوسلطنت برطامے۔ - 
(شہارت القرآنمفمہ 34ہ مندرجردوعائی خمزائی ع6 ص380ازم زاقادیالٰ) 
مسپراتصنی ارت“ مل کا قبل راو ے۔ تضورسرورکانیات ال کے سفشحرانع انی 
مز لی یہاں تام انمیا ,کرام نے تضو ٹل کی اق ای نماز ہڑھی۔آ پکاٹ حضرت 
ایل علی ال سلا مکی معیت یی یہاں سحفت افلاک نےکر کے الڈرتواٹی کےتضور چچے تج 
انی مزا اد یا مسج انی کے بارے می ںکچاے۔ 
'والیسجد الاقصے المسجد الڈی بناہ المسیہ الموعو فی الفادیان' 


مجانصی سےمرادد+سبر ہے جےادیان می کپ مود( مزا ا دیالی ان بنایا 
(خطہہا لہا می 258 مندرجردوعانی ن ای18 گ28 ازم زا 
معراج میں ج تحضر ت؟اف سج ال رام سے بد لن کک سیرفرماہوئے ۷وہ 
موا بجی ہے جوا دیان ہی حا نشرق دا سے جن کا نام خدا کا 
نے سارک کھاے۔ 
(خطہرال ہام ی22 مندرجرددعالی خزائی 22۴16 ازمزا 
مندرحہپالا قادیانیٰ قائداس قد رگتاخاشداورد لآ زار ہی ںکہ یہ پ رما نکی 
برداشت ہیں لن او ایال ان عقاکدکواسلام کے نام پر کرت ہیں ۔ دہ ان 
اسلائی عقائدکانام دتنے ہیں ءا ےککتے ہیں ذظ تہ 
قادبالی اپ نکفرکواسلاماوراسلا مکوکنف رکچ ہیں ۔م رذ قادیانی کےآنے کے 
موجودایک ارب شی ںکروڑملا نکافر ہو مگ کیوکہ دہ مرزا قادیا یکن نہیں اےۓے٣‏ 
جنہوں نے مرزاتقادائیٰ کا نا یی سنا دویھی مسلرا نیس ر ہے ۔یگو یا ملا نو ںکیا 
اب ے' ےہول پرارەں ردئی۔اب قادیانوں/ مزا اتوں کے نز د یک سلمان ہو 
رز ادا یکو انال زم ےءاگ رکون تضور نتم لین عفر وڈ کی گی اطا 
ارک نگ یزارد ےگ رم رذ تادیاٰیکونہ مانے فو ا کی ضا تنمکوننیں اس سلملہ 
جوالےلاحظف ات٠یں۔‏ 
'تلك کتب ینظر الیھا کل مسلم بعین المحیة و المودة یغع من 
معارفھا ویقبلنی د یصدو دعوتی الافریة الیفایا “ 
تھجمہ: مرگ ا ننکتابو ںکو ہرمسلمان محب تکی نظر سے د بنا ہے اور اس کے 
معارف سے فائدہ ُٹھا تا ہے اورمی ری جو تکی تقمدب کرتا ہے اور اے قول' 
کرتا ےگ رک رموں ل(بدکارگورتاں ) ای اولاادنے می ری تفم ب نکی سکی_“ 


الات اسلاءمخفہ 548,547 مندرجرروعائی خمزائن جع 548,547ازم زا قادیالیٰ ) 
”ٹن ہوارے ہیانوں کےنشزییہو گن ادرا نکی و رج سکتتوں سے بد ائی ہیں“ 
( مال ہریس 3 مندرجددعانیٰ خزائن ج44 53ازمرزاقادیالٰ) 

”راک ایا انس جو موی علی ا سام ما تا ےگ ری عی الس لامک ما گر 
مھنٹ ونس مات اور یا م نٹ کو ما ضا ہے پر موکود( مر زا قا دای ونس مات 
٤وہ‏ نر فکا خر یہ پا اکافرادردائرواسلام سے فمارحع ے۔“ 

(کدرہ أفصل ش۱۹۹0 زم زانشی ردام اےابن مزا قادیای ) 
”خداتالی نے میرے پرا کیا کہ ای٠‏ جم کومیری دو تکپئی ے 
اراس نے بجھقو لی سکیاءوہۂمسلران یں ہے“ 

( کر وجھو دوگ دالہامات ال 519 ٹن چھارم ازم زا قادیالیٰ) 
”کل مسلران جوحخر تک موفود( مرذا تا دیای )کی میعت میں شا لک 
ہدۓ روا امہوں نے حر تک موگود( ھرزا قادیالی )کا ا مچھ ایل سناء وہ 
کافراوردائرواسلام سے خمار نے“ 
تی دائت ہش 3858 مندرجرانوارالعلوم ج6 ص۹40 ازم ذانٹ لبیک ودائن مرزاقادیالیٰ ) 
قول مرذاقا دای اےالہام ہواگ ٹس تی پیردئیائئ کر ےگااورتیکی معت مش 
یس ہوگاادرت اخالف رہےگا۔دوخداادررسو لک نافر ما یکرنے والااوڈآنھی ے۔؟“ 

(جزکر جم وعددی دا لمات 280 ٹن ارم ازمرزاقادیالیٰ) 
قادیاوں کے ان زند یقازقاکدکی ہنا ء یمن کی خخب مور یحلومت نے متفقطوز پ7 
ر974 ءکوآئیس خی لم زفلی تقراردیاادرآ تن پاکتا نيضن (260)3 شا لکاادراخ 
ا۔ وی نظام قلومت می ںکوئ بھی اہم فیلہ بی اک تق را ےک طیاد پرکیا جانا ے- 


309934 


ودنا کی تار کاواحعدواقعہ ےکیوصت نے فیماکرنے سے پیل قادیالی اعت کے 


س ‏ براومرزاناصرکو پا لیمنٹ کے سا مئے ا نظ یی کر ن ےکی بلایا۔ کی بی اس کے و 
کے بعدحلوص کی طرف سے اماری جنزل جناب ما ہختیار نے تماد یالی قد کے جوانے. 
ال بجر ںعکیا جس کے جواب می مر زاناصرنے تصرف نرکودہ الا تما عق کددنظریا تا 
اختزا فگیا لہ ال حاویلات کے ری ال نکا دفا گج گکیا لیکن افسو کی بات بہ 
قد ای : ا رلیمنٹ کےاس سفق فی ےکوی مکرنے سے جسرالکارکی ہیں ۔ دہ کچ ہی نکد 
کوئیعلومت, پارلیمنٹ پاکوئی اودادار ویش ان کے ممقا کی مناء یسل ق راس و 
کی الیاوہمسلرانو ںکوکا فراورخو وک سلمان سک ہیں او ین می دی اپی حیشی ت لیم 
کرتے :اس ےکچ ہیں زمدقہ- ۱ 

قادبانی ودک دنام شود بات ہی ںکہ پاکستان مم ہم پنعلم ہور اہے۔ ہار ے 
سب کے جار سے ہیں۔ می ںآذاد اظمارنٹل وی اقوام تید: سے ہیں 
یں بھی یبددلوں اورعیساکیوں سے دبا ڈلواتے ہیں ۔عالاکہہم کی سمادیاکی جا ئبا ت 
ہی ںکیخم مرزا قادیا یکوشھرسول اللہ ہکہو کی سلمانو ںکا ہے تم اس پر ضہ :نہ 
خر شراب برزم زم کا“ یل نہ ا2ء کے اورخ زی گوشت علالل ذ ہچ کے نام برفروشت : شگرو 
کفراورز نوا مامت شی بے س سی ےکف رتا ون ریاں 
بھ رٹنا ؤشہیکرتے ہیں۔ 

تماد بای کا نی انگ :ق رآن انگ :ش یقت ا ٹک کہا ٹک ء امت ا گے۔ں 
ماد انی جماعت کے دوس رےخلیفیم رر الشزالدبینگمودکااخترالی بیان مطاحظیغررانحیں- 
رت موکورڑ را قادیانی )کے سرے کے ہے الاظ مر ےکاوں 
میں ان رہ ہیں۔آپ نے فر مایا میرفلط ےکیردو۔ ےلوگوں (ملرائوں) 
ے جمارااختلا فصرف وفا تک یاادر چندسائل مٹ ےپ نے فرایا۔اللہ 
تل یکی ذات ء رسو لک راپ کن ہخرازءروز ہو زکو ہمغن لک یپ نے 


تفحبیل ے جا اک ایک ایک نز میں میں ان ( ملانوں) ے اختلاف 


حا 
بہجتمرز ایی الد بن غلیہقادیان ءمندجاخبا أحضل “جا ان19 بج ر13 :مور 
جرلاکی1931ء) 
اس کے باوج ”ا دای اپ رج بکواسلا مک یں اد ہوارے دی کا نامک ررکھتے ہیں 
یم زا تا دا کادین اسلام :نر تیگ رسول ان کاد ینک کی جیب بات ےک یمرذا 
لی سے بلتضو ری کی کین اسلاماوداس کے مان دالے سلمانبم رذ قادیا 
1ہ کے بت حضو رن ریز کا دی ےکفراوراں کے مانۓ دانےکافر وذ الا پاظ 
زا تقادیاٹی کے ددجم ہوۓے۔ ایک ےک نو تکادثوی یکر کے انا نگ رہب تیااودا یکا 
ر ام الام رکھا۔ دوس را ایک تخفرتم ٹا کے× بن الام کوکش رکہا۔ 
تاد ہاو ںکوشوائ اعلام کے استعال اور ا کی تو ین سے روک کی 28 ایل 
184 لوت پاکستان نے اقتاغ اد یاضی تآ رٹ جار کیا٠‏ ج سک رد ےادیالی اپ 
اہب کے لے اسلائی اصطلا حات استعال نی کر گت ا دانوں نے اس پان دک دفال 
شی عدالت لا ہود ہا یکورٹبکون پک یکورٹ وغی رو می سکیا چاں ای اکا یکا مضہ سنا 
پڑا۔ ا خ راد بانیوں نے پدگی تیاری کے ساشح ریم کور ٹآف پا اکتان ٹل اق ل دامٌک یکم 
یں شع ئراسلائی استعا لیکرن ےک ا جات دی جائے۔ بی مکور ٹآف پاکتان کال نأ 
نے ا سکی سکیل ساح تکی۔ دوڈوں اطراف سے دلال و برائین دپے گے ۔اص٥‏ لکتابوں 
سے نا زرغ تر ین حوال رجات پیش کن گے ۔ ریگ یادد ے کر مگارٹ کے یی صاجا کا 
تی درس با سلائی داراعلوم تی صا اٹ تھے ناب یاقاون پڑھے ہو تھے- 
ا نک کامآ تین وقاون کےتحت انصا فگیا اکر ہونا ہے۔فاضل نے صاحبان نے جب تال 
عق و ا زکررہ جئ۔ فاضل بی صاحبا نکاکہنا تھ کہا دیالی الام کے نام پ4 


لوگ ںکو موک ہے ہیں جع دیا ای کا یدیق یں ہے اورتہ ی1 ا ڑٛے کسی کے 
ساب ہوتے ہیں ۔ بی مکور ٹآف پاکتان نلچ کے ارینی فیص یلین نا م۲ 
(1718 961008 1993) کی رو ےکوی اد انی خو رسلا نکی سکھلوا سکتا اور نہ دی 
رب کم اکا ہے۔غلاف ورنزئیکی صصورت میں وولھزہ بیات پاکستا نکی دع 5-6 
26 کےخت زا مو تکامستوجب ہے۔اس کے باوجودقاد الین ؛قانونا 
دای فیماوںکا برق اڑاتے ہوم خووکسلما نکہلاتے ءاپنے مج بک ال رج 
لی مکرتۓ ‏ شھائر اسلائیکا خسف راڑاتے اور اسلائی میس شحصیات ومقاما کال 
کرت ہیں ہت رخ لی می ےکہقاد او ںکی ا نآ یکن :خلا ف ا ٹون اوراتچال ۱ 
انیس رکرمیوں پرقاون ناف ذکر نے وا نے ادار ےج ما فلت اورنما موی ایا رک٤‏ ہو ے' 
نس سےٹنک اوقات لا ان آزڈ دی صسوتھال پیداہ٭جانیٰ ہے ۔خ وپ رم رٹ کال 
اپ الد کر نے والے ادارے چر با فلت اور نمامڑی اقیار جئے ہو ۓے ہیں اننس ے" 
اوقات لاء ایآ رڈ ری صورتال پیداہو انی ہے۔خود پر مکورٹ کےف لچ نے اپنے 
ام فیصل یش رآکھا: 

”رسلا نکی جس کا ایان پت ہوء لام ےک رسول اکرم ٹلا کے ساجھ 
اپنے بچوں: نماخدان ‏ والدین اور دنا کی ہرکیوب تین تھے سے بڑ کر پیار 
کے( بای“ تاب الایھان' باب ہب الرسولی گن الا ىال'') 
کیااسی صورت می سکوئی مسلرا نکوموردا امھ راسکتا ہے ۔اگرو+ایباد لآزار 
موادجیہاکہمرزاصاحب ن ےی قکاہے سنہ پٹ من یا پھٹے کے بعد اپ 
آپ پتابوددکه گے؟ 

یں اس لی مت می ادیانیوں کے صدسال جتش نکی تق عبات کے موق پہ 
قادیاوں کے عطاضیرد کا تھسو رک رن چا ہے اورال روگل کے بارے مل ءوچتا 


تق 
چا یے :جن س کا انار لاو ںکی رف سے ہوسکتا تھا۔اس لے اگ سی قادیانی 
کواتظام کی طرف سے یا قافو تا شعائر اسلا ما اعلاعیہ اہ رکرنے یا اٹل 
پڑ ھک اجازت دے دی جا فذراقدام ال سک شکل یس ایک اور رشدی“ 
(نی رسواۓ زمانہگتتاخغ رسول ملعون سلران رشدرکی شس نے خیطانی آیات 
نائ یزاب میں تضور ٹل کی شان یس بے عدت می نکی )خی قکر نے کے 
مترارف ہوگا کیا ال صورت مم اتنام ال کیا جانء مال اوراورآزادگی کے 
تحخاکی نات د ےکی ہےاوداکرد ےک اکس قیت پردڈل یر اوناے 
کہ ج بکوگی ادبالی سرعا کی کاڈ یا پٹ رک کیا لکرتا ہے یا 
دو یا نل دردازول یا سچنڈریوں پلگمتاہ ادوس رےشتائر ا سلائیکااستمال 
کرتا ایس پڑہتا ےت ہاعلاغی رسول اکر پٹ کے نام نا یکا بت اور 
دوسرے انا ۓگرام کے ا سا ۓگمرائ کی تو ٹین کے ساتح سا تح مرزاصاح بکا 
ہربراونچا اکرنے کےمترایف ےجس سے سلانو ںک نم ہون ویش میں 
آا ایک خطرکی بات ہے اود یپوٹ امن عا کا موجب مین تی ہے :ینس کے 
تج جان درا لکافتصان ہوکتا ے۔“ 
) شھیرالد بی ہنام 41817 ۲ 1993ء) 

ریم مکورٹ نے اپتے نمی ریککھا: 
”م بییجیکنس وکع کہا دنو لکوا ہی تحضیات ءمقامات او موا کیل مۓ 
خطاب؛القاب یا نام پش ککرنے می سیا دشوار یکا سام اکرناہڑےگا۔آ خرکار 
ندوؤںہ عیسائوں مکھوں اود دنہ براددیوں نے بھی فے اپ بگو ںکیلے 
القاب وخطاب بنار کھج یں ۔“ 

بل :جا بیس عبدانقدیچے بریصاحب 


طز مود 
1 جنا بت گج ففللون ماب 
٭٭ جنابٹنٹ سم اخرصاحب 
٭٭ جنابیٹنٹس دی نخان ‌صاحب 
) ش الد کن منام رکار1748 2۶8 3 199ء) 
اسسلائی شرلجت اورقانون نہ ہوے یا وجہ سے تام مسلمانو ںکا فرفس سے دہ قادبالی 
سس سے ہج یں 
ور رت کو ناد ال نک تم 
ش لو کو 


(لگران:3ع) 
مومنو ںکو چا ےےکہایمان دالو کو ہچوک ہکافروں ( یہو دیوں ؛یمائیوںء 
قادیائوں) اکواپنا دوست تہ بنانیں اور جوکرئی ای اکر ےگ دہ التھا یک 72 


مایت مل 

لاد کیا2 سر ا 20 مال ل2 

کدللة اذا اھ نمی 27 
(مارلد:22) 


ال تھالی اد رقامت کے دن پہایمان رن والو کو پ الڈرادراس کے رسو لکی 
عقالللتکرنے والوں سے بت رکتے ہوئے ہرز تہ ہیں گے ۔گوہووان ے 
اپ نان کے نے ان کے بایان کک کے ییوں دہیں؟ 
يف فراع مرن یہ 
بالمونة وقتن 202 


رس 


)1: ٣ 


188 
اے دولوگوجوایمان لاۓ ہومیرے اور اپ رشمنو ںکواپنا دوست ثہ بنا تم 7 
جک کل کےساتھ جوقہادے پا ںآ پا 


ر‫ 7 9و و ار 
وا دن رض 
ارہ یں و 
نعل ال ئل ريد نرَل 
(۷0)۔:3ع) 


اے ایمان والو! ا پاپ لکواوراے بھائو ںکودوست نہ بنا اگ رد ہکظرکز 

ان سے زیادوزیز رٹ تم یس سے جویھی ان سےحبت ر ےگا +دو دا ظا 

ے۔ 

حضور نات الین ملا نے فربایا: آخرکی زمانہ یس بڑ ےکذاب ہوں گے جھ 

تمہارے پا ایک باقس لانمیں گے جن نکوقم نے نہسناہوگا۔ نتہادے پاپ دادا 

ؤ2 0 ا ا 

تمکوفتریی نڈایش۔ 

( سک بلدازل )۹٦‏ 

اامماین قدامرنےجحفرتگی* سے دوای تک ےک یبر کت کی تیب دی جا ےا 
من زنر لن کو کی ت خیب یں دگیا جائۓے گی ۔حفر تی ری ال تعالی عنر کے پا کا اگ 2 
آ لا گیا جوعیسائی ہوگیا آپ نے اسے فو ہکن ےکی ےکہاء ال نے اڈکاکردیا جس را کاگردن 
انان یگئی .ای کگرددحضرتی" کے پا لا گیا جغا ز یذ پڑت ین زند بقی تھے ج سک 
عاد لگواہوں نے شہادتچھی دی۔انہوں نے بپدد بی سے ائکارکرتے ہو ت کہ اکلہ ہماراد ین 
رف اسلام ہے۔آپ نے النالوگوں سذ کا مطالیی سکیااورا نک گر ان ا دی ا رآپ 
نےفرایان 


1986 
شی معلو ےکی نے نھرا یککیوں تق کی تغیب دات ‏ می نے س " 
لے ای اکیاتھاکیاکی نے اپ دی نکااخہارکرد یھنن زندلیقو ںکا یلیل 
کےخلا فو تگھی میا ہو گے تھے اسے مس نے ای لی لکردیاکہمراپنے ۱ 
کفڈروکف کے سے اڑیاری تھے عا لان ان کےخلافگواتی تائم ہی _'“ 
(ا ابی قرام 141/9) 
قادیان مزال اسلام کے بای ہیں اور دنا کاصول کہ باخیوں یتم 
تعلقاتئیل ر کے جات بکہ باخیوں ےٗ٥لتی‏ رک والابھی با یصو رکیا جا جا ہے۔ قادا دا 
ۓکوگ یح کنا الواطران کے ز ند بقاش ما دکی حوصلہافزائی کے مترارف ہے۔ ال 
ہب سے پیا لئ لومت رہف عاحدہوتا ہےکہددان تہ پرداز مق بن بعد 
رسولی اٹ ین برل د ین فاقکو کے مطای شری یت زین فک کے اس فک فلت عککرے| 
اسلام اورت اسلام وا فتنکی لور سے بچاۓے رملکگر اتا ن ححخرت لاس اقبال رم 
علیرنے فرمااتھا:' قادیاغیتہ یہو دی تکا چب ہے ۔قادیالی؛اسلام اورک دونوں کے ند 
یپا ملمافو ںکوان ےکی بھی مکی رداداری برتاقی طور پہترام ہ ےکلہ برلوگ 
اٹائ خراک یں یقت مس ا نکیا متقصمدحیات ددفا ت کپ یا آ رہد یکا موضوغح چھیرکر 
آ انی مرذاقادیالٰی کی وت ورسالت اکولیمکرواناہے۔قادیاشوں کے ساتھ دوستا ن تماقا 
لام کلام یل جول مکھانا یٹنا یھنا شا دی ھی مس شرک تکرنااکراناء رح کے موا 
محاشرتی سای تعلقات رکھن انی ترام ہے ان ےتیارت ‏ لین دن 0 ە>-., 
سولوں ء بووں ؛ریٹورانوں اور چتالوں جس جانا ترام ہے۔ ا نکاجنازہ چائزنڑیں ان کے" 
لے دعاۓ مغفر کی اجاز ٹل _ىیمصلمافوں کےقبرستان میس ا نی سکیا جا سک ۔کیولل دی 
کی عاری زندگی می کافر ملا نکوامٹھی سن تکوگوارا یں ق رم گیا ق برک طو یل تین زندگا 
اس ارجا غکوکی ےگواراکیا چاسکتا ہے ںای اد یا کی دیناپالینا ترام ہے۔اسل سے اک 


طز تو4 
مسلمان دائرہاسلام سے نار ہو جانا ہے کی قادیالیٰ اذ چچرعلالی اور انی بلیترام اور 
مد رارے۔ 

اےٹع نم و تل کے پروانو! 1 ہھمچھی اپ گر بافوں یں ہاج ککر میں ,کیا 
ہمادرےادیائُوں کے سا تع معائشی اور محاش لی تعلقات نی ں؟ کیا ماراکرلی دوسحم ال2 
یں ؟ کیا ہم قادیانوں کے ساتھ پیے فی ؟ کیا ہماراسی قادیالی کے سات کوک کارد ہار 
ٹھیں؟ کیا ہم :قد انیو ںکی مصنوعات ملا شیزان وی رہ کا استعال تق نی ںسکرتے؟ کیا ہم 
قادیاخوں کے جیاوشادیوں ددمک رق یبات می ش یک فیس ہوتے یس اپنے ہاں ویون نیس 
کرتے ؟ کیادہ مار ےک عزی کی نماز جنا وق یل پڑت اود اپ سیا مرد ےکا ہمارے 
ران میس ان نمی کر تے ؟ اکر ایا ہے وب رسو نے ا کیا ہم مسلمان ہیں؟ کیا ہم نہ یر 
لا رٹل کے امتی ہیں ؟ کیا یی بروزحشرشغاعت ون عیب ہوک ؟ خداراغمو ری اورنگر 
کی اسیدنا حفرتبلی علیہ السلا مکاارشاد ہے :”ای کگھٹیی کالکرزندکی بھی عبات سے بر 
ے۔ 

قد بای اسلائی شعائرک کر کے اسلا کا اتی اڈ اتے اود مان بی نکرمسلرافو ںکی 
اما جی تو نکڑ ضف رکرنے کے در پے ہیں۔ دو اسلامکالبادہ وڈ ےکرمسلمانوں کے ایمان پڈاکا 
ڈالجۓ اورتام عالم اسلام اورملت اسلامیہ کے خلاف د لیشردواٹوں یل مروف رت ہیں ۔وہ 
ہار ملمانو ںکو انی دای پرر کا نقصان پٹانے می ںکوئ یکس باقی ٹنیس رکھت ۔ ان 
دجوبا تک ہنا بر اسلام ان کے ساتوخت ےت معا رن اعم دیتا ہے۔ روا دار یی 
ابازت ا نکافروں سے ہے چوعحارب اود مو کی نہ ہوں ۔ قاد ای ای شراگیٹیوں کے با عٹ 
ای زمرے می نوس آتے۔ الائیعکوم تکو پا ےک دہ اس خ تکاس لت تآ کرے اوراگر 
قکومت پیفربیض یم راضیام تہردےاذ ماف لکافرن ججےکرووا نکال سای سای مقاطعہ اور 
اکا ٹک میں ۔اگرددال فقندکی مکل کیل ان کے بائیکاٹ ا ہے گے سے الام ےکی کوتا ہی 


کر تے ہیں تو وا تھا اور رسو لک یلا کے پجرم ہوں گے۔ بائیکاٹف کےس لمح 
کی کتابوں ےئیں ایک اییاا ہم واقہہکنا ےکخو تضو رن یک مل نے تی نکبارسما رھ 
کحپ من ما کہ ہلال بن امیرادرمرار بن رع شی ال تال ٹہ مکیاخ کی پا داش میں ان 
ایکاٹ اعم دیا۔فر مایا لا تجالسوہھ ولا تکلمدو شع نران کے سا تھٹٹھواورتران ے پا: 
چیتکرد۔ یہا نت ککہانڈ تھا کی طرف سے دگی ( سر7 م103,102:7) کے ذر میا 
برا تکااعلا نکیاگیا۔ سو چنا چاپےک ہاگ رما ہکرام رشی ال تال یہ مکا ایکاٹ ہوسا 
ند لی قادیاوںکابایکا ٹکیوںنش ؟ 

ہرز مانہ کے مسلمان ایی بائیکاٹ کے ذدیراصلاح محاشرہکر تے پچ ےآ ے ہیں۔ 
شرع مقلوۃ میں ہ ےک مھا کرام شی ال تا یتم اوران کے بعد دائے ہرذ نہ کےا 
والو کی یعاد زی ہکوہ خداتعالی اوراس کے رسو لے کےہنالفوں شون کےسساۃ 
بایکاکرتے رہ عا لہاان ایماندارو ںکودتیاوئی ور ران ماش نکی اعقیا بھی ہو 
لن و+سسلمان خداتھا کی رضاکواس پرت پا دتنے ہو بائیکا کرت تے۔(شرح مہ 
جلر200/10) 

یہ ایکاٹ ت رآان دحد یٹ کے کین مطا اتی ہے بکسیعا للا نب ےعلی طو بھی اکر 
نافذفربایا۔ جب نز1ۃ تیب رم سآ پاٹ نے بیبدد یو ں کا موا رہکیااور ودب یقلعہ مل 
ھے اورئی دا نگم ےو الیک یہددٹیآیا ادس ن کہا اے ابد ا ام !اگ رآ پگہی بک را 
خاصرہ رس تا نک پرو انیل یونکہان کےفلعہ کے یچ پالی ہے دہورات کے وق ت لن 
ات تے ہیں اود پل پاکروائیں پل جاتے ہیں اک رآ پ ا نکا پا رکرو میں جلدکا میا :و 
الس پرسیددد عا للا نے ا نک پای بن کر دی دہ جبور ہوک رقاعہ سے ات 1ے( زادا لھا 
اٹزر ال ر2094) 
نک ال راوٗر جن چر: 


یٹ ہ ےکر ضرت مار ریش اہ تعالی عنہ بن باسر نے ''خلوڈ 


19 ( 

“'(زعفران )لیا تھا۔آ کٹل نے ا حکوسلا مکاجواب ٹیس دیا حرف ماج ےک موی خلاف 
سنت بات پر جب پیم زاد گا ایک مربت مو کی او رکف ارب سے بات چمیت ہسلام وکلام اور 
ین دی نکیا از تکب وق ے؟ 

کافروں سے پائیکاٹ کے سلسلہ مس سیر تک یکتابوں یں نی سک ایک واتعات لے 
یں ئن ذلی کے ایک اہم واقہ ےی تصرف اسلائی غرت دحی تکاس متا ہے بکہان 
کافروں ے جو ہمار ےہا تق ری رش دا ہی پل بائیکا ٹکاطرپتجگی- : 

رن پا ککی رو ےحضوٹ کی از واج معبراٹے دج یس ام تکی جم لہ خوا جن ے 
ہیں کیرٹ کی شان یش ے؛یفبت ے یس تضو دا کی از داع مرا تکہا 
جا ہے .تق رن کی روسے ودام تک ائیں ہیں ۔ ما کر نی فر میا بکہ ای فرایا: 

حضرت ام حر شی اللہ تی عنہا بات الین ری ال تزالی عنہائمس ےتیں- 
آپ زی ال تال خنہا انام رطرتھا۔ابویفیا نکی ٹیس ۔آپ نشی الال ٰطنہاکاپہلا فا 
عبیدلئ چشل ے ہوا دوٹوں نے بعشت کے ابائی دوریس اکیٹھےاسلا قو لکیا۔ پچ رعیش کی 
مرف ہججر تکی۔ دہاں جاک نماوندعرنل گیا اود امی حالت ار اد اتا لکیا۔جخرت ام 
حی شی اللہ تھالی خنہانے ہہ یدگ یکا ز ما نع شی مںگزارا حن وڈ نے دہیں نکاح کا ہیام 
بیااورعپشہ کے بادشا ہک مترفت ما ہوا۔ ناج کے بعد مد ین رط تشریف لانحیں مم کے 
نز مائنٹیسش اع کے والمد او سغیا نع نشی ہآ ے وا ےج 11 مضبڑٹی کیل نوک تی_ 
بی سے لے می :ذاست بچھا ہوا ھاءاس پر ٹیٹھے گے ححفریت ام یی شی ال تھا لی حنہانے شہ 
صرف ناگوار یکا اظمارکیابکہدو بت رالٹ دیا۔ با پکجب ہواکہ ہجاۓ مت بچھانے کے ال 
کے ہد ےکوی لٹ دیا۔ و چھاکہی اس رمیرے تام یئا تھا :اس لیے لپییٹ دیایائش بست کے 
ابی ٤‏ حفرت ام جن لاعت نے ف رما اک یرالن کے پاک اور پیارےر+ل 
٦‏ ار نشرک ہونے کے اک ا ہے ھا ہ؟ اوس ات 


بب 


سے مب تاک رن 6وااو رگا ایم نو سے جداہہو نے کے بعد بری عادقل می۶ ہوکیں حضرت؟ 
ام یپ یی ال تھا عنہا کے ول می تضوڈ ٹڈ کی جونظمت تھی ءاس کےفیاط سے وہب ا 
7 0 

“نی ھائی یش مین ےکر اپ گر یبان شس من ڈا لکروچتا پا ےکا ء مگ گگما مان 
رول قادیاوں کے ساتھ بجی رویراخقیارکرتے ہیں یا انس کے نس ؟ جو لوگ جادبانیوں ے 
بائیکا ٹک م کے نیں ان کے ات خوش اخلاقی سے پٹ یآنے اورنمیس رواداری اود بر داش کا 
د ریکل د ہے ہیںء یں سو چتا اپ ےک کیاد ہام اون محضرت ام مب رشی ال قوالی عنہا ے 
زیاد خوش اخلاقی رق دل اوراسلام دوصت ہیں ۔ اگ ہم قادیاخو ںکا لہا یا ٹکرتے ہیں 
من اسلام کے مطابق ہے اوراگر خدانخاستہہ ما دو ںکواپے بت وں بصموفوں اکرسیوں پ 
بات یت ران باتک ش ۲دت ہ کہ ہار دل ددماغ ا سلائی غیرت دحمیت ےکا لے 
ہو ہیں ہلت اور بے گی ودک رح ہار روحم ات گی ہے۔صاجہزاد و خی ھن " 
شاہ رم ال علیہ نکیا خوب فر مایا ھا:” جٹف تضور کرٹ کی غزت ون مو ںکی مات 
یں ارتا دہ اپنی ال اور گن ما رت دآبر وک ی بھی حاط تی ں کرک مو ری یں مار 
شاراییےلوگوں میں ےآزتہیں؟ 

مھا کرام شی ال تھا یت رکیپ یراو رکافروں ےففر تک ہنا پقداتھالی نے ان 
کےجذیا تک تحرف فرمائی اشنا ا علی انوھ می دوکافروں اورشتوں 
پ بڑسے یخت ہیما نہیں مار دلی ہیںء ب ہاگ رخورکیا جا و معلوم ہوا ےک خدااور 
اڑا کے ہوں ا ہیا اللہ اود رو للا بت دکقیر تکا 
انرازءہوتا نے نت کاو یکر ےنکر وب کے شون سےٹشو وف اوت ڈ رر کا 
عبت مل ایل ہے +دوحیت بت ٹل ہے مگ دو لوکہ ہے مفریب ہے۔ الیاصل خدا 
تال اوراس کے بیارےرو لال کے دوستوں کے ساتھددوتی اورا کے ہشمنوں کے ات شی 
فلا عمال ہیں۔ 


ؤژجےے کے خ سے کجکجےًم6ے[سشش۸|۸ظ4٦۸4ظس۸ٹظ٦۹8۶۱ص‏ ص 9ل ٌ 


حد یٹ پاک می ہے۔ انل الا عائل اب نی ان واخض فا( مکلو وش رر ف) 
ترجہ ال تا یکیلنےحب تک :ااورال گی رتا .یگل ے۔“ 
رسول اکر مھ اور بارالی مس بیوں دعاکرتے ہیں : 
”ا الا ہمکوہدایت دہقدہء پدایت یاف دک یا الہ مکوگ راو او گرا ور نے والا نہ 
گر ە یا اللہ ہمکواکۓ دوستوں کے سا تجدحبت ود وت یکر نے والا اوراکۓ ہتوں 
کےساتحد ڈشنی وعداوت رک ولا ہنا۔ الہ ہم تک محب تک وجہ سے ءتیرے 
دوستوں سے عحب تکر ے یں اوت ر ےسا تح اگی عداو تک ویر ے ہمان ے 
عداوت کت ہیں یاالیہی ہادکی دعاہے+اےقبول فر ا“_ 
تی روح امعای شش حدیے ری ول ے۔- 
”ال قالٰ۸ ے مج می راز تک ام جیٹس میرے ددتوں کےساتھ 
دوٹ یئ سکرت ادرمیرے شمتوں کے سامح نیقی سکرتاء وو می ری رححت عاصل 
میں کرد 
مخمروم الادلیا سینا امام بای خوات یر دالف ٹا یس ہندکی قمریس سرہنے فرمااے : 
”دو جو ایک دوسر ےک ضد ہوں ‏ ایک دل می شع نہیں ہوکتی ںکیڑکہ 
دربن بحال ہے۔اگرخداتھالی اورال کے پیارے رسو لٹ مکی دگل می عحبت 1یت 
ارول کے نو ںکی حبت ول می نی ںآ عحتی اورخداتقاٹی اورال کے پارے لا 
نو ںکیچلنیعت ددتی دلی می سآ ےگ تو خدااوررسول ( بل جلا ڑا کی عبت ایی 
ہوا گی۔ 
(تذب امام ربا یححتقب ر168 جلداول) 
”ما جدارھ یٹلا کے مات ما حب تک بیعلامت ےک سیددوعا لب اور 
ام کے ہشنوں کےا ت کال شض وعداوت ہو" (75ب1/165) 


ى ”اف روں کے ساتھ ہج ھکہ غدا تال اودال کے پیارے حبیب ٹس 
ہیں شی ری چا ہے اورا نکوذیل وخوارکرے سکیشن شک رکی چا ہے اورسی طر 
عز تنا سکرٹی چا ہے اوران بیو ںکوا یکس مکی ںآنے دنا چا ہے“ 
( می 
2 ” خفدااوررسول کےە نو ںکوکتو ںکیط رح دوررکنا جا ہے( کب 
7 ”اسلامکیعزت ای ٹس ہ ےکیکف وکفارکخوارو لی لکیا جا بش م 
کیا مز تکرتا ے۷ و ہیقت میں مسلمافو ںکو زی لکرتاہے_ (حو بر 
٭‫ سول اکر م نٹ اوت کیا بارگا و کک لے جانے وا بجی ای 
ۓ( ان کے نووا نے ماضید می ا حرادت کی )ا اگکراس رام تکوگھوڑ دیا/ 
ڈناگ رما لے“ : (و بر 
ہرنمازی نماز وت کی دعاشل پڑھتاے:و دخلع و نعرك من یفجرك "ال 
یس ےتقاع قاق قکریں کے اورحرہ ہو جانمیں کے جرت انا فرمان ے )جیب معا 
ملمان مد بی ود ہار لی یں مودہانہکھڑے ہوکہ پاش باند ےک رجہ دکرتے ہی ںنکہ 
یرے ناف مانوں ہفالفوں کے ساتھ اکا فک می این لن اع سےٹنخس سر سے 
مارک ہا پھول جاتے ہیں خداتھالی ہم س بکوعبد راک ن ےکی ذف ق عطافرمائے۔ 
گمتاخمان رسول ا دیاٹیوں سےنفر تک :اس طط رح ذرفش ےنس طرح مضور 
نل ےبحبت دخقی رت رکا ۔جبک ک متا ان رو لا دیاضوں سے ڈشنیاورفظ رر تائہ؟ 
وت تک تضور شا نع تلم .ح جع طور پ ددقی اورگری محبت ہونیںکتی۔ ہر 
تماد بانوں سےگراہت اورنفرتکر کی جابے متاخ رو کٹل سے دوتی کا مطلب ا : 
سے اللہ اورال کے رسو لٹ کی حب تکورخصتکرنا ہے۔صھا کرام زشی اللہ تا 
تق حضور ن یکریی اٹ کی عزت دنا یں کےجحفظ میس اپنی مممولی متا حیات سے 


نگ یکا ۶ز :نز بی ساز دسا ما جیا ٹادیاتھا۔ ایک ہم می ںکراپنے پیارے نال کےکتاخوں 
ساتھددؤ تق نق و سکر کت ۔یاد ری اجب کک سلما نکتا خان رسو لف قادیاوں سے 
رقاب تکی نی بڑھاتے رہیں گےءا نکیل اپ دل میں زعدردی کے جذبات پا لے 
رئیں جے ای وقت کک دہ ہ مکی لات اور پ یٹائو ںکا شکارر ہیں گے۔ نا کا میاں ا کا 
مقررر ہی ںگی ذلت ورسوائی اور ٹیش یکاعاب ان پہمسلطارےگا۔ 
: جیپ پا ہےکناگرکوڈائش ہمارے ماں با پکوگالی د ےت بی مرنے مار نے پہتار یھ 
جاتے ہیں ۔کوگی ارگ ہد کا نےےتت یکر ےا ہم غیرت کے نام پ برقم مأٹھا لیے ہیں مکل 
زار بٹ کیل یک سے دسکھےنذ ہم ا کی ہک پھوڈ دیے ہیں ۔کوگی ہمارےککارد با رصان 
پان فو جم اس کے ین بی و لیت ہیں ینس اوقات موا ملا ت تھاتوں اور عرالتؤل 
ب کچ جات ہیں ملین اگ رکوئی بد بت ہمارے پیارے نی کی شان ارس میس ین 
کر ےو ہم جرماقہنما موی افقیارکر سے ہیں۔ میں فص ہآ ہے تد ہم پریشان ہدتے میںا۔ 
ھا مارک رک یٹنیس پچ زی نہ ہار نون لیس جو پیداہوتا ہے۔ جم امش ھا شائی 
بن جاتے ہیں جسے ہناران یکری ال کے ات ےکوی رشیننیس حور یلت تک رنضرت 
فالل نی الال خ نا ےکوئی واپڈئی سار شی از تیشم کے سام وکوی تی اس 
کے نس ہم سکئ خووخی اورسیانے ہیں اگرئیں بل ریش رہد جاے ذ من ککااستعا جچھوڑ 
رہ ہیںء!گرشوگ رکا مرش لات ہوجاے فو چٹ یکا بایکاٹکر دی ہیں با ٹائیٹس ہو جا 
ڈاک کی ایک ایک بات پگ لکرتے ہو ہراس چی سےنفرتہکرتے ہیں جوا ارک 
پان تڑعالٰے۔ 
یادر ! ہس سو کی 2 وت پڈاکزل ہوری :٭وءوہا لآ پالف 11 27 
نو کی اط تکر نا فرش ین ہے بای سے ذ را اکٹ ی اع ا سک رن خو وک وتضور ن یکرمی ہڈا کی 
ففاخت ےید مکر ے کے متراوف ہ کیک نو تپ ڈاکیزنی د کھت ہو ےتضو رب کیم 


فان 


کوکنبرخرا می ستکلیف ہو ہے۔ یہ بات ہناش نکر میک نت نو تکا عقیرہ را 
ری نشم جو تک یمحل ی بکرن ہرسلما نکا یما فربیضرے۔ بین مسلران ہوک ری قاد 
سے ماخ اما شرقی تعلقات رکتا ہے ذعلا ووفتہاء کے کی کے مطای ا کا مان خاد - 
اوراسں ک ےکا فرہونے می ںکوکی شیک وشکییں۔ 

نوا کاا رش وک ری ے: 

”ال ایا نکی اروا اکنیلشنکرو کی ماضن ہیں جوان سے جان پچچا نکر اتا 

ہے دہ ان سےکگل جاتا ہے اور جو ان سے ان پان نہکرے دہ الن ے چدا 

ہوجاٴے۔“ 

7 مم و ا مم مج پرواڑز 
با کور ان سے نا 

ارہ مکمتاخان رمو لف قادبانیوں کے س اتا تق ریس کے ا نکی خوش کی مر 
شیک ہوں گے ان کے ساتھوخر ید وفر وش تک یں گنو پھر جمارا انا مہا یت مب رتاک ہوگا 
لک بئیں ملمانوں کےقبرستان می ڈ نکی گن ہمارکی مرذاحیت نداز کی بج 
راقاں رات جارکی لاشل دریدہ با قادیان کے قبرستان مس کیا دک جات ۓ گی ۔ فائتجر ایا 
الا سار 

حضورشا نال نے ارشادفبا کہ جو کسی بدرتی کی عز تکر ےگا ( ای 
مطلب ہ ےک۔گویا ال نے اسلامکوڈھانے می برددی۔( مل لو )اس طرح منلو بی 
خر تعمران ی نیشن رشی ال توالی عنہکی روایت ہ ےکہ نیکم ٹل نے فان لوک ں کیا 
زشوتاد لکرنے ےئن فرمایاے۔ 

قا ری کرام ! آپ ال سے خوداندازہ لال سکہ میتی اد ذا تن سکمرگارہونے 
باوجوداسلام کے دائے میں رج ہیں اورمسلرا نکہلو ان کان بھی رھت ہیں یجان ان 


پارے می عم ہےکہ ضا نکی مز تک جائۓ اور ضرا نک کوئی وت ہی و لک جا ۔گویااان 
یکل با یکا کاگحم ہے۔ اس کے نس ادیالی جونصضرف متاخ رسول ‏ رت اور زم لٹ ہیں 
ک نکی تام تر مرگرمیوں اورعزائمکا مق رصرف اورصرف اسلا مکونقصمان بہٹیانا ہے؛ ”مان 
ا اتھ یتم کے نل تطلقات رت ہیں عبت داتضزا مکی یں بڑھاتے ہیں بزغنض 
وا پا نکی ای تب کرت ہیں۔ ہماری کات پرکیا نکر یم کا دل نمی دکتا کیا 
آآپٹظ اں پر یدہہیں ہو تے ۔کیا یں رو لن آپافظ سے شفاع تک ایر 
آپاپے؟ بے ٹرسپے ۔ا 
۱ یاد رکیے اف نتم خبوت پرایمائن لانے سے اپنا یمان مت نیس ہوگا لیم ری تم غبوت 
قادیاوں اگل پایکاٹ اورا نکی سرک یبھی ضردرکی ہے۔اگرکوئی ‏ اد بایوں کے ساتھ 
معاٹی ومعا شی تعقات ر گا ءا نکی پرنٹی وی مس ش کیک ہوگاء ہرم وت را نکا سا ددے 
گا با شا یی کانا ھی قادباننوں کے ساتحدحی ہدگا۔ 

قادبایات نوازگی ایی نو ویلعون یز ےکہ بیملمان کے اندرحبت رسو لف کو 
اک نم کرد تی ہے۔اس سے ول ساہءد راغ مفلوج اور چرہپحوست کےآ ارجللد یا ہرہو 
جاتے ہیں ۔ این شفاعت رسو لے ای لا زوا ل نت سےگبھی روم ہو جانا ہے۔آپ 
کنا یبر کےم تب اف ماک لبق رکرنے پ٭ ٤سا‏ شف امیں ےراہ پشھنوں سے 
مائذلق رن والو ںکی سفارش ہرگزفرمانمیں گے ۔اپناہ ما نکوہقادیالنٰ نوز ج مار اے 


یکن ہیںء ے بہت احیاطلائمے۔ 


مام انت اعلیٰ حرت مو لا نام رضا پریلوئی نادد رو زگا ریم ال بت نقیہ اور جے 
اش رسو لٹا تے۔ا نکی پپری زندگی الا ی اوراں کے رسولیٹ یچ مکی ر ضا کیل وتف 
ھی ۔حفرت فاضل برای قد سرہعقیدوشم وت کےجحف کے بھی کیشاں رہے۔آپ 


۱ شرب نت و تاد یو ںکوکاخ رادرم رر ھت اور یں نفرت وقارت سے یٹ خلا می“ 


کی اورکے ر ہے ۔گمتاخان رسول مر زائیوں اورمرزائی نوازوں کے پاارے ں ا نکا 
آفات ف یی آب زر سے کین کے قابل ہے۔ا کا ایک ایک افش رسو لیا ارد ہنی خر 
دمیت یل ڈدہا ہو اہے۔ ماحیر انمیں ۔ 
قدای مر اودمنافی ہیں موق منافی اس لیےکیکمہ اسلام بھی پڑھتا ے٠‏ 
اپآ پکرسلمان یھ گکتا ہاو برا تال رسول اڈ ای ماک ین 
کرتاپا ضردوریات دبین میس ےکی نےکامگر ہے :ا کا ذن جن لس مردار 
اورحرامنی ہےہمسلمانوں کے پائکاٹ کےسب بک قادیا ی ومظلوم یکن والا 
اوراں ےئیل جول پچھوڑ غکڑلم ونات بن ولا نا مٹپاسلمان اسلام سے 
مارح ہے اور جکافرگکاف رنہ کی د اگج یکافر سے“ 
(اجکا ش ریت 122,142, 177ءاز ای ححضرت موم نا اتد رضاخان پر لا 
ریف ما اکن اس صورت میں ذف نی ےک تھا مسلمان موت وحیات کے 
سبنأعل ان یٹ کردیں۔ بیار پڑے نو پچ ےکا جانا ترام ؛مرجائ ےت ای 
کے جنازے پر جاناحرامءاسے سلمانوں کےگورستان می ڈ نکر نا حرام ءا کی 
قج ری جاناجگی تام“ ۱ 
(فوئی روب می یس 48 ج2 از موم ناادرضاخان بر 
ایل ضر ت کےالن مدکی کے مطا بی ھرذائی ادرم زا نوازیشنی دن جرمرزائوں 
ساتحدمحا شی اورمحاش لی تماقا تدکتا ہے دہکافر سے اور ہوکاف رکا فرنہ کے دوج یکا رےںم 
شیزا نگمت نخان رسو ل اٹم زائیو ںکا سب سے بڑ اادارہ ہے۔ائ کی آ مد لی کاآ 1 
کیرتص دارالکفر ریو چا تا ہے یلان اپ کہ یکی با یراس کےمش بات اور دمگرمصنوعا 
خریدکرک ازم 25 ہی نی رو پیر بدوفنڑ مت کرداتے ہیں اور اس ط رح ا ہے تا موا تضوا 
نام لین حضرت مون الم رین اسلام اورو نع زی پاکتا نکی فلت کے بھیاکک جم 


٤ت‎ 

یک ہوجاے ہیں ۔عالاک شیا نک قا ماش تراماوان مز مکی یت تی ہیں حرف 
اق تا بای مرزائنین نے بتاک انشافکرتے ہو ےکھاھ کیا نکی کے الک 
نادان یک نی ہرایت برا کی تام مصنوعات یر بدہ کے نام نبا شی مقب کی نا 
کی لو یرک استعا لکی بای ہے۔الپداشیا نکی تام معنوعات اوراس کے دی رادارول 
ان رلیٹوریف ینان میگرز زاکنگی ء دی آئل ایر چہ ِریز گل 
کاٹ ہرخیورمسلمان عاشق رسول پٹ کاد نی دی فرش ہے۔علادہازی اگ رآ پک فرش 
ئی دوسریی اد یا یکنی یا آپ کےیشم رط کوکی دکان تا لاب بائییاٹ تج یآ پکا 
گی یرت دی تکااولی ن قاضاے- 

دیھا جاے قادیاولں کلپائاٹ ےا ن' بیراصاص ہوگا اورپ پور 
ول مگ ےک امت مسلررے جداہوکگ رہ مت الد تیادال خر کے مضمادق بن گئ ہیں ۔اباان ے 
ابی تقاط کرن لیس پک شربعت اسلامیکا ہم تب نگم اوراسوۃ رسو لک ری ہے ۔ 
کی ملا نکی تضورس و رکا اٹلا ےحب تک تقا ضا یی ےک دہ پا کے بشمنوں سے 
یا موکوکیتعلن نرک اورندحی ان سےیتعل سی کی تا تادرداداریکا ارہد ماگ 
دل دانصاف کے مطا قادبانیوں ے معاشری دمعاشی :سای اوراقمادی نیل بائیکاٹ 
فس سےاور یبھیاض مک موا ب کر ترام ہے۔ج٘ لکی ایمانی دد نی غیرت دحمیت بال ہو دہ 
قادانوں ےسیا مکاسلام کلام ءلین دیع خر یددف وخ تکاسو یی متا اگ یرت 
الا مرجانے و ھی سکہاجاسکتا۔ 


رہ مع ھت 


علا مہا ریش ریا ا اض فاردثق 
ران یداورخح وت 


رب کانات نے ج بیکش ن کا با وکیا تاس مس ہنامز رگ بر پاکرنے کے لے 
سب سے اص ناقلیق انسا نکواس می سا یا اراس کےساتحھساتھدانسا نو ںکیعیم وت بیتا 
رشدوہدایت کے لئ امیا ۓکرا مک بجوث فرایا۔ بیوگراں قد رہستیا ملف اوقات 
ادداریس مخلف مقامات نشیف ای ر ہیں اورانماضی تکی رہبریکاخری رنیم سرانیا 
رٹیں۔خو تکا یروش سلسل ابوالہش تحضر تک دم علیہ السلام ے تروع ہوااورسر ال رج 
حر تگ عم ہوکیا۔اس بز مکی سب سے پیل می نر تآ دم علیاسل 
سب سےآخرکی می جعفرت گناٹ ہیں ۔حخرتآدم سے پیل یکوٹی نیس اورخاتم کے 
کوئی یس ۔د ین اسلام ا لمقید کم خقی وم وت کا اتا ہے ۔دین اسلا مک 
مات اکی قد وکی نید پرکٹرئی ہے۔ دن اسلامکا مرک شود مجی خقید ہو ہے اود ین اس" 
رو و ان مچی؛مقیدرہ ہے۔ ا ںقیدہ مم و یک ٹیک یا جعول انسا نکوایما نکی رتو 
گرا رکفرکی پہتیوں بی تق ہے ۔عقید نم وت ال ایت دثیتکاحائل ےکر 
ید ایک -سوم رتخا 21 ان ام 11 2 نبو تکااعلان' 2 ےاورصا ح بط رآ اناپ د 
رح سے ائداپتی زان ضوت سے ا قد ہک یا یت پرگوائیادےر سے ہیں۔ 

اب رآلن پا کک چتدآیات قات سے نشم وت ناب تکرتے یں- 
اعلان ختم نبوت 
رب الحزت نے اپ ےآ خی مال کی ت نت وت پریٹھاک رپ کے سراقرس ہنا 
شم نوتس اکراورکاجا تک فضاول ‏ خا تم الین“ کاپ پچ ]ارآ پکنخ وت کا 


ماکان مہ باصن کر 2 یئل لِوَمَکم رو 
لک 22-0 

”نی جیں اتاد مردویں می ےکی کے با پش نیآپ ال ے 
رسول اورقام امیا کےۓخمکرنے وانے ہیں اور ہے ال تی ہر یکا جانۓ 


والاۓ“ 


جب ؟م مندرتہ الا یا تکاگرائ مس جات ہی پن چنا ےکن با ناعرب ش نلیا 
لفن جب سی قوم اجماع تکی رف مراف ہوقذ اس کےٹعن یآ خر او رخ مکرنے والا ی 
تے ہیں ؛اسں کے علاوہ او رکوئی معن نہیں لت ۔ جاک ہگ لا ذبا نکی سب تیم اورسب 
سے تن ذاش تک کاب 'لمان الحرب بی کھاہے۔ 


ختام القوم و خاتبھم وخاتبھم ختام القوم خاتم القوم (ت کے 
زرے )اورخاتم القوم اخرھم ۱ 

لت کینش جو تاب تا الع روس ےک 

ومن اسبآئھ عليه السلام الخاتم الغاتموھوالذی ختم النبوة 
پہجبئہ 

اورتضورنیکر اٹل کے نا موں میں سے نام او رام ہے۔اوردوذات اق دی 
ہے ہم نے1 اکرنبوت ک1 کردی-۔ 


نام کا اد ری 2 کےلنفوئی مکی کو اس حطر بن دکر نے کے ہی نک ندال کے 
نکی چز با ئل کےاددن باہرکی زا کاندرد جا ے۔ اس کے دوس رے ھی چیکو ہن رکر 

ا پہہہرننے کے ہیں جوائی با تکاعامت ہک راس کےاندرسے تگوئی الگ کق 
ےا درنہجیکوئی اہی چزاندرجا ئے۔ 


حضور نتم الا خی مل صا کرام رشھی یتم ہجو رشن بس جن کان امت 
ال لیرنے مات این کےجف یآ خر نی کے کے ہی سجن کے بعداورکوئی نی پیرانہہد- 
تکمیل دین: ۱ 

عرذا تکاؤ دیس میران تھاءچنۃ الو داع کا بارک موق تھاء جم ہک دن توا بت + 
ک ربا ایک لاکھ چوشی برا پروانے تع تھے۔نریوں کے سردارخم نوت کے تا جدار جنا 
رسول ان بھی ان پر وانوں سےجھرمٹ می لوہ افروز تھے اورجا ریش انقلاب ب4 
دسیے والا خطاب نر مار ہے تے۔انمساعی تکوستورحیات عطاکرر سے ےک لاہ کے سد 
تی کے پیام رجناب چ رانک علیہالسلام سیت نےکر حاض ہو جاتے ہیں - 


و رو مو 2 یی 
- الاسلام ینا 


یآ تک یمرائل بات کا اعلان تھاکہردن اسلا ما رئی ہپاضفی بصوری :مکی پر 
ےا کل بد چا نبو کات کی ہوچی ہقاخون دش یت کے معا لات ہو سے 
افمال+اخلاتی :کومت:سیاست پکردہات سقبات اورترام وعلالی کے اصول بن جے ٠‏ 
انیاء شا ہہ ےک ج بج یکوگَی ناد ینآ یا ا ےکوئی انی نےکرآیا۔ ا کیل دی دجہ سے 
خیاد ئا سآ نا کوئی نان یبھیائی ںآ ےگا اس ل پیل نہوت کے ات کیل دب ن بھی 
اہذاخوت درساا تآ پک ٹڈ رشح دی نآ انح ۔شریع تآ بڈا غح ۔ ۱ 
آپڈل شخ .سا یک بآ ب کال پآ پا کا ین خات الادیان۔آپا 
شرییت خاق لئآ پپٹ مک کاب خاتماکتب ۔آ پک کی مس خاقم السا جد حا 
0 اوت اور پل کی ذات اف نا تراضسوٹڑاے۔ 
عالمگیر نبوت: 
یکر ٹفل ےق لتشٹییف لانے وانے سار نمیو ںکی قس یرود علا تے با 


. 


کس 
وقت اوریمودانیانوں کے ل ھی ۔کوکی می ایک گائوں کے لے ھی ب نک رآ یائءکوئی ایک قصبہ 
کیلع بی بی نک رآیامکوئی ایک شم رکے لئے می ب نک رآ یااورکوئی ایک ملک کے لئے نی ی نک رآیا۔ 
کن ج بآم کے لال اور تاب حضرتعیدالڈ کے درجم جنا کر ملا 1 
رب ماات نے م کم کاتھارف لو ںکمایا و : 
لا ھا نال رو و الک یا 
”پک دہج کیا ےلوگو یم س بکی رف اللکارسول ہوں۔ 
خو نز یکادامن سار یککاثنا تکی وسم و لکواپنے اندرسیٹ ہوئۓے ہے۔نبو تگج کا 
کریکراں زاں دمکا کی قودے بالات ہے۔آ پل مکی نبدت ہرذ ماں کے لے ء رمک 
کیئے؛ ہر چہاں کے لے ءاورجرانسا نکیے کوٹ گت کوئی ز بان ہوک قو میت اورکول دن 
پک عایرحوت کس یں . خاتم ای نے ہیں رکیرے کے لے :رکال کے 
لۓےء ہرکھی کے لے جع رٹ مکی ہق سے مخر بتک :شال سے جنو بکک ثحت ال رکا 
ےڑا کک اورڈرشی عرش کک ۔خرضیکہ جہا کک غخداکی غدائی ہے وہ کک ات 
کی مصطفائی ے۔ 
خدا کنا الوہیت میں تو کا رساات میں 
بک یکو اب ھی ہوئے کا زوئی ہو نہیں سا 
نبوت محمد ی کا آفتاب عالمتابۂ ‏ ر 
ا ےا سك موا ا راو کی ورای 


گار ھ7 

رسکی تکرب می انل تھی نے حر فیپ کس اض را کے دلنواز نام سے 
پارا ے,لجنی ری دیے والاسور ن٠‏ بل وش اوررو پر ورنام ے متدبجڈ بل انی ضا ان 
ثابت ہو ئے ہیں۔ 


بہت 

٦۔‏ مکط رع ادگ ود اپن خالقی کے جاۓ ہہونے متردہداستر یرھک تکرتا ہے اوراپتی ' 
راہ سی بنا ور انا تکانظام ددہم برجم ہو جاے ای طر ادگ مرمنطَلّٰا 
اما نے الک کے با ہونےصرا تلم گا حن ر ہے او رت نکا و یرت رے لھوز 
الا 21 پا اپے راس سے بٹ جات کاحات شس ای وا ای اور 
کفروضلاات کے ہا ےئیل جاتے _ 

2 جس طررہ سور لو مآ نرتک ا لکا سیا تکوا ران شعاعوں سے منورکرتار ہےگا اک 
مرح نبو تک آقا ببھی قیاممتکک اپئی غیاپا شیا ںکرتار ہےگااورمنز لکی حلاش مس 
سرگرداں مسافرو ںکومشز لکک پچ ار ہےگااوران کے لب ولظ کو رایمان بختا ر سے 
1 

3۔ اگرسودرچ نہ ہھتا تو ن تو ل قرغ کے نگ ہوتے نہ کک ہو ستارے اور وکیا ہوا 
ماب ہوتءآسمان سے بارش مصفا انی ہرستاء سان مس بہا تی .نکیل ہوتے * 
ضسہٹ ال ءشددشت ہوتے نہ لیکن بچھولی ء نرہی حیداحات ہوتے اورنہ بی انمانا ت٠‏ 
اأنقرثابت ي×ا رح پانالی اتک 7 رودارے۔اگرسورح اعت انال 
نگ کات ویو سکیا جاککا۔ ١‏ 
آ2 ال دنا! اپ خالقی و ماک ککیا جا گی من لوکہ مادی سور کا مالک اپ ' 

مرا جائنی کے بارے مد اہم بات تتہارےکافو ںکلوازد اہ ۔عد یٹنذی ے۔- 
لولالے لم اخلقت الافلاك, لولااے ما خلقت الجنةء لولاكۓ لہ 
خلقت الذار 
”(اےمیرے چپ او رلاڈ نے رسول )اکر سآ پکو پداتہکرتا تو زہز ین و 
آسان ہودتے اود تکوگیحلوقی ن نت چم پیراہوے “ 
ذدا یک فرق ذ ہناش نک می ےکرربالزت نے فرماد اک اگر لسر جامنی ران ہوتال 


انا 
می مادئی سودر گی نہ ہوتا۔ مہ مادیی سودرج جح کی رشفی یل ہم اپٹی ز مد یکاسف رن کرد ہے میں٠‏ 
ا سور یھی رش رسول ال کی ذات ہکات کےیشی لی ہے .رج ط رح ہندوستان ٠‏ 
پاکستانءافغانستان ءامرانء لوان ء جاپان ہیر روش ء ام ہہ افریقہشرق بمخرب :شال ء 
جو بکورؤش نرنے کے لے صرف ایک ج مادی سورنجع ہے۔ ائی رح دوھاشی ت کا ور 
تھی نے کے لئے صرف ایک می سا جامن راہ جح کی رشفی سے دلوں ےکر دضلالت کے 
اند ہر ےکا فور ہو جات ہیں ۔ ماد سورح او رتو ر نیک ری ٹف کی نبوت کے سور یش یک 
ما یاں ذرقی ہے ماد سور نج لو ہوتا ہے اور چن د نٹ ردشن ار نے کے بحدشا مانفروب ہو جاتا 
یں 0 حضر تک 1 و تکا سور قیام تک کنرو ب کیل ہوگا۔ ماد ور ح ورہن 
نگ جانا ہے اور کی رشفی می لی دائ ہو اتی ہے لجا نآ تحضرت ٹل کے سور عکو نی 
گرہن لگا ہے اور قیامتکک ےگا اورشہ بی ا لک در شندگی می فرق پڑےگا۔ ٍ 
خوشیر کے کے مم تا صرقہ اوار 
رات جورۓ ‏ ور کی سن و 0 

معیار حق: 7 
ایا و را 

تمہارے پا ںآئی الک طرف سے شش ( یشنم ا او رکتاب تین (لشن 

رن مجی) یہاں رشن سے مزا دب یک رڈ کی رش ننخصیت او رکتاب سے 

مرارقرآن ٹیرے۔ 

می نات مج رسول ادألٹاا ےیل جن امیا کرام پہآسا نی سکناہیں اور نے نازل 
ہوۓ ان ٹیں ےآ ج بج کوئی سال ی کاب اورمحیغہاپنی صلی حالت یس موجوڈنئیں ۔سارگا 
کب اوزیسحا کف وشمنان اسلام کے سفاک پاتھوں تک ریف وتبد لکاشکار ہو گے لجا نآ خ ری 
لٹ :نل بہونے والی آخرئ یکا بک تفاظ ت کا ذمہ رب ذو ا چلال نے خو دأُٹھایا اور 


ااضی تک راہمائی کے لے تاب قامتکک ان تق حالت یل موجودر ےگ ۔۔٘ی 
المانن لا سے پیل ہجوٹ ہونے دانے سار نیوں میس ےکس بھی نم کی تقلیمات 
سیر تکگمل طور پر موجوداود یا بی ۔اکثریت کے و نام بی معلوم یں بصرف چنز 
یا ۓےگرا مکی زندگی کے بارے بی چقداوداقی مطالع کے لئے ل حاتے ہیں لین ات 
سم کیا حیات یراو اما تکا ۸ جم او ام۸ پر پلداپی پودی درخثانی اورلگشی کے سا احوزلد 
جابندہ بے اوردو زآخرت انساضیت کےمللع ھیات پرسیرت “ف کا قب انی ضونغایا 
کرتا رہ ےگا اداضماخیت کے چہر ےکوغیا ا رہ ےگا کیونک ہق رآ نآخر یکتاب اورصا 
رآ نآ خریی اه ۔اس لئ خداۓ رجیم وک رم نےق رن ججیدادرصاح بت رآ نکیا سرت 
ا اس وق ط بک کے پیاعلا ن/ردیا۔ 

کل جاک ین الد کے بش 

اورخردغاتم ا ئل نے پچ الوداغ کے پرعرفات کے میران یس موجودا 
آتند نے وانے انسانو نوا ط بکر کے رشمدوہدای تکا یی یلیٹ عطاً اکردیا۔آ پاٹ 
فرایا۔ 

”نتم مس دو یں کچوڑے ہار ہاہوں ۔ج بتک ا نکوقا م رکھو کے کر 

نیں ہو گے وودہ پچ ڑ اکا 71 رن اورمیریی نت ے۔ ۱ 

ائمللہ! نچ اضاضیت کے پا الل رک ےآخر سور ھا 
کے1 خری میڈ ٹڈ کی سنت مطہرہ اورایڈہ ‏ ےآ خرکی ماف کی سرت طیبرر ہیر اددراجمالا 
کے لے موجود ہے۔ا ں ل انما می تاوقطمآً ای تۓ یک ضرورتیں۔ 

کات کے پاسیتداارب رجیم وکرمم نے کھیں ایا رسول اض عطاکردیاججس ے 
بای رسو لٹ کی ضردر تی ۔دواڑی کاب نےکرآیاجنس سے بحداضساضی تک یکا 
کی ایا ٹن ۔ دای شربعت لے کےآیاشس کے بعدانساحی تی ش یع تکاتا ڑل 


ابیاظام لے کےآ اجس کے۔ای ظا مکوددا میں ۔ا کا وجودچر ان فروزال ج تیر ودتار 
روں ٹل روشیاں چھیلا ے۔ا لکیہ تی دوابررشت جرد برءکووو کن شیب وفراز ہب 
ات پٹ پانی کی بارش برسائے۔ ا کا اط رد خوشبو جوسمارے الم کے دماخو ںکو 
ے۔ائ ںکاسرابادہ چشمسشی ر می جس سے پر پیاسا انگ بچھائۓ اگ ذات دہ بہار جھ 
و ںکی وادیوں بایان کے پھو لکل نے اور سک خنصیت'معل ماش 'جوتما مز مانوں کے 
انانو ںکوتقا کلم بڑائے اودانساضی کلم سےفد رس گجگائے- 

1ؤارگشن تی کے رکش !ا ٣ن‏ انا بیت :5 گرانم یت :گان بت اور با شٹ 
تلق ان یت کےتضسورجہایت ادب واترام کے سا تع ز بان دجن ددل سے پد یچ یک پیل 


رنسش غدا مک مل بر سد منٹڈڈازل ہم ںاد 
ٹل اکہ حاید بھی مور بھی و رک نزاس سس 
مم محر دم رظ خر خرطلظا مر دمرظفظظا زنر 
مھ خلا یم رظن کام مر ے لاکھوں ورودوسلام 
ماہناکنزالا یمان 
شح مو تہ بب ر09 0د 


چلر جار جار اہ 0 


0 اکٹشرسلطانشاہ 
صدرش یگ لی ولوم اسلا میتی یلو یور ءلا ہور 


تم وت کےم وضو عپرچامل حدیٹ 


فوٹ: ا لممونع یل صحارب س کی تمام اعادیٹ''موسوعۃ الید یٹ الشر یف 
اے''مطہوم ارالسلاملٰشٹی ال زی الر پاش 2000ء ےش لک گئی ہیں اوراحایٹ ک 
الس کے مطالق ہیں- 
ال ای بل بیدہنے انسای تکی راجنمائی کے لئے انیاء ورس لکو یحو ٹر مایا 
تی نازل ف مائی تاکددہ دی پغام پل پیراہوکراپنے امتوں کےسا سے لاک تق نمون 
یں وت درمال کا سل مقر تآ و علی السلام ےےشردرح ہوااور رت 
تی علی اقیۃ واشاءپراخام پذ ہوا لاق این نے اپ ےحیو کر کو جیا 
کےلقب سے رف ازفا یاء جن سکا مطلب مہ ےکہآپ ہرعا لم کے لے رسب کہ با 
کے علادور بکرم نے حضورسیداا ماپ دنین ینک یکل فمادی اوروق یک ی نے 
دیااراسلام یسے عا شی( :20۷9ا ؛ابکی (۵۸۵۱اع) ا د١رک‏ (1 0907 51) ذینٗ 
ڈنیانک کے لئ اپنا ند یرد ین اق راردے دیا۔ق رن یرم س عضو اکرم: نی معظم رہ 
ٹلا کے1 ری نیا دن کااعطان ال سآ یت مارک سکیاگیا: 1 
”مَاکَاع مُعَگد* انا لِم رمَلِك ٥ل‏ مو الله وَعََمٌ 
لی < وکا اللَهِيکلِ هَیْ وکا“ 
من تارے مردوں بی ما کے با پیش :ہاں ال کے رسول ہیں اورسب 
نیوں می پچ ادرامرسب پچ جا تا ے_ 


رت٤‏ 
(ر یویند رضا ان مکھزال یمان فی تر لقن( ہور :ضا ءالت ران پہلیگیشن ہف 09ج ) 
رق ٹم وت کےا اعلان خداو خی کے بعس یش سکوقصر: خبوت میں نتب 
زن یک یح لا حاصل نی کر جاہئے۔ ا ںآ یت مبا نی رٹ سب دکیالاکے جتاۓے سے 
ارشادا کب اعاز یٹ یل مان ہ سے جاسکتے ہیں۔ بیہاں امک احاد یٹ پٹفی این می کی جا 
ری ہے:اک رن تم نبوت بن دا انح ہو کےےاور پل ١ى‏ تقی نشی رکے لے مات أخردی 
کاباحٹ ہو کیاکی شی کرام نے ارلشی نک فضیلت یں روای تأفح لف مائی ہیں۔ عافظ اٹم 
ات بن ہداز الاصقباٹی النتوٹی 430ھ نے حلیۃ الا ولیاءوطبقات الاصفیاء یٹ مر تکبداللہن 
مسحودرشی ا نے مردی بیددایت دح کی ےک سول الڈنپھ نے ارشادف بایا: 
من حفظ علی تی اریعین حدیٹا ینفعھم الہ عو جل بھا+ قیل لہ 
ادخضل من أی أبواب الجنة شنت۔ 
22 نے میری مم تکوایکی انس اعادیٹ بن ایی شس ے الس تعالیٰ 
عزوشل نے ا نکلم دیاقے اس کہا جا ۓگا جس دروازے سے چاہو جنت 
مم داقل ہوچا- 
( ص انی :الیم امہ ہن مبدائہحلیۃ لآ لیا طبقات لا صفیاء مع تچ اھ گی اعد 
الہ رطع المادو وا رحافظ 1351ھ /1932ء)-189:4 
٦۔‏ حفرت الد پ زبوش الأتھالی عنےردایت ےک جحضوری یکر ملا نے ارشادذر یا : 
کی1 کل لیو لی کل رد ینتا انت وہ 
حۃلِکز ون َاوَاكَمَمَل الا مَطوَْنَ وَيَعجپون ہت ٥‏ 
0.031 مت مو لبڈ :ئل لان اللَبنَہء پر 
میرک اورجھ سے ایا ںوہ ای کگھریایا ءال 
کو تگدواورآ رات ےرات ایاگ رای ککونے یس ایک این فکیا می چو دی ء 


-2 


2 3 اسلم تاب اھ2 ہ باب دلیۃ حذ لا من لیو ام ؛عد مث ۱1979:1978 
1 8) 
3۔ حفرتابوعازم نشی ال نف بات ہی ںک می پا سا تک حعضرت الو بری رون 
تالی عنر کےسا تر ہا نے خودستادو بعد یٹ +یان فرماتے تےک ناکم سو ل ۰ 
ارشاتکرائی ے۔ ۲ 


یں لوک جوق در جو قآآتے ہیں اورتج بکرتے ہیں اود کے ہیں یہابینف 
کیوںئیس لا یگئی ۔آپ نے ف ایا ووائینٹ شی ہوں اور اخیاءکرامکاخاتم 
ہوں۔ ۱ 
ای مفہو مکی ایک اورحد یٹ مہارکرحخرت ابر جن ع بدا شی ال عنہ ن ےگا 
روا کی ے۔ 
( انار ہتتاب الا تب باب اقم الا حد یٹ 5353534 
رتا دشی ھ ال م ےدوت الا ےرا , 
تس ار وت ناویا ك دحل 
لمت ییںا ادا لکلب بن تنَا وَللنائین ٹیڈ _ 
بھمس بآ خروالے روز قیامت ہب ےمقدم ہول 2 جھ ہب و جے 
میں زاٹل ہوں گے۔ عالائل ان( پچ والوں کو تاب ہم سے پیل دی اود 
میں ان سپ کے بعد 


کاٹ نل تن مو نی ارت تخل عل ”ول 
رو ںہ سو 
ال َال ا ئز کوز وکسا کا تر مم 
کا زا کا ات ون کے انمیامکرا مکیا کرت تھ۔ ج بی کا 


دنات :و جا یٴ یتو ال تھا یک دم ے نب یکوا نکا خلیفہ بتاد جا تھا ان بے 
بعکوئی یں ءالہنخلطاہوں گےاوریہت ہوں گے ۔ حا کرام نے کیا٠‏ 
ان یتح قآ پکیامم دتے ہیں ۔آپ نے فربایا ایک کے بعد دسر ےکا 
بعت پر کرواورالعٰ کے اطاع تکو راکرد ءال ل ےکا تھای ا نک 
رعیت ککعتحلق ان سے سوا لکرےگا۔ 
( انارک تا بآعاد یٹ الا جیا ءہ باب ذکرگن بی اسراشل ٠عد‏ عٹ3455) 
حفرت انس بش ال خی عن روا تکرتے ہی ںک ہن کر علی الم ك 
جن شہادت اورٹ کی لگ کو لاکراشاروکرتے ہوۓ ارشاظربایا 
0+1 
میں اورقیامت ا طرح لے ہو بے یئ ہیں جس رح بردوفوں انگیاںل :ول 
یرا۔ 
) سی ابفاری1کتاب انظیر سور والزاز عات+عد یٹ 4936 ٣تاب‏ الط(ا تی ء باب اللعانء 
عدیثٹ 5304 تاب الرقاق ء باب تول ا وفع تنا ولس ہکا ین حد یٹ 8803+ 
64)) : 
5۔ اما مسممنے گزن‌انادے بعد یٹ یا نگا جج 
و الْعَاقبٌہ قال لی ثسَ ا[ تو 
یس نے ول ہنطظ سے سنا بی کا روا یت مل ہے زع ری نے بیا نکیا 
عا قب دہ ےجس کے بعدکوگی اتد 
( سسل تاب افائل باب نی اسا بل حدیٹ 6107) 


6ر حر تج رین عم ریش ال تالی خنہ سے روایت ےک دسول م٠‏ ىُ 
ارشائگر گاے: 

اگ لی استَادء ا دہ ء 5ات لی يَنمُوالله بی اکر ءٗ 

الْعَاوِلّيیبعْمَرَالتّيُ عَیٰفَدَمَّ ,وآ لَايبٌ ای لس 

َقْنَءَلَمَں“ 

نفک میر ےک ااء ہیں : می لحم ہوں ء یں ات ہوںء ٹس مایا ہوں می رک وجہ 
سے الیک رکومٹا ۓےگا اور حاشرہوں لوگو ںکا جش می رے قرموں میس ہو 
اوریٹیش عا تب ہول اورعا لا ا یاتا۔ 

( یئ سسلم تاب الفض ای :باب لا سا بعد یٹ 

7۔ حطر تح بن جیب ریشی ال عناپے ول گرا ہی حخر تج رن مم ری ال 
ےروب تک۷رتے ہیں اک دسول انپا نےفر مایا: 
لی خَمَة اما الَامحَگدہ امن 3نا لماح ی ایی نو 
الله بی الكَْدواَی اي ملاس علی قتییٰ 2 
العَاقبُٔ 
میرے پا نام ہیں مھ ہوں اورییس اتمہہوں اور ای ہوں شی ال 
میرے ذر لی ےکفرکومٹات ۓگا۔ ٹیس حاشررہوں شی لوک میرے بحدخش ر کے 
جائجیں گے اوریش عا قب ہوں ۔ نی میرے بعد اٹ کو نیا رن سآ ۓے 
رک 
( انارک ہاب انا تقبء باب ماجا ءامسا ررسول انا حد یٹ 3532 نا 
تاب الشفسیر باب کن دک اس اص حدیث ۸988) : 
9ے۔ ایالم نے یداو یں کے تو سط ےححضرت الوم وی الاشحریی رص الڈ جال عنہ 


رست] 

شاف کی ے: 

کا مم ال ال سی انتا مه امام فقال نا مہ ء2 
دق وَالکلی ء وَالْعَاؤِرء وَلَیٌ شوہ وب الم 

رسول الڈنپھل نے ہمارے لئے اپ ےکن نام مان گے ہپ نے فرمااءی لج 

پوں اوراصرہوں او ڑگ اورعاشہول اور بی الوب ااور تی الم ہوں۔ 

(ی لم تاب انال :باب ن سا بن عد یٹ )٦108‏ 

] حتجرن یمم یش ال تعاٹی عے ردایت ےک ہب یکر پل نے فرمیا: 

الَامُمَکدہ ء وَاعمَنء اتی الناچی اَی حلی بی الکفرء دنا ' 
ری مز لت لی کی زا یع ,تیب 
للّ ہی لَیْس رہ تی٠‏ 
میں ہوں اور امہ ہوں :ٹس ما گی ہو می ری وج سے الأ تال یکفرکمادرے 
گا می حاشرہوں ءلوگو ںکا مہرے قد موں میں ضٹ کیا جات ےگا اور یٹس عا قب 
ہول اورعا قب دہ ہوتا ےجس کے بعرکرئی نیدوو۔ 

۱ سسلم کاب الفسائکلء باب نی اسا ا عد یٹ 6105) 

حضرت ابد پر ونیشی انڈ تی عن میا نکر تے ہی ںکرسول انپا کے ارشادف ایا : 
اس وقتیتہارییکیاشان ہی جب ححفرت یی علی السلا مکانزول ہوگااوراا عق 
مین ن ےکوی ہوگا۔ 
رج سلم تاب الا یمان ہاب ان نزو ل کسی من مریم اش یجرنا منأَ مد مٹ392) 
٤‏ صحخرت ابو ہ رر ورشی انأ تھا خنرےددایت ےد تحضر ت اٹلا نے فرمایا: 


7 
ا ا ۔ 


پا کی ۹ مو کا ا روہ 
لا توم المَاعَة عَتی وَقتٍل وتمان فيَکوْكَببْلهُما مَقَلَة* 


ر٤‏ - 
٠‏ ت٠‏ ٗ >> کان 
قامت ریو لام سے ا دوگروم ۳ یں ملڑیی: 
دونوں ٹس بڑکی جنگ 6 وگی ادردوو ںکا دکوگی ایک ہوگا اورقیا مت اس وق تک 
ائم نہ وی ج بک ک میں کےقری بجھوٹے دال ناہرنہوفیں۔ ہرانک 
کپگایس اکا رسول ہوں- 
( یچ ارک کاب المنانقب ء باب علا مات الو تی الاسلام *حد یٹ 171 
وپ رت ابو ہریروزشمی ان تھا لی عن سے ردایت ےکجضو خی رالا نام کا ارشار 


سو 


توق ِ اللََِلَ ْمْدَقَْتُ قَا لوا وَمَا المَيِرت قال :ال 

اَل 

نبوت بی سے( مور وفات کے بعد ) چھھ پاتی نر ےگاگرخوش نمریاں رہ ۱ 

جائھیںگلوکوں نے رن کیا ڑا ںکیایں؟ آپ نےف رایاختھخواب 

(چ ہخاریی1تا بر ہاب ٹر ات حریثٹ 0 

43۔ ححخرت الو أمامہ البای ری اللہ تالی عنہ سے مردئی ایک روایت میں ےک تضو ر۳ 
لت علی اضر تواسلامماپےاہ ایک خلبٹی پالفاظطارشادفریاے: 

آتا ایال لبمارءَالتَذا یا تم 

یآ خر نی ہوں اقم خری امت ہو 
( سن ابین ماجہ اواب أعشن ہاب نتنالد ال وخرو نج “کی ان مر وخر وا جح و مار 
حدیث 4077ء _۔المھ رکیل لام حدیٹ8624) 


ت٤‏ 
-- جحفر تع با بن سار نشی ال تی حن سے ردایت ےک حضورتیرالا نا نے 
ارشادرایا: 
ےکک میں اکا یندہہوں اوراخیا وک را مکاخاتم ہوں- 
(رلر نع رک لک کم تی سور 7لا زاب عدیٹ 3566 ۔جلد 7مہ 453۔منداگر:حدمٹ 
عمربائضش من سار جلد 4ص 127) 
18۔ حفرت الو رر زڑی ال توالی عن سے روایت ےک جحضور نام الاخیا ءعلی یت والشاء 
نے ارشافرایا: 
تَخسْالا بر ۃ ین افْل الللھَاء َال تَ نَم الْيبَامء 
هي ود قب انز 
ہم( ممر یا الو السلام )ایل دنیاٹش سے سب ےآ ف ری سآ ہیں 
اورروز قیامت کے وو اولین ہیں کا تام محلوقات سے پیل صا بکتاب ہھ 
گا۔ 
(ی لم کاب ایت باب عد لیت خذ لآ لیو لت عدیٹ1982) 
86 حضرت شواک بن وٹ رضی ال تعا لی عدردائی ہی سک تضو ہک ریم علراصلو ۃوالسلام 
نے ارشافرمایا: 
مہرے بودکوئی یں اورمیریی امت کے برکوئی ام تم ہوگی- 
( جم کب ری یملطب نی ۰ن ناک بن رل انی ءحد یٹ 8446 :جلد 8ج مہ 303) 
7۔ حضرتالہ ہیر و زی الا لی عردای می ںکتحضو تی ال ری نے ارشاوف را یا: 
کت ول الین فی العليِ ٥َايرُّمفِیٰالمعِْ‏ 


یش غلقت کے اختبار سے انمیاءگرام مس پہلا ہوں اور لہعشت کے اعقبارے ٠‏ 
آٹری‌ہوں- 
(زالفردوسب) تو رالنطا ب لد عکھی *حد یٹ 282:3:4850۔عدیث 414:4:7190)' 
8۔ حخفرتکبدال ین سحودرشی ال تھا یع سے روایت ےکیجتضورن یکر علی لصو و 
السلام نے ای دردرشریف کے یالفاظکھاے۔ 
١‏ اک وع وکا علی مود الس 2 
ام لْمتَيَْ وَمَاتمَالكِمدِن تل عَيك وَرَسُوِك إِمَام 
ارہ (ۃقازی العَیر وَوْلِ الزحقة. الَّلمَنه اکا 
يہ لن اي زا کے پرا ددم اے) 
ای پا درودورمت اور برکات رسولوں کے سرد ہیں کےامام اوزییوں سے 
خاتم مج پرنازل ف ماج تیرے بے اوررسول اورامام اشی راو (ا )اش اور 
ول رت ہیں ۔الی آ پٹ کواس مقامگمود پ فائزفرما جس پراولشن و 
آف ین رف کفکرتے ہیں۔ 
( سن این ما اواب اتقارۃ الو والت: ھا ء باب ماجاءئ شود حد یٹ 906) 
9۔ حفرت ان عاس رش اتی نے ردایت ہے: 
ا ا من ںہ 
قال زا٥اله“‏ مُرحِفقاِی امن ک۹٘٭]۳۷۳۷۳۵ً۷ف۳ه,"۵""ئ9ھ) 
ا تر کے صا جمزادے ابر انی کا اتال ہوا 2 
فر مایا :اس کے لئے جنت مس ایک دودھ پلانے دای ( کا انام )ے۔ گر وہ 
زندو جال سچائی ہیتا۔ 
( سض ن ان مہہ الواب ماجاء فی ال ہنا باب ماجاء فی الصلا و علی ابن رسول ال دک وذاتء 


رس 
عدث1511) 
0-۔ ات ات تی 6 شی اتال ی کے با ر ےم ہے: 
مَات ومُوَسَيیروَلذقَه اث يِكز٥َلدَتعکر‏ ۶ل ٠ْ‏ 
1ت 
ابر یم شی اڈ تھالی عنکااتقال ہواجب دو تچھوٹے تھے ۔ اگ ر فی لہ ( ھی )ے 
ہوک خر تجو نل کے بح دکوئی نی ہوت ا نکا صا جزادہ زم :ربتا یا نآپ 
نی کے ب کی ای رے۔ 
( سن این ماجہہ اواب ماجاء ثی الجنائء باب ما جاءٹی الصلا لی این رسول انل وذکر وا ت٠‏ 
حدیثٹ1510) 
21۔ حرت ان ماس تی لایع سے روا ت ے: 
لا ںاسا ال تمْتِق مِنْ می ب التٌبْ ولا لا 
الَاِعَة 5ا مَلْکِلِمٌاؤوٌی لََ 
اےا وگول مات نبوت بل تصرف رویاۓ صا( جچاخواب )تی باقی سے چھ 
ملمان خودد کھت ہے لاس کے لی ےکوکی دیکتاے۔ 
(سنن امہ اواب تیب رالر ڈیا ×حدیٹ 3899 مل تاب اصلو 2 با ب انھی صن ق77 
الق رن فی الکو دجو دہ حر یٹ1074) 
22-۔ ححضرت سو کن الی وقائ شی اتا لی سے ردایت ہے: 
لہ ید ا ای ک. فی خر 
رم الله نعل ق التْمَاءِ وَالمّڑٌ ت؟ فقال :ا 727 
ازو ون لی ؟خفر ایی 
یک ری نے نوزدو نوک یں حفرت یی بن الی طااب شی ال تھی ع کو 


ؤ ا 2 


مات نیس لیا کی جچھوڑ دیا تو انہوں نے عون کیا اے ان کے رسو لپ 
اپ نے ڈو تل اودیچوں کے اتمدکیوں چوڑدیاآ ےل نے فربایا۔کیا 
تم اس پرداشیائش لکرت مرےساتابیے ہو جاؤ سے پارون موی کےس این 
یر ے ببتدنوتہییں- 
( سی سسلم تاب فضائل امصحابہ باب کن ففاک یٹیب نای طالْی حدیث+6218۔ 221 
23 امم الین سیررما شید یق یش ال تھا عنہا سے روایت ےک مو اقم الا خر ما 
ای والثاء نے ارشاوفرمایا: 
رر مَعَقتَ و 
ِنهمَد* لاگ عم ری لطاب لو قال :ال 
7 ین ا 
مرن لطاب ہیں۔ ئن دوب ن کہا محر ٹا ٹف کو کے ہیں جن پرالہام 
کیاجاتاہو۔ 
(نسلم تاب فاصوا ساب من فضا لع تی ان تالی من حد یٹ 9204 
و صرےف لن ا مرزشھی ال تھالی عنہ ےروایت ے؟ ول اکر اھ نے فیا 
لوان تبنء َییٰ لَكَاك غربیَ لطاب 
اگ رر ےگ بی ہوا ود پھر خطاب .2 یی 
25۔ رت امک ز عیب شی ال تھا ی عن سے ردایت ےک انہوں نے حضو تی ال2 
گ ٹکو یف مات ہو سا: 
ذَقتِ الددق وََكِّبِ الْمهفِرَتُ 
نو ٹم فی جرف ہشرات باقی رو ھے۔ 


رھت 


0 ماہ او ابی ال اعد یٹ 3896) 


26 حضرت الو ہیا ری الڈ تھی عندا و ہی ں/ 7ت اف مان ہے: 


فان آجر لالبیَارء وگ مَْجییٰ ار المَمَاج 
بے کرک می ںآ خرالاخمیا ہوں اورمی کی سج دآخرالماجدے۔ 
یسل مہاب ,با نل الصل سو مل دا دی عدیٹ3378) 
ہو_ م س شش ا 
سچھونادکوئی ککرئے والو کیا لاخ الن الفاظا لد 
لا زم الام کیہ 2ھ کڈ کنا کڈ 
سوچ جچھڑے۔ نم - 
سے ہرایگ کا دوگی ہہ ہکہ دو نی سے۔ (این الی یپ مہہ عدہٹ 


665) 
رت اموڈ رزشی اڈ تھالی عروایت کرت ہی سک تضورسیرانا م علی ال السلام نے 
ان سے خاطب موک رکہا: 


یا با ذراؤل ازبَاء ام 6ر مب 
و انمیاءکہ ا آ دم علرالسلام ہیں او رسب سے 
آخری مضرتئو نظ ہیں۔ 
(زالفر دوس پمؤ فو رامطا ب لبلد مکی بن ال وذ ر>حد مٹ39/1:85) 


وج_ حخنطرےۓمصعب بعر شی الع اہن والید تر ت عرش ال تعالی عنرےحرواہت 


نے کا 


ام مَسیل الله ۶ حَرَع لی تَبوكۓ واسْتعلف عَقا فقال: 
پو۔صھ 


قش تک کا ک می لن نڑارن 


ھریا 


-1 


ا مر هُمْکلما دَهَتیی 


می 
بمَلرلَة مَالقد ین می إِلا ال“ تین“ زغییٰ 
یل تس رف وی 
چھوڈاقھانہوں نے عون لکیا :کیا پش بچوں اورکورتں می پھوڈے ‏ 
جار ہے ہیں؟ آپ ناٹچ نے فر ما کیا ف2 اس پر راش یئ سکہ تھے جھ سے وہی 
مناست بوجو رو نکو موی ےی گر مر ےبعرنَ نیائیں۔ 
الفاری تاب المفا زگیء باب نزدۃ ت ول :عد مث ۹416) 
حفرت ابد ہریرہ رشی ال تھالی عن سے ردایت ےک ہتضورس انام علیہ اصلؤ 7 والسلام ‫ 
نے ارشادف مایا: 
فلت عَلیٰالتْبیَاء بیس أَمِفّْتُ جو روا و 
اپ وَايذ بی لی تن لم ہن : 
أمل ےی الیکا وَعَِمَىَ َال 
۰" اوک وم 
دئے گن ادددوسرا کی دعب سے میرک مددیگئی تس رےمیرے لیم تک 
ال عطا لکردیاگیا۔ چو تھے میرسے لے تمامز جن اک اورنماز پ کی ,نا 
ا۔ انچ یں یں تا لو قکی طرف می :ناک رمیا ہوں۔ چٹ یک جج ہ 
انا کا سل پیش کرد گیا 
رج سکم تاب الساجد باب الساجد ات اع :,حرب) 
صخرت اید ہریرہ رشی ال تی عنہ بیا نکر تے ہی ںکتضور ب یکم عای ال : السلام 
نے ارشادف مایا: 


مب 


دست 
نی اس ران ل کا نظا مقکومت ان کے انمیاءکرم جلاتے تھے جب بھی ایک نی 
رصت ہوت و اا لکی تچکہ دوس ران یآ جا تا اور بے شیک ھر ے بعدق می ےکوئی 
یاکی سآ گا۔ 
( اور عبد الہ ین مھ الی شہ امام ء المصتف ‏ جلد 418:صفہ 58 ۔کرابی: ادارۃ القرآن 


68ھ) 

329 حضرتسیعد بشی الأ تالی عنرردای تک رت ہی ںکہرسول انا نے تحت لی شی 
ال تھا گی عد ےارشافایا: 
ما تی أَك يك لی بمَرلةہ مَاللكيِنْ مُیْسٰ عيْراله لالب 
بھی 


کیا اس پرراش یئ سکریم میرے لے اہی ہویسے موی کے لئے بارون تھے۔ 
مل بک رمیرے بح دن یکوککیِں ے۔ ۱ 
ر6 س1ا فضال اصولبۃ ہاب فدا ہلیبن لی طالب رشی اتال عنحد یٹ 62189) 
23 حخرت ارہ ن بھرہ نشی اتی عشرے دای تکمردوعد بیث شی ہے : 
ورس ےآ پنٹام کےکند تھے کے پا ںمکبوق کے انڈڑے کے دارم شیوت 
ھی ج کا رک نم کے رنگ کے فابتاد 
( سکم تاب الف ال ء باب نی شبات خات دو ة عد یٹ6084) 
4-۔ ححفرت ابو ہر وی ای عندوای تک تے ہیں : 
َال مَسُيْل الله ۶ ببْنا نَا نا کہ“ لت ری ارس فرع 
یف انان ین کب فَکمَاعَلی ھتان فاؤجی ال آن 


سریا 


اجب صَلقَاجِ وَطَا جب امام 
رسول ان ٹڈ نے فربایا: یس سو یا ہوا تھا می رے پا وشن کے نز انے لا ئے 
کے اور میرے پانھون می ہڑنے کے د وشن تھے لئے جو تھی بای لگ او 
مان سے شک رہواء بی یھ وت کی یکس ا نک پچھونک ماک ادوں۔ میں 
نے پھونک ماد تو دہ اُڑ یئ ۔ یس نے اس خوا بک بینتی رمک ٹل 
دوکراوں کے درمیان ہو ۔ یک صاحب صنعاء ہے اوردو ‏ اصاحب یمام 
(ی سسلم تاب ال روا حد یٹ 836 
35۔ حظرت ائن عیاش شی الأ تھا لی عنر سے مدکی ایک عد یٹ ماک کے٦‏ تخرییدے: 
٣۷۳۳ھ‏ 
کا سا حر لے السا 
بیس نے ان لکی یتر یکمیرے بعد دوجو یشنمو ںکانلپورہوگا ایک ان 
ٹیس سے متا ار نے والنسی ہے دوس ایمانکار ٹن والامسیلم ہے۔ 
رج لم تاب ال اعد یٹ274-5848 
36۔ حظرت وہب من مقیہ شی الع حضرت این عپاس رضم اڈ تی عن سے ایک لوم 
عدبیث کے بل مس روا تکر تے ہی نک تضمور نھ یکر میم نے ار شا دغر ماک ہا ت 
کےدن ضر ت اوج علی السلا مکی امت کی 
٥اطنت‏ ههَاياأ حم ٥الت‏ ََكَْكَ ايِرَال مر 
اے اتد ! آ پکو سے معلوم ہوا؟ حا لان ہآ پت اورآ پکی مت امتوں 
یآ خری ہیں۔ 


(الع رکیلل اکم باب ذکرفوئ اف :حدیٹ 297,2-4017) 
ات نطرت سعد بن الی وقائص شی اللہ تعالی عنہ بیا نکر تے ہی سک رسول الْ نام نے 


سیت٤‏ 
رت لی ری اڈ تھا ٹی ع نہ ک تح قیفر مایا 
لت یبمل ما تین مسیٰ لا لل تب تغیف 
کے کے ای ہویے وی علہالسلام کے لئ پارد نعل السلام خھ 
بلاشیمیرے بحدکوگی یں ے۔ 
کی رفا تکی جابت داوگی کے احتقسار بر حخرت سعدرشی ال عنہ نے فرمیا اٹ نے 
ای عدیےگوخودشنا ہے 'انہوں نے ابی وو ںانگیا ںکا ول پچھ او رما اگ رین نے تودنہ 


نا ہوا مر ۷9 ”و۔ 
) یسل تا فا اصوۃ ماب نف لٹ نال طا بی لذْحالٰ سیت 6095) 
8۔ عفر لی الرنشٹی رشی ال تعالی عنکی ردای تکردہا ایک ول حد یٹ مبارکہیش ہے: 
ین لمات الو دَمَوَعَا تم ال 
تضورا یف دو ں شانوں ےد مان ر2 ببت اد پاٹ خرکی بی ہیں۔ 
(جا مع التر کی اہواب الناتب.باب عفآ خی نی نی ال تال عدءحدیٹ 
9ے حنضرے ماما اچے دالرصفزت سد بن الپ ا زی الھائی عن سے روا تکرتے 
یں ول لال ۓحضرتٹل شی الڈتعاکی عےقریا: 
ات یبمل ما ئدت ین مس ء لالہ +لا تی یی 
تم می رےساتھا ای پاردن موی کے اتھ گرم ر ے کوک نیس 
ہیکھا۔ 
نچ 727 تاب فضانل ااضصحا ہ باب من فضا لی بن لی طالب رش ال تا عنعد عٹ 
7 کن غاب تاب الستۃ ؛یاب فی فا لاصحاب رسول انان کی ب نال طااب 
نشی ال تھا لی ععریٹ1214) 
0-۔ 7.0 نے کش العمال یفن الاقو ال وا ال می ستحضور اکر 
ش ٹون کیاسے؟ ۱ 


ط ص٤‏ 
لا نبی بعدی ولا آمة پعں کم قاعیں واریکمء واقیبوا عیسکیرو - 
ضوموا شھ رکی و اطیعو اولاق أمرکمء أدخلوا جنة ریکم۔ 
میرے بح دکوئی نیس اور ضہجی تہارے بح کی مت یو نم اپنے ر بک 
عبادتکرواورہڑگا تمازتام اکر واورا نے پر ے مین کے روز ےرگھواورا پچ 
اولوالامرکی اطا عحتکروہ( پیل اپ ر بکی جنت یں دائل ہوچاؤ_ 
(زعی ای الد یکنز العمال فی من فا قوال والا فعال > حد یٹ :43638 بیروت :و 
ار سال 1405ھ/1985ءجل 15ف 947و) 
41- علاءالد نگ اتی نے کنزالعمال یمن الاقوال وا خوالی' یش بعد یأف لک ۔ 
لا نبوۃ بعدی الا المبشرات الرویا الصالحة 
(الیناءحد یٹ 44422 ءجلر 15 :“ئ۱0 
42- علا لا ءال نی بن تام الد ین الندبی ری ال علیہ نے''کنز الال نی 
الاقوائٛ وا فعال می ستضوراک رٹ کاارشاأْ کیا ے؟ 
یا بھا الناس!انہلا نبی بعدی ولا امة بعں کی الاا فاعیدوا ریکمھ 
وصلوا خبسکی وصوموا شھ رکی وصلوا ارحامکی وادوازکأۃ 
اموالکم طیبة بھا انفسکم واطعیوا ولاۃ امرکمرء تد خلوا جنة 
ربکھ 
اے وم رے بدکوئی نی اور می تہار ے بحرکوئی مت ہے۔سنو! اپ 
ر بکی حباد تگرداود گا نما اعواوراپنے می (رمغمان )کے رو ےرکو 
اورپ رشددادیال جوڑواوراۓ اصوا لی زکو* خوشد لی سےاداکرواور اپے 
الا مرکی اطع تکروبتم جنت میں دانل ہو جا گے_ 
(عی اتی ند یکنز لال ٹی من ال قوال ولا فعال ءحد یٹ : ۸43637ء بیروت: موس 
اار الد 1405ھ/1985:جلر15>ؤ 7ھو) ' 


4- تسین پا شال مد ےلم مرک نے بعد یث مارک 
نف کی ےک جب نز وت کےےم تع رسول اڈ نے حضر تج رش الال 

عدکوا نا اشن مقرفر ا اق انہوں نے عق کیا: 

یا رسیل الله , اتعلفنی فی الخالفة ء فی النساء والصیبان؟ فقال: 

اما تزضی ا تکوت ملی ہملزلة ھروت من موسیٰ؟قال :ہلی یا رسول 

الله ءقال:فادبرعلی مسرعاکائی انظر الی غبارقدمیه یسطع ء 

وقں قال حباد:فرجع علی مسرعا۔ 

ارول اللہ !کیا آپ شجھے تیچ رہ جانے والوں م۲س( ین )عوروں اورکوں 

میں اپ اشن ہنارے ہیں؟ آ پان اشادفر ما ا کیا اس بات ےخول 

نہیں کہ تھے بھ سے وبی بت ہوجو پان علی السا مکی موی علیالسلا| سے 

تھی ؟ عم ضکیا: یا رسول الث ا کیو ںی ؟ اس (راوی )ان ےکہا: ںی شی الہ 

تالی نت زی مو ےٹوٹ نے کر وع سکھااور 

ماد ےکہا: لی تی کی سے مڑے۔ 

( سید ملا مم ات ب نقبل, حریے : 4490ء اضر حر شاکر ( شرنہ غ مار محر 

دارالیارف 71374 |1955 جلد 3“ 50) 

4- امام ننلی نے سن نک رکی میں ہ امام مھا کی نے نے مکل ال جارمش ‏ علامطلال الد 

سیلی نے الد مشو نا یی انی الندبی نےکنزلعمال می امام نشی سی 

ا وا ئن میس حض تی الرتیت ای الو و والسلا مک ارشادکرائیأئ لکیاے: 

لا نبی بعدی ولاأمة بعد کم 

ے بل ىي اوتہارےبحرلرل امش 

(زخاول, الا طا ہرم ااسعیر بن مس لی موسوۃ اطراف الید یت البدی الشریف ( بروت: 

رارال4۵6۹۶۹۸۰.۔/ 4994م جلر 7“ 285) 


ىا 


قفتم خجوت اوراجما امت 


اب اہجمائع امت کےطور پر چردور کے جیدعیاۓ اسلام کےتصو رم خبوت کے پا 
بآ راوتا شر ا تککھ جات ہیں س کہ اجماغ سا کے بعداجماغ اعم کی ایر کے ات 
ا قید وک تقاضیت دا ہو کے فرمان مال کے مطاِ کید الله علی الجمعا 
اورالجہعاعة لا یجتیع علی الصلالة اورلا تجبع امتی علی الضلالة (7 :1 
اھ جماعت پر( ہوتا ہے )2۔ بماعتگمراتی پراشھینس ہوی۔3۔ میرئی امس تگمراہی 


کہ اکٹ کی را ۓعمو ا صواب ‏ نی وٹی ہے بقول شاعم 
7رز علق و نورق بے جم 
اوراگکرامستیئح رکیل ک اکٹ اصماب نے ا تقد ہوق ہآ وعد ی ٹک روج اود 
ابی صداقؤں کےس تسلی مکیاے اورمنکرری نکر وکیا ےو یقن چتدمکک ری تیصو نے اور بد 
او تی ہیں اور جماع تسین جاد وق نکی رگا نع ہےعد بی ٹنویا ےک 
من فارق الجمعاعة شبر افقں خلع ریقة الاسلام من عنقه 
) سن الو دا و ہکوالہا تاب حاح تم رش حدی ول 7ا 

تر جمہ :جو جماعت ےل لگیا۔اسلا مکی ری ا کگردن ےنگ لگئی_ 
لزان ہارمگ رین اس جراعت سلیشن ہی سے گے لہنذرا اس حد یٹ مہادکہ 
مصدا قبھی ‏ پاوگ علق اسلام سے باہرنکل یئ اورا نکی شناض تھی بد لگفی ہن ایق ی: 


ع4 
و وہ یکوئی بہائی ہوا کو مہدوییہکوئ کی ہواتکوئی مرزائی قاد ال سلعنة الله علیھم 
ایین۔ اییےلوگو ںکوقوان کے دوک پردییل ماگے سےجھی نف مایا ہے۔ چنا نچ میان 


اج تا کہا 

حضرت امام بویغہدا م اعم رح ال علیہ کےز ہانے میس یہن نے نبدتکاوکوی 

کا اورکہاکہ بے م وٹ دوکرمش نیو تک کوک علاصت بی کر وں ۔ اس پرا ما مان رجر* ال علیہ 

اڈ یہ جن اس دق غج )نے و الال خلا تطل کر ےگا دو کاف رہ 

پا ۓےگا ۔کیونک رسول انف فرباپے میں ۔لا نیسی بعدی '(میرے بعدکوئی نیش ے ) 

خیرات النسان ٹی منا قب الا مام ایم ال یع مان از امام اہ ن جرگ شال ) 

آولا: ححضرت امام ٹھاوکی رمع ال عل یف مات ہیں ”اور یکرت نلم الہ کے برکزیدہ 
بنرے نید نمی اور ند دہ رسول ہیں اوردہ نام الاخیا :امام الاتقیا سید ال رشن ء 
عیب رب العا لین ہیں اوران کے بحدنوت کا پر دو اگمرادی اروا پش سکی بن گل 
ہے۔(شرں اطھا وہل عقیدۃالتلفی) 

نایا علامہائن قام ان کی رح لعل ف مات ہیں' یق دق کا سس ہضور بی کرس کی 

دفات کے بھرشت ہو پکا ہے۔ یل اا لکیہ ےکدوٹیئیں ہوک مگ ایک ہک طرف 

اوران ل/ز ول فرماچکا ے وک نیس ہی ںتہارے مردوں یش ے کات ات روہ 

ال کے رسول اوریوں کے نان ہیں( جلراول) 

علا مہ قاضی عیائض یی اتی عنہاپٹ کاب 'الشذاء !یش ارقام فر مات ہیں ۔ اور جھ 

کوئی اپے لیے نبو تکا دکوٹ یکرتا ہے ۔ یا خیا لکرتا ےککوئی اسے ( شش ضو تکو) 

حاص لکرستا ہے اورا طبر ہار تلشی کے باعحث نبو ت کا منصب حاصو لکرسکتا سے 

تی ےک رو فاسف اور نا میا دصوٹی بی ٹوٹ یکر تے ہیں اورائی طرح جوکوئی ٹر ہو ن کا 

دوک نی ںکرتا لان ددیہ لوٹ یکرت ہ ےکسا پر وگی نازل ہوی ہے ا ط رح کےقام 


مث 
چ 


۶ 6ھ 
لیگ کافر ہیں اور رین مہ سکیوکہانہوں ( لی انم والسلام )نے؟ 
ملع کیا جےکہ دہ خر خی ہیں اود یککہان کے بح دکوئی ٹینیس ےگا“ (ا1 
شی ں جو ق نف تل بلرررم) 
ابا علاسای نی مک ہیں۔' روٹس اس بات پر یی رکتا کر ( ۶ن1 
می ہیں دومسلما نی نکیونکہ قد ہمبادیات یش سے ایک ہے '(لا شبادوالظا ءا 
علاواناتم) 
خ:سا: علامشرستانی ”مل دانھل'می ںککھت ہی ںکہ(اکرکوئی قید :رک )"نیک 
کے بعد( زجضرت کی کو یآ نے والا اذ اس کےکافرہونے مس دو رہ 
می بھی ال فی (املل واقل چرووم) 
سا آ: لایالقاریالہردئی ”شرب ف اہ زم فریاتے ہی کی ہارے نیل کے بع رخ 
وگنال جا ںکرے۔““ 
سابًا: امام مھ بن مھ الخزالی الال رر ال علیہ نے اپئی تصا یف معارج اق“ 
لاققمادئی الا تام حقید وم بو کی امت اورآ ٹم ہت کے ابات برع 
یکنشگ دی ہے کم لکفش پاش لکرن تق اعت طوالت ہوگا۔ ا ہم ایک اقتاں در 
ڈگ ہے ہفرماتے ہیں: 
”ام نے بالا تق افظط لا نی بعدری'ے اور نیکر ھڑپ سے 
ق ران احوال ے مھا ےک تنو ا کا مطلب تھا لآپ 
کے بعد نکوئی یآ ےگا نہرسول۔ یز امت کا اس پر 
جیا اتی کرس می کی تاویل اونصتی سکیکک ہیں 
ہے۔ لزا ین سکیپنکرا جا (اورکھرا جا کافر ے) 
ہدنے کے سوااو یی سکہا جا سکیا 


رننن.] 


(زالاقم دی لاصتقا وأ الادبیکھ کوالہاسلائی انی وپیٹ یا شا بکا تال ر48 ) 


:امام زرقا ی شرع ”موا ہب ارد می می کھت یں ۔خاتم النبین ای اخرھھ ( نت 


نین کےع یآ خری نی کے ہیں )(شرح مواہب الد می جلاتگل207) 

از گی الین اکبراین الع یز حا تککیہ باب 340 جلد سم 84 ٹش فرماتے ہیں۔ 
”ان لوکہالڈ تھا یٰ نے ہرفخلوق ےئو نأ کے بعدرساال تکادرواز و قیا مم تک نرک 
دا ہے( بکوالہالبواققو الجواہرجلددوم )مرف رماتے ہیں اب ارنفا خبوت کے بعد 
اولیا ال کے نیے سوا تم رات کے کک ای یں د ہا اوداوامرونداتی ای کے سب 
درواز ے بند ہو گے ہیں ہں۔ ہیں ج وت رفظم کے بدا (خوت ) کا دوگ کمرے وہ 
شرلیتکامدگی ہے ۔ جوا کی طرف وت یک کی ہے برابہ ہے ہا رگ ش اعت کے موافن ہو 
با خااف ہو ہیں اگروہ ملف نی عائل وبا ہاو ہم ا لک گر دن مار کے اور اگ روہ 
پل ہا ہم اکس س ےکنا ہش یکپ یی بے 

(احینہ یچ یکقیرداما مکبرالوپ ب اشترالی رحب العلیہنے ا ینف الیواقت والواہر 
جلددوم یں نظ ہرکیاے ۔د یت 'اسلام او رقادیا 7 ب70 

شر حول اب ن تم پا صتی ' أفصل نی الیک واخل می سککت یں 

' یج سک رالتراد جراعت او ربم مرن ےآحفضرت ٹپ کی نبوت او رجحزات اورت رآن 
7 ہے اس یک رالتحدادجماعت افخ رکال ےحضورعلیہالسلا مکابیفر مان 
بھی خابت ہو چکا ےکآ ٹفل کے بح دکوکی نیم تو نہہوگا۔ یں اس لہ کے ساتھ 
اقرارواجب ہے اورتضورعلیہالسلام کے بح دو تکاوجود انل ہے ۔ایما ہرک نیش ہو 


کن( جلراول) 


الع و لئ ر : تمیدادیشگورسالھی (می یس ہے ان اوک ہسسلمان حعاقل پیا ختقادواجب 


ہ ےکم نم ال کے رسول ت اودا ب بھی وہی ہیں )۔ .او رتضورعلی السلام ات 


کے جوتضمو لم سے پپیے رسالت وش ربعت کے فرش پر تھے وفات ا نکی بد وگی 
پاش کی زمان نو تکا دو یکر ےکا خر ہو جا ۓےگا اور جس اس سے ج وط 
کے دوک یکاف ہوگا کیونک اس نےنح ق ران می شی ککیا۔ 
(صفی 0 4 ہکمی بھوالہاسلام اورقاد یا ضیتاک 56 5 

انان واخر: خلا ہاب الل نپ ل الکن ھن را چمتی فیافر مات ہیں ۔ کہ خداے کا 
0ص 0 - 2" 
درنبوت اورمضتق یا ش دک گر برسمالت اورمترف بودرے دمراور ہر چرازاں خر دارے 

صادقی دا نے ویہہاں چا ازط لات رسالت او یش مابنراں درست شد وا ست ا 
زدست ےا یا جاشدہ رکید شک ست درآں نز شک مت دا سک 

داز دے نمی دنر بودیا ست یا خوا بود وم سکےگویدکامکان داردوباش رکا ف رستا 

( زا ءال دوہ پا تم مل ازامام ام رضا نخان یی جک 85 ۳ 

اثااف واتٹر :امام شی رح ال علیہف بات ہیں'اورائل سنت و جماعت نے فرمایا ماد 
یٹپڈ کے بحدکوئی یئ سک ال تھی ف راتا ہے ہاں ا خحداکے رسول ہیں ۔ اور“ 

انمیا میس پیل او رتضورا ذظ فر مات ہیں''میرے بدکوگی میس نو جو ضو را 

کے بعد یکوئی ماے ووکا فرےکرق رآ لیذ ص رع کامکرہے۔ یت نتم مد 

کوئی شیک ہود واج کافرے۔ '(جوالنخی رو البیان ) 

اارولع والتر : مولاع عبرایکھنوبی نے" زج رالاس می سکھا ے ”لیکن ہہارے ا 
نے ھی طیقات کے جم انم کش مک دیا۔ تیآ بے کے بح دی طبقہ می سپا کال 

منصب نھدت تردیا جا ےگا۔ -۔۔اواپتی مگ( مشئیآیت خائ این میس ریما : 

ہہک یآ ےی الا طلاق والاتفراق شی بفیرا شا سام انی کی مکر نے وا 


6 


ہنا 


7. 


ا 

من داتئر: ما مالسدت امام اتد رض خان بر یلو رحم لی قا دی کھت ہیں ۔ 
”وی مھ رسول الف کو ات نین مات ان کے زمانے می خواہ ان کے پیا ی 
جک شک قحال :اٹل جانافزل ای وجزے ابتان ےلین سو ول 
لو وَمَاتَمَالثیٹیں ن سی موس و سج 
شا کفک او ضعیف اتال خفیف ے و جم خلاف رکے والا قطماجماع کاف رمعون 
مقدرنی لیر ان نی جع تیگ میں داضل ہو نے دالا سے )سے تہالیاکروہ+کافر ہو 
پل جس کےعقیدولحونہ ملع ہوک اس ےکافر نہ جانے دوچھی کافر :جا کے 
کا ڈرہونے میس کیک وت دوکوراودے دوک یکاخر ین انف لی انکفر ان( کاٹ مایاں 
کاخ رکف ہمایاں ) سے“( جزا ءال حدددبابا لن ش8 ) 

اناج انم :عل ری ہراغی نا شر ح الف ران می کا ہے 'ق رآ نشیف رما پا تضور 
اقم لی وخ الین ہیں اورعد یٹ شس ہے پل نی ہو ںکرمیرے بھدکوگی اش 
اورامتکااجماغ ےکم بیکلام ایشا بے ہے۔ جواال کے نار ےبپجن شی نآ نے وین با 
انی تحضور مالسلا مک آخریی نھی ہودنا )(الیناص92) 

اتمم ون بر لعلیمسولاح عب درا یڑ شر سسلم می ف ماتے ہیں حول الاڈ خا تم 
نین ہیں اوراکریضی الگ تعالی عنتمام اولیاء ےا ہإں-اوران دولول ال پ4 
ری پل یم مق مریں کور ے۔اوران بیشن وو چھا ہو اضرور لین سے جوابدالآباد 
تک بائیرےے۔“ 

الا حروالظر ون: پچےراقال علامہجلاگل اللد ین رو رم ال علیفر ماتے ہیں۔ 
یارسول ال رسالتراتھام مود پپچوٹس بے غام 

2 رفظم ۲ 


ژؿہ۸سسسسسٹ ‏ ۔دیٔؤو۔3ى ۔ے ‏ س سسمسممم م سس مم سس سس 


این عم افکارکفرا ن زادشان ہوں‌درآصیدآ زان 


3 

اثا یوار ون: شادوی الأمحرث دہلوی رر ال علی تق عیرات الہپ جلد دوم یس ار 

فرماتے ہی ھک نی کان (زحضورسرو رکا نات ة) کے بی نی کا وجود( و 

مکن مرف مات ہیں' دنق خاتم این ہیں اوران کے بح دکوئی ینس 

( جلداول ایضا) آٹخ نو ت کات جم یو ںکرتے ہیں۔' میس تد پدد پچ ازم ردان 

لین خداو ران شی بعداز ود ے پاش" 

(کوا ل یلوم الت رآ سن س09 

انمااٹ و اسر ون: مولا کوٹ خیازئی''اسلام جمارادین یس رک راز ہی سک جب یک 

نشیف نے1 نے نے رسمال تکادددازہ بندکرد ا گیا ۔کیوکہ ان کے بعدز ہا کو 
نھااورش ری تک ضرورت با نی ردی_ 

بعد یں وب اخ ار دیو ور 

تک ہے دو الا کی نامہ بر 

(ص25-26 

الرائع والٹر ون: مشپومفک ول ق رآن غلام اتد پروی عقید وشخم بوت کے بارے' : 

ریا تکویوں جا نکرتے ہیں۔' وی ہقرات انا کرام تک مود وی او رتضو رن یکر 

و ذات تم ہو( تم نجوت اوف یک اص یت“ ن28) کاب داگیا 

لیے ال کاب کے لانے واننے ٹھیکیانبو ت بھی دائ کراب کے بعد ری تیاہوں 

نزو لک سلسلمخم اس لے نی کے بعد نو تکا سکس یب ی خر( بجی وجہ ےک ال تھا 

نے می اکر کو ای کاب (ا ینا ص+2) 

اس واتشر ون: ڈاکٹ لام جیلا فی برق اپٹیتصنیف حرف یع مان ' مم سککع ہ ںک ”ا 


س٤٢‏ 
تحواورکلامعخر بکی روننی میس نام الانما کی صر فآ خری نی ہو سے ہیں۔( ص20 
ق نات این کےسعنی ہیں کے تما م نمی ںکا خواٗ و لی ہوں یااشتی و کمرنے والال 
2 ماراا یمان ےکآ ں حقر تل خاتمالاخیاء ہیں او رق رآ نر بای کتتابو ںکا نات 
ے۔(ایناص٤6)‏ 

الماوں والر وں: سور افورشاہ مد ٹعشھیرکی کت می ںک بک خودآ پٹ کی و تک 
حلسل بی قامتکک تائ ددائم رگا ۔آ پک کے بح کوک نبدت نہ گی( خاتم 
نین ص148 )و اس ے تود ہو داز مآ نا ےکآ پن فلا سسلہنوت کےبھی خاتم 
ہیں اور چوک آتندہنو تکی جج ینیل ہوگی-(ایت اص 149) 

:املع والعطمر ون: صولاہ مضت یم شف دی نی انی موق رتصفی'ضخ خبوتکائل می راز 
ہیں ۔'' آ نٹ با اتا ءآ خر نی ہیں ۔آ نظ کے بحدکوئی نی یارسول چدآننش 
ہوگا رتخف می علیہ السلام جو پاأف سے پیل پیدا ہوک منصب نبوت پر فانے ہج 
ہیں ا نکاآخری ز انی آنا(شخ وت ) کےقلعاما نہیں '(ص٦10)‏ 

انان ولمر وین: مولانا سیدابو اش ن لی ندوئ کت مہ ںکی نشی یک سل اك آزل 
رسول او ام الا نیا ء میں جن کے برکوئی دوس انی نے وانئیں ۔'( منصب نبوت اور 
اس کے عای مقام حا ین 208) 

اتا اضر ون: پرو سرچ مجرایوز ہر ہلصری ابی تی ال مز اہب الاسلامی یں رنطراز 
ہی ںکیملمان عمہدنوئی سے لےک رآ نج کک اس بات کے متتقدد ہے ہی ںک ہنیک ریم 
تھرنو تک یآ خریی اینٹ می ںآ پن اف نے صراحاف راربا ھا لا لی بعسدی 
(میرے بعد ینمی لآ ممیں گے )..۔۔ بہرحال مر اصاح بک تعلیما تکااسلام سے 
کوئی س رکا یں '(اردوت جم یرفس غلام اح ترک یش 388.389) 

اما فزی: یمرن یکونڑدی کے مفوطات مم در ےکی آحضرتۂ کی رسال تک ایک 


دع 


اتازی فومیت یئ یک آپپکفل کے بعددسالتک سل ساٹ کر ماگ یھ ۔آ با " 


مسلمطور پرانڈ تی کے خرکی نی تے اور پکیش ریت اس دنیاکے لے مداک ی1 خر 
شرع تاھ۔ ای ش ریت مم اتی وجسمت رگ یک یک ہقامتکک کے لیے میٹ ی نے 
وانے انسانی مسا لکاعل اس می مو جودتھا۔آ پک ےآ خ رک نی ہون ےک خرقرآن 
کر یش ایت دضاحت اورغی ہم افاط ٹس دیگئی ہے( م یتیل چہارم یس 
064) 


عقیرہ 2 وت اوڑأتی جواے 


اب اسب ہوگااگر چفت یکپ کے اقتاسا ت بھی خقیر ہووت کےایات کےساسلے ۱ 


3 ےر ٦‏ 
شی کرد یے جا میں۔چنانہ 


2 


فی حافری ‏ مندبجہ ہک اگ رآ دی نین ج کہ اک رف خی نی یں دہ 
لیس ہے ادگ ےکی الکارسول ہوں ما پل ہوں ا سک ری جاۓے 
گی۔'(جلردم) 

فادیہندی مھ ہک یی اکرکویٹص کیے می ال کارسول ہوں یافا ری یں کے 
مج تمہ رہو ںکاف ہو جا ۓگا۔ گر چررادی ل ےک ہم کس یکا پغام پانے والا ای 
ہوں او راگ را کے وانے ےکوئی زوا کے و ایا ہے کہ یھی مطاتقا کا ذر ےی" 
ادگ تا جارخا یٹس ہجوت نبوت (ضورعلی السلام )کی بعشت کے بعد )پالاخواہ 
بعری انز می“ 

و سس الاہ رج ہے 'اورایمان لا نا فرش ےک تضورعلیالسلام 


تقامایاء وین کے اقم ہیں ۔اگ رو ڈٹ کے رسول ہونے پر یمان لااو اقم المیاء 
ہونے پہایمان ضرلا یا ملمان نہہوگا ل2 بوالہ جا ءال عددوباہ شخ الب ج) 


مکی نتم وت کے دلائل کے حوالہ جا تگکمات کے بعد اب ان چنا اض کا 


۱ 


پز مم > 

بج اک مق رآ بی کیا جانا ہے۔ رج نکو جفیاد ناک ریگ ری تم وت اپنے خی رق رآ نی وغیمرد ‏ نظریہ 

کےاقی می یی لاتے ہیں۔ 

ول اول: رین حضرت ما تشرصدبیقہ رشی اللہ توالی عنہا سے ہہ ردایت لطورسند می 

ےنپ تن کت 
قولوا اله خاتم الانبیاء ولا تقولوالا نبی بعدی 
ترجر: کپوک رسول نیمآ خرکی نی ہیں گر مر کوک آ پٹ کے بحدرکوئی نی نہ 
آےگا۔ 
سم حدیٹ کے اہ رفا ءنے ا حد ی ٹکو وجوہ سے نا قائل اتا رق ارد ہے۔ 

اول: پقوت'ایمان''ازاامام ان تی ہہ با تبھلیٹی چا ےک ج بآ خحضو فلت رآن یا 

سشت کے الفا کا مطلب با نکی شر با نکر تے ہیں ۔ ان کے متقا بے ںالفت کے مایا 

کی اورمطلب پا شرع(جی یکرسیدہعا تصد یڑ ےمضسوب ہے )کیکوئی یثی تی ہو 

گی۔ 

دویم: اس ردایت کےتھام‌داوئی ی2 کش راوگ تق ٹول یا خی رنصدقہ ہیں 

سو : اس روای تکوحد یٹ ک ےکی جھو ھ می شا فی لک گیا کہ یاخ تک ای کتکتابگمل 
یع لھا رارق رآن ٹمیرکی ایک ش رح ” دینٹو ری کی ہے۔ 

چہارم: اس ردای تک سندی رٹل ے۔ 

2 اس روای کی مسلمان عا لی کست خر تق کک نے قائل اختاپئیس مبچھا او ررسول اکرم 
ےکر ارشادات کے متا لے شس ا جرد ردابی کی نیت باتی رہ ای ے؟ 
لن اگراس ردای تکرتا و لک ینظ رس دیکھا جا نذ قد تم وت اورروایت کے نی 

ہوم می سکوئی تخالف ونضاڈنٹس ہے۔منی روایتکا مطلب جی ام أوبہ میا نک گیا می ے 

یتوص رد رکا نات نا الاخماء ہیں ( تم تھی ہہ با تکہھ می ہوک ہآپ کے برکوئی نی نہ 


آ ےگا۔ سلجم ڈزغپوم کے حصاول می نے صر یا عقید ونم و کا جات واتق ار ہے اب 
کیےیککن ےکرامال وشن شی النائی نا ایک یکفشگدادررہ مس ضف فقر ایک میضو ما 
ےی کہیں اونصف موضسوئ کے خلاف یآ پ خوداپنے مال الف طکی تر دی 
کریں۔ یسیدہعاکتقصد یقرت ال ھا ٰ کنا کی ےن ےن کوروا: 
کے اس طیق یس شازکیا جا اہ جو راوید نے کے ساتحدنماتی ذہ بھی رکتا ہے .پا یہا 
پآ پت کاارشادلاز] حر تی علی السا مک قرب قیامت جآ مدکی طرف ہے۔ چوکہ یآ 
بت نماتم الانیاء کے بعد جع اور یآ مد بعشت دیپ دخقیر شتم خبوت سے ذرائبھی میا 
کٹ ہے اود ینزو لیک ی ” کاناتن وق گی عد یٹ ےگھی خاہت ے۔اب چو حر 
یی علیہ السلا مک یم غالی کا تصورحدبیٹ کے قائل اعتادزخرہ ےنات ہے۔للہفراسی و جا کی 
صد ایق یی ال تعالی نان ف ماد کال یم تکموکآ وق ے بترکوئی یی ےگا 
اکر با تکہد جال ۓکرتحند ٹل کے بعد ہرگ کول می نآ ےگا تو ینزو کا خی السلام 
انار ہے اور مت لہ نزو لک عقیر نم وت کے روج کے مناٹی نس ۔ ای ط رح حضرت ما نگ 
صدیتہرن الا ٰ خنہاے“ سوب ددع پالا روایت :نظ رتا 3 یی یی 17 نوت کےکن 
ین مجن پل گرنظر خائردیکھا جا و یعقید ہنم نت کےککی دع ہے اورمقیدر 
نزو لک کی مو کر ے۔ ددظم 

ریملدم: دوس ری ردایت جوائن ماپ نے حضر ت عبد الہ بن عیاس ری ال توالی عنہ کے 
جوانے سےف مایا ا اگردوزدور تت7 ج ایوگ“ 

سح ی ٹوا وو ےم وسوعات اگج ریف سپجنوٹ اورفال دق اردیاے_راواوں' 

کے لے میس اوشعبہن یراو خی ہے۔ا مامت خری کے نیک دوقائل اوس اورایام 
02 نیف سیے۔امام اج دکاازشماد ےکی اس روایت (خبوت ایر تی دال) مکل 
انئیں امام اوخاتم نے اسے(الویشعہکو) حدیٹ کے مھا یس نا قائل ا طبر ایا ے۔ 


تیچ چپچجھہجًج ورمےصسٗ۔جج ہو۔٦‏ 


سے سے سیت عت ‏ او کے ہے بے ےی ہے ےک 
ان ظا موجودوکی بناء بر ردای کی شا ہت موک وی ہے اور روایت قائل اطنپا نیس ری 
(ہوااہوفاقی شرتی دالتکافیمل۔ ) 

اراس روای تکوجھی تا وی لکینظرے دریکھا جاے تی روای تجھی یہہ شحم وت کے 
موا فی ہی نظ کی ہے. راود ای طر کی دوس ری روایات ملا حول کا حصفرتبلی رش ال 
تزالی عنہ سے فرمان کین میرے س ات تہارک وی بت ہے جوم وی ( علیہ السلام )کے سہاتھ 
رون (علیرالسلام )یمک رمیرے بعدکوئی نینوی ' یا ححضر تج رزشی ا تعال یع ے 
بارے میس برارشا کی اگ رمیرے بعدکوئی نی جوف عم شی اللہ لی عنہ ہوتے گر چوک 
میرے بحدکوئی نیس ہے۔اہنراعم ری اللہ تھا لی بھی نینئیس ہے۔اسی ط رح حر ت نی 
شی اڈ تا لی عن ےآ نف کا کہ اکرمیرے سات تہ اریی دحینضہعت سے جوم وکیا علیہ السلام 
کے سراتھ پارون علیالسلا مکی ( مق اون نی بن بک می رے بح دکوئی نیس ہے۔اں 
ل ےم بھی پروی یی ت نو ت(معادن میا کے ای ہو۔ ال ام رح آ ےکا 
برارشا دک گر شی کس ینیل بنا ا تو ابونکررشی ال تھالیٰ ) ع کو ہنا تا گر کرٹ نے اسحصدبق 
ہا اگ رٹیل (ا مو رنوت میں ش یک دمعاون پیش نایا کیونکہ اب ا ںکاجھی امکان با نل 
رہ یجن اس طر کی تما م روایا تکااک رہظ راغ جائز لیا جانۓتو بجی ٥ہل‏ اک ایل نو انل ء 
ای نو تک ککھ یآ پٹ کے ب نتم ہے۔ نا ال نر ہے ایک رف بد تکا امکان تو ال 
تفرات کے لےیپھیمکرننڑیس ے اوراگرائل کے ل بھی جونا فو شرط کے سرات ہوا گر وگنہ 
شر امو جوڈییسلپذا ا سکی جزاڑھی معدروم ہی و اعم ۔ 
وی موم: حتحدد بے نید ارد لال میں ےتسر دیمل اورا ہم دی ل مر بن خہوت یہ 
ٹپ کر تۓ ہی ںکحضر تی علی السلام ( امت مس کا خقید : ےشکر بین مرذائیو ںکاعقیدہ ہر 
گمڑنئیں ےک( قرب قیامت می دو بارہنا زی ہوں گے۔اورحضر تی علی السلام چ ال 
کے ایک صاحب شربیعت پنمہ ہیں لہا گرا کےآنے سےخقیدختمنہوت جرد ح یں ہوتان 


٢ 
ھنچا‎ 


مع 
دوسرے ج ید مکی نک یآ مھ سےکیوں مان ہوتا ہے لان اگمر اس ول بے وزن پر ذ را جورگیا 
جا نے میغابت ہو جات اھ خالی دداصل وت جد بدہ کےکغذب اور انقطا کی ول 
ہے۔اسل موضسور پر ہت یاد ھی بج ٹک اگئی سے حطر تگر ا کی یہہ یی شا ءگوٹڑدی رممۃ ال 


علیہ نے اپ یتعخیف لیف" ون 6 می اس موضو کے متعلقہ ابا کو لیوں ثہایت ' 


دی سےسمیٹا ےک تام موانقین وجزا این نے اکا اخترا فکیا ہے۔ زی بھآں مولاتا 

مودودگی نے ”سرت رواپ می اس مضوم رگن وکی سے رای المفتری میں 

مولان ودای پیالوئی ن بھی ا عنوان پک مکیا ے ۔فرضی مغ ین ہمود ین کین اور 

ہفرات نقہانے ال نے پرخوب سیر حاص٥‏ لت :کیا اوراےعقیش وت کے وا لیم 

کیاہے تتقمردلال درخ ذیل ہیں۔ 

٦‏ ۔ حضرت نی علیہ اللا مکاانجات اح دی ٹنیعہ سے ہواہے۔ ایک اتشھا بھی ہوسا 
ہے۔ جوخوپتضوراک را نے1 مکی علی السلام کے جوانے ےکی ہو۔ 

2۔ نزولی مکی علی السا مکاا ات اعاد یٹ یعرے ہواہے۔ راک انثا بھی ہوسلنا ے جھ 
خوتحضوراکرحأ لم ن ےآ کی علی السلام کے جوانے ےکیاہو۔ 

3۔ حر تھی علیہ السلام بعد ازغزول انی نبدوت وش یع ت کا ام نہک میں گے بل شرلعت 
مو کااعلان ونفاذفرمانمیں گ اکم چیا نکی اپنی نوئی ضیشی تاس دق تچ کال ہوگی۔ 

ت آ مکی علیہ السلام دراص لتحضور ب یکر ممنلل ‏ ےت رصادق ہو ن کی دیل ےکپ 
ٹپ نے نزو لینی عل کی ٹکو یکی ے۔ 

5۔ حر ت شی علیہ السلام اپنے نزول کے بعد خودچھوٹوں اور دین ممری پیم کے 
مگروں ے لےسیف قاع ہوں گے ملا د ال اورمیسائی یور دیرہ-ابذاآ پگا 
تحضورعلی اصلو والسلام کے ارشادات سے ہرگ تا یں ہوستی_ 


٤ير‎ 

عقیرہ تم وت اورنزو ل یی علی الام 

”قو می ڈائُ “کےا دیانی فی رکےعرب نے اڑی ینس متتدروایاتنخ لکی ہیں جھ 
قد نزو لک کے موضسوےپکاٹی دجائع ہیں اورتقیدءکوا سکی روح ڈنیل سے وا کرلی 
ہیں.۔ ذمیل مم صرف تج نآراء یٹ یکا جاتی ہیں ناک مضمون زیر مطالعہ کے ا ری نبھی علاء 
فرب نکی جائن ھی خالات ےآ گاحی حا لکرکل۔ 

اول: علا تھتا زا رت ال علی شر عقا میٹ سککعتت ہی کیہ بات خابت سے 
یفخ رک نی ہیں ۔اگ رکہاجا ےکآ ,نل کے بعد نت یی علیالسلام کےنزو لکا 
ذکر حاد یٹ می آیا ےن ہ ہیں ےکہ ہا ںآیا گر دومھ کی ش ریت کےتائع ہوں سے 
کیو ںکرا نکیش بی تق مفسوخ ہی ہے۔اس لیے ای طرف گی ہوگی اور ددا کا مقر 
یں کے باہو درسول الڈ نچ کے نام کی حشیت سےکام مک میں کے( بولق می ڈائسٹ 
(قا دی شی حدم جیب اایشکی شائی جو لائی 4984گ283-2893) 

ددم :علاریگمودآلوی شکرئی رح لعل روح العانی جلد 22 ب32 ب رت یںک” 
پھر ج گیل علی الام نازل ہوں گےتذ دہ اتی سالبق خیوت پہ باقی ہوں گے۔ بی رحال ای 
سےمزدل ق : ہوں جاتمیں سیگ رو دای پیش ریت کے پی رون ہوں م کوک دوج یش ریت 
ان کےاوردوسرۓےسب لوگوں کےیتقی یں مفسورخ ہوگی ہے اوداب دہ اصول اورفروں ٹل 
اس ش لیت( من کی جیروک ملف ہوں گےالپذاان ناب وگ یآ گی اورت کٹل 
تھا مق رکر نے کااخیارہوگا۔ جرد ورسول ال نل کے ناب اور نپ کی امت مل اصت 
مھ کے اکھوں یں سے ایک عا مکی حفیت ےکا کر یی گے '(اییتآً) 

سم :امام ار ناد نشین ملا خر الد راز دجمۃ ال لیف رات ںکانیا:“ ک 
دورتعضر ےوتف کی بت تک تھا۔ ج بآ اق رعوت ہو گنن انا ءکآمدکازانشخ ہھگیا 
اب مہ بات بتیدازقاک نیس ےک حضر تج نی علی السلام نازل ہونے کے بعدرحض رت وت 


اس 
کی شریعت کےحائع ہوں گے تیر مواچج الف باکبری جلد وص 343) 
تقا لو رزکات: 

اب مرد ینا برصاح بتف لآد یکاکام ہےکرافط خاقم نی نم کاجوتی ہلیم 
لفت سے خایت ہے جوق رآا نکی عادت کے سیاقی وسباق سے ظا ہر ہے ۔ جوحدیت رسو لٹا 
ار میس ین ہے۔ جے صا ہکرام رشی ای کے اجماع اورشل سے تبادر سے اور چھ 
توریت کے چودوصدوں کے اجھا گی عقیرہ ھےمعربہے۔ اس کے خلا فکوگی دوس املہومو 
می یما اور عامت اسلمی نکی اتا ءیوں تال فکوی ادس افقیا کر ای گرا وکا کا 

بایکنا ای کژعکنداورصاخب الرا ےکا گنی ۔اس ملس ج سجن بات تا ور ہیں۔ 

و بات بی ہ ےکہ نو تکامعاللہ ایک بڑ ای ناک معالمہ ےق ئن وعدی کی ۸ 
سے بیاسلام سے اون یدام سے ہے جن کے مان یاضہ مان پرآدئی کےکفر 
ایا نکادارو 27 جیا ہواودآ دی ان ںکونہ مان پ دی کےکشروایما نکاداروبداز 
ہے اپ یس یا ہواورآدئی ان ںکونہمانے و کاخ ۔اوردہ نی نہ ہوااوراے مان لئے گھ یکا 
ای ناک معالے بی اللاوداس کے رسول ال سے درستسمت بیس رعنمائَی کر ن ےک تق 
ٹھی کی جاحتق۔اگ رر تج ٹف کے بی اود یک یآ لکن ہو تا تال خر وق رآ نکرم 
ا لک فرع فرماتے۔۔رسول اك اپنے ارشادات عالیہ کے 3 ریہ اہ کی ٗ٣‏ ای رن 
فراتے۔اوردنیاسے ہرگتخریف نہ نے جاتے ج بتک اپنی ام تکوائچی رس خی ندب ےک 
مور بعدرشی :نیا مکی کے او یں ا نکوماناہدگا تک پک لی امت پنعی شقت اور 
رتۃلعا لیف سے ابی سال (نوذ ہاہ کی ہرگ امید براءکا نج نیش ہے ۔لنان ال راودا 
کے رسو پا نے پا وضاحت اوس رک اتمم نو تکیشیرادرانقطا روگ یکا اعلان فربایا ے۔ 
کیل دین کےذ دی ایت کےکا ا وکس ہوجانےکفیدستائی ہے۔ابعوال ےک 
الأاورا سس کےرسو لفن کوہمارےایمائوں سےکیاٹئی ہے کہ سو لے کے بعدامکان وت 


مم 


ا وی موجودہویٹ کا مانابا عشخجات اودجھ سکاافکارخران دجیاوآخرت ہو مگ رپھمکو ضرف ال 
سے نیٹ ررکھاگیا پگ راس کے پیک تقد ہکاجم دیاکیا۔فافكجد(یی ںجھو) 
اب !گر بن عحال نبو تکادرواز وکھطا ہواو رن یچھ یآ جا ےق ہم بلاخوف وشط را کا ار 
کر دی گے۔باز یس اورا تسا بکاخطرہالڈ راودا کے سو لکرم اف سے می :و سک از 
ھ رق رآ نکی ہرد باہرآیات اناد یگنن دنو ات ہکاذخ ولا اممت کے اقوال وآرااورگی 
نیدلا لکاذ یرہ اپ ۶ تیر کےھوت میں شی کر ک ےکنا ہا ڑکا ربدت جد بد وسے برات چا ئل 
گے چی گر بین کے پا تی اور بے بذیادمو گا خیوں او رکون سدچچوں کے پانرے کے علاوہ 

اور نویس ہے۔اں لی ےکیت رآ وصد بیث اع کے پش رسکی نے نامگ ہیں۔ 

۱ دوسرکی قائ ل فور بات رید ےک نو تکوئی ای عف تل ہے جھ ہراس یل پیداہ 
با اکر ےجس سے پرمشلقت عبادت اورمجاہدوں سے اپے آ پکوا کا بل :نلیا ۔ شی 
بو تکوئی انعام ہے جوخدمات وی رہ کے سلسلے میس عطاکیا جات ہو۔ بکہ ایک منص ب جلیڑے 
ٹس پرالنتھالی ا ضرورت کےتت اپنے خائس بنرو ںکویمقم رف رماتے ہیں ۔بواۓ ا 
قرآئی: 

7ں ۰ 
تمہ :ال رخوب جاتا ‏ ےکم اپٹی دسالا تکوکہاں رتے۔ 
قرآن الفرقان سے ہہ بات خابت شد ہہ ےکمیصعرف ا رعاش الیکا ہیں جن ش ذات 
اپ ی کی طرف سےحعقرات ایا لا جو ٹک یاکیا ے۔ 
اول: ۷04010909" س می پیبھ کوک یا ضآیا ہو 
کی دوس ری وم یش تو ٹن یکا پا ماق تک نپا ہو 
دوم: س کی قوم می ب یک نایدا تک با بھلاداگیا ہد یا رد تر کر دئیگئی ہوں ال 
حعالت میں ال نتیمات کےمطابقی ز دک یزار کن قہرپاہو_ 


0ھ ٰ 
م: پکہ پیلک رے ہو نے خی کےزر ےکم لیم دہدایت لوگو ںکو کی و او کت 00 
کے لیے ابھی عیدانیاءکی بعش تک ضرورت ہو۔ 
چہارم: یوک ایک نی کے س اتا لکی عدد کے لیے ایک اورمحاون نکی عاجتو- 
اب نود رآن بیراعلا نکرد ا ےک توف کوقیام جہانوں ہو موں اورتلوقات کے لی 
مبجو فک یاگیاہے۔اود دا کی ت نی جار ےہ بتاردی ےکآ ناف کی بعت سے لن ےک رآ 
کک سمل ای عالاتہ موجودر ہے می ںک ہآ پکاتقلمات و پیا دنیاکے ہرکونے اور ہ رفظ 
کےفرونک با سای وہل تین انداز یش پیا ہے۔ اباب الگ الکو موں اورشطوں میں می 
انیا یج چان ےکی ضرورت باتی نیس رتی۔ق ران وحدیٹ اورسیرت ثج یکا لوراذ تی رد اس بات 
کا بوتاشوت ہ ےکرتحنو ال کی لا کی ہوئی ایا ت پلک انی ال شل میں مز یو" 
اضافہ کےتفوڈمامون ہیں ۔ جن سےآ رع کے دورکاصا بط انس چھ یھ رب رجنمائی اص 
کرسکنا ہے۔اہا آ پنڈ کے بعد اس وج ےگ کی من نی کےآن ےکیضردرت الا ۳- 
ری ۔تیس را وہہ کے ما بھی انساشیت کو ام کے ہیک ضردرتنئیس ہے۔اس لیی ےک ع 
یرنے خود ہالصراحت ا لتقیقتکااعلا نکردیاے_ الوم ائمنۓۂلگزوپتگ ا 
اتْمَمُهُعَلَبْكملِِْی وَرَْيِيّتُ لگ الإسلام لنا۔(۲۔د)(7 عماج گا 
دن یش نے تہارے لیتہادادی نگم لکر دی اورقم پر انی نت پور کرد اورتہارے 8 
اسلام کےد بین ہہونے سے راشی ہ گیا ہوں ) تذ جب دی ن ئن کی تحلیمات بمہ ابی جز تا فا 
کککمل ہیں نم یکیاحاجت ہے۔ چذحیضردرت ےگبھی انساضی ت کو ب یکی ضر در تل 
اس لیے راگ معاون خی مقر کی ما :تد حول کے سراتھۂمقررہوتا ۔آ نل کے دسالا 
کے بعدکی ات ات لکا الو کی غبدتکا بی ہو مگھراہی دضلالت کےعلاد اور یں ۔ 
ان نرکودہ الا ار وجھ بات کے علاوہاورکوئی ویننٹس ےک جو یی بوش تکی نی ہو 
پان !اگرحمرین یہی لک فکوزہدجھ ات کے مطاق نے ز یا ےکوب یکی ض روز تنڑیں گر جا 


ازس 

انساشی تگمراہ ہی ہےل برا کی الا ادرقبد یتلہمات کے لیے یقن ن یک ضرورت ہے- 
7 یتین برای شرے۔ کک جواب بے ےک اصلاع کے لے ین (:89101116) گا 
2رت رن ہے نہکہانما مکی اورتلیمات وش ربج تشد ما کےایاء کے اج رای ذمدداری 
علاءواولیاۓ امت پر ڈا ای ےکدووارث امو رنوت ہیں بمطا لق حدیث رسول ال 
علماء امتی کا اندیاء بمی اسرائیل (میریی امت کےعلاءانییاۓ بی اعرائیل کے شا 
( نام وکردار یش )ہیں ) اور پچھ نی اصلاع وقجد ید کے نکی ںآ کہ ال کی لبعشت اس لیے 
ہوئی ےک دی ال یکونوا ٹک پیجچاجاۓ مگمزشتھلیمات میس وقت اورعالا تک اضرورت کے 
مطابق ئن داضافہکیا جاۓ ۔حائل و یکو نی ما جاۓ ۔ ال کی اطاعت ناف مال یما نکف ری 
علامت زار قرف ای۰ مقالدے۔ 

تی رکی قائ توجہ بات ہہ ہ ےک وم ٹس نے نا کے نے سے لا ا قوم میں دو 
گردو نیل گے ایک ااکی نے ن یکو مان والا اود دوسرا ا کا مر وخالف ۔ الع بل رے 
درتقیقت ای کگروجم وین ہوگا اوردوسراکافر ان دونو ںکی متجو لات بش رلٹتیں ہز تیات 
دن بالگ اٹک انگ ہوگی ۔ان کے محانشرنی تعلقا تٰعفٹع ہوں کے ۔اکے رو رواخ وغیرہ 
الگ انگ ہوں کے اورا نک اف تن اودد بی ددم یچھی ایک دوصرے سے مم رخلف ہوں 
گی۔اس رع یق م دحدتکامظہ رن ہوگی پگیاننٹا رک ش کا ہوگی ۔اب ایک صاح ام ىہ بات 
س پت پرہور ےلم جب: 
4۔یک نیک تلممات انی اصلیاشل می ںتفوط میں _ 
۔۔ مم تین اود ہرز مان ےکیاضردرت کے مطالق ہیں- 
3۔ دہ ئی قمام چہانو ںکی طر فک 'رح۷ت من اکرنبجو ٹگیاگیاے- 
4 اس کے حواری ( سا کرام شی ایڈششہم ائمتین )اور بعد می علاء ولیاء امورضوت کے 

وارٹترارد یئ گے ہیں۔ 


مھ 
5 اکات ےگھدگادیا کال کے بعد ضیح ٌے۔ 
زی ٹن انا ءکاآنا مسق ےہ یہو د مات انا لا 
امن واتھا سیوا کر ن ےکاباعث بن ر ہے ہیں ۔ ہلازا ہون چا ےکانیاء لآ رکا 
ر ےت اکزلیک ان و شی کے سا تذل بدا ت گا ری میس' رح رت ملعا لن“ کی اط ۶سا 
فرمانبردارییکرتے ہو اپنی زگ یکا ئل تع جذیادوں پر ےک ریں۔ اس طر عکوئی ا 
کے یی امک نک فنش رک ن ابا عف نہ ہوگا۔ 
نف روز ہلال سیر تک نوم ربہر 1987ء من 1-64 
1 خی نی ٥ل‏ فقلمات کے جانے کے بحدبھی تۓ نویوں کا انظطار مالوی پید اک 
ہے۔انسان بےکارو بے حوصلہہوکر ث ۓکااتنظارکرتار پا ہے۔( جیہاکہمد ہے کے بہودکی ا 
یا کا انا رکیاکرتے تھے راس کے نے ےم ید ال یبھی بصورت فر مات زدااری اک 
شا حال وی ۔اس رع دو اپ ٹمنوں اورفالوں پہ ‏ ےکی ایت کے ساتقا پا کے 
تعفر ت یی علیہ السلام کے وصالی کے بعد یو دیو مکی تار ال مکی داد ے او رجہ 
ھی علیہالسلام کے ساتھ بیہودیوں کےسوال وجوا بھی نۓ بھی ' کی امبیرااوراس دور 
لوگو ںکی با ون امیر یکا مظہر ہیں بعش: ش رسول اللن ا کے وقت مد ینہ کے ببدد یں کا 
انہاراس فک ہم تن بی ک نظ تھےک ہو بی اس رائنل میس سے ہوگااوراس کے سیا ےچ 
قام جم رععربکواپتے زہکگیں نے1 میں کے گر مئاق تی اسائیلی مس ےآ گیا ا و زا 
وج سے :نہوں نآ پن ٹفل کا انارک دیا۔ او رخالفت پک راس ہو گے امت 6۶/۷2 
اد لا ئن دن لا ٤امی‏ رافزاءاورآ رآ گے بٹ نکی روح اپنے اندد رھت ہیں۔ انا" 
نقلیمات کے جو ںکی وجہ سےمسلمافوں نے قیص وکس رب یی یم طاتوں سےکگ لی اور ا نگ 
ان وشوک تکوخاک میں ملادیا۔ملمافو ںکا جب جہاداور٣‏ لک جو امیدراورکا مرالی کامظر" 
بے۔ اب لئ آنے وا لے کا اتنظا رکیوکہ پالوی اور 7 یلان ے۔پذزامسلمان دا 


نت 
تقلیمات بص رر ارشادات اورکائل اتفاقی واتھاوکوچھوزکرایک تن ےکا اتکی لک گت ۔اورامیر 
کی دنا ےگ لکرناامیدربی کے قکڑھوں می نمی سکر ھت ۔( تم نبوت او رش یک اص یت از 
ہوی) 
آخریبات: 
اب اس پ ای رای نکی رک ےیک اقتیاس کے سس تشخ مکرتاہوں خر مات ہی ںکہ 
بے شیک ال ارک وتھالی ن ےق رآن یس اوررسول انل نے حد یت متو ات وی تیر 
دے د ےکس رکار کے پخدکوئی نیس تک لوگ جان لی کہ جو شدت ورسال تکا لو 
کمرے و کھوٹا ہمفتربیءدچال مگمراداورگرا وہ ےار اس ےترقی عادت ل(ظاہر )واوروہ 
شعبرےرکھاۓ اوطر طرح کے چادوطلسمات اورنیرٹگیاں ٹی لکر ےےعکندجاتنے ہی ںک زی 
سب دوک ہاو رقرجب ے۔ 
۱ ( بل رسوم چس 494ء وا لیف ت روز ہلال می ر تن در 1989 ک118) 
ریی راک و ہند کےننلیم شا ع ہمفھکراورفمفی علا مہ ڈ اکم اقرای مرح جن سن ریات 
اورشیا لا تک مخر لی ذشرقی دنیائٹش دمصرف پڈ مرائی ہو گی بہ نٹ اپنا گیا اور گے تعارف 
کردا اگیا۔ اوران ک ےی نظ ریات وخیالا تک:ناء نٹ ایک بے شال او رع رسازمشگرقرار 
دیاگیاقید دش نبوت کے بارے میں علامرصاح بکانظ رسکی جہہورامت کے سات تن اور 
عگ رین کے ال نظطریات حعالف ہے۔ چنا مآ ب فرراتے ہیں: 
یں غخدا بر ما شرییت ش کر مج سو مارسات متگر 
ری از ا مگفل یام ر او یل را حم و یا اقام را 


خدمت سائ یگگرکی با ماعگذاشت - دادما خر جا ےکہ داشت 


”ا بی بعدی''زاصان خداصت بردہ ناضیل رین معطظً ست 


54ھ 4> 
25 میں مکی شکتہردی اور ےکی بے ری کے باوج دقید ونم ہوک 
قرآن ‏ حریٹ لقت اکابردین ہس رین ہملک نہ وانشوطبقہاورفتا رات کے اخ 
اقوال د تا یر شنی بی بیا نکر ےک کش کی ےزین کے فریوں اورمفالطو ںکا 
کرٹ ےکی کش بی کی سے نی کنا سو وہر 
ہے ۔یگرانا شش نام ے لیکن یک نٹ یکر سے کین کین کے کے 
اس لیک مک بی تا ق رآن ےکبھی ہدایت عاصل تکر کے جڑ'ھدی للمتقین؛ ٠‏ ا 
ےم قب ہے۔دہ ہوا ہو کے غلام ہیں ۔ حیطاان کے ورخلاۓ ہہوت ۓےک اب مین : 
اھ پیر داد ہیں شک ن بھی داکن ہیں ۔ت رن وش یج تکی ای ےحردم۔ ھا می کے انا 
اورعام ذ من کے سلمانوں کے لیے بہرعال ای ککوشش سے اک وہمھ ری نیکیاغفی موی وں 
خشیطالٰی دال خی رق لی برائین اورخوا مر رفس کےمظبرمفالطوں اوزشبات می ہیں اناد 
اییان نہ جلاشیشھیں اوردائروکف رم سگرن سے میں ۔ اب انکرانٰوں نے ا تر کے مطالطہ" 
کے بعک شیعت حا لک رکید گر دہ می سگرن کے شیطالی ال یھ 
نا بھی اس عاج کی طرف اف کی ادا یک یکوشش ہیی ہے۔ 
این نان پا ىد انان میں انقیار ے 
بھم نیک و بد جو رک نبجھاۓ جاتے ہیں 
ال تھالی سے دعا ےہروہ یں ا جز کیو بندگی کے سا عقا یع واعمال حقہ پرٹاہ تا 
قرم رہ ےکی ت فی عطا فرماۓ اور اص ایمان فو نے سےںمیس اور ہار ایرا نککفو ظا 
ا مولن ر تھے ۔آ یی ۔ 


7 
ا ا نے ِ 


کا راغ و 
(تخفظا مو رمالت از مافدامام تی سعید 233۳242 ا 


1 گرب کی مین کے دوسرےاقذ ار حدم زج ر 
در ہا رشریف حنخرت انال رحمۃ ال علیہ برثی ے۔ 


ہراگر :بی صننے کےآ خر انذار بعدخما زمغرب تا عشاء 
پڑ یل حا بی کل صاحب ےکر ہو ے۔ 
یچب بعدمازمخرب حائ کنل صاحب ےکر 


ہول6ٛے۔ 


ہے:5030٭-- 
حا بی مکی لتشجنر یلان 


ا 0302-4016332 


: